جی این این سوشل

کامیاب جلسہ کام دکھا گیا،اسٹیبلشمنٹ لاجواب ، ہنگامی رابطے | Samina Pasha Vlog | GNN

177590 لوگوں نے یہ ویڈیو دیکھی ہے

جی این این میں ویڈیو ڈیسک آپ کو روزانہ کی تازہ ترین سرخیاں ، شوز ، پروگرام ، ایونٹس اور بہت کچھ فراہم کرے گا جب آپ اسے دیکھنا چاہتے ہیں۔

تفریح

زینب جمیل قاتلانہ کیس:ملزم کی ضمانت منظور

ملزم محمد جمیل کو 20 جون تک عدالت نے گرفتارنہ کرنےکا حکم دے دیا ہے

Published by Kamran Jan

پر شائع ہوا

کی طرف سے

پاکستان کی سابقہ اداکارہ و ماڈل زینب جمیل پر قاتلانہ حملے میں اہم پیشرفت ہوئی ہے۔ عدالت نے سابقہ اداکارہ زینب جمیل کے قاتلانہ حملے میں ملوث مرکزی ملزم کی ضمانت منظور کر لی۔

ذرائع کے مطابق مذہب اسلام کی خاطر شوبز انڈسٹری کو خیر باد کہنے والی پاکستانی اداکارہ و ماڈل زینب جمیل پر جان لیوا حملے میں ملوث ملزم انکے شوہر محمد جمیل کی ضمانت منظور کرتےہوئے گرفتاری سے روک دیا۔

لاہور کی سیشن عدالت نے زینب جمیل پر قاتلانہ حملے سے متعلق کیس کی سماعت کی۔ ایڈیشنل سیشن جج قمر عباس نے سماعت کرتے ہوئے ملزم شوہرمحمد جمیل کی عبوری ضمانت منظور کر لی ہے ۔

ملزم محمد جمیل کو 20 جون تک عدالت نے گرفتارنہ کرنےکا حکم دے دیا ہے، دوسری جانب ملزم کو شامل تفتیش ہونے کا حکم دے دیا ہے۔

علاوہ ازیں عدالت نے کیس کی آئندہ سماعت پر پولیس سے رپورٹ بھی طلب کرلی ہے۔

یاد رہے کہ گزشتہ ماہ لاہور کے علاقے ڈیفنس میں زینب جمیل پر قاتلانہ حملہ اس وقت ہوا جب وہ اپنے سیلون کے باہر اپنی گاڑی میں آ کر رکی ہی تھیں، اسی دوران 2 موٹر سائیکل سوار حملہ آور فائرنگ کر کے موقع سے فرار ہو گئے تھے۔

اداکارہ زینب جمیل کو اس حملے میں 6 گولیاں لگی تھیں، ہسپتال میں علاج کے دوران انہوں نے اپنے شوہر پر حملے کا الزام لگایا تھا۔لاہور کے تھانہ ڈیفنس میں پولیس نے انکے شوہر محمد جمیل کے خلاف مقدمہ درج کر کے تحقیقات شروع کر دیں تھیں۔ 

پڑھنا جاری رکھیں

جرم

جہلم : 2 گروپوںمیں خونی جھڑپ، 3 افراد ہلاک

فائرنگ کی اطلاع ملنے پر پولیس موقع پر پہنچ گئی، لاشوں کو قریبی ہسپتال منتقل کر دیا گیا

Published by Kamran Jan

پر شائع ہوا

کی طرف سے

جہلم شہر میں دو گروپوں میں تصادم کے نتیجہ میں 3 افراد ہلاک ہو گئے۔

تفصیلات کے مطابق جہلم کے علاقے میں 2 گروپوں کے درمیان تنازع پر فائرنگ کا تبادلہ ہوا جس کے نتیجے میں 3 افراد ہلاک ہو گئے۔

ذرائع کے مطابق فائرنگ کی اطلاع ملنے پر پولیس موقع پر پہنچ گئی۔ لاشوں کو قریبی ہسپتال منتقل کر دیا گیا۔

پولیس نے مقدمہ درج کر کے واقع کی تفتیش شروع کر دی۔ ابتدائی تفصیلات کے مطابق تنازع کی وجہ معلوم نہیں ہو سکی۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

ای آفس کے استعمال سے اربوں روپے بچائے جا سکیں گے، وزیراعظم

ای-آفس کے استعمال کا اصل مقصد عوام کو بہترین سروسز کی فراہمی اور حکومتی نظام میں شفافیت لانا ہے، شہباز شریف

Published by Kamran Jan

پر شائع ہوا

کی طرف سے

وزیراعظم شہباز شریف نے کہا کہ ای-آفس کے استعمال کا اصل مقصد عوام کو بہترین سروسز کی فراہمی اور حکومتی نظام میں شفافیت لانا ہے۔ای آفس پر منتقلی سے ملکی خزانے کے اربوں روپے بچائے جاسکیں گے۔

وزیراعظم کی زیر صدارت وفاقی حکومت کی وزارتوں اور اداروں کو الیکٹرانک-آفس (ای۔آفس) پر منتقل کرنے کے حوالہ سے اہم جائزہ اجلاس ہوا۔

وزیر اعظم کی چینی کمپنی ہواوے کے ساتھ تعاون کے معاہدے کے حوالے سے امور پر پیشرفت تیز کرنے کی ہدایت کر دی، اجلاس کو ای آفس کے نظام اور اسکے نفاذ اور اصلاحات پر پیش رفت کے حوالے سے آگاہ کیا گیا۔

وزیر اعظم آفس میڈیا ونگ سے جاری اعلامیہ کے مطابق وزیرِاعظم شہباز شریف کی زیرِ صدارت وفاقی حکومت کے دفاتر و اداروں میں ای آفس کے نفاذ کے حوالے سے اہم جائزہ اجلاس ہفتہ کو اسلام آباد میں منعقد ہوا۔  اجلاس کے شرکاء سے گفتگو کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ ای-آفس کے استعمال کا اصل مقصد عوام کو بہترین سروسز کی فراہمی اور حکومتی نظام میں شفافیت لانا ہے۔

انہوں نے کہا کہ کاغذ کا استعمال کم سے کم ہونے سے ماحول پر بھی مثبت اثرات مرتب ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ ای آفس پر منتقلی سے ملکی خزانے کے اربوں روپے بچائے جاسکیں گے۔ وزیراعظم نے ہدایت کی کہ ای آفس کو استعمال میں آسان اور محفوظ بنایا جائے۔ وزیر اعظم نے چینی کمپنی ہواوے کے ساتھ تعاون کے معاہدے کے حوالے سے امور پر پیشرفت تیز کرنے کی بھی ہدایت کی۔

اجلاس کو ای آفس کے نظام اور اسکے نفاذ اور اصلاحات پر پیش رفت کے حوالے سے آگاہ کیا گیا۔ بریفنگ کے دوران اجلاس کو بتایا گیا کہ ای-آفس کے نفاذ کی کامیابی جانچنے کے حوالے سے کی-پرفارمینس انڈیکیٹرز ترتیب دئے جا رہے ہیں، نیشنل انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ کی اوورہالنگ پر کام کا آغاز ہو چکا ہے۔

اجلاس میں وفاقی وزیرِ اقتصادی امور احد خان چیمہ، وزیرِ مملکت برائے انفارمیشن ٹیکنالوجی شزہ فاطمہ خواجہ،وزیراعظم کے کوارڈینیٹر رانا احسان افضل اور متعلقہ اعلی حکام بھی شریک تھے۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll