جی این این سوشل

پاکستان

وزیراعظم آزاد کشمیر سردار عبدالقیوم نیازی مستعفی ہو گئے

مظفر آباد: وزیراعظم آزاد جموں و کشمیر سردار عبدالقیوم نیازی نے اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا ہے۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

وزیراعظم آزاد کشمیر سردار عبدالقیوم نیازی مستعفی ہو گئے
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم آزاد کشمیر سردار عبدالقیوم نیازی اپنے عہدے سے مستعفی ہو گئے ہیں۔

سردارعبدالقیوم نیازی نے اپنا استعفیٰ چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان کو اور صدر آزاد کشمیر کو بھی بھجوا دیا ہے۔

میڈیا ذرائع کے مطابق سردار عبدالقیوم نیازی نے گزشتہ روز ملاقات میں حقائق سابق وزیر اعظم عمران خان کے سامنے رکھے تھے۔

عبدالقیوم نیازی نے اپنے خلاف سازش اور مبینہ ڈیل سے متعلق چیئرمین تحریک انصاف کو تفصیلی طور پر آگاہ کیا تھا، انہوں نے کہا کہ وزارت عظمیٰ آپ کی امانت تھی آج واپس کررہا ہوں۔

اس سے قبل وزیراعظم آزاد کشمیر کی جانب سے کابینہ کے 4 وزرا کو بر طرف کر دیا گیا تھا۔

برطرف کیے گئے وزرا کی فہرست میں تنویر الیاس، عبد الماجد خان، علی شان سونی  اور خواجہ فاروق کے نام شامل ہیں۔

پاکستان

پاکستان میں جمہوریت کو بچانا ہے تو جس کا مینڈیٹ ہے اسے دیا جائے، علی محمد خان

مریم نواز کو مبارکباد ضرور دیتا لیکن پہلے وہ اپنی سیٹ تو جیت جاتیں، رہنما پی ٹی آئی

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پاکستان میں جمہوریت کو بچانا ہے تو جس کا مینڈیٹ ہے اسے دیا جائے، علی محمد خان

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی رہنما علی محمد خان نے کہا ہے کہ شریف خاندان نے زبردستی تخت پنجاب لیا، 2013 میں بھی نواز شریف کو ان کی سیٹ پرجا کر مبارکباد دی تھی مگر مریم تو ہار چکی ہیں ،پہلے یہ جیت کے تو آئیں، غریب کا آخری ہتھیار بھی انہوں نے لے لیا، اگر پاکستان میں جمہوریت کو بچانا ہے تو جس کا مینڈیٹ ہے اسے دیا جائے۔

پی ٹی آئی قائدین اور بلوچستان کے امیدواران قومی اسمبلی کے ہمراہ اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے علی محمد خان نے کہا کہختم نبوت اور حرمت رسول ﷺ پر کوئی سمجھوتا نہیں ہوگا، بانی پی ٹی آئی نے امریکہ میں جا کر مسلمانوں کی جنگ لڑی ہے۔ قوم کے ساتھ کیسے یہ مذاق کیا جا سکتا ہے، الیکشن پر اربوں روپے لگا کر کیوں ڈراما رچایا گیا۔ مریم نواز شریف نے وزیر اعلیٰ پنجاب کا حلف اٹھایا،

انہوں نے کہا کہ میں مریم نواز کو مبارکباد ضرور دیتا لیکن پہلے وہ اپنی سیٹ تو جیت جاتیں، 2013 میں بھی نواز شریف کو ان کی سیٹ پرجا کر مبارکباد دی تھی، ان الیکشنز میں نواز شریف، شہباز شریف سب بڑے سورما ہارگئے، مگر صبح ہونے تک حتمی نتائج میں سب کو الیکشن جتوا دیا گیا۔ کراچی کا میڈینٹ ہمارے پاس ہے، پاکستان کو بچانا ہے تو جس کا میڈینٹ ہے اس کو دیا جائے۔ دھاندلی کے باوجود لوگوں نے نکل کر فسطائیت کا مقابلہ کیا، ہمارے چیئرمین کوجیل میں قید کردیا گیا، پارٹی کا نشان واپس لے لیا گیا، تمام سختیوں کے باوجود عوام نے نکل کر جمہوریت کو ووٹ دیا۔ 

انہوں نے مزید کہا کہ قوم کے حق پر ڈاکا ڈالا گیا ہے، غریب آدمی کے پاس اس ملک میں آخری اختیار ووٹ ہے، اگر یہ اختیار بھی غریب سے چھین لیں تو یہ طریقہ تو 1947 سے پہلے بھی تھا، یہ طریقہ کار تو وائی سرائے کے دور میں بھی اپنایا جاتا تھا، یہی ہماری جدوجہد تھی کہ لندن پلان کا حصہ نہیں بنیں گے۔

پریس کانفرنس کے دوران شیر افضل مروت نے کہا کہ ملک بھر میں تحریک انصاف کے میڈینٹ پر ڈاکا ڈالا گیا ہے، ہم پہلے بھی اس پر احتجاج کر چکے ہیں، سات صوبائی حلقے اور تین قومی اسمبلی حلقوں کی عزرداریاں لے کر الیکشن کمیشن گئے، لیکن الیکشن کمیشن کا رویہ دوسری جماعتوں کی نسبت یکسر مختلف ہے، ہمارے امیدواروں کے حتمی نتائج آنے کے بعد دوسرے امیدواروں کو جتوایا گیا ہے، ہم بلوچستان کے امیدوار مختصر طریقہ سے اپنا مسئلہ بیان کریں گے۔

شاندانہ گلزار کا کہنا ہے کہ بلوچستان میں پی ٹی آئی کے آزاد امیدواروں کے الیکشن چوری ہوئے، ہم بتائیں گے کس طرح بلوچستان میں ہمارا الیکشن چوری ہوا، ہمارے امیدوار تمام شواہد ساتھ لے کر آئے ہیں۔

این اے 263 بلوچستان سے انتخابات میں حصہ لینے والے سالار خان کاکڑ نے کہا کہ ہمارا صوبہ وسائل سے مالا مال ہے، بلوچستان کی محرومیوں کا قصہ ہر ٹی وی چینل پر ہو رہا ہوتا ہے۔بلوچستان میں میڈیا کوریج نہ ہونے کے برابر ہے، اسی وجہ سے آج ہم سب اسلام آباد آئے ہیں، ہمیں امید ہے میڈیا کے توسط سے ملک اور ملک سے باہر آواز پہنچے گی۔

انہوں نے کہا کہ پہلے بھی دھاندلی ہوتی تھی اس بار ٹھیکداروں اور قبضہ مافیا کو الیکشن میں جتوایا گیا، اس بار 20 کروڑ سے ایک ارب تک سیٹوں کے سودے کیے گئے، میرے حلقے کے تمام فارم 45 موجود ہیں، میرے فارم 45 کے مطابق 32 ہزار ووٹ حاصل کیے، آٹھویں نمبر والے امیدوار کو اٹھا کر جتوا دیا گیا۔میرے حلقے میں چار ہزار ووٹ لینے والے کو الیکشن جتوایا گیا، الیکشن کے روز ساری رات آر او کے دفتر کے باہر کھڑے رہے لیکن ہمیں آر او آفس میں جانے کی اجازت نہیں دی گئی، ہمارے ساتھ الیکشن میں اتنا بڑا مزاق کیا گیا ہے جس کا کوئی ثانی نہیں۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ بلوچستان کے عوام کے ساتھ کھلواڑ ہوا ہے، حالیہ الیکشن میں بلوچستان کے عوام کی تعلیم، صحت اور وسائل بیچ دیئے گئے، ہماری مسلسل جدو جہد ہے کہ تحریک انصاف کے ووٹرز کا حق محفوظ کریں گے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

مراد علی شاہ نے وزیر اعلی سندھ کا حلف اٹھا لیا

پیر کو پیپلز پارٹی کے رہنما سید مراد علی شاہ مسلسل تیسری بار سندھ کے وزیر اعلیٰ بن گئےتھے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

مراد علی شاہ نے وزیر اعلی سندھ کا حلف اٹھا  لیا

کراچی: پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے سید مراد علی شاہ نے منگل کو تیسری بار سندھ کے وزیراعلیٰ کے عہدے کا حلف اٹھا لیا۔

گورنر سندھ کامران ٹیسوری نے گورنر ہاؤس میں ان سے حلف لیا اور انہیں بطور وزیر اعلیٰ کردار ادا کرنے پر مبارکباد دی ۔ 
اس موقع پر نگراں وزیراعلیٰ سندھ جسٹس (ر) مقبول باقر اور دیگر سیاسی شخصیات بھی موجود تھیں۔

پیر کو پیپلز پارٹی کے رہنما سید مراد علی شاہ مسلسل تیسری بار سندھ کے وزیر اعلیٰ بن گئے۔

کل 148 ووٹ کاسٹ ہوئے جن میں مراد نے 112 ووٹ حاصل کیے۔ ان کے مدمقابل متحدہ قومی موومنٹ پاکستان (MQM-P) کے علی خورشیدی کو 36 ووٹ ملے۔

اپنے خطاب میں مراد علی شاہ  نے صوبائی وزیر اعلیٰ منتخب ہونے پر شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے اپنی پارٹی قیادت کو چیلنجوں کے باوجود یہ ذمہ داری سونپنے کا اعتراف کیا۔


2016 میں سندھ کے وزیراعلیٰ کے طور پر اپنے سابقہ ​​دور کی عکاسی کرتے ہوئے، مراد نے اپنے عہدے کے وقار کو برقرار رکھنے کی خواہش کا اظہار کیا۔ انہوں نے شہید محترمہ بے نظیر بھٹو کو خراج تحسین پیش کیا، ان کے سرپرست، اور پی پی پی قیادت کا ان کی غیر متزلزل حمایت پر شکریہ ادا کیا۔

8 فروری کے انتخابات کے بارے میں بات کرتے ہوئے مراد نے کہا کہ پیپلز پارٹی کو تحفظات ہونے کے باوجود اس نے ملک کی خودمختاری اور استحکام کے لیے پارٹی کے عزم پر قاَم ہے ۔ 

 

پڑھنا جاری رکھیں

دنیا

بھارتی کسانوں کا احتجاج 15ویں روز میں داخل،سوشل میڈیا پر پابندیاں

یاد رہےکہ مودی سرکارنے احتجاج کے باعث انڈیا میں سوشل میڈیا پر بھی پابندیاں عائد کردیں ہیں ۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

بھارتی کسانوں کا احتجاج 15ویں روز میں داخل،سوشل میڈیا پر پابندیاں

انڈیا : مودی کی پالیسیوں سے نالاں بھارتی فوجی افسران بھی احتجاج پر اتر آئے اور کسانوں کے دہلی چلو مارچ کا حصہ بننے لگے۔
غیر ملکی میڈیا کے مطابق بھارتی کسانوں کا دہلی چلو مارچ جاری ہے جس کا قافلہ وقت کے ساتھ ساتھ بڑھتا جا رہا ہے۔

مودی سرکار  کی پالیسیوں سے نالاں بھارتی فوجی افسران بھی احتجاج پر اتر آئے اور حاضر سروس بھارتی فوجیوں کی بڑی تعداد کسانوں کے دہلی چلو مارچ میں جوق در جوق شامل ہونے لگی ہے۔
حاضر سروس فوجی جوان کسانوں کے مارچ پر مودی سرکار کے ظلم وبربریت کے خلاف بھارتی میڈیا پر احتجاجی بیان دے رہے ہیں اور ان کا کہنا ہے کہ بارڈرز پر تعینات پنجابی فوجی جوان دہلی چلو مارچ میں جلد شامل ہونے کا ارادہ رکھتے ہیں۔
مارچ میں شامل ایک فوجی جوان نے کہا کہ میں کسان کابیٹا ہوں، انڈین آرمی میرے لیے ضروری نہیں ہے، میں اپنی ملازمت سے استعفیٰ دے دوں گا۔

یاد رہےکہ مودی سرکارنے احتجاج کے باعث انڈیا میں سوشل میڈیا پر بھی پابندیاں عائد کردیں ہیں ۔ 

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll