جی این این سوشل

Chief Justice Qazi Faez Isa warns Khawaja Tariq Rahim | GNN

4211 لوگوں نے یہ ویڈیو دیکھی ہے

جی این این میں ویڈیو ڈیسک آپ کو روزانہ کی تازہ ترین سرخیاں ، شوز ، پروگرام ، ایونٹس اور بہت کچھ فراہم کرے گا جب آپ اسے دیکھنا چاہتے ہیں۔

پاکستان

ایف آئی اے سائبر ونگ کا عمران خان کے ٹوئٹر( ایکس) اکاؤنٹ کی انکوائری کا فیصلہ

ایف آئی اے سائبر ونگ ٹویٹ کی  تحقیقات کے لیے بانی تحریک انصاف سمیت تین مزید پی ٹی آئی رہنماؤں  سے پوچھ گچھ کرے گی جس میں بیرسٹر گوہر ایوب، رؤف حسن  اور عمر ایوب شامل ہیں

Published by Web Desk

پر شائع ہوا

کی طرف سے

 

ایف آئی اے سائبر ونگ نے بانی پی ٹی آئی کے ٹویٹ کا  نوٹس لیتے ہوئے ٹویٹ کے خلاف انکوائری کا فیصلہ کر لیا۔ 
ذرائع کے مطابق ایف آئی اے سائبر ونگ نے ٹویٹ کی گئی ویڈیو کو پراپیگنڈہ قرار دیتے ہوئے تحقیقات کا آغاز کر دیا۔ تحقیقات میں اس بات کا تعین کیا جائے گا کہ جب بانی پی ٹی آئی خود  اڈیالہ جیل میں قید ہیں تو پھر   یہ  ویڈیو آیا کہ خود بانی پی ٹی آئی نے ہی  اپلوڈ کی یا  پھر ان کی اجازت سے اپلوڈ کی گئی۔ مزید یہ کہ یہ پاکستان مخالف پراپیگنڈہ کس نے بنایا ۔اور آخر کس کی اشیر آبادسے یہ چلایا گیا۔ 
ذرائع کے مطابق اگر یہ حرکت اکاؤنٹ ہولڈ ر کی  طرف سے کی گئی تو ان کے خلاف قانون حرکت میں لایا جائے گا۔ اور اگر ان کی طرف سے لا علمی کا اظہار کیا گیا تو انہیں غیر قانونی طور پر استعمال ہونے کی بناء پر اپنا اکاؤنٹ   بند کرنے کے لیے تحریری درخواست دینا ہو گی۔

 
ایف آئی اے سائبر ونگ ٹویٹ کی  تحقیقات کے لیے بانی تحریک انصاف سمیت تین مزید پی ٹی آئی رہنماؤں  سے پوچھ گچھ کرے گی جس میں بیرسٹر گوہر ایوب، رؤف حسن  اور عمر ایوب شامل ہیں۔ 
یاد رہے کہ بانی پی ٹی آ ئی کے آفیشل ٹویٹر( ایکس ) اکاؤنٹ سے کچھ دن قبل  ایک ٹویٹ کیا گیا جس میں حمود الرحمنٰ کمیشن رپورٹ کے پیش نظر  بنگلہ دیش کے بانی رہنما شیخ مجیب الر حمنٰ اور پاکستانی جنرل یحییٰ کا تقابلی جائزہ کیا گیاتھا۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

جدید مواصلاتی سیٹلائٹ کی روانگی پر قائم مقام صدر اور وزیر اعظم کی قوم کو مبارکباد

پاک سیٹ ایم ایم ون کی چین کے زی چینگ خلائی مرکز سے روانگی دونوں ممالک کے درمیان مضبوط تعاون اور اشتراک عمل کا ثبوت ہے

Published by Web Desk

پر شائع ہوا

کی طرف سے

وزیراعظم شہبازشریف نے پاکستان کے دوسرے مواصلاتی سیارے پاک سیٹ ایم ایم ون کی خلا میں روانگی کے تاریخی موقع پر قوم کو مبارکباد دی ہے۔

انہوں نے آج ایک بیان میں کہا کہ یہ شاندار کامیابی ہماری خلائی اور مواصلاتی صلاحیتوں میں ایک نمایاں پیش رفت ہے۔

پاک سیٹ ایم ایم ون کی چین کے زی چینگ خلائی مرکز سے روانگی دونوں ممالک کے درمیان مضبوط تعاون اور اشتراک عمل کا ثبوت ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ پاک سیٹ ایم ایم ون کے پورے پاکستان میں انٹرنیٹ کے رابطوں پر اثرات کی مجھے خاص طور پر خوشی ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ یہ کامیابی خلاء اور بالائی فضا کے تحقیقی مرکز کے باصلاحیت کارکنوں اور اس مشن میں شامل افراد کی لگن اور انتھک محنت کے بغیر ممکن نہیں تھی۔انہوں نے اس مشن میں شامل تمام افراد کے پختہ عزم و ارادے کا دلی شکریہ ادا کیا۔قائم مقام صدر سید یوسف رضا گیلانی نے بھی پاکستان کے دوسرے مواصلاتی سیارے پاک سیٹ ایم ایم ون کی خلا میں روانگی پرقوم کو مبارکباد دی ہے۔

انہوں نے آج ایک بیان میں پاک سیٹ ایم ایم ون خلاء میں بھیجنے پر سائنسدانوں اور انجینئرز کی کوششوں کوسراہا۔قائم مقام صدر نے امیدظاہر کی کہ ہمارے خلائی سفر کی کامیابیاں جاری رہیں گی۔وزیر منصوبہ بندی احسن اقبال نے جو چین میں سیارے کی روانگی کے موقع پر موجود تھے کہا کہ اس سیارے سے پاکستان کو مدار سے رابطے کی اہم سہولت حاصل ہو جائے گی۔انہوں نے کہا کہ وہ دن دور نہیں جب ہم اپنے راکٹوں کے ذریعے اپنے سیارے خلاء میں بھیجیںگے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

گندم کی اضافی درآمد میں ملوث افسران کے خلاف ایکشن

وزیر اعظم شہباز شریف کے 4 معطل افسران کے خلاف تحقیقات کی منظوری دے دی

Published by Nouman Haider

پر شائع ہوا

کی طرف سے

وزیراعظم شہباز شریف نے اضافی گندم کی درآمد میں ملوث قرار دیے گئے 4 معطل افسران کے خلاف تحقیقات کرنے کی منظوری دیتے ہوئے سیکرٹری تجارت کو ذمہ داری سونپ دی۔

وزیراعظم نے سیکرٹری تجارت محمد صالح احمد فاروقی کو انکوائری آفیسر مقرر کردیا، معطل افسران کے خلاف سول سرونٹس ایفیشینسی اینڈ ڈسپلن رولز 2020 کےتحت انکوائری ہوگی۔

وزارت نیشنل فوڈ سیکیورٹی کے 4 افسران کو ذمہ دار قرار دے کر معطل کیا گیا، ڈائریکٹرجنرل پلانٹ پروٹیکشن اللہ دتہ عابد، فوڈ سیکیورٹی کمشنر ڈاکٹر وسیم، ویٹ کمشنر اور ڈائریکٹر ڈی پی پی سہیل شہزاد معطل کیے جانے والے افسران میں شامل تھے۔ ان افسران کو گندم کے حوالے سے ناقص منصوبہ بندی اور غفلت برتنے کا ذمہ دار قرار دیا گیا۔

واضح رہے کہ ملک میں گندم کے وافر ذخائر موجود ہونے کے باوجود نگران حکومت کے دور میں بڑے پیمانے پر گندم کی درآمد کے انکشافات سامنے آئے تھے۔یہ بات بھی سامنے آئی تھی کہ موجودہ حکومت کی اب تک کی مدت میں بھی گندم کی درآمد کا سلسلہ جاری رہا۔

 

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll