جی این این سوشل

پاکستان

چین نے کراچی کیلئے فضائی روٹ کا آغاز کرد یا

گویانگ کسٹمز کے مطابق یہ طیارہ پاکستان سے نیلے کیکڑوں سے لدا ہوا گویانگ واپس جائے گا

پر شائع ہوا

کی طرف سے

چین نے کراچی کیلئے فضائی روٹ کا آغاز کرد یا
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

چین کے صوبہ گوئیزہو نے کراچی کے لئے نئے فضائی کارگو روٹ کا آغاز کر دیا۔ شنہوا کے مطابق فضائی راستے کے باضابطہ آغاز کے موقع پر کارگو طیارہ کپڑے، الیکٹرانک مصنوعات اور دیگر اشیاپر مشتمل 6 ٹن سامان لے کر گزشتہ صبح چین کے صوبہ گوئیزہو کے دارالحکومت گویانگ سے روانہ ہوا اور تقریباً 6 گھنٹے میں کراچی پہنچا۔

گویانگ کسٹمز کے مطابق یہ طیارہ پاکستان سے نیلے کیکڑوں سے لدا ہوا گویانگ واپس جائے گا۔ یہ چین کے صوبہ گوئیزہو اور پاکستان کو ملانے والا پہلا فضائی راستہ ہے اور یہ صوبے کو بیلٹ اینڈ روڈ انیشی ایٹو ملک سے ملانے والا پہلا فضائی راستہ بھی ہے۔ حکام نے کہا کہ نیا فضائی راستہ گویانگ کو جنوب مغربی چین میں کارگو ڈسٹری بیوشن سینٹر بنانے میں مدد کرے گا جبکہ اس سے ملک کی تازہ مصنوعات کم وقت میں گوئزہو تک پہنچیں گی۔

 

پاکستان

بل گیٹس پاکستان میں پولیو کے خاتمے کے لئے پُرعزم

انسانیت کے لیےبل گیٹس کی خدمات لائق تحسین ہیں، وزیر اعظم شہباز شریف

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

بل گیٹس پاکستان میں پولیو کے خاتمے کے لئے پُرعزم

ملک سے پولیو کے خاتمے کے لیے قومی ٹاسک فورس کا اجلاس ہوا، جس میں چیئرمین گیٹس فاؤنڈیشن بل گیٹس اور دیگر حکام نے شرکت کی۔

پولیوکے خاتمے کے لیے قومی ٹاسک فورس کے اجلاس میں گفتگو کرتے ہوئے وزیراعظم شہباز شریف کا کہنا تھا کہ ہم ملک سے پولیو کے خاتمے کے لیے پُرعزم ہیں، حکومت انسداد پولیو کے لیے تمام تر وسائل بروئے کار لائے گی۔ پاکستان میں پولیوخاتمے،بنیادی صحت، بچوں کی بہترنشوونما میں گیٹس فاؤنڈیشن کی خدمات قابل ستائش ہیں۔

وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان میں گزشتہ3سالوں میں پولیوکے خاتمے کے لیے مالی معاونت میں اضافہ ہوا، گزشتہ دوسال میں انسداد پولیو کے لیے مالی معاونت کا 30 فیصد بل گیٹس فاؤنڈیشن کا ہے، پولیو خاتمے کے لیے سعودی عرب نےآئندہ 5 سال میں پچاس کروڑڈالرکی یقین دہانی کرائی ہے۔

شہباز شریف نے کہا کہ سرحدی نقل وحمل کےباعث بھی پولیووائرس پاکستان آیا، ہم نےاس مسئلے سے موثراندازمیں نمٹنا ہے، وفاقی حکومت صوبائی حکومتوں کے ساتھ ملکر ملک سے پولیو کے خاتمے کے لیے پرعزم ہے، اپنے بچوں کی زندگیوں کو محفوظ بنانے کے لیے ہم نے ملک کو پولیو سے پاک کرنا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان کےعوام اورحکومت کی طرف سے بل گیٹس کوخوش آمدید کہتا ہوں، ملک میں صحت اورسماجی شعبےمیں آپ کی خدمات سے پاکستان مستفید ہورہا ہے۔

اس موقع پر چیئرمین بل گیٹس فاؤنڈیشن بل گیٹس نے کہا کہ پوری تندہی سے آئندہ 6 ماہ میں کام کرنا ہے، پاکستان سے پولیو کے مکمل خاتمے کے لیے ترجیحی بنیادوں پر کام کرنا ہوگا۔

انہوں نے کہاکہ پاکستان کے ساتھ انسداد پولیو اور صحت کے دیگر شعبوں میں کام کرنے کے لیے پرعزم ہیں، پاکستان میں ڈیجیٹائزیشن کا منصوبہ ہماری ترجیح ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

ایپکس کمیٹی کے اجلاس میں کسی قسم کے آپریشن کا ذکر نہیں ہوا، وزیر اعلیٰ کے پی

اپیکس کمیٹی اجلاس میں نیشنل ایکشن پلان پر اور ملک میں امن و امان پر  بات ہوئی، علی امین گنڈا پور

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

ایپکس کمیٹی کے اجلاس میں کسی قسم کے آپریشن کا ذکر نہیں ہوا، وزیر اعلیٰ کے پی

وزیر اعلیٰ خیبرپختونخوا علی امین گنڈا پور نے کہا کہ ایپکس کمیٹی کی میٹنگ میں ایک پالیسی بتائی گئی، پالیسی تھی کہ امن و امان کا قیام، دہشت گردی کا خاتمہ ہونا چاہئے، میٹنگ میں عزم پاکستان کا نام آیا۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ کے پی علی امین گنڈا پور نے کہا کہ اپیکس کمیٹی اجلاس میں نیشنل ایکشن پلان پر اور ملک میں امن و امان پر  بات ہوئی، دہشتگردی کا خاتمہ ہونا چاہیے، اس حوالے سے سارے پاکستان بشمول کشمیر و گلگت میں ایک پالیسی ہونی چاہیے جس کو عزم پاکستان کا نام دیا گیا، اس میں آپریشن کا لفظ نہ پہلے ڈسکس ہوا نہ کبھی بعد میں اس کا ذکر ہوا۔

وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا نے کہا کہ میری آرمی چیف اور ڈی جی آئی ایس آئی سے کوئی ملاقات نہیں ہوئی، میں عسکری قیادت سے ملنا چاہتا ہوں آپریشن پر بات کرنا چاہتا ہوں۔

انہوں نے کہا کہ آپریشن کا لفظ نہ پہلے تھا نہ بعد میں، بانی پی ٹی آئی کی حکومت میں دہشتگردی میں کمی آئی، ہم نے سی ٹی ڈی کو بہتر کیا، ہماری پالیسی ہے عوام کو پہلے اعتماد میں لیا جائے، دہشت گردی کا مقابلہ عوام کے بغیر نہیں کر سکتے، صوبوں اور پارلیمان کو اعتماد میں لیے بغیر فیصلہ نہیں کر سکتے۔

علی امین گنڈاپور کا کہنا تھا کہ ابھی تک تو پالیسی آئی ہی نہیں کہ انہوں نے کرنا کیا ہے، بلاول بھٹو نے پوری دنیا کا چکر لگایا مگر افغانستان نہیں گئے، ان کو ہمارے افواج پاکستان کے جوانوں اور سویلین جوانوں کی پرواہ نہیں، مقابلہ کرنے کیلئے ایک بہترین پالیسی اور بات چیت ہونی چاہئے۔

وزیر اعلیٰ خیبرپختونخوا کا کہنا تھا کہ ہم نے کہا ہے آپ افغانستان سے بات چیت کی پالیسی بنانا چاہتے ہیں تو کردار ادا کرسکتے ہیں، ہم پاکستان میں دہشت گردی کا خاتمہ چاہتے ہیں، اس کے لیے ہر حد تک جانے کیلئے تیار ہیں۔

اعلی امین گنڈا پور نے کہا کہ بانی پی ٹی آئی پہلے بھی کہہ رہے تھے پاکستان کی خاطر مذاکرات کیلئے تیار ہوں، ہم بات کرنے کو تیار ہیں لیکن ٹرم اینڈ کنڈیشنڈ وہی ہوں گی، تحقیقات ہونی چاہئیں 9 مئی کیسے ہوا کس نے کیا؟، ہماری پہلی شرط ہے مینڈیٹ چوری، فارم 45 پر بات ہوگی۔

وزیر اعلیٰ خیبرپختونخوا نے کہا کہ ہمارا صوبہ بجلی بنانے والا ہے، آئین میں ہمارے حقوق ہیں، بجلی نہیں دی جا رہی، لوڈشیڈنگ کی ایک حد ہے، کہتے 12 گھنٹے تھے لیکن لوڈشیڈنگ 16 گھنٹے کی ہو رہی تھی، میں یہ چیزیں نہیں چاہتا لیکن عوام کی تکلیف دیکھنی پڑے گی۔

علی امین گنڈا پور نے کہا کہ میرے بجلی کی مد میں آپ نے 510 ارب روپے دینے ہیں، ہم نے حقوق کی جنگ لڑنی ہے، ملک کے حالات کو بھی دیکھ رہے ہیں، ہم نے ایک ماہ میں 1 ارب روپے کی ریکوری کی ہے۔

انہوں نے کہا کہ آئینی طور پر گورنر کا صوبے میں کوئی کام نہیں، گورنر خیبرپختونخوا مجھ پر 50 الزام لگا چکے ہیں، گورنر خیبرپختونخوا کا سیاسی باتیں کرنے کا کام نہیں، گورنر خیبرپختونخوا گھومتے پھر رہے ہیں، میں برداشت کر رہا ہوں، میرے لوگوں کو اٹھایا گیا، توڑا گیا، لوگ بے وقوف نہیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

سنی اتحاد کونسل کا پارٹی قیادت اور کارکنوں کی رہائی کے لیے پارلیمنٹ تا سپریم کورٹ پیدل مارچ

احتجاجی مارچ میں بیرسٹر گوہر، اسد قیصر، علی محمد خان، ریاض فتیانہ، عاطف خان شامل تھے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

سنی اتحاد کونسل کا پارٹی قیادت اور کارکنوں کی رہائی کے لیے پارلیمنٹ تا سپریم کورٹ پیدل مارچ

سنی اتحاد کونسل کے اراکین نے پارٹی قیادت اور کارکنوں کی رہائی کے لیے پارلیمنٹ تا سپریم کورٹ پیدل مارچ کیا اور ان کی رہائی کے لیے نعرے لگائے۔

سنی اتحاد کونسل اور پاکستان تحریک انصاف کے پارلیمنٹیرینز نے بانی پی ٹی آئی عمران خان کی رہائی کے لیے احتجاج کیا، ارکان قومی اسمبلی نے پارلیمنٹ سے سپریم کورٹ تک پیدل مارچ کیا۔

احتجاجی مارچ میں بیرسٹر گوہر، اسد قیصر، علی محمد خان، ریاض فتیانہ، عاطف خان شامل تھے، ارکان نے بانی پی ٹی آئی کو رہا کرو کے نعرے لگائے، ممبران کی جانب سے ہاتھوں میں بینرز بھی اٹھائے گئے تھے۔

مظاہرے میں گفتگو کرتے ہوئے چئیرمین پی ٹی آئی بیرسٹر گوہر نے کہا کہ تحریک انصاف کے قید کارکنان اور لیڈر شپ کو رہا کیا جائے، ہماری بہنیں اور خواتین پابند سلاسل ہیں انہیں فوری رہا کیا جائے۔ ایک بار پھر بجٹ اجلاس سے پاکستان تحریک انصاف کے پارلیمنٹیرینز احتجاجاً واک کرنے پر مجبور ہیں۔

انہوں نے کہا کہ عوام کو بروقت انصاف نہ ملنا ناانصافی ہے، 2009 میں جج صاحبان اپنے مطالبات کے لیے خود بھی سڑکوں پر آئے اس وقت نعرہ یہی تھا کہ بروقت انصاف ہی اصل انصاف ہے۔ خان صاحب ایک سال سے ناکردہ گناہ میں پابند سلاسل ہیں، سائفر کیس ختم ہونے کے باوجود جیل میں ہیں عدت کے کیس میں تاریخ پر تاریخ پڑ رہی ہے۔ ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ خان صاحب کو جلد سے جلد رہا کریں وہ ملک کے مقبول ترین لیڈر ہے۔تین کروڑ ووٹر نے صرف عمران خان کو ووٹ دیا ہے۔

اسد قیصر نے کہا کہ ملٹری کورٹ کے حوالے سے اب تک نیا بینچ نہیں بنایا گیا، آج تک جو بے گناہ لوگ جیلوں میں ہیں ان کے حوالے سے کس کے سامنے جائیں، ابھی تک بے گناہ جیلوں میں قید لوگوں کے لئے انصاف کا دروازہ نہیں کھولا گیا، ان کے انصاف کے لئے کیا اب ہمیں اقوام متحدہ کے پاس جانا ہوگا؟

انہوں ںے مزید کہا کہ چیف جیٹس سے ان لوگوں کو انصاف دلانے کی درخواست کرتے ہیں، چیف جسٹس بینج تشکیل دیں تاکہ بے گناہ جیلوں میں قید لوگوں کو انصاف مل سکے۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll