جی این این سوشل

پاکستان

یہ میرا آخری لانگ مارچ اور دھرنا ہوگا، عمران خان

پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین اور سابق وزیر اعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ یہ میرا آخری لانگ مارچ اور دھرنا ہوگا، اس کے بعد ملک شفاش الیکشن کی طرف جائے گا۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

یہ میرا آخری لانگ مارچ اور دھرنا ہوگا، عمران خان
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

پشاور میں کنویشن سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ پاکستان کی حقیقی آزادی کے لیے قوم کو نکالوں گا، مسلط کیے گئے غلاموں کے خلاف قوم کو باہر بلاؤں گا، یاد رکھیں ظالم آدمی ہمیشہ بزدل ہوتا ہے۔

عمران خان نے کہا کہ رانا ثنا اللہ نے پچھلی بار پُرامن احتجاج پر آنسوگیس کی شیلنگ کی، میرا پالان بن رہا ہے، رانا ثنا اللہ ابھی سے چھپنے کی تیار کرو۔

چیئرمین پی ٹی آئی نے کہا کہ شہباز شریف کل رات ایک مفرور کے ساتھ پہنچا ہے، اسحاق ڈار وزیراعظم کے جہاز میں بیٹھ کر پاکستان سے فرار ہوا تھا، وہ اس لیے واپس آیا ہے کہ کرپشن کے کیسز ختم کرنے ہیں، ہم نے ان سب کو چھپنے کی جگہ نہیں دینی، ساری جگہ پر میرے نوجوان تیار ہیں۔

انہوں نے کہا کہ رانا ثنا اللہ تمہاری پولیس، آنسوگیس اور رابڑ کی گولیاں ہمیں نہیں روک سکتی، ابھی کپتان کے دماغ میں کیا پالان بن رہا ہے کسی کو نہیں پتا، یہ میرا آخری لانگ مارچ اور دھرنا ہوگا، اللہ پر یقین ہے اس کے بعد ملک شفاف الیکشن کی طرف جائے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ ہم سب سے دوستی چاہتے ہیں مگر غلامی کسی کی نہیں کریں گے، ہم وہ پاکستان چاہتے ہیں جو اپنے پیر پر کھڑا ہو، نہ میں کبھی جھکا نہ قوم کو کسی کے سامنے جھکنے دوں گا۔

تجارت

پاکستان کو ایشین انفرا اسٹرکچر بینک نے 50 کروڑ ڈالر منتقل کردیے : وزارت خزانہ

اسلام آباد : ایشین انفراسٹرکچر ڈویلپمنٹ بینک کی جانب سے پاکستان کو500ملین ڈالرکی مالی معاونت موصول ہوگئی ۔ 

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پاکستان کو ایشین انفرا اسٹرکچر بینک  نے  50 کروڑ ڈالر منتقل کردیے : وزارت خزانہ

وزیر خزانہ سینیٹرمحمد اسحاق ڈار  نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر پیغام میں کہا کہ ایشین انفراسٹرکچر ڈویلپمنٹ بینک کے بورڈ کی منظوری کے بعد بینک نے 50 کروڑ ڈالر پروگرام فنانسنگ کے تحت سٹیٹ بینک آف پاکستان کو منتقل کردیئے ہیں۔

واضح رہے کہ ایشین انفراسٹرکچر ڈویلپمنٹ بینک نے بریس ترقیاتی پروگرام کے تحت پاکستان کےلئے 500 ملین ڈالر کی مالی معاونت کا اعلان کیا تھا۔

بورڈ کی منظوری کے بعد مذکورہ رقم پاکستان کو موصول ہوگئی ہے۔

وزارت خزانہ کے ترجمان نے کہا ہے کہ 500 ملین ڈالر کی منتقلی کے بعد پاکستان کے زرمبادلہ کے ذخائر میں اضافہ ہوگا۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ آج عہدے سے سبکدوش ہورہے ہیں

ملک کے 16 ویں آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے اپنا عہدہ نومبر 2016 کو سنبھالاجو 29 نومبر 2022 تک آرمی چیف رہے۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ آج عہدے سے سبکدوش ہورہے ہیں

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ اپنی 6 سالہ مدت ملازمت مکمل کر کے آج اپنے عہدے سے سبکدوش ہورہے ہیں۔

 پاک فوج میں کمانڈ کی تبدیلی کی پروقار تقریب آج صبح 9 بجے جنرل ہیڈ کوارٹرز ( جی ایچ کیو) میں ہوگی۔

جنرل قمر جاوید باجوہ کمان کی چھڑی جنرل عاصم منیر کو سونپیں گے۔ جس کے بعد جنرل عاصم منیر پاکستان آرمی کی کمان سنبھالنے والے 17ویں آرمی چیف بن جائیں گے۔

آرمی چیف  جنرل قمر جاوید باجوہ اپنا الوداعی خطاب کرینگے جبکہ سبکدوش آرمی چیف کو گارڈ آف آنر پیش کیا جائے گا ۔ وہ یادگار شہدا پر بھی حاضری دینگے اور فاتحہ خوانی کرینگے۔

جنرل قمر جاوید باجوہ نے پاک فوج کے سولہویں سربراہ کے طور پر 6 سال تک خدمات انجام دیں۔ اس سے قبل راولپنڈی کور کی کمانڈ سمیت کئی اہم عہدوں پر تعینات رہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

کھیل

نئے آرمی چیف جنرل عاصم منیر بھی فاسٹ باؤلر نکلے

پرانے محلے داروں نے بتایا وہ بہت تیز باؤلنگ کرتے تھے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

نئے آرمی چیف جنرل عاصم منیر بھی فاسٹ باؤلر نکلے

نئے آرمی چیف جنرل عاصم منیر بھی فاسٹ باؤلر نکلے، پرانے محلے داروں نے بتایا وہ بہت تیز باؤلنگ کرتے تھے۔

راولپنڈی کے علاقے ڈھیری حسن آباد سے تعلق رکھنے والے جنرل عاصم منیر پاکستان کی فوج کے اُن افسران میں سے ہیں جو آفیسر ٹریننگ سکول (او ٹی ایس) کے ذریعے آرمی آفیسر بنے۔ 

ان کا تعلق منگلا کے 17ویں او ٹی ایس کورس سے ہے۔ جنرل عاصم منیر کے استاد کا کہنا ہے کہ ’جنرل عاصم منیر ایک لائق طالب علم تھے اور جب وہ 1974ء میں میرے والد صاحب کے مدرسے میں قرآن مجید حفظ کرنے آئے تو انہوں نے صرف دو سال کے اندر قرآن حفظ کرکے اپنی ذہانت ثابت کر دی تھی۔ 

جنرل عاصم منیر کے والد سید سرور منیر راولپنڈی کے علاقے لال کڑتی کے سکول میں پرنسپل تھے۔ انہوں نے اپنے محلے میں مسجد بنوائی جہاں حافظ خلیل قران پڑھانے جایا کرتے تھے۔ اہلِ محلّہ کے مطابق جنرل عاصم منیر کا خاندان ’حفّاظ کا خاندان‘ مشہور تھا۔

ان کے دونوں بھائی قاسم منیر اور ہاشم منیر بھی حافظِ قران ہیں۔‘ حافظ طاہر خلیل کا کہنا ہے کہ ’میرے والد اور جنرل عاصم کے والد گہرے دوست تھے اور دونوں نے طے کیا تھا کہ اپنے بچوں کو سکول بھیجنے سے قبل قرآن حفظ کرانا ہے۔ 

یہی وجہ ہے کہ جنرل عاصم نے قرآن مجید مکمل کر کے سکول میں داخلہ لیا تھا۔‘ جنرل عاصم منیر کو فرنٹیر فورس ریجمنٹ کی 23 ویں بٹالین میں کمیشن ملا تھا۔

وہ اپنی ترقی اور موجودہ تعیناتی سے قبل ایک تھری سٹار جنرل کے طور پر کوارٹر ماسٹر جنرل کے طور پر جی ایچ کیو میں تعینات تھے۔ انہیں ستمبر 2018ء میں لیفٹیننٹ جنرل کے عہدے پر ترقی دی گئی تھی

تاہم انہوں نے 27 نومبر 2018ء کو پاکستان کی انٹیلی جینس ایجنسی آئی ایس آئی کے سربراہ کے طور پر چارج سنبھالا تھا۔ 

ان کا آئی ایس آئی کے سربراہ کے طور پر دور تاریخ میں مختصر ترین سمجھا جاتا ہے اور صرف نو ماہ بعد ہی انہیں اچانک 2019ء میں کور کمانڈر گوجرانوالہ تعینات کر دیا گیا تھا۔

اس سے قبل وہ ڈی جی ملٹری انٹیلی جنس اور فورس کمانڈر نادرن ایریاز کے طور پر بھی خدمات سرانجام دے چکے ہیں۔ اس کے علاوہ وہ بطور لیفٹیننٹ کرنل کے طور پر سعودی عرب میں بھی خدمات سرانجام دے چکے ہیں۔

 پاکستان کی عسکری تاریخ میں جنرل عاصم منیر پہلے آرمی چیف ہیں جو 2 انٹیلی جنس ایجنسیوں (آئی ایس آئی اور ملٹری انٹیلی جنس) کی سربراہی کر چکے ہیں۔ مزید یہ کہ وہ پہلے کوارٹر ماسٹر جنرل ہیں جو آرمی چیف بنے ہیں ۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll