جی این این سوشل

پاکستان

پاکستان میں جمہوریت کو بچانا ہے تو جس کا مینڈیٹ ہے اسے دیا جائے، علی محمد خان

مریم نواز کو مبارکباد ضرور دیتا لیکن پہلے وہ اپنی سیٹ تو جیت جاتیں، رہنما پی ٹی آئی

پر شائع ہوا

کی طرف سے

پاکستان میں جمہوریت کو بچانا ہے تو جس کا مینڈیٹ ہے اسے دیا جائے، علی محمد خان
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی رہنما علی محمد خان نے کہا ہے کہ شریف خاندان نے زبردستی تخت پنجاب لیا، 2013 میں بھی نواز شریف کو ان کی سیٹ پرجا کر مبارکباد دی تھی مگر مریم تو ہار چکی ہیں ،پہلے یہ جیت کے تو آئیں، غریب کا آخری ہتھیار بھی انہوں نے لے لیا، اگر پاکستان میں جمہوریت کو بچانا ہے تو جس کا مینڈیٹ ہے اسے دیا جائے۔

پی ٹی آئی قائدین اور بلوچستان کے امیدواران قومی اسمبلی کے ہمراہ اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے علی محمد خان نے کہا کہختم نبوت اور حرمت رسول ﷺ پر کوئی سمجھوتا نہیں ہوگا، بانی پی ٹی آئی نے امریکہ میں جا کر مسلمانوں کی جنگ لڑی ہے۔ قوم کے ساتھ کیسے یہ مذاق کیا جا سکتا ہے، الیکشن پر اربوں روپے لگا کر کیوں ڈراما رچایا گیا۔ مریم نواز شریف نے وزیر اعلیٰ پنجاب کا حلف اٹھایا،

انہوں نے کہا کہ میں مریم نواز کو مبارکباد ضرور دیتا لیکن پہلے وہ اپنی سیٹ تو جیت جاتیں، 2013 میں بھی نواز شریف کو ان کی سیٹ پرجا کر مبارکباد دی تھی، ان الیکشنز میں نواز شریف، شہباز شریف سب بڑے سورما ہارگئے، مگر صبح ہونے تک حتمی نتائج میں سب کو الیکشن جتوا دیا گیا۔ کراچی کا میڈینٹ ہمارے پاس ہے، پاکستان کو بچانا ہے تو جس کا میڈینٹ ہے اس کو دیا جائے۔ دھاندلی کے باوجود لوگوں نے نکل کر فسطائیت کا مقابلہ کیا، ہمارے چیئرمین کوجیل میں قید کردیا گیا، پارٹی کا نشان واپس لے لیا گیا، تمام سختیوں کے باوجود عوام نے نکل کر جمہوریت کو ووٹ دیا۔ 

انہوں نے مزید کہا کہ قوم کے حق پر ڈاکا ڈالا گیا ہے، غریب آدمی کے پاس اس ملک میں آخری اختیار ووٹ ہے، اگر یہ اختیار بھی غریب سے چھین لیں تو یہ طریقہ تو 1947 سے پہلے بھی تھا، یہ طریقہ کار تو وائی سرائے کے دور میں بھی اپنایا جاتا تھا، یہی ہماری جدوجہد تھی کہ لندن پلان کا حصہ نہیں بنیں گے۔

پریس کانفرنس کے دوران شیر افضل مروت نے کہا کہ ملک بھر میں تحریک انصاف کے میڈینٹ پر ڈاکا ڈالا گیا ہے، ہم پہلے بھی اس پر احتجاج کر چکے ہیں، سات صوبائی حلقے اور تین قومی اسمبلی حلقوں کی عزرداریاں لے کر الیکشن کمیشن گئے، لیکن الیکشن کمیشن کا رویہ دوسری جماعتوں کی نسبت یکسر مختلف ہے، ہمارے امیدواروں کے حتمی نتائج آنے کے بعد دوسرے امیدواروں کو جتوایا گیا ہے، ہم بلوچستان کے امیدوار مختصر طریقہ سے اپنا مسئلہ بیان کریں گے۔

شاندانہ گلزار کا کہنا ہے کہ بلوچستان میں پی ٹی آئی کے آزاد امیدواروں کے الیکشن چوری ہوئے، ہم بتائیں گے کس طرح بلوچستان میں ہمارا الیکشن چوری ہوا، ہمارے امیدوار تمام شواہد ساتھ لے کر آئے ہیں۔

این اے 263 بلوچستان سے انتخابات میں حصہ لینے والے سالار خان کاکڑ نے کہا کہ ہمارا صوبہ وسائل سے مالا مال ہے، بلوچستان کی محرومیوں کا قصہ ہر ٹی وی چینل پر ہو رہا ہوتا ہے۔بلوچستان میں میڈیا کوریج نہ ہونے کے برابر ہے، اسی وجہ سے آج ہم سب اسلام آباد آئے ہیں، ہمیں امید ہے میڈیا کے توسط سے ملک اور ملک سے باہر آواز پہنچے گی۔

انہوں نے کہا کہ پہلے بھی دھاندلی ہوتی تھی اس بار ٹھیکداروں اور قبضہ مافیا کو الیکشن میں جتوایا گیا، اس بار 20 کروڑ سے ایک ارب تک سیٹوں کے سودے کیے گئے، میرے حلقے کے تمام فارم 45 موجود ہیں، میرے فارم 45 کے مطابق 32 ہزار ووٹ حاصل کیے، آٹھویں نمبر والے امیدوار کو اٹھا کر جتوا دیا گیا۔میرے حلقے میں چار ہزار ووٹ لینے والے کو الیکشن جتوایا گیا، الیکشن کے روز ساری رات آر او کے دفتر کے باہر کھڑے رہے لیکن ہمیں آر او آفس میں جانے کی اجازت نہیں دی گئی، ہمارے ساتھ الیکشن میں اتنا بڑا مزاق کیا گیا ہے جس کا کوئی ثانی نہیں۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ بلوچستان کے عوام کے ساتھ کھلواڑ ہوا ہے، حالیہ الیکشن میں بلوچستان کے عوام کی تعلیم، صحت اور وسائل بیچ دیئے گئے، ہماری مسلسل جدو جہد ہے کہ تحریک انصاف کے ووٹرز کا حق محفوظ کریں گے۔

دنیا

داعش سے تعلق رکھنے والے 11 مجرموں کو پھانسی دے دی گئی

عراق میں سزائے موت 2003 کو معطل کر دی گئی تھی لیکن اگست 2004 سے اسے بحال کر دیا گیا

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

داعش سے تعلق رکھنے والے 11 مجرموں کو پھانسی دے دی گئی

عراق میں داعش سے تعلق رکھنے والے 11 مجرموں کو پھانسی دے دی گئی۔
میڈیا رپورٹس کے مطابق عراق کے سکیورٹی ذرائع نے بتایا کہ عراقی حکام نے 11 مجرموں کو پھانسی دے دی جن پر داعش کے رکن ہونے کا الزام ہے۔
جیل کے ایک افسر نے بتایا کہ 11 مجرموں کو منگل کے روز عراقی دارالحکومت بغداد سے 350 کلومیٹر جنوب میں واقع ناصریہ شہر کی سینٹرل جیل میں پھانسی دی گئی۔
ذرائع نے بتایا کہ عراقی وزارت انصاف کی ایک ٹیم نے عراقی صدر کی توثیق سمیت تمام قانونی طریقہ کار مکمل کرنے کے بعد سزائے موت پر عمل درآمد کی نگرانی کی۔2017 کے اواخر میں عراقی فورسز کی جانب سے عراق میں داعش کو شکست دینے کے بعد داعش کے سیکڑوں حامی مارے گئے یا پکڑے گئے، جب کہ بہت سے دیگر اب بھی عراق میں یا بیرون ملک خفیہ ٹھکانوں میں مفرور ہیں۔
واضح رہے عراق میں سزائے موت 10 جون 2003 کو معطل کر دی گئی تھی لیکن اگست 2004 سے اسے بحال کر دیا گیا ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

اسپیکر بلوچستان اسمبلی عبدالخالق اچکزئی کو بحال

سپریم کورٹ نے الیکشن کمیشن کا فیصلہ کالعدم قرار دے دیا

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

اسپیکر بلوچستان اسمبلی عبدالخالق اچکزئی کو بحال

سپریم کورٹ نے اسپیکر بلوچستان اسمبلی عبدالخالق اچکزئی کو بحال کرتے ہوئے الیکشن کمیشن کا فیصلہ کالعدم قرار دے دیا۔

عدالت نے بلوچستان کے حلقہ پی بی 51 چمن کے 12 پولنگ اسٹیشنز پر دوبارہ پولنگ کا الیکشن کمیشن کا حکم بھی کالعدم قرار دے دیا۔ عدالت نے تمام امیدواروں کی رضامندی سے معاملہ دوبارہ الیکشن کمیشن کو بھجوا دیا۔

سپریم کورٹ کا کہنا ہے کہ الیکشن کمیشن تمام امیدواروں کو سن کر 10 روز میں فیصلہ کرے۔

خیال رہے کہ الیکشن کمیشن نے مخالف امیدوار اصغر خان اچکزئی کی درخواست پر دوبارہ پولنگ کا حکم دیا تھا، الیکشن کمیشن نے دوبارہ پولنگ کا حکم دیتے ہوئے اسپیکر کی کامیابی کا نوٹیفیکیشن واپس لے لیا تھا۔

مسلم لیگ ن کے رہنما عبدالخاق اچکزئی نے الیکشن کمیشن کا فیصلہ سپریم کورٹ میں چیلنج کیا تھا، جسٹس امین الدین خان کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے سماعت کی۔

دوران سماعت جسٹس امین الدین خان نے استفسار کیا کہ کس ضابطے کے تحت الیکشن کمیشن نے 12 پولنگ اسٹیشنز پر دوبارہ الیکشن کا حکم دیا، الیکشن کمیشن نے نہ تو انکوائری کی نہ ہی کوئی اصول دیکھا۔

جسٹس محمد علی مظہر نے ریمارکس دیئے کہ الیکشن کمیشن نے 12 پولنگ اسٹیشنز کو دیکھا مگر دیگر کو نظر انداز کر دیا۔

جس پر ڈی جی لا الیکشن کمیشن بولے کہ جن 12 پولنگ اسٹیشنز پر زیادہ ٹرن آوٹ کی درخواست کی گئی صرف انہی کو دیکھا۔

جسٹس محمد علی مظہر نے کہا کہ الیکشن کمیشن کو تو پورے حلقے کی دوبارہ انکوائری کروانا چاہیے تھی، اگر الیکشن کمیشن اپنا کام کر لیتا تو لوگوں کو عدالت نہ آنا پڑتا۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

عدالت نے عمران خان سمیت بشریٰ بی بی کو اداروں کے خلاف بیان بازی سے روک دیا

اسلام آباد کی احتساب عدالت نے دوران ٹرائل کمرہ عدالت میں ریاستی اداروں اوران کے آفیشلز کے خلاف اشارتاً بھی بات کرنے سے روک دیا

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

عدالت نے عمران خان  سمیت بشریٰ بی بی کو اداروں کے خلاف بیان بازی سے روک دیا

اسلام آباد احتساب عدالت نے بانی پی ٹی آئی عمران خان اور بشریٰ بی بی کو ریاستی اداروں کے خلاف بیان بازی سے روک دیا۔

عدالت نے دوران ٹرائل کمرہ عدالت میں ریاستی اداروں اوران کے آفیشلز کے خلاف اشارتاً بھی بات کرنے سے روک دیا۔

احتساب عدالت کے جج باصر جاوید رانا نے فئیرٹرائل کی بانی پی ٹی آئی کی درخواست پر حکم نامے میں کہا کہ میڈیا سیاسی، اشتعال انگیز بیانیے اور ریاستی اداروں کوٹارگٹ کرنے والے بیانات کی تشہیر سے پرہیز کرے۔

عدالتی حکم میں کہا گیا ہے کہ میڈیا سیاسی، اشتعال انگیز بیانیے جو ریاستی اداروں اور ان کے آفیشلز کو ٹارگٹ کرتے ہوں وہ پبلش نہ کرے۔

حکم نامے میں پیمرا کوڈ آف کنڈکٹ کا بھی عدالت نے حوالہ دیا گیا ہے۔

حکم نامے میں کہا گیا کہ الزام ہے بانی پی ٹی آئی نے ریاستی اداروں کے خلاف اشتعال انگیز ومتعصبانہ بیانات دئیے، عدلیہ، پاک آرمی اورآرمی چیف کے حوالے سے بیانات عدالتی ڈیکورم میں خلل ڈالنے کے مترادف ہیں، ایسے بیانات انصاف کی فراہمی کے عمل میں بھی رکاوٹ کا سبب بنتے ہیں۔

حکم نامے کے مطابق کورٹ ڈیکورم اورفئیر ٹرائل کے تقاضوں کا خیال رکھنا عدالت کی ذمہ داری ہے، جیل حکام جیل عدالت کو عید سے پہلے کی پوزیشن پر بحال کریں۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll