جی این این سوشل

پاکستان

دیامربھاشا ڈیم کے متاثرین کو 47 لاکھ روپے معاوضہ دیاجائے ، صدر مملکت

انہوں نے کہا گلگت بلتستان کے عوام کو صحت کی سہولتوں کی فراہمی کیلئے صحت سہولت پروگرام کو بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کا حصہ بنایاجائے

پر شائع ہوا

کی طرف سے

دیامربھاشا ڈیم کے  متاثرین  کو 47 لاکھ روپے معاوضہ دیاجائے ، صدر مملکت
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

صدر آصف علی زرداری نے ہدایت کی ہے کہ گلگت بلتستان میں میڈیکل کالج اور ہسپتال قائم کرنے کیلئے فوری اقدامات کئے جائیں۔

انہوں نے آج  امور کشمیر وگلگت بلتستان کے وزیر امیر مقام اور وزیرتوانائی مصدق ملک سے تفصیلی گفتگو کی  انہوں نے آج (پیر) کواسلام آباد میں ان سے ملاقات کی ۔

صدر مملکت  نے یہ بھی ہدایت کی کہ دیامربھاشا ڈیم کے پندرہ سو متاثرین میں ہرایک کو 47 لاکھ روپے معاوضہ دیاجائے ۔

انہوں نے کہا گلگت بلتستان کے عوام کو صحت کی سہولتوں کی فراہمی کیلئے صحت سہولت پروگرام کو بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کا حصہ بنایاجائے۔

تجارت

بجٹ 25-2024 ، جائیداد کی خرید و فروخت پر ٹیکس کی شرح میں اضافےکی تجویز

جائیداد کی خریدوفروخت پر فائلر  پر 15 فیصد ٹیکس جبکہ نان فائلرز پر 45 فیصد تک ٹیکس لگےگا

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

بجٹ 25-2024 ، جائیداد کی خرید و فروخت پر ٹیکس کی شرح میں اضافےکی تجویز

بجٹ 25-2024 میں جائیداد کی خریدوفروخت پر فائلرز  اور نان فائلرز  پر ٹیکس کی شرح میں اضافےکی تجویز ہے۔

بجٹ دستاویز کے مطابق آئندہ مالی سال پراپرٹی پر کیپٹل گین پر ٹیکس میں اضافے کی تجویز رکھی گئی ہے۔

بجٹ دستاویز کے مطابق جائیداد کی خریدوفروخت پر فائلر  پر 15 فیصد ٹیکس لگےگا جب کہ نان فائلرز کے جائیداد خریدنے اور بیچنے پر 45 فیصد تک ٹیکس لگےگا۔

غیرمنقولہ جائیدادوں پر فائلرز، نان فائلرز  اور  تاخیر سے فائل ہونے والوں کے لیے الگ الگ ریٹ لانےکی تجویز ہے۔

وفاقی وزیر خزانہ محمد اورنگزیب نے قومی اسمبلی میں بجٹ پیش کرتے ہوئے بتایا کہ اس اقدام سے معیشت کو دستاویزی بنانے میں مدد ملے گی اور ہاؤسنگ سیکٹر میں افواہوں کا خاتمہ ہوگا۔ اس طرح عوام کو بھی مناسب رہائش ملےگی۔

خیال رہے کہ  بجٹ 25-2024 میں جائیدادوں پر انکم ٹیکس سے477ارب 11کروڑ روپے حاصل ہونےکا ہدف ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

وفاقی حکومت کا سمندر پار پاکستانیوں کے لیے ’’محسن پاکستان’’ ایوارڈ متعارف کرنے کا فیصلہ 

وفاقی وزیر محمد اورنگزیب نے بجٹ اجلاس میں بتایا کہ غیر ملکی پاکستانیوں کی خدمات کے اعتراف کے لیے ’’محسن پاکستان’’ ایوارڈ متعارف کروایاجا رہا ہے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

وفاقی حکومت کا سمندر پار پاکستانیوں کے لیے ’’محسن پاکستان’’ ایوارڈ متعارف کرنے کا فیصلہ 

اسلام آباد: وفاقی حکومت نے بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کی شکایتوں کے ازالے اور آسانیوں کے لیے موثر اقدامات اٹھانے کا فیصلہ کر لیا۔ 
وفاقی وزیر خزانہ محمد اورنگزیب نے بجٹ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بیرون ملک مقیم پاکستانی ملک کی معیشت میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتے ہیں، جن کی بھیجی جانے والی ترسیلات زر معیشت میں اہم کردار ادا کرتی ہیـں۔ ان کا کہنا تھا کہ حکومت نے بیرون ملک مقیم لوگوں کی سہولت کے لیے متعدد اقدامات اٹھانے کافیصلہ کیا ہے۔ 
بجٹ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیر خزانہ کا کہنا تھا کہ بیرون ممالک سے بھیجی جانے والی ترسیلات زر میں اضافے کی خاطر اٹھائے جانے والے اقدامات  کے لیے بجٹ میں  86.9 ارب روپے مختص کرنے کی تجویز ہے۔ مختص کی گئی رقم ری امبرسٹمنٹ آف پی ٹی چارجز اور سونی دھرتی سکیم سمیت دیگر سکیموں کے لیے استعمال کی جائے گی۔ 
وفاقی وزیر محمد اورنگزیب نے بجٹ اجلاس میں بتایا کہ افرادی قوت کی صلاحیتوں کو جدید تقاضوں سے آراستہ کرنے کے لیے ’’اسینٹرز آف ایکسیلنس’’ قائم کیے جائیں گے۔ 
حکومت کے ممکنہ اقدامات کے بارے میں بتاتے ہوئے وفاقی وزیر خزانہ کا کہنا تھا کہ دیار غیر میں مقیم پاکستانیوں کی سہولت کے لیے امیگریشن لینڈ سکیپ کو ڈیجٹلائز کیا جائے گا تاکہ امیگریشن کے سسٹم کو آسان بنایا جا سکے۔ مزید یہ کہ  اس اقدام  کے ذریعے لوگوں  کے اخراجات میں بھی مبینہ کمی ہو گی۔ 
سمندر پار مقیم پاکستانیوں کی شکایتوں کے ازالے کے حوالے سے وفاقی وزیر نے بتایا کہ بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کی  شکایات کے بروقت ازالے کے لیے کمپلینٹ ریزولوشن کا ایک موثر نظام بنایاجائے گا۔ 
بجٹ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے محمد اورنگزیب کا کہنا تھا کہ جو پاکستانی بیرون ملک جانا چاہتے ہیں، حکومت ان کے لیے قرض کی فراہمی کے اقدامات پر تیزی سے کام کر رہی ہے، تا کہ نئے ایمیگرینٹس اپنے عزائم کی تکمیل کے لیے جلد از جلد ملک سے باہر جا کر آباد ہو سکیں۔ 
وفاقی وزیر محمد اورنگزیب نے بجٹ اجلاس میں بتایا کہ غیر ملکی پاکستانیوں کی خدمات کے اعتراف کے لیے ’’محسن پاکستان’’ ایوارڈ متعارف کروایاجا رہا ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

حکومت کا اعلیٰ یونیورسٹیوں کے تعاون سے کالجوں میں شارٹ کورسز شروع کرنے کا فیصلہ 

وفاقی وزیر خزانہ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آئی ٹی کورسز کے ذریعے نوجوانوں کو سکلز کی ٹریننگ دی جائے گی تا کہ وہ روز گار کے معاملے میں خود مختار ہو سکیں

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

حکومت کا اعلیٰ یونیورسٹیوں کے تعاون سے کالجوں میں شارٹ کورسز شروع کرنے کا فیصلہ 

وفاقی وزیر خزانہ محمد اورنگزیب نے بجٹ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ملک بھر میں پڑھائی اور تحقیق کے کلچر کو فروغ دینے کے لیے ای لائبریریاں قائم کی جائیں گی۔ 
رواں سال کے بجٹ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیر خزانہ محمد اورنگزیب نے بتایا کہ پاکستان کی مشہور یونی ورسٹیوں بشمول نسٹ، کامسٹس اور نمل کے تعاون سے اسلام آباد کے 16 کالجوں کو اعلیٰ نتائج کے حامل تربیتی اداروں میں تبدیل کیاجائے گا۔  ان اعلیٰ تعلیمی اداروں کی زیر نگرانی متعلقہ کالجوں میں  6 ماہ کے آئی ٹی کورسز کا آغاز کیا جائے گا۔ 
وفاقی وزیر خزانہ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آئی ٹی کورسز کے ذریعے نوجوانوں کو سکلز کی ٹریننگ دی جائے گی تا کہ وہ روز گار کے معاملے میں خود مختار ہو سکیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll