جی این این سوشل

پاکستان

الیکشن کمیشن کا قومی اسمبلی کی نشستوں میں کمی کا اعلان

قومی اسمبلی کی نشستوں کی تعداد 342 سے کم ہو کر 336 ہو گئی، نوتی فکیشن جاری

پر شائع ہوا

کی طرف سے

الیکشن کمیشن کا قومی اسمبلی کی نشستوں میں کمی کا اعلان
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

الیکشن کمیشن آف پاکستان (ای سی پی) نے حلقہ بندیوں کی حتمی فہرست کے اپنے حالیہ نوٹیفکیشن میں قومی اسمبلی (این اے) کی نشستوں کی تعداد 336 کردی جس کے بعد قومی اسمبلی کی 6 جنرل نشستیں کم ہو گئیں۔ قبل ازیں قومی اسمبلی کی نشستوں کی تعداد 342 تھی۔

الیکشن کمیشن آف پاکستان (ای سی پی) کی جانب سے جاری کردہ حلقہ بندیوں کی فہرست میں قومی اسمبلی کی جنرل نشستوں کی تعداد 272 سے کم ہو کر 266 رہ گئی ہے۔ حد بندی کے عمل کے بعد، انضمام شدہ اضلاع کے لیے قومی اسمبلی کی نشستیں گزشتہ 12 سے کم کر کے 6 کر دی گئی ہیں۔ یہ ایڈجسٹمنٹ 25ویں آئینی ترمیم کی دفعات کے مطابق ہے، جس کے بعد وفاق کے زیر انتظام قبائلی علاقہ جات (فاٹا) کے خیبرپختونخوا میں ضم ہو گئے ہیں۔

قومی اسمبلی میں پنجاب کی 141 جنرل نشستیں ہوں گی، سندھ کی 61، خیبرپختونخوا کی 45، بلوچستان کی 16 اور اسلام آباد کی تین نشستیں ہوں گی۔ خواتین کے لیے 60 مخصوص نشستیں ہوں گی جبکہ اقلیتوں کے لیے 10 نشستیں ہوں گی۔پنجاب اسمبلی میں 371 نشستیں ہوں گی جن میں سے 297 جنرل نشستیں ہوں گی جبکہ سندھ اسمبلی میں 168 نشستیں ہوں گی جن میں سے 130 جنرل نشستیں ہوں گی۔ خیبرپختونخوا اسمبلی کی 145 نشستیں ہوں گی جن میں سے 115 جنرل نشستیں ہوں گی۔ بلوچستان اسمبلی کی 65 نشستیں ہوں گی جن میں سے 51 جنرل نشستیں ہوں گی۔

واضح رہے کہ وزیرستان کے تین اضلاع لوئر ساؤتھ، اپر ساؤتھ، اور نارتھ کی اب ایک ہی نشست ہو گی قبل ازیں ان کی ​​الگ الگ نمائندگی تھی ۔ جنوبی وزیرستان، جو دو اضلاع میں تقسیم ہوا اور شمالی وزیرستان جو پہلے ایک ایک نشست رکھتے تھےاب مشترکہ نمائندگی رکھتے ہیں۔مزید یہ کہ فاٹا کا سابقہ ​​ضلع اورکزئی ہنگو کے ساتھ ضم ہو گیا ہے جس کے نتیجے میں ان کی متعلقہ نشستیں ایک ہی حلقے میں شامل ہو گئی ہیں۔

ضلع کرم کی دو نشستیں، جو پہلے فرقہ وارانہ بنیادوں پر تقسیم تھیں، اب ایک میں ضم ہو گئی ہیں۔1973 کی حد بندی میں، سابق فاٹا کے پاس گزشتہ مردم شماری کے مطابق قومی اسمبلی کی آٹھ نشستیں تھیں۔ جنرل پرویز مشرف کے دور حکومت میں انضمام شدہ اضلاع کو 12 نشستیں دی گئی تھیں۔ای سی پی نے 8 فروری 2024 کو عام انتخابات کا اعلان کیا ہے اور انتخابات حال ہی میں جاری کردہ حلقوں کی 

کھیل

سعودی یوم تاسیس کی مناسبت سے سٹار فٹبالروں کی روائتی لباس میں تصاویر وائرل

 جشن میں سعودی عرب کے روایتی نغمے اور رقص پیش کیا گیا ہے جبکہ کلب میں سعودی جھنڈیوں سے مزین کیا گیا

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

سعودی  یوم تاسیس کی مناسبت سے  سٹار فٹبالروں کی روائتی  لباس میں تصاویر وائرل

سعودی عرب کے یوم تاسیس کی مناسبت سے الہلال فٹبال کلب اور الاتحاد فٹبال کلب نے جشن مناتے ہوئے سٹار فٹبالروں کی سعودی لباس میں تصاویر جاری کی ہیں۔

الہلال کلب نے یوم تاسیس کا جشن کلب کے صدر دفتر میں کیا ہے جس میں سٹار فٹبالر نیمار نے سعودی روایتی لباس میں شرکت کی ہے۔

 جشن میں سعودی عرب کے روایتی نغمے اور رقص پیش کیا گیا ہے جبکہ کلب میں سعودی جھنڈیوں سے مزین کیا گیا۔

دوسری طرف الاتحاد کلب نے ایکس پر اپنے اکاؤنٹ میں یوم تاسیس کی ویڈیو جاری کی ہے جس میں سٹار فٹبالر کریم بنزیما سعودی روایتی لباس میں ملبوس نظر آئے۔

الاتحاد فٹبال کلب نے یوم تاسیس پر سعودی قیادت اور عوام کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ تین صدیوں پر محیط تاریخ پر ہمیں فخر و ناز ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

دنیا

شہزادہ ولیم نے بھی غزہ جنگ بندی کا مطالبہ کر دیا

غزہ میں انسانی بنیادوں پر امداد کی ترسیل میں بھی اضافہ ہونا چاہیے اور یرغمالیوں کو رہا کیا جانا چاہیے، پرنس ولیم

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

شہزادہ ولیم نے بھی غزہ جنگ بندی کا مطالبہ کر دیا

برطانیہ کے شہزادہ ولیم نےغزہ جنگ بندی کا مطالبہ کیا ہے ۔ رائٹرز کے مطابق شہزادہ ولیم نے کہا کہ وہ بھی دوسرے لوگوں کی طرح اب اس جنگ کا خاتمہ چاہتے ہیں ۔ اسی طرح غزہ میں انسانی بنیادوں پر امداد کی ترسیل میں بھی اضافہ ہونا چاہیے اور یرغمالیوں کو رہا کیا جانا چاہیے۔

انہوں نے کہا کہ 7 اکتوبر کے حملے کے بعدانہیں گہری تشویش ہے کہ غزہ جنگ میں خوفناک حد تک انسانی جانوں کی قیمت لی جارہی ہے، کیونکہ بہت زیادہ ہلاکتیں ہو چکی ہیں۔انہوں نے گزشتہ روز لندن میں برٹش ریڈ کراس کے ہیڈ کوارٹر کا دورہ کیا تاکہ وہ مشرق وسطیٰ میں جنگ سے متاثرہ افراد کی مدد کے لیےکئے گئے اقدامات کا جائزہ لے سکیں ۔

کینسنگٹن پیلس نے کہا کہ شہزادہ ولیم کے بیان سے قبل برطانیہ کے دفتر خارجہ کو اس بارے بریفنگ دی گئی تھی۔پرنس ولیم کے جواب میں اسرائیلی حکومت کے ترجمان ایلون لیوی نے کہا کہ یقیناً اسرائیل جلد سے جلد لڑائی کا خاتمہ چاہتا ہے، اور یہ اس وقت ممکن ہو گا جب 134 یرغمالیوں کو رہا کر دیا جائے

پڑھنا جاری رکھیں

دنیا

سعودی عرب کا غزہ میں جنگ بندی کی قرار داد کو ویٹو کرنے پراظہار افسوس

سلامتی کونسل میں اصلاحات کی زیادہ ضرورت ہے تاکہ عالمی سطح پر حقیقی معنوں میں امن وسلامتی کے قیام کی راہ ہموارہو سکے، سعودی وزارت خارجہ

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

سعودی عرب کا غزہ میں جنگ بندی کی قرار داد کو ویٹو کرنے پراظہار افسوس

سعودی عرب کی جانب سے غزہ پٹی اور گرد ونواح میں فوری جنگ بندی کا مطالبہ کرنے والی قرار داد کے مسودے کو ویٹو کرنے پر افسوس کا اظہار کیا گیا ہے۔

سعودی خبر رساں ایجنسی ایس پی اے کے مطابق سعودی وزارت خارجہ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ عوامی جمہوریہ الجزائر کی جانب سے سلامتی کونسل میں غزہ پٹی پرفوری جنگ بندی کا مطالبہ کیا گیا تھا۔

وزارت خارجہ کی جانب سے جاری بیان میں اس بات پر زور دیا گیا کہ سلامتی کونسل میں پہلے سے زیادہ اصلاحات کی زیادہ ضرورت ہے تاکہ عالمی سطح پر حقیقی معنوں میں امن وسلامتی کے قیام کی راہ ہموارہو سکے جس کے لیے دہراہ معیار ختم کرنا ہو گا۔

مملکت نے غزہ پٹی اور اس کے گرد ونواح میں بگڑتے ہوئے حالات اور بین الاقوامی امن و سلامتی کے لیے خطرہ بننے والی عسکری کارروائیوں میں اضافے سے بھی خبردار کیا جس کے باعث مسئلہ فلسطین کے پرامن حل کی راہ میں رکاوٹیں کھڑی ہو رہی ہیں۔

واضح رہے کہ امریکا نے غزہ میں جنگ بندی کی قرارداد ایک بار پھر ویٹو کر دی ہے۔ امریکا نے سلامتی کونسل میں غزہ میں جنگ بندی سے متعلق الجزائر کی قرارداد ویٹو کی ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll