جی این این سوشل

پاکستان

حکومت پاکستان نےکوڈیڈ 19 کے حوالے سے عائد تمام سفری پابندیاں اٹھا لیں

حج درخواستیں جمع کرانے کےلئے کورونا ویکسینیشن سرٹیفکیٹ جمع کرانے کی ضرورت نہیں، وزارت صحت

پر شائع ہوا

کی طرف سے

حکومت پاکستان نےکوڈیڈ 19 کے حوالے سے عائد تمام سفری پابندیاں اٹھا لیں
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

حکومت پاکستان نےکوڈیڈ 19 کے حوالے سے عائد تمام سفری پابندیاں اٹھا لیں، پاکستان ایئرپورٹس اور انٹری پوائنٹس پر 2 فیصد کورونا ٹیسٹنگ بھی ختم کر دی گئی۔ 

وزارت صحت کے حکام نے کہا ہے کہ حج درخواستیں جمع کرانے کےلئے کورونا ویکسینیشن سرٹیفکیٹ جمع کرانے کی ضرورت نہیں۔ مختلف بینک حج درخواستوں کے ساتھ کورونا ویکسینیشن سرٹیفکیٹ بھی مانگ رہے ہیں جو ضروری نہیں، حج پر روانگی سے پہلے سعودی حکومت کی ہدایات کی روشنی میں نئی ایڈوائزری جاری کریں گے۔

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشنز سینٹر (این سی او سی) نے کہا ہے کہ پاکستان میں داخلے کے لیے کورونا ویکسینیشن سرٹیفکیٹ کی ضرورت نہیں ہو گی، پاکستان آنے والوں کو بھی کورونا نیگیٹو ٹیسٹ رپورٹ پیش کرنے کی ضرورت نہیں۔

این سی او سی نے یہ بھی کہا ہے کہ سفری پابندیاں ہٹانے کا فیصلہ عالمی ادارہ صحت کی گائیڈ لائنز کی روشنی میں کیا گیا ہے، پاکستانی ایئر پورٹس، پوائنٹس آف انٹری پر 2 فیصد کورونا ٹیسٹنگ بھی ختم کر دی گئی ہے، تاہم ایئر پورٹس پر وبائی امراض سے متعلق نگرانی جاری رہے گی۔

پاکستان

خیبرپختونخوا میں عید قربان پر بد ترین لوڈشیڈنگ کیخلاف عوام سراپا احتجاج

پشاور، نوشہرہ، مردان سمیت کئی شہروں میں مظاہرے کیے گئے جبکہ نوشہرہ میں مشتعل عوام نے جی ٹی روڈ بلاک کردیا

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

خیبرپختونخوا میں عید قربان پر بد ترین لوڈشیڈنگ کیخلاف عوام سراپا احتجاج

خیبرپختونخوا میں عید قربان پر بد ترین لوڈشیڈنگ کیخلاف عوام سراپا احتجاج ہے، پشاور، نوشہرہ، مردان سمیت کئی شہروں میں مظاہرے کیے گئے جبکہ نوشہرہ میں مشتعل عوام نے جی ٹی روڈ بلاک کردیا۔

مظاہرین کی جانب سے شدید نعرے بازی کی گئی اور احتجاج کے باعث گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگ گئیں، ایمبولینسیں بھی رش میں پھنس گئیں جبکہ سابق وزیر اعلیٰ کے پی پرویز خٹک کی گاڑی بھی رش میں پھنس گئی۔ پرویز خٹک نے شہریوں سے مکالمہ کرتے ہوئے کہا کہ آپ نے ووٹ دیکر اچھا فیصلہ کیا اب5 سال صبر کرو۔

دوسری جانب صوابی میں لوڈ شیڈنگ کے خلاف رہنما پی ٹی آئی اسد قیصر میدان میں آ گئے اور کہا کہ خیبر پختونخوا کی عوام سے تحریک انصاف کو ووٹ دینے کا انتقام لیا جارہا ہے، بس بہت ہوگیا! لوڈشیڈنگ کے خلاف اسمبلی فلور پر احتجاج ہو گا اور عوام میں بھی جائیں گے۔

ادھر کرک میں بجلی لوڈشیڈنگ کے خلاف خواتین کی جانب سے شدید احتجاج کیا گیا اور مظاہرین نے شگئی روڈ بلاک کردیا۔علاوہ ازیں رکن صوبائی اسمبلی فضل الہٰی نے رحمان بابا گرڈ سٹیشن میں داخل ہو کر 10 فیڈرز کی بجلی بحال کردی۔

بجلی بحالی کے انوکھے انداز کی ویڈیو بھی سوشل میڈیا پر وائرل ہو گئی، ویڈیو میں رکن اسمبلی کو انکے ساتھیوں کے ساتھ گرڈ سٹیشن میں چارپائیوں پر لیٹے دیکھا جاسکتا ہے۔

دوسری جانب پیسکو نے ایم پی اے فضل الہیٰ کے خلاف کارروائی کا فیصلہ کر لیا، ایس ڈی او رشید گڑھی سب ڈویژن پیسکو نے رحمان بابا پولیس سٹیشن کو مراسلہ لکھ دیا جس میں فضل الہیٰ اور اس کے ساتھیوں کے خلاف ایف آئی آر درج کرنے کی درخواست کی گئی ہے۔

مراسلے کے متن میں کہا گیا ہے کہ ایم پی اے فضل الہٰی اور جمیل نامی شخص نے45 افراد کے ہمراہ رحمان بابا گرڈ سٹیشن پر دھاوا بولا، فضل الہٰی نے پولیس کی موجودگی میں زبردستی اخون آباد اور شلوزان فیڈر چالو کرائے، زبردستی فیڈر چالو کرانے سے پیسکو کو26 لاکھ40 ہزار روپے کا نقصان اٹھانا پڑا۔ 

پڑھنا جاری رکھیں

دنیا

بھارتی ایجنسی ’’را‘‘ کے مزید 4 جاسوس آسٹریلیا سے بے دخل

کینیڈ اور امریکہ میں بھی بھارت کی جاسوسی سرگرمیاں بے نقاب ہوچکی ہیں، رپورٹ

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

بھارتی ایجنسی ’’را‘‘ کے مزید 4 جاسوس آسٹریلیا سے بے دخل

آسٹریلیا نے بھارت کے مزید 4 جاسوسوں کو اپنے ملک سے بے دخل کر دیا ہے۔ جاسوسوں کی تازہ بے دخلی کو آسٹریلیا میں بھی مودی سرکار کے لیے زبردست دھچکا قرار دیا جارہا ہے۔کینیڈ اور امریکہ میں بھی بھارت کی جاسوسی سرگرمیاں بے نقاب ہوچکی ہیں۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق بھارتی خفیہ ادارے ’’راـ ‘‘کی طرف سے جاسوسی کا نیٹ ورک قائم کرنے کا بنیادی مقصد بیرونِ ملک مقیم بھارتی باشندوں پر نظر رکھنا اور اختلافِ رائے کو دھمکانا تھا۔آسٹریلوی قانون سازوں پر اثر انداز ہونے کے لیے جاسوسوں کا نیٹ ورک بنایا جارہا تھا۔

آسٹریلین براڈ کاسٹنگ کارپوریشن نے تحقیقات کے نتیجے میں بتایا ہے کہ بے دخل کیے گئے جاسوس آسٹریلوی سیاست دانوں اور دفاعی ٹیکنالوجیز سے وابستہ افراد اور اداروں کو نشانہ بنا رہے تھے۔

تاہم ان جاسوسوں کو حکام نے ملک سے بہت خاموشی کے ساتھ نکالا ہے تاکہ مودی سرکار کے لیے سُبکی اور شرمندگی کا سامان نہ ہو لیکن عوامی سطح پر جاسوسی کی مذمت نہ کیے جانے پر آسٹریلیا کے اندر سے آوازیں اٹھ رہی ہیں۔

گرینز پارٹی کے سینیٹر شوبرج نے مطالبہ کیا ہے کہ آسٹریلیا سرعام بھارت کی مذمت کرے۔

آسٹریلوی حکام نے بتایا ہے کہ بھارتی جاسوس نیٹ ورک ایئر پورٹ سکیورٹی پروٹوکولز کو بھی نشانہ بنارہا تھا۔

یاد رہے کہ 2021 میں انٹیلی جنس چیف مائک برجس نیٹ ورک کا پتا لگایا تھا اور سفارت کاروں کے بھیس میں کام کرنے والے جاسوسوں کو بے نقاب کیا گیا تھا۔ انہوں نے بھارت کا نام نہیں لیا تھا۔ نام نہاد سفارت کاروں کو خاموشی سے، پروفیشنل طریقے سے ملک بدر کیا گیا تھا۔

خیال رہے کہ اپریل میں دو جاسوس نکالے گئے تھے۔ چار جاسوسوں کی بے دخلی کا انکشاف آسٹریلین براڈ کاسٹنگ کارپوریشن نے اپنی تحقیقات میں کیا۔ آسٹریلیا میں بھارتی نیٹ ورک بے نقاب ہونے کی اولین خبریں اپریل میں آئی تھیں جب واشنگٹن پوسٹ نے بتایا تھا کہ دو بھارتی جاسوس نکال دیئے گئے ہیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

کھیل

پاک بنگلہ دیش سیریز ، بابر اعظم ، رضوان اور شاہین آفریدی کو ڈراپ کئے جانے کا امکان

بنگلہ دیش کے خلاف ہوم سیریز میں نئے کھلاڑیوں کو موقع دیئے جانے کا قوی امکان ہے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پاک بنگلہ دیش سیریز ، بابر اعظم ، رضوان اور شاہین آفریدی کو ڈراپ کئے جانے کا امکان

قومی کرکٹ ٹیم کی بنگلہ دیش کے خلاف ہوم سیریز میں نئے کھلاڑیوں کو موقع دیئے جانے کا قوی امکان ہے۔ 

بنگلہ دیش کے خلاف پاکستانی اسکواڈ کے لیے سلیکشن کمیٹی نے ٹیسٹ ٹیم کے کپتان شان مسعود اور کوچ جیسن گلیسپی کے ساتھ مشاورت شروع کر دی ہے۔

چیئرمین پی سی بی محسن نقوی نے بنگلہ دیش کے خلاف نئےکھلاڑیوں کو موقع دینے کی بات کی ہے جس کے بعد قوی امکان ہے کہ بنگلہ دیش کے خلاف ہوم سیریز میں نئے اور نوجوان کھلاڑیوں کو موقع دیا جائے گا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ فاسٹ بائولنگ میں شاہنواز دھانی، عامر جمال، خرم شہزاد، میر حمزہ اور نسیم شاہ کی موجودگی میں حارث رؤف کے نام پر غور نہیں کیا جائیگا جبکہ شاہین آفریدی کو بھی آرام دیئے جانے کا قوی امکان ہے۔

ذرائع کے مطابق بابر اعظم کے حوالے سے بھی انہی خطوط پر گفتگو ہو رہی ہے جبکہ ٹیسٹ کپتان شان مسعود ہوم سیریز میں وکٹ کیپر محمد رضوان کی جگہ سابق کپتان سرفراز احمد کے ساتھ جانے کی خواہش رکھتے ہیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll