ایپل نے گوگل کے مقابلے میں اپنا سرچ انجن بنانے کی کوششیں تیز کردیں

ایپل نے گوگل کے مقابلے میں  اپنا سرچ انجن بنانے کی کوششیں تیز کردیں
کیلی فورنیا : مشہور کمپنی ایپل نے سرچ انجن گوگل پر مقدمے کے بعد آئی فون کیلئے اپنا "سرچ انجن" بنانے کی کوششیں تیز کردیں۔
مشہور جریدے فنانشل ٹائمز کے مطابق آئی فون کے تازہ ترین آپریٹنگ سسٹم (آئی او ایس14) میں ایپل کے سرچ انجن نے جزوی طور پر کام بھی شروع کردیا ہے جہاں اگر کوئی کسی بھی چیز کو سرچ کرے گا تو وہ گوگل پر نہیں جائے گا بلکہ اسے وہاں  براہ راست ویب سائٹ کے لنک فراہم کیے جائینگے،انڈسٹری کے ذرائع کے مطابق یہ گوگل پر حملوں کا آغاز ہے، معروف ایپل کمپنی نے سرچ انجن سے متعلق اپنے اقدامات کو خفیہ رکھا ہوا ہے ۔
امریکی محکمہ انصاف نے گوگل کی ایپل سے ہونے والی ڈیل کیخلاف مقدمہ دائر کیا ہوا ہے،جس  کے بعد ایپل نے اپنا سرچ انجن بنانے کی کوششیں تیز کیں۔

خیال رہے کہ 2017 میں گوگل نے ایپل سے معاہدہ کیا تھا کہ وہ گوگل سرچ انجن کو اپنی ڈیوائسز پر ڈیفالٹ رکھے، اس معاہدے کے عوض گوگل کی جانب سے ایپل کو سالانہ 12 ارب ڈالرز دیے جاتے ہیں۔