جی این این سوشل

پاکستان

چیئرمین پی ٹی آئی کو اٹک جیل میں قید رکھنے کا نوٹیفکیشن کالعدم قرار

عمران خان کوسینٹرل جیل اڈیالہ منتقل کیا جائےاور جیل میں بہتر کیٹگری کی سہولیات فراہم کی جائیں،اسلام آباد ہائی کورٹ

پر شائع ہوا

کی طرف سے

چیئرمین پی ٹی آئی کو اٹک جیل میں قید رکھنے کا نوٹیفکیشن کالعدم قرار
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

اسلام آباد ہائیکورٹ نے چیئرمین پی ٹی آئی کو اٹک جیل میں قید رکھنے کا نوٹیفکیشن کالعدم قرار دیتے ہوئے تحریری حکم نامے میں کہا ہے کہ عمران خان بطور سابق وزیراعظم جیل میں بہتر کلاس کے حقدار ہیں۔

چیف جسٹس اسلام آباد ہائی کورٹ عامر فاروق نے چیئرمین پی ٹی آئی کو اٹک جیل میں قید رکھنے کا نوٹیفکیشن کالعدم قرار دیتے ہوئے سابق وزیراعظم کی درخواست منظور کر لی ہے۔

عدالت نے تحریری فیصلے میں کہا ہے کہ چیئرمین پی ٹی آئی کو جیل میں تمام سہولیات مہیا کی جائیں جس کے وہ حقدار ہیں، چیئرمین پی ٹی آئی کوسینٹرل جیل اڈیالہ منتقل کیا جائے اور جیل میں بہتر کیٹگری کی سہولیات فراہم کی جائیں۔

عدالت نے کہا ہے کہ توشہ خانہ کیس میں سزا معطلی کے بعد پٹیشنر کا موجودہ اسٹیٹس انڈر ٹرائل قیدی کا ہے، ایسے تمام قیدیوں کو اڈیالہ جیل میں رکھا جاتا ہے، صرف سزا یافتہ قیدیوں کو پنجاب کی کسی بھی جیل میں شفٹ کیا جا سکتا ہے۔

پاکستان

منتخب ارکان اسمبلی کیلئے سہولت مزکز قائم

اس سہولت مرکز کا مقصد ان کے سرکاری کارڈ کیلئے تصاویر اور ضروری دستاویزات مکمل کرنے سمیت مختلف خدمات فراہم کرنا ہے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

منتخب ارکان اسمبلی کیلئے سہولت مزکز قائم

قومی اسمبلی سیکرٹریٹ نے قومی اسمبلی کے نو  منتخب ارکان کی سہولت کیلئے ایک ہی چھت کے نیچے  تمام معلومات کی فراہمی کا سہولت مرکز قائم کر دیا ہے ۔

یہ مرکز پارلیمنٹ ہاؤس اسلام آباد میں کل دن دس بجے سے تیسرے پہر 3 بجے کام کرے گا ۔

اس سہولت مرکز کا مقصد ان کے سرکاری کارڈ کیلئے تصاویر اور ضروری دستاویزات مکمل کرنے سمیت مختلف خدمات فراہم کرنا ہے ۔

 

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

پاکستان میں اربوں ڈالرز کے ذخائر موجود ہیں ،نگراں وزیر اعظم

انوارلحق کاکڑ نے  امریکی سالٹ مائننگ اور پروسیسنگ کمپنی میریکل سالٹ ورکس کولیکٹو کے ایک وفد سے گفتگو میں کہا کہ پاکستان معدنیات کے ذخائر سے مالا مال ہے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پاکستان میں اربوں ڈالرز کے ذخائر موجود ہیں ،نگراں وزیر اعظم

نگران وزیراعظم انوار الحق کاکڑ نے کہا ہے کہ خصوصی سرمایہ کاری سہولت کونسل کے زیراہتمام معدنیات کے شعبے میں نئی کامیابیاں حاصل کی جارہی ہیں۔

انہوں نے  امریکی سالٹ مائننگ اور پروسیسنگ کمپنی میریکل سالٹ ورکس کولیکٹو کے ایک وفد سے گفتگو میں کہا کہ پاکستان معدنیات کے ذخائر سے مالا مال ہے۔ 

وزیراعظم نے یقین ظاہر کیا ہے کہ پاکستان منرل ڈویلپمنٹ کارپوریشن اور امریکی میریکل سالٹ ورکس کولیکٹو  ان کارپوریشن کے درمیان معاہدے پرو ستخطوں سے نہ صزف پاکستانی نمک کی برآمد میں اضافہ ہوگا بلکہ پاکستان اور امریکہ کے درمیان تجارتی تعلقات بھی مضبوط ہوں گے۔

انوار الحق کاکڑ نے کہا کہ نگران حکومت نے اپنی مدت کے دوران ملک میں براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری میں اضافے کے لئے کئی اقدامات کیے جن کے مثبت نتائج سامنے آرہے ہیں۔

وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان کان کنی کے شعبے میں اربوں ڈالر مالیت کے کثیر وسائل رکھتا ہے اور یہ مشترکہ منصوبہ پاکستان میں موجود سرمایہ کاری کے لئے سازگار ماحول کی عکاسی کرتا ہے۔

وفد نے وزیراعظم کو بتایا کہ پاکستان میں اس کمپنی کے قیام کے بعد اس کو د نیا کی بڑی سٹاک ایکس چینجز سے منسلک کر دیا جائے گا جس سے حکومت پاکستان اور مقامی سرمایہ کاروں کو فائدہ ہوگا۔

میریکل سالٹ ورکس کولیکٹوکے وفد نے حکومت پاکستان بالخصوص خصوصی سرمایہ کاری سہولت کونسل کے تعاون کا شکریہ ادا کیا۔

وفد نے وزیراعظم کو نمک کی کانوں کے قریب رہنے والے مقامی افراد کی سماجی اور مقامی ترقی کے اپنے منصوبے اور انہیں تعلیم، صحت اور روزگار کے مواقع کی فراہمی کے بارے میں بھی بتایا۔

پڑھنا جاری رکھیں

صحت

146 ادویات کی قیمتوں میں اضافہ کردیا گیا

دواؤں کی قیمتوں پر وفاقی حکومت اور ڈریپ کا کنٹرول ختم

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

146 ادویات کی قیمتوں میں اضافہ کردیا گیا

حکومت نے جان بچانے والی 146 ادویات کی قیمتوں میں اضافہ کردیا گیا، نوٹیفکیشن جاری کردیا گیا۔ دواؤں کی قیمتوں پر وفاقی حکومت اور ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی کا کنٹرول بھی ختم ہوگیا۔ اب دواساز ادارے اورڈسٹری بیوٹرز اپنی مرضی سے ادویات کی قیمتیں مقرر کر سکیں  گے۔

وفاقی حکومت نے ایک طرف دواؤں کی قیمتوں پر کنٹرول ختم کرنے کا اعلان کردیا جبکہ دوسری جانب 146 دواؤں کی قیمتوں میں اضافہ کر دیا۔ زیادہ ترادویات 20 سے 70 فیصد تک مہنگی کی گئیں، بعض کی قیمتیں دو گنا جبکہ دو تین کی چار گنا کر دی گئیں۔

ٹی بی، بلڈ پریشر ، بخار ، دل کی بیماری ، جسم درد ، بچوں کی ویکسین اور آپریشن میں استعمال ہونے والی ادویات شامل ہیں ۔ وفاقی کابینہ نے دو ہفتے پہلے ان ادویات کی قیمتیں بڑھانے کی منظوری دی تھی ۔ نوٹیفکیشن وزارت قومی صحت نے جاری کیا ۔

دوسری جانب نگرن وفاقی کابینہ نے ادویات کی قیمتوں پر حکومتی کنٹرول ختم کرنے کی منظوری  دیدی۔ آئندہ 98 فیصد ادویات کی قیمتیں دواساز ادارے خود مقرر کرنےکے مجاز ہوں گے۔ صرف دو فیصد لازمی ادویات کی قیمتوں کے تعین کا اختیار ڈریپ کو حاصل ہو گا۔ وفاقی کابینہ کی منظوری کے بعد وزارت قومی صحت نےنوٹیفکیشن جاری کر دیا ۔ وفاقی کابینہ نے یہ فیصلہ ڈرگ ایکٹ 1976 کی شق 12 کے تحت کیا ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll