جی این این سوشل

پاکستان

وفاقی حکومت کی عوام کےلئے نئے بجلی بم کی تیاری

سی پی پی اے نے آئندہ مالی سال کےلئے صارفین پر 347 ارب روپے بوجھ ڈالنے کی تجویز دے دی

پر شائع ہوا

کی طرف سے

وفاقی حکومت کی عوام کےلئے نئے بجلی بم کی تیاری
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

وفاقی حکومت کا عوام کےلئے نیا بجلی بم تیار، صارفین پر 347 ارب روپے بوجھ ڈالنے کی تجویز دے دی۔

میڈیا رپورٹس کےمطابق سینٹرل پاور پرچیزنگ ایجنسی (سی پی پی اے) نے آئندہ مالی سال میں بجلی صارفین پر347 ارب روپے بوجھ ڈالنے کی تجویز دے دی، سی پی پی اے نے آئندہ مالی سال کیلئے بجلی کی خریداری ریٹ متعین کرنے کی درخواست نیپرا میں دائر کردی۔بجلی صارفین امریکا میں ہونے والی مہنگائی کی قیمت بھی ادا کریں گے، امریکی مہنگائی کے 2.40 فیصد بھی ٹیرف میں شامل کرنے کی تجویز دی گئی ہے۔

ملکی مہنگائی 12.20 فیصد شرح سے آپریٹر فیس شامل کرنے کی تجویز ہے۔بجلی کی خریداری میں 21.37 فیصد سود بھی صارفین سے وصول کرنے کی سفارش کی گئی ہے جبکہ کپیسٹی چارجز کے نام پر 17 روپے 42 پیسے فی یونٹ تک وصول کرنے کی تجویز ہے۔

سی پی پی اے نے فیول کاسٹ کی مد میں 9 روپے 34 پیسے فی یونٹ متعین کرنے کی درخواست دی ہے جبکہ آئندہ مالی سال میں بجلی کمپنیوں کو کم ازکم 27 روپے 11 پیسے فی یونٹ تک بجلی فروخت کرنے کی تجویز دی گئی ہے، بجلی کمپنیاں ٹیکسز شامل کر کے صارفین کو بجلی فروخت کریں گی۔

بجلی کے نرخوں میں 3 روپے 48 پیسے فی یونٹ ماہانہ آپریٹر فیس شامل کرنے کی بھی تجویز نیپرا کو بھجوائی گئی ہے جبکہ آئندہ مالی سال کے لیے بجلی کی خریداری 300 روپے فی ڈالر میں کرنے کی تجویز ہے۔

تجارت

غیر رجسٹرڈ آرکیٹیکٹ فرمز کو ٹیکس نیٹ میں لانے کے اقدامات شروع

کمشنر پی آر اے مصباح نواز کی ہدایت پر لاہور میں موجود آرکیٹیکٹ فرمز کے نمائندگان سے ملاقاتیں شروع کر دی گئیں

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

غیر رجسٹرڈ آرکیٹیکٹ فرمز کو ٹیکس نیٹ  میں لانے کے اقدامات شروع

ترجمان پی آر اے کےمطابق پنجاب ریونیو اتھارٹی نے لاہور میں موجود غیر رجسٹرڈ آرکیٹیکٹ فرمز کو ٹیکس نیٹ میں لانے کے لئے سرگرمیاں شروع کر دیں ،  انفورسمنٹ آفیسز علی رضا ہاشمی نے انسٹیٹیوٹ آف آرکیٹیکٹس پاکستان کی شراکت سے زوم میٹنگ کی ، زوم میٹنگ میں چیئرمین بورڈ آف آرکیٹیکٹ ایجوکیشن عمر سعید ، ایزیکٹیو ممبران نے خصوصی شرکت کی ۔

کمشنر پی آر اے مصباح نواز کی ہدایت پر لاہور میں موجود آرکیٹیکٹ فرمز کے نمائندگان سے ملاقاتیں شروع کر دی گئیں۔ 

اسکے علاوہ تقریبا 40 آرکیٹیکس نے بھی زوم میٹنگ میں شریک ہوئے ،ترجمان پی آر اے کےمطابق شرکاء کو سروس ٹیکس قوانین کے حوالے سے ذمہ داریوں کے بارے میں تفصیلی آگاہی فراہم کی گئ۔

اسکے علاوہ غیر رجسٹرڈ آرکیٹیکٹ کو رجسٹرڈ ہونے اور گوشوارے بروقت جمع کروانے کے حوالے سے رہنمائی کی گئ ۔

زوم میٹنگ میں شریک تمام شرکاء کے مختلف سوالات کے جوابات بھی دیے گئے۔

پڑھنا جاری رکھیں

دنیا

اسرائیلی حملوں میں مزید 91 فلسطینی شہید

گزشتہ سال سات اکتوبر سے لے کر اب تک اسرائیلی حملوں میں پینتیس ہزار آٹھ سو سے زائد فلسطینی شہید اور اسی ہزار سے زائد زخمی ہوچکے ہیں

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

اسرائیلی حملوں میں   مزید 91 فلسطینی شہید

محصور غزہ میں گزشتہ چوبیس گھنٹے کے دوران اسرائیلی حملوں میں کم از کم اکیانوے فلسطینی شہید اور دو سو سے زائد زخمی ہوگئے ہیں۔

گزشتہ سال سات اکتوبر سے لے کر اب تک اسرائیلی حملوں میں پینتیس ہزار آٹھ سو سے زائد فلسطینی شہید اور اسی ہزار سے زائد زخمی ہوچکے ہیں۔

واضح رہے کہ غزہ شہر میں کویت جنکشن پر ہونے والے حملے میں  متعدد افراد ہلاک اور زخمی ہوئے ہیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

مارخور کا عالمی دن ہمارے بھرپور قدرتی ورثے کی علامت ہے، وزیر اعظم

وزیر اعظم نے کہا کہ مارخور کے اس عالمی دن پر میں تمام پاکستانیوں اور عالمی برادری سے مطالبہ کرتا ہوں کہ وہ ماحولیاتی تحفظ کے لیے اپنے عزم کا اعادہ کریں

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

مارخور کا عالمی دن ہمارے بھرپور قدرتی ورثے کی علامت ہے، وزیر اعظم

وزیر اعظم پاکستان شہباز شریف نے مارخور کے عالمی دن پر کہا کہ یہ دن ہمارے بھرپور قدرتی ورثے کی علامت ہے۔جمعہ کو پاکستان کے قومی جانور مارخور کے عالمی دن کے موقع پر اپنے خصوصی پیغام میں انہوں نے کہا کہ مارخور اپنے منفرد کارک سکرو کی شکل کے سینگوں کے ساتھ، حیاتیاتی تنوع کے تحفظ اور ماحولیاتی توازن کو برقرار رکھنے کے لئے ہمارے عزم کی نمائندگی کرتا ہے۔

شہباز شریف نے کہا کہ 2 مئی 2024 کو اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اعلان کے مطابق یہ دن منانے کا فیصلہ کیا گیا۔ اس دن کو عالمی سطح پر منانے کا فیصلہ جنگلی حیات کے تحفظ میں ہماری قوم کی کوششوں اور کامیابیوں کا اعتراف ہے۔وزیر اعظم نے کہا کہ گزشتہ ایک دہائی کے دوران مارخور کی آبادی میں نمایاں اضافہ قدرتی ماحول کے تحفظ کے لئے پاکستان کی لگن کا منہ بولتا ثبوت ہے، مارخور کے تحفظ کے پروگراموں میں مقامی کمیونٹیز کے تعاون اور سائنسی تحقیق کا کلیدی کردار ہے۔

شہباز شریف نے کہا کہ پاکستان جنگلی حیوانات اور نباتات کے خطرے سے دوچار انواع میں بین الاقوامی تجارت کے کنونشن کے پرعزم دستخط کنندہ کے طور پر بین الاقوامی تجارت کے کنونشن کیٹگری میں ایک نمایاں درجہ رکھتا ہے،اس حوالے سے کی گئی خصوصی قانون سازی، پاکستان ٹریڈ کنٹرول آف وائلڈ فاؤنا اینڈ فلورا ایکٹ، 2012، ذمہ دارانہ تجارتی طریقوں اور خطرے سے دوچار انواع کی فلاح و بہبود کے لئے ہماری وابستگی کو واضح کرتی ہے۔

وزیر اعظم نے کہا کہ مارخور کے اس عالمی دن پر میں تمام پاکستانیوں اور عالمی برادری سے مطالبہ کرتا ہوں کہ وہ ماحولیاتی تحفظ کے لیے اپنے عزم کا اعادہ کریں۔وزیر اعظم نے کہا کہ آئیے نہ صرف مارخور بلکہ ان تمام انواع کے تحفظ کے لئے مل کر کام کریں ۔ 

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll