جی این این سوشل

دنیا

اسرائیلی پارلیمان کی تحلیل اور نئے انتخابات کرانے کا بل منظور

پارلیمنٹ کی ہاؤس کمیٹی کی بل کو منظوری دینے کے بعد اسے اس کو پہلی خواندگی کے لیے ایوان میں پیش کیا گیا جسے 53-0 سے  منظور کرلیا۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

اسرائیلی پارلیمان کی تحلیل اور نئے انتخابات کرانے کا بل منظور
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

چار سال میں پانچویں بار انتخابات، اسرائیلی پارلیمنٹ کی تحلیل سے متعلق قانون متفقہ طورپر منظورکر لیا گیا ہے، جس کے نتیجے میں چار سال سے بھی کم عرصے میں پانچویں پارلیمانی انتخابات کے انعقاد کی راہ ہموار ہوگئی ہے۔

وزیراعظم نفتالی بینیٹ کی قیادت میں حکمران جماعت اورسابق وزیراعظم نیتن یاہو کی قیادت میں حزب اختلاف کے ارکان گذشتہ ہفتے سے اسرائیلی پارلیمان کی تحلیل کے بل پرمباحثہ کر رہے تھے۔

حکمران اتحاد کا کہنا تھا کہ وہ گذشتہ ہفتے وزیراعظم بینیٹ کے اعلان کے بعد اس قانون کی فوری منظوری چاہتا ہے کیونکہ اس کا ایک سال پرانا، نظریاتی طور پر منقسم آٹھ جماعتی اتحاد اب قابل عمل نہیں رہا ہے۔

تاہم نیتن یاہو اور ان کے اتحادی موجودہ پارلیمان میں ہی نئی حکومت تشکیل دینا چاہتے تھے، جس سے نئے انتخابات کا امکان ختم ہوجاتا، اوراس طرح نیتن یاہو ایک مرتبہ پھر وزیراعظم بن جاتے، لیکن ایسا نہیں ہو سکا۔

پارلیمنٹ کی ہاؤس کمیٹی کی بل کو منظوری دینے کے بعد اسے اس کو پہلی خواندگی کے لیے ایوان میں پیش کیا گیا جسے 53-0 سے  منظور کرلیا۔

بل کے مطابق پارلیمنٹ تحلیل ہونے کے بعد نئے انتخابات 25 اکتوبر یا یکم نومبر کو ہوں گے۔ لیکن مذاکرات کے بعد انتخابات کی حتمی تاریخ مقرر کی جائے گی۔

پاکستان

عمران خان کی صدارت سازشی بیانیہ بنا جسے شہباز گل کے ذریعے آگے بڑھایا گیا: رانا ثنا

وزیرداخلہ رانا ثنا اللہ نے پاکستان تحریک انصاف کے رہنما شہباز گل پر مقدمہ درج ہونے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ عمران خان کی صدارت میں سازشی بیانیہ بنایا گیا، نجی چینل کو سازش میں شامل کیا گیا۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

عمران خان کی صدارت سازشی بیانیہ بنا جسے شہباز گل کے ذریعے آگے بڑھایا گیا: رانا ثنا

اسلام آباد میں وفاقی وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے رانا ثنا اللہ کا کہنا تھاکہ محرم الحرام کے جلوسوں کے دوران کہیں بھی ناخوشگوار واقعہ نہیں ہوا، وزارت داخلہ نے تمام صوبائی حکومتوں سے بیٹھ کر سکیورٹی انتظامات پر بات کی، یکم سے 9 ویں محرم تک 6 ہزار سے زائد مجالس کا انعقاد ہوا، انٹیلیجنس اداروں اور سیکیورٹی اداروں نے بھر پور اقدامات کیے۔

شہباز گل کی گرفتاری کی تصدیق کرتے ہوئے وزیر داخلہ کا کہنا تھاکہ ایک نجی چینل کے ساتھ باقاعدہ سازش کی گئی اور اس میں سیاسی عنصر یہ تھا کہ توشہ خانہ ریفرنس اور فارن فنڈنگ میں پھنس چکی ہے اور شہدائے لسبیلہ کے خلاف ان کی گمراہی سامنے آئی ہے، اس سے دھیان ہٹانے کیلئے ایک سازش کے تحت بیانیہ بنایا گیا۔ 

انہوں نے بتایا کہ عمران خان کی صدارت میں سازشی بیانیہ بنایا گیا، نجی چینل کو سازش میں شامل کیا گیا، فواد چوہدری اور شہباز گل کے ذریعے سازشی بیانیے کو آگے بڑھایا گیا، شہباز گل کو فون کیا گیا اور اس نے لکھی ہوئی تحریر پڑھی۔

ان کا کہنا تھاکہ خاص رینکس کو پکارا گیا اور مخاطب کرتے ہوئے کہا گیا کہ وہ پی ٹی آئی کے ساتھ ہیں، آپ کا ضمیر ہے اور آپ جانور نہیں، ادارے کے اندر بغاوت کرانے کی کوشش کی گئی۔

وفاقی وزیر کا کہنا تھاکہ شہباز گل کے خلاف تھانہ کوہسار میں مقدمہ درج ہے، ان کے خلاف قانون کے تحت درج شکایت پرکارروائی کی گئی ہے اور درج شکایت کی روشنی میں قانون کے مطابق کارروائی ہوئی ہے۔

انہوں نے شہباز گل پر مقدمے میں لگنے والی دفعات پڑھ کر سنائیں اور کہا کہ شہباز گل کو صبح عدالت میں پیش کریں گے اور فیصلہ عدالت کرے گی۔

ایک سوال کے جواب میں رانا ثنا اللہ کا کہنا تھاکہ شہباز گل کے خلاف مقدمہ درج ہے یہ اغواکیسے ہوا؟ شہباز گل نے نجی چینل پر بیان دیا ان کے بیان کی حدتک مزید انکوائری کی ضرورت نہیں، شہبازگل اورنجی چینل کے پیچھے کون کون ہیں اس کی انکوائری ہونا ہے۔

ایک سوال پر ان کا کہنا تھاکہ فواد چوہدری سمجھدار آدمی ہیں وہ آگے نہیں آئے۔

شیخ رشید کے حوالے سے سوال پر وزیر داخلہ کا کہنا تھاکہ شیخ رشید چلے ہوئے کارتوس ہیں ان کی گرفتاری کا کوئی ارادہ نہیں، ان کو عمران خان بھی اب میٹنگز میں نہیں بلاتے۔

خیال رہے کہ اسلام آباد پولیس نے شہباز گل کو بنی گالا کے علاقے سے گرفتار کیا تھا اور ان پر غداری کی دفعات کے تحت تھانہ کوہسار میں مقدمہ درج کیا گیا ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

شہباز گل کی گرفتاری غیر قانونی ہے،فوج کیخلاف بات کرنے والوں کی مذمت کرتے ہیں، اسد قیصر

سابق اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر کا کہنا ہے کہ شہباز گل کی گرفتاری غیر قانونی ہے۔فوج کیخلاف جو بھی بات کرے اس کی مذمت کرتے ہیں۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

شہباز گل کی گرفتاری غیر قانونی ہے،فوج کیخلاف بات کرنے والوں کی مذمت کرتے ہیں، اسد قیصر

 

پی ٹی آئی رہنما اسد قیصر کا کہنا ہے کہ  فوج کےخلاف  مسلم لیگ ن، مولانا فضل الرحمان نے جو لہجہ استعمال کیا ان کے خلاف بھی پرچے ہونے چاہیے، قانون سے کوئی بھی بالا تر نہیں، فوج کے خلاف جو بھی بات کرے ان کی مذمت کرتے ہیں۔

انہوں  نے کہا کہ شہباز گل کی گرفتاری غیر قانونی ہے، ان کے خلاف ثبوت ہے توعدالت میں پیش کیا جائے،عدالت میں اس کا فیصلہ ہو۔

سابق اسپیکر قومی اسمبلی ممنوعہ  فنڈنگ کیس میں ایف آئی اے کی جانب سے طلبی کے نوٹس کو پشاور ہائیکورٹ میں چیلنج کرنے پہنچے تو میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ  ضمانت قبل از گرفتاری نہیں کرانے آیا، یہ اکاونٹ ہم نے صرف سہولت کے لئے کھولا تھا یہ غیر قانونی نہیں ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ ملازمین کی تنخواہوں اور دفتر کے اخراجات کے لئے کھولا تھا۔ اکاؤنٹ سے رقم جمع اور نکالنے کے تمام امور بذریعہ چیک ہوئے ہیں، اکاؤنٹ سے 6 سال میں صرف 21 لاکھ روپےکی ٹرانزیکشن ہوئی۔عمران خان انشااللہ پھر وزیر اعظم بنیں گے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

پہلی آئین ساز اسمبلی کی ڈائمنڈ جوبلی کی تقریبات کا آج سے آغاز 

اسلام آباد: پاکستان کی پہلی آئین ساز اسمبلی کی 75ویں سالگرہ کی پانچ روزہ تقریبات آج پارلیمنٹ ہاؤس اسلام آباد میں شروع ہو رہی ہیں۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پہلی آئین ساز اسمبلی کی ڈائمنڈ جوبلی کی تقریبات کا آج سے آغاز 

تفصیلات کے مطابق تقریبات کا مقصد ملک میں جمہوریت کے نصب العین اور اس کی اقدار کے فروغ کیلئے تمام ارکان پارلیمنٹ کی خدمات کو اجاگر کرنا ہے۔ 

سالگرہ شاندار طریقے سے منانے کے لئے قومی اسمبلی سیکرٹریٹ کی طرف سے تقریبات کا ایک جامع پروگرام تیار کیا گیا ہے ۔  '' میرا پارلیمان رہبر ترقی و کمال '' تقریبات کا موضوع ہے۔ 

تقریبات کا آغاز تین روزہ تصویری نمائش '' ترجمان ماضی شان حال '' کے آغاز سے ہو گا۔

اس طرح فن اور مصوری کی ایک اور تین روزہ نمائش ''پاک سرزمین شاد باد'' اور ایک اور تین روزہ کتاب نمائش ''قوم ،ملک ، سلطنت'' منعقد ہوں گی۔

اقلیتوں کے عالمی دن کے موقع پر کل اقلیتی کنونشن ہو گا جس کا مقصد ملک کی ترقی میں اقلیتوں کی خدمات کو سراہنا ہے۔

اقلیتوں کے کنونشن کے بعد خواتین ارکان پارلیمنٹ کا کنونشن ہو گا جس کا عنوان ہے۔ '' مرکز یقین شادباد'' نوجوانوں اور بچوں کا ایک کنونشن ''عزم عالی شان'' جمعے کو ہو گا۔

ایک بڑا پارلیمانی کنونشن ہفتے کو ہو گا جس کا عنوان ہے ''سایہ خدائے ذوالجلال'' جو ملک میں جمہوری نظام کے تسلسل کی اہمیت کو اجاگر کرے گا۔

 

 

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll