جی این این سوشل

پاکستان

آرٹیکل 63 اے کی تشریح  کیلئے ریفرنس کل سپریمکورٹ میں پیش کیا جائیگا،اسد عمر

اسلام آباد:  وفاقی وزیر اسد عمر نے کہا ہے کہ آئین کے آرٹیکل 63 اے کی تشریح کیلیے سپریم کورٹ ریفرنس تیار ہوگیا ہے جو کل عدالت عظمیٰ میں پیش کردیا جائے گا۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

آرٹیکل 63 اے کی تشریح  کیلئے ریفرنس کل سپریمکورٹ میں پیش کیا جائیگا،اسد عمر
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر وفاقی وزیر اسد عمر نے لکھا کہ آرٹیکل 63A کی تشریح کے لئے سپریم کورٹ ریفیرینس تیار ہو گیا، کل کورٹ میں پیش کیا جائے گا۔

انہوں نے لکھا کہ  انشاءاللہ اس کیس سے پاکستان کی سیاست میں ضمیر بیچ کر لوٹا بننے کا گھناؤنا کاروبار ہمیشہ کے لئے ختم ہو جائے گا، اور ہرام کے پیسے کی سیاست میں اثرو رسوخ میں کمی آئے گی۔

خیال رہے کہ  بابر اعوان کی ہدایت پر ہارس ٹریڈنگ کے خلاف صدارتی ریفرنس کی سمری وزارت پارلیمانی امور نے وزیر اعظم کو ارسال کی تھی، جو انہیں موصول بھی ہوگئی۔

جرم

فیصل آباد :10 سالہ لاپتہ بچی کی لاش پڑوسی کی چھت سے برآمد

فیصل آباد : گزشتہ روز لاپتہ ہونے والی 10 سالہ بچی ایمان فاطمہ کی لاش پڑوسی کی چھت سے برآمد ہوئی ہے، پولیس نے واقعے کی تحقیقات شروع کردیں۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

فیصل آباد :10 سالہ لاپتہ بچی کی لاش پڑوسی کی چھت سے برآمد

تفصیلات کے مطابق فیصل آباد کی تحصیل سمندری کے علاقے سے گزشتہ روز لاپتہ ہونے والی 10 سالہ بچی کی لاش مل گئی، لواحقین نے مظاہرہ کرکے قاتلوں کی گرفتاری کا مطالبہ کیا ہے۔

10 سالہ ایمان فاطمہ کے قتل کیخلاف مقتولہ کے لواحقین اور عزیز و اقارب نے سمندری مین چوک پر ٹائرجلا کر احتجاجی مظاہرہ کیا۔

مشتعل مظاہرین نے پولیس کے خلاف شدید نعرے بازی کی، اور ایمان فاطمہ کے قاتلوں کو گرفتار کرکے سخت سے سخت سزا دینے کا مطالبہ کیا۔

پولیس حکام کا کہنا ہے کہ 10 سالہ ایمان فاطمہ گزشتہ روز گھر سے باہر ایک دکان پر گئی اور لاپتہ ہوگئی، تلاش کرنے پر 24 گھنٹے بعد تشدد زدہ لاش ہمسائے کی چھت سے ملی۔

مقتولہ کے ورثاء کا کہنا ہے کہ ہمسائے نے دکان پر چاول لینے کیلئے بھیجا، دوکاندار سے پوچھا تو اس کہا کہ بچی واپس چلی گئی تھی، کافی دیر تک تلاش کے بعد جب نہیں ملی تو پھر رپورٹ درج کروائی،  بچی کے لاپتہ ہونے کا مقدمہ مقامی تھانہ میں درج ہونے کے بعد اس کی تلاش جاری تھی کہ گھر کے پڑوسی کی چھت سے اس کی لاش مل گئی۔

پولیس نے لاش تحویل میں لے کر پوسٹ مارٹم کے لیے اسپتال منتقل کردی جبکہ 4 مشکوک افراد کو بھی حراست میں لے لیا گیا۔ پولیس کے مطابق بچی کو جنسی زیادتی کے بعد گلا دبا کر قتل کیا گیا۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

متنازع ٹوئٹس کیس ، ایف آئی اے کی اعظم سواتی کے جسمانی ریمانڈ کی درخواست پر فیصلہ محفوظ

اسلام آباد کی مقامی عدالت نے متنازع ٹوئٹس کے کیس میں اعظم سواتی کے جسمانی ریمانڈ سے متعلق درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیا۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

متنازع ٹوئٹس کیس ، ایف آئی اے کی اعظم سواتی کے جسمانی ریمانڈ کی درخواست پر فیصلہ محفوظ

 

میڈیا ذرائع کے مطابق ایف آئی اے نے اعظم سواتی کو جوڈیشل مجسٹریٹ کے سامنے پیش کیا،اعظم سواتی کو ڈیوٹی جج وقاص احمد راجہ کی عدالت میں پیش کیاگیا،

ایف آئی اے پراسیکیوٹر ، پی ٹی آئی کی جانب سے بابراعوان، فیصل چودھری عدالت میں پیش ہوئے۔

ایف آئی اے نے اعظم سواتی کے 8 روزہ جسمانی ریمانڈ کی استدعا کردی،تفتیشی افسر نے کہا کہ کچھ متنازعہ ٹوئٹس ہیں جس کے باعث گرفتار کیاگیا،

بیانیہ بنایا جا رہا ہے ان چیزوں پر پہلے بھی ان پر ایف آئی آر درج کی جا چکی ہے،انہوں نے ٹوئٹ سے انکار نہیں کیا،انہوں نے دوسری بار اس جرم کا ارتکاب کیا ہے۔

بابراعوان نے کہاکہ ٹوئٹس ایف آئی آر میں لگائی گئی دفعات پر پورا نہیں اترتیں،پولیس کی جانب سے لئے گئے بیان کی کوئی قانونی حیثیت نہیں،انہوں نے کہاکہ اعظم سواتی کا 164 کا بیان نہیں لیاگیا،

سینیٹراعظم سواتی پر پچھلی بار بہیمانہ تشدد کیا گیا تھا،اعظم سواتی ابھی تک اس تشدد سے ریکور نہیں ہو سکے، اعظم سواتی کی جان کو بھی خطرہ ہے،

یہ بیان دیں اگر ان کی کسٹڈی میں اعظم سواتی کو کچھ ہوا تو یہ ذمہ دارہوں گے ، یہاں جو ایف آئی اے کے لوگ موجود ہیں ان کا نام آرڈر شیٹ میں ڈالا جائے۔

جج نے کہاکہ صرف ان لوگوں کے نام شامل کروں گا جویہاں موجود ہیں ،عدالت نے ایف آئی اے کی درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیا۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

پی ٹی آئی رہنما سینیٹر اعظم سواتی پھر گرفتار

اسلام آباد: پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے رہنما اور سینیٹر اعظم سواتی کو پھر گرفتار کر لیا گیا۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پی ٹی آئی رہنما سینیٹر اعظم سواتی پھر گرفتار

 

پی ٹی آئی رہنما سینیٹر اعظم سواتی کو وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) نے ان کے گھر سے گرفتار کر لیا۔ اعظم سواتی کو اداروں کے خلاف متنازعہ ٹوئٹس کرنے پر گرفتار کیا گیا۔

ایف آئی اے ذرائع کے مطابق اعظم سواتی کے خلاف ایف آئی اے میں ایف آئی آر درج کی گئی تھی۔  پی ٹی آئی رہنما حسان خاور نے سینیٹر اعظم سواتی کی گرفتاری کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ اعظم سواتی نے ملک میں قانون کی حکمرانی کی بات کی اور قانون کی حکمرانی کے بغیر ترقی نہیں ہو سکتی۔

 

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll