جی این این سوشل

پاکستان

مذہبی ٹورازم کے فروغ کے لئے اقدامات کیے جا رہے ہیں،حبیب الرحمن ٰ گیلانی

چیرمین متروکہ وقف املاک بورڈ حبیب الرحمن ٰ گیلانی کا کہنا ہے کہ مذہبی ٹورازم کے فروغ کے لئے اقدامات کیے جا رہے ہیں

پر شائع ہوا

کی طرف سے

مذہبی ٹورازم کے فروغ کے لئے اقدامات کیے جا رہے ہیں،حبیب الرحمن ٰ گیلانی
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

ان کا کہنا تھاکہ اس کے ذریعے دنیا بھر میں پاکستان کے سافٹ امیج میں بہتری آئے گی . یہ باتیں انھوں نے الحمرا آرٹ گیلری میں مذہنی ٹورازم کے فروغ سے متعلقہ منعقدہ تصویری نمائش دیکھنے کے بعد میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیں ,

انکا مزید کہنا تھا کہ سیاحوں کی آسانی کے لیے ٹورازم ایپ بنائی جا رہی ہیں , پاکستان اقلیتوں کے لیے کسی جنت سے کم نہیں , ملک بھر کے مندروں اور گوردواروں میں تز ین و آرائش سمیت دیگر ترقیاتی کام جاری ہیں۔

جبکہ ٹورازم ہر بھی تیزی سے کام ہو رہا ہے . تاریخی ورثہ کو محفوظ بنا کر ہم دنیا ک اچھا پیغام دے سکتے ہیں اس توقع پر بورڈ کے تعلیمی ونگ کے سیکر ٹری رانا محمد عارف ، ایڈمن آفیسر ذیشان احسان اور بورڈ ترجمان عامر ہاشمی سمیت دیگرافسران انکے ہمراہ تھے . چیرمین بورڈ نے نمائش کے انعقاد کی کاوشوں کو بھی خوب الفاظ میں سراہا.

پاکستان

عمران خان کے وارنٹ منسوخی کی درخواست دائر کیے جانے کا امکان، چھٹی کے روز عدالت کھل گئی

اسلام آباد ہائیکورٹ میں عمران خان کی جانب وارنٹ منسوخی کی درخواست دائر کیے جانے کا امکان ہے۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

عمران خان کے وارنٹ منسوخی کی درخواست دائر کیے جانے کا امکان، چھٹی کے روز عدالت کھل گئی

 

جج دھمکی کیس میں عمران خان کے وارنٹ گرفتاری  جاری کیے جانے کے معاملے پراسلام آباد ہائی کورٹ  چھٹی کے روز کھل گئی۔عمران خان کی جانب وارنٹ منسوخی کی درخواست دائر کیے جانے کا امکان ہے۔

اسلام آباد ہائی کورٹ دائری برانچ کا عملہ اسلام آباد ہائی کورٹ پہنچ گیا۔دائری برانچ کے اسسٹنٹ رجسٹرار اسد خان  بھی ہائی کورٹ پہنچ گئے۔

واضح  رہے کہ  گزشتہ روزاسلام آباد کی مقامی عدالت نے عمران خان کے خلاف   خاتون جج  کو دھمکی  دینے کےکیس میں وارنٹ گرفتاری جاری کیے تھے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

اسلام آباد پولیس کا عمران خان کی گرفتاری سے متعلق بیان سامنے آگیا

چیئرمین پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) عمران خان کے وارنٹ گرفتاری جاری ہونے کے معاملے پر اسلام آباد پولیس کا بیان سامنے آگیا۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

اسلام آباد پولیس کا  عمران خان کی گرفتاری سے متعلق بیان سامنے آگیا

ایک بیان میں اسلام آباد پولیس کا کہنا ہےکہ  وارنٹ گرفتاری ایک قانونی عمل ہے، عمران خان پچھلی پیشی پر عدالت میں پیش نہیں ہوئے تھے، ان کی عدالت میں پیشی کو یقینی بنانےکے لیے وارنٹ گرفتاری جاری ہوئے ہیں۔

اسلام آباد پولیس کا کہنا ہےکہ معزز عدالت عالیہ نے مقدمہ نمبر 407/22 سے دہشت گردی کی دفعہ خارج کرنےکا حکم جاری کیا تھا، اس حکم کے بعد یہ مقدمہ سیشن کورٹ میں منتقل کیا گیا تھا،  عمران خان نے سیشن کورٹ سے ابھی تک اپنی ضمانت نہیں کروائی، پیش نہ ہونے کی صورت میں انہیں گرفتارکیا جاسکتا ہے۔

اسلام آباد پولیس نے عوام سےگذارش کی ہےکہ وہ افواہوں پر کان مت دھریں۔

خیال رہے کہ تھانہ مارگلہ کے علاقہ مجسٹریٹ نے خاتون مجسٹریٹ زیباچوہدری کو دھمکی دینے کے کیس میں سابق وزیراعظم عمران خان کے وارنٹ گرفتاری جاری کیے ہیں۔

ذرائع کا کہنا تھا کہ اسلام آباد پولیس عمران خان کو گرفتار کرنے بنی گالہ روانہ ہوگئی ہے جس کے بعد عمران خان سخت سکیورٹی میں بنی گالہ سے روانہ ہوگئے۔

دوسری جانب پی ٹی آئی ذرائع کا یہ بھی کہنا  تھا کہ عمران خان ابھی بنی گالا میں موجود ہیں اور ان کے گھر سے کسی نامعلوم جگہ جانے کی خبردرست نہیں، عمران خان کی آج گرفتاری محض قیاس آرائیاں ہیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

سائفر اب بھی موجود ہے سیکیورٹی رسک کی وجہ سے پبلک نہیں کیا : عمران خان

چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے کہا ہے کہ سائفر اب بھی موجود ہے سیکیورٹی رسک کی وجہ سے پبلک نہیں کیا۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

سائفر اب بھی موجود ہے سیکیورٹی رسک کی وجہ سے پبلک نہیں کیا : عمران خان

نجی ٹی وی کو دیئے گئے انٹرویو میں انہوں نے کہا کہ آڈیو لیکس بہت بڑی سیکیورٹی بریچ ہے،بڑی بات ہے کہ وزیراعظم کی گفتگو محفوظ نہیں،پبلک ہوگئی،وزیراعظم کی ریکارڈنگ ہمارے دشمنوں کے پاس بھی پہنچ گئی ہوں گی۔

ان کا کہنا تھا کہ سائفر میں جو بھی باتیں ہوئیں وہ جلسوں میں کر چکا ہوں، او آئی سی اجلاس میں سائفرمعاملے کو نہیں لاناچاہتاتھا،ڈی مارش کرنے سےپہلے ہم نے کسی ملک کا نام نہیں لیا۔

عمران خان نے کہا کہ سائفر کی کاپی صدرمملکت کے پاس بھی ہے جو انہوں نے چیف جسٹس کو بھجوائی،اسپیکر کی جانب سے بھی سائفر کی کاپی چیف جسٹس کو بھجوائی گئی۔

انہوں نے کہا کہ اعظم خان کے ساتھ میری گفتگو فون پر ہوئی جو لیک ہو گئی۔

ان کا کہنا تھا کہ جب ان لوگوں کی حکومت آئی تو تیاری کرلی تھی یہ مقدمات بنائیں گے،آخری مرتبہ گرفتاری دینےکے لیے تیار تھا،بیگ بھی تیار تھا،شاید لوگوں کی بڑی تعداد دیکھ کر یہ لوگ نہیں آئے۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll