جی این این سوشل

پاکستان

جماعت اسلامی کا حکومت کے خلاف ملک گیر احتجاج کا اعلان

لاہور: امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق نے حکومت کے خلاف عدالت جانے کا اعلان کرتے ہوئے 12 اگست سے ملک گیر احتجاج کا اعلان کردیا ہے۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

جماعت اسلامی کا  حکومت کے خلاف ملک گیر احتجاج کا اعلان
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

منصورہ لاہور میں پریس کانفرنس سے خطاب میں امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہا کہ عوام کو اپنے حق اور اس ظلم کے خلاف اُٹھنے کی ضرورت ہے، 22 کروڑ عوام اپنے مسائل اورمشکلات کے حوالے سے بدترین دور سے گزر رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ حکومتی اتحاد ناکام ہوچکا ہے، پی ڈی ایم کے غلط فیصلوں کا بوجھ عوام پر پڑرہا ہے، عام آدمی کومعلوم ہی نہیں کہ حکومت کس کس طرح لُوٹتی ہے۔

امیر جماعت نے کہا کہ ہمارا حکومت سے مطالبہ ہے کہ بجلی سپلائی کمپنیاں ختم کی جائیں، بجلی کی قلت پوری کرنے کے لیے ڈیم بنانے کی ضرورت ہے، ملکی حالات کی وجہ سے ہر پانچواں شہری ڈپریشن کا شکار ہو گیا ہے۔

پاکستان

امریکی سفیر کا دورہ کراچی: ملاقاتوں میں باہمی تعلقات کیلئے تعاون کا اظہار

امریکی سفیر ڈونلڈ بلوم نے کراچی کے دو روزہ دورے کے دوران امریکا اور پاکستان کے درمیان معاشی اشتراک اور باہمی تعلقات کو مزید مستحکم بنانے کیلئے بھرپور تعاون کا اظہار کیا۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

امریکی سفیر کا دورہ کراچی: ملاقاتوں میں باہمی تعلقات کیلئے تعاون کا اظہار

امریکی سفیر نے اپنے  دورے کے دوران سندھ اور بلوچستان کے وزراء اعلیٰ، وفاقی وزیر برائے بحری امور، ایڈمنسٹریٹرکراچی اور کمانڈر پاک بحریہ پاکستان فلیٹ (کامپاک)، پاکستانی حکام، تجارتی نمائندگان، توانائی صنعتوں کے سربراہان اور دیگر کاروباری و تجارتی نمائندگان سے ملاقاتیں کیں۔

اپنے دورے کے دوران امریکی سفیر نے سندھ اور بلوچستان میں بارشوں اور سیلاب کی وجہ سے ہونے والے نقصانات کے ازالے، متاثرین کی بحالی اور امداد کیلئے امریکا کی جانب سے نئی مالی امداد کی مد میں 10 لاکھ ڈالرز جاری کرنے کا اعلان کیا۔

انہوں نے کہا کہ اس امداد سے نہ صرف سندھ میں زراعت سے وابستہ طبقے کو مستحکم بنانے میں مدد ملے گی، بلکہ قدرتی آفات سے نمٹنے سے متعلق پاکستانی اداروں کی صلاحیت میں بھی اضافہ ہوگا، تاکہ سندھ، خیبرپختونخواہ اور گلگت بلتستان میں آنے والی تباہ کاریوں سے بروقت نمٹا جا سکے۔ 
امریکی سفیر ڈونلڈ بلوم کا کہنا تھا کہ کراچی پاکستان کا معاشی مرکز ہونے کے ساتھ توانائی کی بے پناہ صلاحیتوں سے بھرپور شہر ہے، اس شہر کا دوبارہ دورہ کرنے کا موقع ملنے پر بے انتہا خوشی ہوئی۔

اپنے دورے کے موقع پر امریکی سفیر ڈونلڈ بلوم کا کہنا تھا کہ اس سال ہم امریکا اور پاکستان کے درمیان باہمی تعلقات کے  75 سال مکمل ہونے کا جشن منا رہے ہیں، اس موقع پر دونوں ممالک میں تجارتی شراکتداری، سرمایہ کاری، توانائی، صحت، سکیورٹی، تعلیم اور دیگر شعبہ جات میں تعاون بڑھانے کی خواہش کا اظہار کرتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ امریکی حکومت پاکستان اورامریکا کے درمیاں تعلقات مزید مضبوط کرنے کیلئے پرعزم ہے، تا کہ دونوں ممالک کی اقوام کے مستحکم، محفوظ اور خوشحال مستقبل کی حوصلہ افزائی ہو سکے۔

ان کا کہنا تھا کہ 2021 میں باہمی تجارت کا حجم بڑھ کر تقریباً 9 ارب ڈالر ہوگیا ہے، امریکا کو پاکستان کیلئے سب سے بڑی برآمدی مارکیٹ اور بیرونی سرمایہ کاری کے حوالے سے بہت بڑے ذریعے کی حیثیت حاصل ہے، گذشتہ سالوں میں امریکا کی براہ راست سرمایہ کاری میں 50 فیصد اضافہ ہوا ہے۔

امریکی سفیر کا کہنا تھا کہ امریکی کمپنیز اور ان کے مقامی شراکت دار پاکستان میں سب سے زیادہ ملازمتوں کے مواقع مہیا کرنے والوں میں شامل ہیں، جبکہ تقریباً 80 امریکی کمپنیوں کی جانب سے ایک لاکھ 25 ہزار پاکستانیوں کو بلواسطہ اور 10 لاکھ سے زائد پاکستانیوں کو بلاواسطہ ملازمتیں دی گئی ہیں۔ 
انہوں نے کہا کہ 2021 میں امریکی فرمز کی جانب سے پاکستان میں کارپوریٹ سماجی ذمیداری کے تحت 5.7 ملین ڈالرز سے زائد کی سرمایہ کاری کی گئی۔

اپنے دو روزہ دورے کے دوران امریکی سفیر نے مزار قائد پر حاضری دی اور آزادی کے 75 سال مکمل ہونے پر بانی پاکستان محمد علی جناح کے مزار پر پھول رکھے۔

اس موقع پر انہوں نے کہا کہ قائد اعظم محمد علی جناح نے پاکستان بشمول پڑوسی ممالک میں امن سمیت پاکستان میں مذہبی رواداری، معاشی و معاشرتی استحکام کا تصور پیش کیا، امریکا کو بانی پاکستان کی ان تصورات کا بے حد احترام ہے،  ہم امریکی عوام کے طرف سے پاکستان کو آزادی کے 75 سال مکمل ہونے پر دل کی گہرائیوں سے مبارکباد پیش کرتے ہیں۔

امریکی سفیر نے  اپنے دورے کے موقع پر لیاقت میموریل لائبریری کراچی کے لنکن کارنر میں اسٹارٹ اپ لیب کا افتتاح کیا،  پورٹ قاسم  اور  سندھ ایکسپلوریشن و ایڈوینچر سوسائٹی کے نمائندگان کے ہمراہ فریئر حال کراچی کا دورہ بھی کیا جبکہ اقلیتوں کے عالمی دن کے موقع پر انہوں نے کراچی میں اقلیتی برادریوں کے مندوبین سے بھی ملاقاتیں کی۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

عمران خان  بیک وقت 9 حلقوں سے انتخاب لڑے گے، کاغذات نامزدگی جمع

اسلام آباد: پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمران خان کے قومی اسمبلی کے تمام  9 حلقوں سےکاغذات نامزدگی جمع کرا دیے گئے، ملکی تاریخ میں پہلی مرتبہ ایک امیدوار  بیک وقت 9 حلقوں سے انتخاب لڑے گا۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

عمران خان  بیک وقت 9 حلقوں سے انتخاب لڑے گے، کاغذات نامزدگی جمع

تفصیلات کے مطابق سابق وزیراعظم عمران خان نے قومی اسمبلی کے 9 حلقوں سے خود ضمنی انتخابات لڑنے کا فیصلہ کیا ہے۔

ملکی سیاسی تاریخ میں پہلی مرتبہ ایک امیدوار بیک وقت 9 حلقوں سے انتخاب لڑےگا۔

قومی اسمبلی کے حلقہ 22، 24، 31، 45  سمیت 108، 118، 237، 239 اور 246 سے بھی عمران خان کےکاغذات نامزدگی جمع کرائے گئے ہیں۔

تمام 9 حلقوں میں پی ٹی آئی کے کَورنگ امیدواروں کے کاغذات جمع کروانےکا کام بھی مکمل ہوگیا ہے۔

الیکشن کمیشن کے جاری کردہ شیڈول کے مطابق ان 9 حلقوں میں پولنگ 25 ستمبر کو ہوگی۔

خواتین کی مخصوص نشست کے لیے پی ٹی آئی کی شاندانہ گلزار ، روحیلہ حامد اور مہوش علی خان بھی میدان میں ہیں۔

خیال رہےکہ اسپیکر قومی اسمبلی راجہ پرویز اشرف نے 28 جولائی کو پاکستان تحریک انصاف کے 11 ارکان کے استعفے قبول کرلیے تھے اور انہیں خالی ہونے والی نشستوں پر 25 ستمبر کو الیکشن ہونے جارہے ہیں۔

عمران خان کے تمام 9 حلقوں سے کامیابی کی صورت میں انہیں 8 حلقوں کو چھوڑ کر ایک کا انتخاب کرنا ہوگا اور وہ میانوالی کی نشست سے پہلے ہی رکن قومی اسمبلی ہیں۔

عمران خان کے الیکشن جیتنے کی صورت میں قومی اسمبلی کے 9 حلقوں میں دوبارہ ضمنی الیکشن ہوگا اور اس صورت میں ایک مرتبہ پھر الیکشن پر 50 سے 90 کروڑ روپے تک اخراجات آئیں گے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

صدر کا یوم آزادی پر قیدیوں کی سزاؤں میں کمی کا اعلان

اسلام آباد: صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے یومِ آزادی کےموقع پر قیدیوں کی سزاؤں میں کمی کا اعلان کیا ہے۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

صدر کا یوم آزادی پر قیدیوں کی سزاؤں میں کمی کا اعلان

تفصیلات کے مطابق صدرمملکت عارف علوی  کی جانب سے قیدیوں کی سزاؤں میں کمی آئین کے آرٹیکل 45 کے تحت کی گئی ہے۔

اعلان کے مطابق  65 سال یا زائد عمر کے مرد قیدی جو 15سال يا زیادہ قید کاٹ چکے ہیں ان کی بقیہ سزا میں مکمل چھوٹ کا اعلان کیا گیا ہے۔

60 سال یا زائد عمر کی خواتین جو 10سال یا زیادہ قید کاٹ چکی ہیں ان کی بقیہ سزا میں بھی مکمل چھوٹ کا اعلان کیا گیا ہے۔

اس کے علاوہ قید کی سزا کا تین چوتھائی حصہ کاٹنے والے اور 20 سال کی قید مکمل کرنے والوں قیدیوں کی سزا میں مکمل چھوٹ کا اعلان بھی کیا گیا ہے۔

صدر کی جانب سے قیدیوں کی سزاؤں میں کمی کا اطلاق سزائے موت، جاسوسی، گینگ ریپ، بینک ڈکیتی کے مجرموں سمیت ریاست مخالف سرگرمیوں اور اغوا میں ملوث مجرموں کی سزاؤں پر نہیں ہوگا۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll