جی این این سوشل

پاکستان

انصاف کی فراہمی کیلئے جدید ٹیکنالوجی سے استفادہ کریں گے، چیف جسٹس عمرعطا بندیال

اسلام آباد : چیف جسٹس سپریم کورٹ عمر عطا بندیال نے کہا ہے کہ عدالتوں میں ویڈیو لنک متعارف کرانے سے مالی بوجھ کم ہوا، جدید ٹیکنالوجی سے مزید استفادہ کریں گے۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

انصاف کی فراہمی کیلئے جدید ٹیکنالوجی سے استفادہ کریں گے، چیف جسٹس عمرعطا بندیال
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

ان خیالات کا اظہار انہوں نے سپریم کورٹ اسلام آباد میں 9 ویں 2روزہ انٹرنیشنل جوڈیشل کانفرنس کے اختتامی سیشن سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ 
انہوں نے کہا کہ کانفرنس کے کامیاب انعقاد پر منتظمین کی کاوشیں لائق تحسین ہیں، انٹرنیشنل جوڈیشل کانفرنس سے بہت کچھ سیکھنے کو ملا۔

چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ کانفرنس میں انصاف کے نظام کو درپیش چیلنجز اور اس کے حل پر تفصیلی بات کی گئی، جوڈیشل کانفرنس میں مندوبین کی شرکت کو سراہتے ہیں۔

جسٹس عمرعطا بندیال نے کہا کہ پاکستانی عدلیہ میں ویڈیو لنک متعارف کرانے سے ادارے پر مالی بوجھ کم ہوا، گزشتہ7ماہ میں ویڈیو لنک کے ذریعے3ہزار391معاملات دیکھے گئے۔

انہوں نے کہا کہ شرکا کی تجاویز اورآرا بہت اہمیت کی حامل ہیں، پوری کوشش کررہے ہیں کہ آئندہ بھی جدید ترین ٹیکنالوجی سے بھرپور استفادہ کریں۔،

چیف جسٹس آف پاکستان کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان میں بڑھتی ہوئی آبادی اور موسمی تغیرات کو بھی دیکھنا ہوگا، عوام کو انصاف کی بلا امتیاز فراہمی سے ہی معاشرتی مساوات کا حصول ممکن ہے۔

صحت

ایڈزسے بچاؤ اور آگاہی کا عالمی دن آج منایا جارہا ہے

پاکستان سمیت دنیا بھر میں ایڈز (ایچ آئی وی )سے بچاؤ اور آگاہی کا دن آج منایا جارہا ہے۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

ایڈزسے بچاؤ اور  آگاہی کا عالمی  دن آج منایا جارہا ہے

ایڈز کا عالمی دن دنیا میں پہلی مرتبہ 1987ء میں منایا گیا ، ا س  بیماری کا عالمی دن منانے کا مقصد اس انتہائی مہلک مرض کے بارے میں آگاہی دینا اور ایڈز سے بچاؤ سے متعلق حفاظتی احتیاطی تدابیر کے بارے میں شعور اجاگر کرنا ہے ۔ 

اس حوالے سے  ماہرین طب کا کہنا ہے کہ دنیا بھر میں ایڈز کے مریضوں میں کمی آرہی ہے لیکن پاکستان میں ایچ آئی وی وائرس میں ہولناک اضافہ ہورہا ہے۔

ملک میں وائرس سے متاثرہ مریضوں کی تعداد 2 لاکھ 10 ہزار ہوگئی ہے، جنوری سے نومبر 2022 تک کراچی میں 970 مریض رپورٹ ہوئے۔

رپورٹس کے مطابق کوئٹہ اور گوادر سمیت بلوچستان کے 6 اضلاع ہائی رسک قرار دیے گئے ہیں ۔

استعمال شدہ سرنج، غیرمحفوظ انتقال خون، اسکریننگ کے نامناسب انتظامات، جراثیم زدہ آلات جراحی، حجامت کے دوران آلودہ آلات اور غیرمحفوظ جنسی تعلقات ایچ آئی وی پھیلانے کا بڑا سبب ہیں۔

ایڈز کا مرض ایک وائرس ایچ آئی وی کے ذریعے پھیلتا ہے جو انسانی مدافعتی نظام کو تباہ کر دیتا ہے۔ ایسی حالت میں کوئی بھی بیماری انسانی جسم میں داخل ہوتی ہے تو مہلک صورت اختیار کر لیتی ہے۔

ماہرین کے مطابق صرف احتیاط ہی کے ذریعے اس بیماری سے محفوظ رہا جا سکتا ہے۔

 ایک تحقیق کے مطابق ایچ آئی وی کا شکار ہونے کے چند دن بعد 85 فیصد افراد کو انفیکشن کی علامات ظاہر ہوتی ہیں جن کا بروقت علاج مرض کو جان لیوا ہونے سے بچا سکتا ہے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ ایڈز کا علاج بروقت تشخیص اور احتیاط کے ساتھ ساتھ مثبت رویہ اپنائے بغیر ممکن نہیں، یہی وجہ ہے کہ عام آدمی کو اس مرض کے بارے میں شعور حاصل کرنے کی ضرورت ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

اسمبلیاں توڑیں تو جنرل الیکشن نہیں صرف ان صوبوں میں الیکشن ہوں گے، رانا ثنا اللہ

 وزیر داخلہ رانا ثنا اللہ کا کہنا ہے کہ اگر صوبائی اسمبلیاں توڑی جاتی ہیں، تو پھر ان 2اسمبلیوں کے الیکشن ہوں گے۔جنرل الیکشن اپنے وقت پر ہوں گے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

اسمبلیاں توڑیں تو جنرل الیکشن نہیں صرف ان صوبوں میں الیکشن ہوں گے، رانا ثنا اللہ

 

وزیرداخلہ راناثنااللہ کا کہنا ہے کہ عمران خان جب حکومت میں تھے تو اپوزیشن کو ختم کرنا چاہتے تھے۔ساڑھے تین سال میں عمران خان نے کرپشن کا بیانیہ بنایا۔عمران خان کو چاہیے تھا قوم سے معذرت کرتے اور واپس پارلیمنٹ میں آتے۔

ان کا کہنا ہے کہ عمران خان کو سیاسی روایات کے تحت مسائل پر بات کرنی چاہیے تھی۔26نومبر کو عمران خان ناکام ہوئے ، لانگ مارچ میں عوام نے ساتھ نہیں دیا۔

عمران خان نے خیبرپختو نخوا اور پنجاب اسمبلیوں کوتوڑنے کی بات کرکے بحرانی کیفیت پیداکی۔جلسوں میں ناکام ہوکے، تقریریں کر کے، اسمبلیاں توڑنا، آئین، قانون، جمہوری عمل کی توہین ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ اگر سسٹم عمران خان کواقتدار دے تو کرپٹ نہیں، اگر نہ دے تو برا ہے۔سنا ہے پی ٹی آئی والے 20 دسمبر سے استعفے دیں گے۔اگر استعفے دینے کا فیصلہ کر لیا ہے تو 20 دسمبر تک انتظار کیوں ؟ عمران خان کو اگر کرپٹ سسٹم میں نہیں رہنا تو سینیٹ اور آزاد کشمیر سے باہر جائیں۔

انہوں نے کہا ہے کہ فری اینڈ فیئر الیکشن کے بنیادی تصور کو ختم کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔ہم کوشش کریں گے کہ اسمبلیاں توڑنے کے عمل میں معاون نہ ہوں۔ اسمبلیاں توڑنا کسی سیاسی جماعت اور نہ ملک کے حق میں ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ سیاسی عدم استحکام کو بھی روکنے کی کوشش کی جائے گی، جو بھی مسائل ہوں گے ان کو آئین اور قانون کے مطابق حل کیے جائیں گے۔جو بھی اس کو آئین کے تحت روکنے میں ہوسکتا ہے اس طرف جائیں گے۔

ان کا کہنا ہے کہ اگر صوبائی اسمبلیاں توڑی جاتی ہیں، تو پھر ان 2اسمبلیوں کے الیکشن ہوں گے۔جنرل الیکشن اپنے وقت پر ہوں گے۔ آئینی مدت پوری کریں گے۔

اسمبلیاں توڑنے سے پہلے اسپیکر قومی اسمبلی  کے پاس آئیں اور کہیں استعفے قبول کیے جائیں۔پارلیمنٹ لاجز، گھر،گاڑیاں،تنخواہیں اور مراعات نہیں چھوڑتے اور شور مچاتے ہیں۔

انہوں نے کہا ہے کہ ہم الیکشن سے خوفزدہ نہیں ہیں۔کوئی نہ سمجھے کہ ہم الیکشن سے پیچھے ہٹیں گے۔ہم کمپین کریں گے، نواز شریف صاحب کمپین کے لیے میسر ہوں گے، یہ ان کی بھول ہے یہ جیت کے واپس آجائیں گے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

الیکشن کمیشن کا پنجاب میں بلدیاتی انتخابات اپریل 2023 میں کرانے کا فیصلہ

پنجاب کے بلدیاتی اداروں کی معیاد یکم جنوری 2022 کو ختم ہو چکی ہے،سیکرٹری الیکشن کمیشن کی اجلاس میں بریفنگ

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

الیکشن کمیشن کا پنجاب میں بلدیاتی انتخابات اپریل 2023 میں کرانے کا فیصلہ

الیکشن کمیشن نے پنجاب میں بلدیاتی انتخابات اپریل 2023 کے آخری ہفتے میں کرانے کا فیصلہ کر لیا ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجہ کی زیر صدارت الیکشن کمیشن کا اجلاس ہوا،سیکرٹری الیکشن کمیشن نے اجلاس میں بریفنگ دی،سیکرٹری الیکشن کمیشن نے کہا کہ پنجاب کے بلدیاتی اداروں کی معیاد یکم جنوری 2022 کو ختم ہو چکی ہے۔ 

الیکشن کمیشن کو بلدیاتی انتخابات کے انعقاد کیلئے دو بار حلقہ بندیوں کا کام کرنا پڑا،دو بار بلدیاتی قوانین کو تبدیل کیا گیا۔ اجلاس میں الیکشن کمیشن نے پنجاب میں بلدیاتی انتخابات اپریل 2023 کے آخری ہفتے میں کرانے کا فیصلہ کیا ہے۔ یاد رہے کہ گزشتہ دنوں الیکشن کمیشن میں پنجاب کے بلدیاتی انتخابات سے متعلق سماعت ہوئی،اسپیشل سیکرٹری الیکشن کمیشن اور چیف سیکرٹری پنجاب الیکشن کمیشن میں پیش ہوئے۔

اسپیشل سیکرٹری نے بتایا کہ پنجاب میں دو بار حلقہ بندیاں کیں،اب تیسری بار کرنا ہوں گی۔ چیف الیکشن کمشنر نے کہا کہ پنجاب میں تیسری بار بلدیاتی حلقہ بندیاں کرانا مذاق نہیں،پرانی حلقہ بندیوں پر الیکشن ہو سکتے ہیں تو شیڈول جاری کریں،کوئی حکومت بلدیاتی انتخابات نہیں کرانا چاہتی۔ چیف الیکشن کمشنر نے سیکرٹری الیکشن کمیش کو ہدایت کی کہ آپ دوبارہ سپریم کورٹ کو خط لکھیں،اب الیکشن کمیشن چیف سیکرٹری کو ہدایت کرے گا اور آرڈر پاس کریں گے۔ 

چیف سیکرٹری نے بتایا کہ پنجاب اسمبلی نے نیا بل منظور کر لیا۔نئے قانون کے مطابق چلیں ہم ٹائم لائن کو فالو کریں گے۔ چیف الیکشن کمشنر نے استفسار کیا کہ آپ کو لگتا ہے الیکشن ای وی ایم پر ہو سکتے ہیں؟آپ جان بوجھ کر ای وی ایم ڈال رہے ہیں کہ مسئلہ بنے۔آپ نے قانون میں رکاوٹ ڈالی لیکن ہمیں پتا ہے اسے کیسے کھولنا ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll