جی این این سوشل

پاکستان

ڈسکہ این اے 75،الیکشن کمیشن کا کمشنر،آرپی اوکوعہدوں سے ہٹانے کا فیصلہ

اسلام آباد:این اے 75 ڈسکہ کےضمنی انتخابات میں ہونے والی دھاندلی کی شکایت پر الیکشن کمیشن نے کارروائی کرتے ہوئے کمشنراورآر پی اوکوعہدوں سےہٹانےکافیصلہ کر لیا۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

ڈسکہ این اے 75،الیکشن کمیشن کا  کمشنر،آرپی اوکوعہدوں سے ہٹانے کا فیصلہ
ڈسکہ این اے 75،الیکشن کمیشن کا کمشنر،آرپی اوکوعہدوں سے ہٹانے کا فیصلہ

ترجمان الیکشن کمیشن کے مطابق این اے 75 ڈسکہ  کےضمنی انتخابات  میں ہونے والی دھاندلی کی شکایت پر الیکشن کمیشن نےچیف سیکرٹری اورآئی جی پنجاب کو وضاحت کیلئے 4 مارچ کو طلب کر لیا ہے جبکہ ڈسکہ این اے 75میں کمشنراورآر پی اوکوعہدوں سےہٹانےکافیصلہ کیاہے اور  ڈی سی،ڈی پی او،اےسی،ایس ڈی پی اوکو بھی معطل کرنےکافیصلہ کیا گیا ہے۔

ترجمان نے مزید کہا کہ الیکشن کمیشن نے کمشنر گوجرانوالہ ڈویژن اور آر پی او گوجرانوالہ رینج کو ان کے موجودہ عہدوں سے تبدیل کر کے گوجرانوالہ ڈویژن سے باہر بھیجنے کی ہدایت کر دی اور مذکورہ بالا تمام افسران کے خلاف الیکشن کمیشن خود انکوائری کرے گا یا وفاقی حکومت یا صوبائی حکومت کو انکوائری کرانے کا حکم دے گا جس کا فیصلہ بعد میں ہوگا۔  

قبل ازیں چیف  الیکشن کمشنر سلطان راجہ  کی سربراہی میں فل بنچ نے این اے 75 ضمنی انتخاب میں بے ضابطگیوں سے متعلق کیس کی الیکشن کمیشن میں  سماعت  ہوئی۔الیکشن کمیشن نے فیصلہ سنا دیا ،فیصلے کے مطابق الیکشن کمیشن نے  این 75ڈسکہ  میں ضمنی انتخاب کالعدم قرار  دیتے ہوئے  18 مارچ کو دوبارہ الیکشن  کروانے کا حکم دے دیا ۔ فیصلے میں کہا گیا ہے کہ حلقے میں ضمنی انتخاب شفاف نہیں ہوا، انتخابی ماحول خراب کیاگیا اور لڑائی جھگڑے کے واقعات ہوئے، ووٹرزکوووٹ ڈالنے کیلئےبہترماحول نہیں ملا اور تمام پولنگ اسٹیشن پردوبارہ پولنگ ہوگی ۔

پاکستان

" دوبارہ سوچ لو " کنجاہ ہاؤس پرپولیس ریڈ کے بعد مونس الہیٰ کا سخت ردعمل

تفصیلات کے مطابق گجرات میں سابق وزیراعلیٰ پنجاب چودھری پرویز الٰہی اور سابق رکن قومی اسمبلی مونس الٰہی کی رہائشگاہ کنجاہ ہاﺅس کو پولیس نے گھیرے میں لے لیا ہے، پولیس کی بھاری نفری رہائشگاہ کے باہر جمع ہے۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

" دوبارہ سوچ لو " کنجاہ ہاؤس پرپولیس ریڈ کے بعد مونس الہیٰ کا سخت ردعمل

 

 

گجرات میں سابق وزیراعلیٰ چودھری پرویز الٰہی کی رہائشگاہ کا دوبارہ محاصرہ  کرنے کے بعد مونس الہیٰ نے اپنے رد عمل میں کہا ہے کہ پولیس، ایف آئی اے، اور دیگر ایک بار پھر کنجاہ ہاؤس میں بغیر وارنٹ کے چھاپے مارتے رہتے ہیں۔ ہمارے گھر پر چھاپہ مار کر آپ کو لگتا ہے کہ ہم بھاگ جائیں گے ، دوبارہ سوچ لو!!

 

 

تفصیلات کے مطابق گجرات میں سابق وزیراعلیٰ پنجاب چودھری پرویز الٰہی اور سابق رکن قومی اسمبلی مونس الٰہی کی رہائشگاہ کنجاہ ہاﺅس کو پولیس نے گھیرے میں لے لیا ہے، پولیس کی بھاری نفری رہائشگاہ کے باہر جمع ہے۔

 ڈی پی او کی قیادت میں پولیس کی بھاری نفری کنجاہ ہاﺅس پہنچی، نفری میں پولیس، ایلیٹ فورس کے 10 سے زائد تھانوں کے اہلکار شامل ہے،پولیس کی جانب سے چودھری پرویز الٰہی کی رہائشگاہ کے اندر جانے کی کوشش کی جارہی ہے، اہلکار سیڑھیاں لگا کر پرویز الٰہی کی رہائشگاہ کے اندر جانے کی کوشش کرہے ہیں۔

ذرائع کاکہناہے کہ سابق وزیراعلیٰ کی رہائشگاہ پر گیٹ کیپر اور ملازم موجود ہیں ، پرویز الٰہی کی فیملی کا کوئی فرد گھر پر موجود نہیں ہے ۔ذرائع کاکہناہے کہ سابق وزیراعلیٰ پرویز الٰہی لاہور اور مونس الٰہی بیرون ملک مقیم ہیں ۔

یاد رہے کہ چند روز بھی پولیس نے چودھری وجاہت اور ان کے بیٹے موسیٰ الٰہی کی گرفتاری کیلئے چھاپے مارے تھے تاہم انہیں کوئی کامیابی نہ مل سکی۔

پڑھنا جاری رکھیں

تجارت

کاروباری ہفتے کے پہلے روز ڈالر کی قدر میں کمی

ڈالر کی قدر میں کمی

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

کاروباری ہفتے کے پہلے روز ڈالر کی قدر میں کمی

کاروباری ہفتے کے پہلے روز ڈالر کی قدر میں کمی آئی ہے۔

اسٹیٹ بینک کے مطابق انٹربینک میں ڈالر ایک روپیہ 28 پیسےسستا ہو کر 275 روپے 30 پیسوں کی سطح پربند ہوا ہے۔ دوسری جانب اسٹاک ایکسچینج میں آج کاروبار مثبت رہا، 100 انڈیکس 719 پوائنٹس کے اضافے کے بعد 41 ہزار 190 کی سطح پر بند ہوا۔

مزید برآں سونے کی فی تولہ قیمت 200 روپے کی کمی کے بعد 2 لاکھ 4 ہزار300 روپے ہو گئی۔ جب کہ 10 گرام سونے کی قیمت 172 روپے کی کمی کے بعد ایک لاکھ 75 ہزار 154 روپے ہو گئی ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

لاہور ہائی کورٹ نے گھریلو صارفین کو500 یونٹس تک سبسڈی دینے کا حکم دے دیا

لاہور ہائی کورٹ نے گھریلو صارفین کو500 یونٹس تک سبسڈی دینے کا حکم دے دیا۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

لاہور ہائی کورٹ نے گھریلو صارفین کو500 یونٹس تک سبسڈی دینے کا حکم دے دیا

لاہورہائیکورٹ کے جسٹس علی باقر نجفی نے مختلف نوعیت کی 3659 درخواستوں پر سماعت کی تھی ۔

عدالت کے روبرو اظہر صدیق سمیت دیگر وکلا نے موقف اختیار کیا تھا کہ حکومت نے بجلی کے بلوں میں غیر قانون طور پر فیول ایڈجسٹمنٹ چارجز نافذ کردئیے ہیں جس سے صارفین کو اضافہ بجلی کے بل بھیجے گئے ہیں۔

اس حوالے سے قواعد وضوابط پر عمل نہیں کیا گیا لہذا عدالت بجلی کے بلوں میں فیول ایڈجسمنٹ سمیت دیگر سرچارجز کی وصولی کو غیر قانونی قرار دے .

عدالت نے بجلی کے بلوں میں فیول ایڈجسمنٹ سمیت دیگر سرچارجز کی وصولی غیر قانونی قرار دیدیا عدالت نے زرعی اور گھریلو صارفین کے بجلی کے بلوں میں فیول ایڈجسٹمبٹ کو خلاف قانون قرار دیا۔

عدالت نے 500 یونٹ تک گھریلو صارفین کو زیادہ سے زیادہ سبسڈی قرار دیا،عدالت نے فیول ایذجسٹمنٹ کی وصولی کو کالعدم قرار دے دیا ،عدالت نے سولر اور نیوکلئیر سمیت دیگر ذرائع سے بجلی پیدا کرنے کا حکم دیا،اوور چارجنگ کرنے والوں کے خلاف نیپراکو کارروائی کرنے کا حکم بھی دیدیا گیا۔ عدالت کا فیصلہ 81صفحات پر مشتمل ہے ۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll