جی این این سوشل

پاکستان

وزیر خارجہ محمد اسحاق ڈار کی چینی وزیر خزانہ سے ملاقات

ملاقات میں مالی تعاون کو مزید بڑھانے پر تبادلہ خیال کیا

پر شائع ہوا

کی طرف سے

وزیر خارجہ محمد اسحاق ڈار کی  چینی وزیر خزانہ سے ملاقات
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

وزیر خارجہ محمد اسحاق ڈار نے عوامی جمہوریہ چین کے وزیر خزانہ سے ملاقات کی ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق ملاقات کے دوران نائب وزیراعظم اور چین کے وزیر خزانہ نے پاک چین مالیاتی اور بینکنگ تعاون کو سراہا اوردونوں ممالک کے درمیان آل ویدر سٹریٹجک کوآپریٹو پارٹنرشپ کا مظہر قرار دیا۔

دونوں رہنماؤں نے بزنس ٹو بزنس روابط کے پیش نظر مالی تعاون کو مزید بڑھانے پر تبادلہ خیال کیا۔

دفتر خارجہ کا کہنا تھا کہ چینی وزیر خزانہ نے پاکستان کے اقتصادی ایجنڈے کو سراہا اور مالی استحکام کو مضبوط بنانے کی کوششوں میں چین کی پاکستان کی حمایت جاری رکھنے کا اعادہ کیا جبکہ مالیاتی اور بینکنگ تعاون کو فروغ دینے میں نائب وزیراعظم کے تعاون کو بھی سراہا۔

ترجمان دفتر خارجہ نے مزید بتایا کہ نائب وزیر اعظم اسحاق ڈار نے براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری راغب کرنے کے لیے اصلاحاتی ایجنڈے پر روشنی ڈالی اور چین سے سرمایہ کاری کے حوالے سے پاکستان کی اعلیٰ ترجیح پر بھی زور دیا جبکہ سرمایہ کاری کے حوالے سے جن ترجیحی شعبوں کی نشاندہی کی گئی ان میں زراعت، آئی ٹی، کان کنی ، معدنیات اور قابل تجدید توانائی شامل ہیں۔

نائب وزیراعظم اور وزیرخارجہ اسحاق ڈار نے چائنہ بزنس راؤنڈ اپ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان اور چین کی دیرینہ اور مضبوط دوستی ہے۔ بیجنگ میں ہماری میٹنگ بہت مفید رہی، ملاقات میں علاقائی امورسمیت اہم معاملات پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔ پاکستان میں سرمایہ کاری کےبہت سےمواقع موجود ہیں۔

علاقائی

حکومت سے لڑائی نہیں چاہتے مگر تالی 2 ہاتھوں سے بجتی ہے، چیف جسٹس

ہم کسی کی بی ٹیم نہیں، ہم صرف اللہ کو جواب دہ ہیں، پنجاب جوڈیشل اکیڈمی میں منعقدہ تقریب سےخطاب

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

حکومت سے لڑائی نہیں چاہتے مگر تالی 2 ہاتھوں سے بجتی ہے، چیف جسٹس

لاہور ہائیکورٹ کے چیف جسٹس ملک شہزاد احمدنے کہا کہ حکومت سے لڑائی نہیں چاہتے مگر تالی 2 ہاتھوں سے بجتی ہے۔

پنجاب جوڈیشل اکیڈمی میں منعقدہ تقریب سےخطاب کرتے ہوئے چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ نے کہا کہ جج ہونا نوکری نہیں جس میں انسان نوکر ی جانے کا خوف رکھے۔ ججز کو بہت سے مشکل مراحل سے گزرنا پڑتا ہے، نئے ججز بھی مشکل مرحلے سےگزر کر عدالت کا حصہ بنے ہیں۔

چیف جسٹس ملک شہزاد احمد نے کہا کہ گر کوئی عدلیہ کا احترام نہیں کرے گا تو ہم سے بھی توقع نہ رکھے، ہر پاکستانی شہری کو حق ہے کہ اس کو قانونی تحفظ حاصل ہو۔

انہوں نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم کسی کی بی ٹیم نہیں، ہم صرف اللہ کو جواب دہ ہیں۔ ان لوگوں سے ہشیار رہیںجو اداروں کو لڑانا چاہتے ہیں۔

انہو ں نے مزید کہا کہ نئے ججز میں خواتین کی بڑی تعداد موجود ہے۔گزشتہ سال پنجاب میں 8 لاکھ سے زائد کیسز کا اندراج ہوا۔

پڑھنا جاری رکھیں

تجارت

خیبر پختونخوا کا 1754 ارب روپے کا بجٹ صوبائی اسمبلی میں پیش

بجٹ میں کم سے کم ماہانہ اجرت 32 ہزار سے 36 ہزار کرنے کی تجویز دی گئی ہے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

