جی این این سوشل

پاکستان

گزشتہ24گھنٹوں میں کوروناسے17افرادانتقال کرگئے ، این سی او سی 

لاہور:  این سی او سی کے مطابق گزشتہ24گھنٹوں میں کوروناکےمثبت کیسزکی شرح1.60فیصدرہی ہے۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

گزشتہ24گھنٹوں میں کوروناسے17افرادانتقال کرگئے ، این سی او سی 
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کی جانب سے جاری کیے گئے تازہ اعداد و شمارکے مطابق  ملک میں کورونا وائرس کی  چوتھی  لہر کے دوران  گزشتہ چوبیس گھنٹے  میں  کورونا کے 720نئے کیسز سامنے  آئے  اور 17اموات کی تصدیق ہوئی ہے۔گزشتہ 24گھنٹوں میں کوروناکے44ہزار831ٹیسٹ کئےگئے ہیں ، گزشتہ24گھنٹوں میں کوروناکےمثبت کیسزکی شرح1.60فیصدرہی جبکہ  پاکستان میں کوروناکے1958مریضوں کی حالت تشویشناک ہے۔ 

پنجاب

پنجاب میں کورونا مریضوں کی تعداد 4لاکھ37ہزار 793ہوگئی ۔ جبکہ صوبے میں اب تک 12ہزار 842افراد جان سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں ۔

سندھ

سندھ میں کورونا وائرس سے سب سے زیادہ متاثرہ مریضوں کی تعداد  4 لاکھ 65ہزار486ہو گئی جبکہ صوبے میں اب تک 7 ہزار 529افراد جان کی بازی ہار گئے ۔

خیبرپختون خوا

خیبرپختون خوا میں کورونا وائرس سے متاثرہ مریضوں کی تعدادایک لاکھ 76ہزار774ہوچکی ہے ۔ صوبے میں 5683افراد چل بسے۔

بلوچستان

بلوچستان میں کورونا وائرس کے اب تک 33ہزار120کیسز رپورٹ ہوئے ہیں جبکہ صوبے میں 352مریض چل بسے ۔

اسلام آباد

وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں مجموعی طورپرمتاثرہ افراد کی تعداد ایک لاکھ 6ہزار 445جبکہ اموات کی تعداد937تک جاپہنچی ۔

گلگت بلتستان

گلگت بلتستان میں اب تک 10ہزار369فراد کورونا کا شکار ہوئے ہیں جبکہ186افراد جان سے ہاتھ دھو بیٹھے ۔

آزاد کشمیر

آزاد جموں کشمیرمیں کورونا سےمتاثرہ افراد کی تعداد34ہزار397ہوچکی ہے جبکہ 740افراد جان کی بازی ہار گئے ۔

ملک بھرمیں صحت یاب ہونے والے افراد کی تعداد بھی تیزی سے بڑھنے لگی ہے، این سی اوسی کے مطابق گزشتہ24گھنٹوں میں  1440فرادکوروناسےصحت یاب ہوچکے، ملک بھر میں اب  تک12لاکھ 9ہزار878مریض کورونا کو شکست دے چکے ہیں ۔

واضح رہے کہ پاکستان میں کورونا وائرس کا پہلا کیس 26 فروری 2020 کو ملک کے سب سے بڑے شہر کراچی میں سامنے آیا تھا   ۔

علی رضا گزشتہ ڈیڑھ سال سے ویب جرنلسٹ کے طور پر کام کر رہے ہیں۔ انہوں نے پنجاب یونیورسٹی سے گریجویشن کیا ہے۔ علی رضا اس سے قبل معروف نیوز آرگنائزیشنز کے لیے کام کر چکے ہیں اور اب جی این این کے ساتھ بطور سینئر کنٹینٹ رائٹر وابستہ ہیں۔

علاقائی

این اے 133 کے ضمنی انتخاب، ن لیگی امیدوار کو برتری حاصل

لاہور: قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 133 کے ضمنی انتخاب میں مسلم لیگ (ن) کی امیدوار شائستہ پرویز ملک کو برتری حاصل ہے۔

پر شائع ہوا

Umar Nawaz

کی طرف سے

این اے 133 کے ضمنی انتخاب، ن لیگی امیدوار کو برتری حاصل

تفصیلات کے مطابق این اے 133 میں صبح 8 بجے شروع ہونے والی پولنگ شام 5 بجے تک کسی وقفے کے بغیر جاری رہی۔

ووٹوں کی گنتی کے بعد نتائج آنے کا سلسلہ جاری ہے اور اب تک کے غیر حتمی و غیر سرکاری نتائج کے مطابق مسلم لیگ (ن) کی امیدوار کو برتری حاصل ہے۔

254 میں سے 164 پولنگ اسٹیشنز کے غیرحتمی و غیرسرکاری نتائج کے مطابق مسلم لیگ ن کی شائستہ پرویز 32226 ووٹ لےکر آگے ہیں۔

غیرسرکاری نتیجے کے مطابق پیپلزپارٹی کے امید وار اسلم گل 20335 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر ہیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

این اے 133ضمنی الیکشن میں کامیابی،شہباز شریف کی مبارکباد

لاہور:این اے 133 کے ضمنی الیکشن میں ن لیگ کی کامیابی پر پاکستان مسلم لیگ(ن) کے صدر شہباز شریف نے مبارکباد پیش کی ہے۔

پر شائع ہوا

Umar Nawaz

کی طرف سے

این اے 133ضمنی الیکشن میں کامیابی،شہباز شریف کی مبارکباد

تفصیلات کے مطابق لاہور کے حلقہ این اے 133کے ضمنی الیکشن میں غیر حتمی اور غیر سرکاری نتائج کے مطابق پاکستان مسلم لیگ (ن) کی شائستہ پرویز ملک کامیاب ہوچکی ہیں۔

پاکستان مسلم لیگ (ن)کے صدر اور قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف شہباز شریف نے این اے 133میں کامیابی پر کہا کہ ہم آج کی جیت کے لیے اللہ کے حضور عاجزی کے ساتھ سر جھکاتے ہیں، میں اس کامیابی کو اپنے دوست اور بھائی مرحوم پرویز ملک کے نام کرتا ہوں، مرحوم پرویز ملک شریف آدمی، عوامی خدمت کے لیے وقف اور نواز شریف کے عظیم ساتھی تھے،این اے 133میں ان کے غیر متزلزل اعتماد کے لیے شکر گزار ہوں۔

انہوں نے عوام اور پارٹی رہنماؤں کو مبارک باد دیتے ہوئے کہا کہ حلقہ کے عوام کی جانب سے ہمیشہ کی طرح مسلم لیگ (ن) پر اعتماد کے اظہار پر شکر گزار ہیں۔

اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کا کہنا تھا کہ پاکستان مسلم لیگ (ن) ہمیشہ کی طرح عوام کے اعتماد اور آرزوؤں پر پورا اترے گی ،کامیابی پر شائستہ پرویز ملک کو مبارک پیش کرتا ہوں۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ ضمنی انتخاب میں بھرپور محنت اور دن رات خدمت کرنے والے رہنماؤں اور کارکنوں کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

اسمبلیوں کا گھیراؤ کرنا پڑا تو کریں گے: ایم کیو ایم

کراچی: ایم کیو ایم راہنماؤں کا کہنا ہے کہ بلدیاتی نظام بحال کرنے کے لیےہم احتجاج کو بڑھائیں گے، اگر اسمبلیوں کا گھیراو کرنا پڑا تو کریں گے۔

پر شائع ہوا

Umar Nawaz

کی طرف سے

اسمبلیوں کا گھیراؤ کرنا پڑا تو کریں گے: ایم کیو ایم

تفصیلات کے مطابق ایم کیو ایم پاکستان کے وفد نے کراچی میں واقع مسلم لیگ ہاوس کارساز کا دورہ کیا، جہاں دونوں جماعتوں کی جانب سے کراچی کے حقوق کے حوالے سے بات کی گئی ہے۔

ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ایم کیوم رہنما عامر خان کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی کہتی ہے کہ وفاق میں اپوزیشن سے کسی بل پر مشاورت نہیں کی جاتی، صوبے میں پیپلزپارٹی اس کے برعکس کرتی ہے،کسی سے مشاورت نہیں کی اور جعلی اور کھوٹی اکثریت سے بل پاس کرادیا۔ 

ان کا کہنا تھا کہ مئیر کے پاس جو بچے کچے سروسز ٹیکس، تعلیمی اداروں یا اسپتال کے اختیارات تھے، وہ بھی چھین لیے، اب کے ایم سی نام کا کے ایم سی رہ گیا ہے، یہ جھوٹ بولتے ہیں کہ مشرف دور کا بلدیاتی نظام بحال کررہے ہیں، ہم احتجاج کررہے ہیں، ہم اس احتجاج کو بڑھائیں گے، اگر اسمبلیوں کا گھیراو کرنا پڑا تو کریں گے۔

ایم کیو ایم رہنما وسیم اختر نے کہا کہ ایڈمنسٹریٹر کو چاہیے وہ آئیں بائیں شائیں نہ کریں، یہ باتیں پرانی ہوگئیں، مرتضی وہاب کو چاہیے کہ کے ایم سی کو اختیارات واپس دلوائیں، وہ جہاں بیٹھے ہیں ان کے پاس طاقت ہے، مراد علی شاہ کے خاص ہیں وہ یہ ڈرامے نہ کریں، اس شہر کے لیے کچھ کریں۔

سابق گورنر سندھ محمد زبیر کا کہنا تھا کہ فنڈز کی تقسیم این ایف سی کی بنیاد پر ہونا چاہیے، لیکن نیت صاف ہونی چاہیے، ن لیگ کے دور حکومت میں فیڈرل ٹیکس ریونیو ڈبل ہوا تو صوبے کو زیادہ پیسہ ملا، اندرون سندھ میں پیسہ کہاں لگ رہا ہے؟ اگر کراچی کے ساتھ زیادتی ہورہی ہے تو کہیں تو پیسہ لگے۔

ن لیگی رہنما مفتاح اسماعیل کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی کا وفاق اور صوبے میں الگ الگ چہرہ ہے، وفاق میں یہ فیڈریشن کی بات کرتے ہیں صوبے میں یہ حقوق سلب کرتے ہیں۔

 

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll