نیشنل ایکشن پلان کے تحت ہزاروں ویب سائٹس اور سوشل میڈیا اکاونٹس بلا ک

نیشنل ایکشن پلان کے تحت ہزاروں ویب سائٹس اور سوشل میڈیا اکاونٹس بلا ک
لاہور: حکومت پنجاب نے نیشنل ایکشن پلان کے تحت انٹرنیٹ کے ذریعے منافرت پھیلانے والے 3 ہزار سے زائد سوشل میڈیا اکاونٹس جبکہ 4 ہزار 566 ویب سائٹس بلا ک کر دیں ۔
میڈیا رپورٹس کے مطابق محکمہ داخلہ پنجاب نے نیشنل ایکشن پلان کے تحت سوشل میڈیا صارفین کے خلاف کی جانے والی کارروائیوں کی رپورٹ مرتب کرلی ہے، جس میں بتایا گیا ہے کہ نیشنل ایکشن پلان کے تحت سکیورٹی اداروں نے جنوبی پنجاب سمیت صوبہ بھر میں کارروائیاں کیں اور ایک ہفتے میں کالعدم تنظیموں کے 150افراد کو حراست میں لیا. ریاست مخالف اور فرقہ واریت پھیلانے والے افراد کے خلاف کارروائیاں بھی نیشنل ایکشن پلان کے تحت تیز کردی گئی ہیں۔

 پاکستان میں 2018 سے اب تک 4ہزار 566 ویب سائٹس بند کی گئی ہیں. 2019 میں تین ہزار سے زائد فیس بک اکاونٹس بند کیے گئے جبکہ پنجاب حکومت نے مزید 277 اکاونٹس کی نشاندہی کی ہے۔ اس کے علاوہ رپورٹ میں دعویٰ کیا گیا کہ سماجی رابطے کی ویب سائٹس پر متعدد اکاؤنٹس ریاست مخالف ایجنڈے کو پھیلا رہے تھے جبکہ 100 سے زائد ویب سائٹس بیرون ممالک سے چلائی جارہی تھیں۔