خیبر پختونخوا کا 1754 ارب روپے کا بجٹ صوبائی اسمبلی میں پیش

 

مالی سال 2024-25ء کیلئے 1754ارب  روپے حجم کا بجٹ جمعہ کو خیبرپختونخوا میں پشاور کی صوبائی اسمبلی میں پیش کیا گیا۔

بجٹ میں کم سے کم ماہانہ اجرت 32 ہزار سے 36 ہزار کرنے کی تجویز دی گئی ہے، تعلیم کے لیے 362ارب روپے، صحت کےلیے 232 ارب روپے جبکہ صحت کارڈ کےلیے 34ارب روپےمختص کرنے کی سفارش کی گئی ہے۔

وزیر خزانہ خیبر پختونخوا آفتاب عالم نے بجٹ تقریر کے دوران کہا کہ کل محصولات 1754 ارب روپے اور کل اخراجات 1654 ارب روپے ہیں، بجٹ 100 ارب روپے سرپلس ہے۔

آفتاب عالم نے بتایا کہ  بجٹ میں عوامی خدمات کی فراہمی پر توجہ مرکوز کی، بجٹ میں صنعتی شعبے کے افراد کی مشاورت بھی شامل کی، صوبائی بجٹ میں آمدن کے دو حصہ ہیں، ایک صوبہ کے اپنے محاصل اور دوسرا وفاق سے ملنے والے فنڈز ہیں، وفاق کے ذمے مختلف مد میں بقایاجات واجب الادا ہیں، ضم اضلاع کے سالانہ 262 ارب روپے وفاق سے ملنے ہیں ، جو نہیں مل رہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

دنیا

عالمی عدالت انصاف کا اسرائیل کو غزہ میں جاری جارحیت فوری روکنے کا حکم 

حالیہ جاری کردہ فیصلے میں مئوقف اختیار کیا گیا اسرائیلی جارحیت سے فلسطین میں بنیادی  انسانی حقوق کی سخت  پامالی ہوئی

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

عالمی عدالت انصاف کا اسرائیل کو غزہ میں جاری جارحیت فوری روکنے کا حکم 

 

عالمی عدالت انصاف نے غزہ میں جاری اسرائیلی جا رحیت کے خلاف فیصلہ سنا دیا۔ 
حالیہ جاری کردہ فیصلے میں مئوقف اختیار کیا گیا اسرائیلی جارحیت سے فلسطین میں بنیادی  انسانی حقوق کی سخت  پامالی ہوئی۔

عدالت  نے بتایا اسرائیل کی حالیہ جاری جا رحیت کے تحت فلسطین میں انسانی زندگیوں کو سنگین خطرات لاحق ہیں۔ 
اسرائیل کی  جارحانہ کارروائیوں کی بدولت رفاہ میں آٹھ لاکھ  سے زائد لوگ بے گھر ہوئے۔ 
اسرائیلی جارحیت پر جاری کردہ فیصلے میں عدالت نے بتایا کہ اسرائیل نے عدالتی حکم کے باوجود شہریوں کے انخلا کے بارے میں عدالت کو مکمل تفصیلات فراہم نہیں کیں۔
اسرائیل نے فلسطینیوں کو خوراک سمیت بنیادی ضروریات کی فراہمی سے محروم رکھا ۔
عدالت  نے اپنا فیصلہ سناتے ہوئے اسرائیل کو جنگ بندی کر کے انسانی امداد کو یقینی بنانے کا حکم جاری کر دیا۔   
عدالتی حکم کے تحت اسرائیل کو ایک ماہ میں انسانی حقوق کی بحالی کے اقدامات پر پیش رفت سے آگاہ کرنے کا پابند کیا گیا۔ 
 عالمی عدالت انصاف نے اسرائیل کو پابند کیا کہ وہ  اقوام متحدہ کی فیکٹ فائنڈنگ ٹیموں کو غزہ کے  تباہ شدہ علاقوں تک کی رسائی فراہم کرے۔ 
عالمی عدالت  نے حکم دیا اسرائیل کو غزہ جانے والے تمام تحقیقاتی کمیشن کے ساتھ تعاون کرنا ہوگا۔ 
مزید برآں عالمی عدالت انصاف نے اسرائیل کو رفاہ بارڈر کراسنگ کو کھولنے کا بھی حکم جاری کر دیا ۔ 
عالمی عدالت انصاف نے  اسرائیلی جا رحیت کے خلاف اپنا حالیہ فیصلہ تیرہ دو کی واضح  اکثریت سے سنایا۔ 
یاد رہے اسرائیل نے انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزی کرتےہوئے غزہ میں سات مئی 2024 کو آپریشن شروع کیا جس پر عالمی عدالت انصاف میں جنوبی افریقہ کی دائر کردہ پٹیشن کے تحت غزہ کے خلاف اسرائیلی جارحیت کے معاملے کو سنا گیا۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll