جی این این سوشل

پاکستان

چوہدری پرویز الہٰی کی گرفتاری، پولیس کی بھاری نفری ظہور الہٰی روڈ پہنچ گئی

اینٹی کرپشن کی جانب سے آج چوہدری پرویز الہٰی کی ضمانت مسترد کی گئی تھی

پر شائع ہوا

کی طرف سے

چوہدری پرویز الہٰی کی گرفتاری، پولیس کی بھاری نفری ظہور الہٰی روڈ پہنچ گئی
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

سابق وزیر اعلیٰ پنجاب کی ممکنہ گرفتاری، پولیس کی بھاری نفری چوہدری پرویز الہٰی کے گھر پہنچ گئی۔چوہدری پرویز الہیٰ کے گھر کے داخلی اور خارجی راستوں پر پولیس اہلکار تعینات کر دیئے گئے۔چوہدری پرویز الہیٰ کے گھر سے کسی کو باہر جانے کی اجازت نہیں ہو گی۔اینٹی کرپشن کی ٹیم بھی پولیس کے ساتھ ان کی رہائش گاہ پر موجود ہے۔

چوہدری پرویز الہٰی کے خلاف پیڑول بم پھیکنے ،کار سرکار میں مداخلت،اینٹی کرپشن کی جانب سے اختیارات کا ناجائز استعمال اور ترقیاتی فنڈز میں خرد برد کا کیس ہے۔اینٹی کرپشن کی جانب سے آج چوہدری پرویز الہٰی کی ضمانت مسترد کی گئی تھی۔

پاکستان

گندم کی اضافی درآمد میں ملوث افسران کے خلاف ایکشن

وزیر اعظم شہباز شریف کے 4 معطل افسران کے خلاف تحقیقات کی منظوری دے دی

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

گندم کی اضافی درآمد میں ملوث افسران کے خلاف ایکشن

وزیراعظم شہباز شریف نے اضافی گندم کی درآمد میں ملوث قرار دیے گئے 4 معطل افسران کے خلاف تحقیقات کرنے کی منظوری دیتے ہوئے سیکرٹری تجارت کو ذمہ داری سونپ دی۔

وزیراعظم نے سیکرٹری تجارت محمد صالح احمد فاروقی کو انکوائری آفیسر مقرر کردیا، معطل افسران کے خلاف سول سرونٹس ایفیشینسی اینڈ ڈسپلن رولز 2020 کےتحت انکوائری ہوگی۔

وزارت نیشنل فوڈ سیکیورٹی کے 4 افسران کو ذمہ دار قرار دے کر معطل کیا گیا، ڈائریکٹرجنرل پلانٹ پروٹیکشن اللہ دتہ عابد، فوڈ سیکیورٹی کمشنر ڈاکٹر وسیم، ویٹ کمشنر اور ڈائریکٹر ڈی پی پی سہیل شہزاد معطل کیے جانے والے افسران میں شامل تھے۔ ان افسران کو گندم کے حوالے سے ناقص منصوبہ بندی اور غفلت برتنے کا ذمہ دار قرار دیا گیا۔

واضح رہے کہ ملک میں گندم کے وافر ذخائر موجود ہونے کے باوجود نگران حکومت کے دور میں بڑے پیمانے پر گندم کی درآمد کے انکشافات سامنے آئے تھے۔یہ بات بھی سامنے آئی تھی کہ موجودہ حکومت کی اب تک کی مدت میں بھی گندم کی درآمد کا سلسلہ جاری رہا۔

 

پڑھنا جاری رکھیں

تفریح

جمائمہ گولڈ اسمتھ کی  انگلینڈ کے سابق فٹ بالرگیری لائنکر کے ساتھ تصویر وائرل

  میڈیا ذرائع کے مطابق  63 سالہ میچ آف دی ڈے پریزینٹر اور گولڈ اسمتھ ایک دوسرے کے ساتھ خوشگوار  موڈ میں دکھائی دے رہے تھے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

جمائمہ گولڈ اسمتھ کی  انگلینڈ کے سابق فٹ بالرگیری لائنکر کے ساتھ تصویر وائرل

 انگلینڈ کے سابق فٹ بالر اور کپتان گیری لائنکر اور سماجی رکن  جمائمہ گولڈ اسمتھ کو ناٹنگ ہل ریسٹورنٹ میں ایک عمدہ عشائیہ  سے محظوظ ہو تے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے  ۔ 

  میڈیا ذرائع کے مطابق  63 سالہ میچ آف دی ڈے پریزینٹر اور گولڈ اسمتھ ایک دوسرے کے ساتھ خوشگوار  موڈ میں دکھائی دے رہے تھے ۔ وہ دونوں کھانے کے دوران ہنسی مذاق کرتے  نظر ا ٓرہے تھے، جبکہ ان کے ساتھ ان کی ایک خاتون دوست بھی موجود  تھیں۔

عشائیہ  سے لطف اندوز ہونے کے بعد لائنکر کو بچے ہوئے کھانے  کا  ڈبہ لے کر ریسٹورنٹ  سے نکلتے ہوئے دیکھا گیا،  جبکہ جمائمہ اپنے چہرے پر مسکراہٹ سجائے اور  سر جھکائے، ان کے پیچھے چلتی ہوئی دکھائی دے رہی  تھیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

روشن پاکستان پروگرام سے توانائی بحران کا خاتمہ ہوگا، وفاقی وزیر توانائی

لوڈ شیڈنگ کے خاتمے کے لیے ہرممکن اقدامات یقینی بنارہے ہیں، اویس لغاری

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

روشن پاکستان پروگرام سے توانائی بحران کا خاتمہ  ہوگا، وفاقی وزیر توانائی

وفاقی وزیر توانائی اویس لغاری نے کہا ہے کہ روشن پاکستان پروگرام سے توانائی بحران کا خاتمہ ممکن ہوگا ۔

اسلام آباد میں علی پرویز ملک کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے وفاقی وزیر توانائی اویس لغاری نے کہا کہ پاکستان بھر میں گزشتہ روز بجلی کی 25 ہزار 820 میگا واٹ کی مانگ تھی جس میں 21 ہزار 588 میگا واٹ ہم نے اپنے سسٹم کے اندر سے پیدا کرکے سپلائی کی، جب کہ 4 ہزار 232 میگا واٹ سپلائی نہیں کی گئی اور 4 ہزار 232 میگا واٹ کی لوڈ شیڈنگ ہوئی۔

انہوں نے کہا کہ یہ لوڈ شیڈنگ صرف ان فیڈرز پر کی گئی، جہاں نقصانات ہورہے ہیں، 20 فیصد سے لے کر 100 فیصد تک جہاں جہاں ہمارے نقصانات ہو رہے ہیں، 4 ہزار 232 میگا واٹ بجلی وہاں فراہم نہیں کی گئی۔

اویس لغاری نے بتایا کہ  جہاں 20 فیصد سے کم نقصانات ہیں، بدقسمتی سے ان فیڈرز پر بھی کچھ گھنٹے بجلی بند رہی، مثال کے طور پر لیسکو میں ایک ہزار 978 ایسے فیڈرز ہیں جہاں نقصانات کم ہیں، لیکن 188 فیڈرز پر بھی لوڈ شیڈنگ ہوئی جو قابل قبول نہیں ہے۔

وفاقی وزیر توانائی کا کہنا تھا کہ اگر ہم یہ بجلی ان علاقوں کو فراہم کرنا شروع کردیں تو نقصان اس حد تک بڑھ جائیں گے کہ پاکستانی معیشت مزید تباہ ہوجائے گی، جب تک ہماری ڈسٹری بیوشن کمپنیاں اپنے رخ کا تعین نہیں کرتیں اور صوبائی حکومتوں کی مدد سے ان نقصانات کا ازالہ نہیں کرتی، تب تک یہ لوڈ شیڈنگ جاری رہے گی۔

انہوں نے کہا کہ توانائی کے شعبے میں مزید اقدامات کررہے ہیں، لوڈ شیڈنگ کے خاتمے کے لیے ہرممکن اقدامات یقینی بنارہے ہیں، روشن پاکستان پروگرام سے توانائی بحران کا خاتمہ ممکن ہوگا، صوبائی حکومتوں کی مدد سے توانائی کے شعبے میں اصلاحات ناگزیر ہیں۔

وفاقی وزیر کا مزید کہنا تھا کہ ہم نے صوبوں کے ساتھ رابطے کیے، اور انہیں بتایا کہ بجلی چوری کی روک تھام میں مثال قائم کریں، میں آپ کو اپنے علاقے کی مثال دیتا ہوں ڈیر غازی خان میں ایک مقام پر 24 گھنٹوں میں صرف 3 گھنٹے بجلی آتی ہے، میرے لیے بہت آسان ہے کہ وہاں مکمل بجلی فراہم کروں لیکن ہم نے سیاست کے بجائے اصول کو ترجیح دی۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll