جی این این سوشل

پاکستان

سابق وزیر اعظم عمران خان نے اپنی سب سے بڑی خامی بتا دی

پشاور: سابق وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہےکہ دوسروں پر بہت جلد بھروسہ کر لینا ان کی سب سے بڑی خامی ہے۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

سابق وزیر اعظم عمران خان نے اپنی سب سے بڑی خامی بتا دی
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

سابق وزیر اعظم عمران خان نے نجی ٹی وی چینل سے گفتگو میں کہا کہ سب سے زیادہ خطرہ تو میری جان کو ہے،میں پھر بھی اسے جہاد سمجھ کر نکل رہا ہوں،عوام سے کہتا ہوں کہ خوف کی زنجیریں توڑیں خوف غلام بنا دیتا ہے، جو لوگ ایمان لے آتے ہیں اللہ ان کا خوف دورکردیتا ہے،الیکشن کی تاریخ ملنے تک پیچھے نہیں ہٹیں گے، تحریک جاری رہے گی۔

سابق وزیر اعظم نے کہا کہ کل خود خیبرپختونخوا سے مارچ کی قیادت کروں گا،عوام کا سمندرمیرے ساتھ ہوگا،جو بھی عوام کے اس سمندرکو روکنے کی کوشش کرے گا وہ بہہ جائےگا، حکومت کے پاس اخلاقی قوت نہیں ہے تو جسمانی قوت کا استعمال کررہی ہے، یہ سمجھتے ہیں راستے بند کرکے لوگوں کوروک لیں گے۔

انہوں نے کہا کہ اب ہماری قوم بیدار ہوچکی ہے، قوم میں خود داری جاگی ہے، کسی کوتوقع نہیں تھی کہ قوم اس طرح بیدارہوگی خودداری جاگےگی،جوحرکتیں یہ کررہےہیں اپنی سیاسی قبریں کھودرہےہیں،رات کی تاریکی میں دیوارپھلانگ کرلوگوں کے گھروں میں گئے، فوجی کےگھرچھاپہ ماراگیااس کی جواں سالہ بیٹی رورہی ہےویڈیوموجودہے۔

پاکستان

عدالتی فیصلوں کیخلاف بینکوں کی اپیل سے امت مسلمہ کے دل رنجیدہ ہوئے ہیں:مولانافضل الرحمان

اسلام آباد:جمیعت علما اسلام کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے وزیر اعظم سے ملاقات میں کہا ہے کہ عدالتی فیصلوں کے خلاف بینکوں کی اپیل سے امت مسلمہ کے دل رنجیدہ ہوئے ہیں۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

عدالتی فیصلوں کیخلاف بینکوں کی اپیل سے امت مسلمہ کے دل رنجیدہ ہوئے ہیں:مولانافضل الرحمان

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم شہباز شریف سے جمعیت علماء اسلام کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے ملاقات کی جس میں  جس میں انہوں نے وزیراعظم کو سود کے متعلق عدالتی فیصلے کے خلاف نیشنل بینک کی اپیل کے حوالے سے اپنے تحفظات سے آگاہ کیا۔

مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ عدالتی فیصلوں کے خلاف بینکوں کی اپیل سے امت مسلمہ کے دل رنجیدہ ہوئے ہیں،امت مسلمہ سود کو ملک میں معاشی نظام کے تباہی کا سبب سمجھتی ہے۔

جواب میں وزیر اعظم شہباز شریف نے مولانا فضل الرحمان کو نیشنل بینک کے عدالتی فیصلے کے خلاف اپیل واپس لینے کی یقین دہانی کرواتے ہوئے  ٹاسک فورس کو حکم دیا کہ نیشنل بینک کی اپیل واپس لینے کے حوالے سے فوری اقدامات کیے جائیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

بھارتی ریاست مہاراشٹرا کے وزیراعلیٰ ادھو ٹھاکرے مستعفی ہوگئے

 بھارتی ریاست مہاراشٹرا کے وزیراعلیٰ ادھو ٹھاکرے نے مستعفی ہونے کا اعلان کردیا۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

بھارتی ریاست مہاراشٹرا کے وزیراعلیٰ ادھو ٹھاکرے مستعفی ہوگئے

بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق شیوسینا کے صدر ادھو ٹھاکرے نے ریاستی اسمبلی میں اپنی اکثریت ثابت کرنے کے لیے سپریم کورٹ کے فلور ٹیسٹ کے حکم کے چند منٹ بعد مہاراشٹر اکے وزیر اعلیٰ کے عہدے سے استعفیٰ دے دیا ہے۔

انہوں نے آن لائن خطاب کرتے ہوئے  اعلان کیا کہ وہ مہاراشٹرا قانون ساز کونسل کے رکن کی حیثیت سے بھی استعفیٰ دے رہے ہیں۔

اس سے قبل بدھ کی شام کو کابینہ کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے ادھو ٹھاکرے نے کہاتھا کہ انہیں ان کے اپنے لوگوں نے دھوکا دیا ہے۔

رپورٹس کے مطابق مہاراشٹرا کے وزیر اعلٰی ادھو ٹھاکرے کو 30 جون کو صبح 11 بجے اسمبلی میں اپنی اکثریت ثابت کرنے کیلئے  اعتماد کا  ووٹ حاصل کرنا تھا۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

ہنگو میں شادی نہ کروانے پر بیٹا والد کےخلاف درخواست لےکر تھانے پہنچ گیا

ضلع ہنگو کے نواحی علاقے میں شادی نہ کروانے پر بیٹا اپنے ہی والد کےخلاف درخواست لے کر پولیس کے پاس پہنچ گیا۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

ہنگو میں شادی نہ کروانے پر بیٹا والد کےخلاف درخواست لےکر تھانے پہنچ گیا

ہنگو پولیس کو 8 جون کو ایک انوکھی قسم کی درخواست موصول ہوئی۔

28 سال کے نوجوان محمود اللّٰہ نے درخواست میں موقف اختیار کیا کہ اُس نے اپنی شادی کے لیے کئی بار گھر والوں کو بولا، لیکن وہ اس کی شادی نہیں کروارہے اور ٹس سے مس نہیں ہو رہے۔

جیو نیوز کی ٹیم نوجوان کی شادی کی خواہش کی حقیقت جاننے کے لیے گاؤں شاہوخیل پہنچی اور محمود اللّٰہ سے بات کرنے کی کوشش کی، لیکن اُس نے کیمرے  کے سامنے بات کرنے سے انکار کر دیا۔

نوجوان نے کہا کہ وہ نوکری کرتا ہے، لیکن اس کی شادی کے لیے والدین فکر مند نہیں ہیں۔

نوجوان کے والد معین گل نے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ اُن کے دو بیٹوں کی شادی ہوچکی ہیں اور وہ بھی ہر والد کی طرح اپنے بیٹے کی بھی شادی کروانا چاہتے ہیں، لیکن اُس سے پہلے بیٹے کو ذمہ داری کا احساس کروانا ضروری ہے۔

والد نے مزید کہا کہ بیٹے نے گزشتہ ماہ اُن پر حملہ بھی کیا تھا، جس پر اُسے (بیٹے) 4 دن حوالات میں بھی رہنا پڑا، بعد میں انہوں نے ہی اپنے بیٹے کو رہائی دلوائی۔

ایس ایچ او تھانہ سٹی محمود عالم کا کہنا ہے کہ پولیس شادی نہیں کرواسکتی، فریقین کو بٹھا کر بات چیت کے ذریعے مسئلہ حل کرواسکتی ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll