ماحولیاتی تبدیلی سےانسانی صحت کے لیےخطرات بڑھ رہے ہیں : اقوام متحدہ

ماحولیاتی تبدیلی سےانسانی صحت کے لیےخطرات بڑھ رہے ہیں : اقوام متحدہ
میڈرڈ: اقوام متحدہ کے زیراہتمام عالمی ماحولیاتی کانفرنس 13 دسمبر تک جاری رہے گی ، کانفرنس میں اقوام متحدہ نے خبردارکیاہے کہ ماحولیاتی تبدیلی سے انسانی صحت کے لئے خطرات بڑھ رہے ہیں ۔
عالمی ادارہ صحت نے 100سے زیادہ ممالک کے پہلے عالمی جائزہ میں بتایا کہ ان میں سے نصف ممالک نے قومی صحت اور ماحولیاتی تبدیلی کے مسائل سے نمٹنے کے لئے منصوبہ بندی کی ہے مگر صرف 38 فیصد ممالک اپنے ان منصوبوں پر جزوی طورپر خرچ کررہے ہیں۔ موسمی تغیرات اور ماحولیاتی تبدیلیوں کے باعث زمین پر موجود ہر نوع کی مخلوق کو اپنی زندگی اور بقا کے حوالے سے سنگین نوعیت کے خطرات لاحق ہیں ۔ اسپین کے شہر میڈرڈ میں اس سنگین مسئلے سے نمٹنے کے لیے مذاکرات 13 دسمبر تک جاری رہیں گے ۔ اس کانفرنس کو ' سی او پی 25' کا نام دیا گیا ہے جس کا مقصد اس بات کو یقینی بنانا ہے کہ ماحولیاتی تبدیلی کے بارے میں پیرس معاہدہ پر پوری طرح عمل درآمد کیا جائے ۔ یہ کانفرنس نیویارک میں اقوام متحدہ ہیڈ کوارٹرزمیں دو ماہ قبل سیکرٹری جنرل کی طرف سے منعقد کئے جانے والے کلائمیٹ ایکشن سمٹ کے بعد ہورہی ہے جو عالمی برادری کی توجہ ماحولیاتی ایمرجنسی کی طرف دلانے اور ماحولیاتی تبدیلی کے اثرات کے خاتمہ کے لئے کوششیں تیز کرنے کیلئے بلائی گئی تھی۔ کانفرنس میں ماحولیاتی تبدیلی بالخصوص سخت موسمی حالات کے باعث نقصانات سے بچاؤ کا جائزہ لیا جائے گا ۔ اس کانفرنس میں تقریباً 200 ممالک کے عالمی رہنما ،مذاکرات کار اور کارکن شرکت کر رہے ہیں۔