پاک فوج کےعظیم ہیرومیجرشبیرشہیدکا 48 واں یوم شہادت

پاک فوج کےعظیم ہیرومیجرشبیرشہیدکا 48 واں یوم شہادت
ویب ڈیسک :پاک فوج کے ہیرواورنشان حیدر پانے والے میجر شبیر شریف شہید کا 48 واں یوم شہادت آج منایا جا رہا ہے ۔ میجر شبیر شریف نے 1971 کی جنگ میں جام شہادت نوش کیا ۔
میجرشبیرشریف شہید 28 اپریل 1943  کو ضلع گجرات کے علاقہ کنجاہ میں پیدا ہوئے۔ انہوں نے لاہور کے سینٹ انتھونی اسکول سے اولیول کیا ۔گورنمنٹ کالج  لاہور میں تعلیم کے دوران انہیں پاک فوج کی سب سے بڑی درسگاہ کاکول سےفوج میں شمولیت کا اجازت نامہ ملا اور 1964 میں انہوں نے 21 سال کی عمر میں پاک فوج میں شمولیت اختیار کرلی ۔میجر شبیر شریف شہید شروع ہی سے وطن عزیز پر جان قربان کرنے کا جذبہ رکھتے تھے۔
1965 میں پاک بھارت جنگ میں انہوں نے بطور سیکنڈ لیفٹیننٹ شرکت کی اور جرات اور بہادری سے دشمن کا ڈٹ کر مقابلہ کیا ۔جنگ میں بہادری اور جرات سےدشمن کا  مقا بلہ کرنے پر انہیں  ستارہ جرات سے نوازا گیا ۔
1970میں ان کی شادی ایور شائن پینٹس کے ڈائریکٹر میاں محمد افضل کی بیٹی روبینہ بیگم سے ہوئی۔ ان سے میجر شبیر شریف کا ایک بیٹا پیدا ہوا جس کا نام میجر شبیر نے تیمورشریف رکھا۔ فوج میں انہوں  نے ویپنزکورس، انٹیلیجنس کورس اور پیراشوٹ کورس سمیت دیگر کورسز پاس کیے۔ 3دسمبر 1971ء کو وہ بطور کمپنی کمانڈر فرنٹیر فورس رجمنٹ ہیڈ سلیمانکی کے محاذ پر تعینات تھے۔ اس دوران انہوں نے دشمن فوجیوں اور ٹینکوں کو بھاری نقصان پہنچایااور انہیں ایک اونچے بند پر قبضہ کرنے کا ٹارگٹ دیا گیا تھا۔ میجر شبیر شریف کو اس جگہ پہنچنے کے لئے دشمن کی بارودی سرنگوں کے علاقے سے گزرنا اور پھر 100 فٹ چوڑی اور 18فٹ گہری ایک دفاعی نہر کو تیر کر عبور کرنا تھا۔ دشمن کے جانب سے لگاتار گولہ باری کے باوجود آپ نے ڈٹ کا مقابلہ کیا ، یہ مشکل مرحلہ طے کر کے دشمن کو شکست سے ہمکنار کیا اور4 ٹینکوں کو تباہ کرکے 43 بھارتی فوجیوں کو عبرت کانشان بنایا ۔چھ دسمبر کی دوپہر کو دشمن کے ایک اور حملے کا بہادری سے دفاع کرتے ہوئے میجر شبیر شریف دشمن ٹینکوں پر گولہ باری کر رہے تھے کہ ٹینک کا ایک گولہ انہیں لگا اور انہوں نے 6 دسمبر 1971  کو ملک و قوم کی خاطر اپنی جان کا نذرانہ پیش کر دیا ۔
شہادت کے وقت میجر شبیر شریف کی عمر صرف 28 برس تھی اور حکومتِ پاکستان نے انہیں ان کی اعلیٰ عسکری خدمات پر نشانِ حیدر کا اعزاز عطاکیا ۔آپ کو لاہور کے میانی صاحب قبرستان میں سپرد خاک کیا گیا ۔ میجر شبیر شریف شہید کو یہ اعزاز حاصل ہے کہ وہ نشان حیدر اور ستارہ جرات حاصل کرنے والی واحد شخصیت ہیں۔آپ نشان حیدرحاصل کرنےوالے"میجرراجہ عزیز بھٹی شہید" کے بھانجےاور پاک فوج کے سابق آرمی چیف جنرل راحیل شریف آپ کے چھوٹے بھائی ہیں ۔ میجر شبیرشریف شہید اپنی بہادری اور جرات کی وجہ سے آج بھی اہل وطن کےدلوں میں زندہ ہیں ۔