وزیراعظم عمران خان کا تنخواہ اور پنشن جمعہ تک ادا کرنے کا حکم

وزیراعظم عمران خان کا تنخواہ اور پنشن جمعہ تک ادا کرنے کا حکم
اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان نے بڑا فیصلہ کرتے ہوئےسرکاری ملازمین کو مارچ کی تنخواہ اور پنشن جمعہ تک ادا کرنے کی ہدایت کر دی۔
ترجمان کے مطابق وزیراعظم عمران خان نےسرکاری ملازمین کو مارچ کی تنخواہ اور پنشن جمعہ تک ادا کرنے کی ہدایت وفاقی کابینہ کے اجلاس میں کی اور وفاقی کابینہ نے بھی آج فوری تنخواہ اور پنشن ادائیگی کی منظوری دے دی جبکہ مشیر خزانہ کے حکم پر پے رول کی تیاری جاری ہے۔
قبل ازیں پارلیمانی رہنماؤں کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ حکومت اس سلسلے میں منصوبہ بندی کررہی ہے کہ روزانہ مزدوری کرنے والے کارکنوں اور کچی آبادیوں میں رہنے والے لوگوں کی کس طرح مدد کی جائے، ہم اس صورتحال کا جائزہ لیں گے اور حل نکالیں گے، مجھے لگتا ہے کہ ملک کو لاک ڈاؤن کی طرف نہیں جانا چاہئے کیونکہ اس سے معاشرے کے کم مراعات یافتہ طبقات بری طرح متاثر ہوں گے، لاک ڈاؤن سے تعمیراتی شعبہ اورگندم کی کٹائی متاثر ہوگی کیونکہ ابھی کٹائی کا سیزن جاری ہے ۔
انہوں نے مزید کہا کہ مقامی طور پر 153 کیسز رپورٹ ہوئے جبکہ  ملک میں 21 ویں کیس کی تصدیق کے بعد ہم نے جزوی لاک ڈاؤن نافذ کیا ہے، حکومت سندھ کا نقطہ نظر مختلف تھا اور وہ مزید اقدامات کے ساتھ آگے بڑھے، تاہم وفاقی حکومت کے ذہن میں مختلف خیالات تھے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ مکمل طور پر لاک ڈاؤن سے تعمیراتی صنعت اور روزمرہ کے اجرت پر اثر پڑے گا، پاکستان میں ایک بھی کورونا وائرس کیس نہیں ہے جو چین سے آیا ہو، میرے خیال میں ووہان سے طلبا کو واپس نہ لانے کا ہمارا فیصلہ ایک سخت فیصلہ تھا لیکن اچھا فیصلہ تھا۔

پاکستان میں کورونا وائرس کے کل کیسز کی تعداد ایک ہزار ہوگئی ہے جبکہ اب تک 19 افراد اس بیماری سے صحت یاب  ہو چکے ہیں۔