جی این این سوشل

پاکستان

30اگست کو غریب پر10روپے فی لیٹر کی مزید چھری پھرے گی، شیخ رشید

 سابق وزیرداخلہ شیخ رشید کا کہنا ہے کہ30اگست کو غریب پر10روپے فی لیٹر کی مزید چھری پھرے گی۔ معاملات بگاڑ کی جانب جار ہے ہیں۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

30اگست کو غریب پر10روپے فی لیٹر کی مزید چھری پھرے گی، شیخ رشید
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

 

ان کا کہنا ہے کہ حکومت نے آئی ایم ایف کو لکھ کر دیا کہ پیٹرول پر لیوی بڑھائیں گے۔30اگست کو غریب پر10روپے فی لیٹر کی مزید چھری پھرے گی۔ پیٹرول کی قیمتوں میں اضافے سے متعلق آصف زرداری نے بھی حکومت پر تنقید کی۔

انہوں نے کہاہے کہ غریب مہنگائی میں جل رہا ہے اور حکمران بانسری بجا رہے ہیں۔ حکمرانوں نے نوٹ بینک بچانے کے لیے ووٹ بینک کو قربان کر دیا ۔ یہ لوگ اپنے  ووٹوں کو داو پر لگارہے ہیں ۔موجودہ حالات میں حکمرانی کرنا کوئی آسان کام نہیں۔

سربراہ عوامی مسلم لیگ شیخ رشید نے کہاہے کہ  عمران خان8حلقوں میں اہل اورفیصل آباد میں نااہل،یہ کیسا قانون ہے؟ یہ عمران خان کے سامنے کھڑے نہیں ہوسکتے۔

ان کا کہنا ہے کہ بڑے سے بڑاسیاسی پنڈت آئندہ صورتحال کی کوئی پیش گوئی نہیں کرپارہا۔ لیکن معاملات بگاڑ کی جانب جار ہے ہیں۔ الیکشن چاہے اکتوبر میں ہوں یا نومبر ،عمران خان انتخابی مہم پر ہیں۔نواز شریف کی واپسی طے نہیں پا سکی۔

انہوں نے کہاہے کہ چین کی رضامندی کے بغیرسی پیک اتھارٹی ختم کرنا سامراجی ایجنڈا ہے۔ان کو چین کے خلاف اسی کام کے لیے لایا گیا ہے۔افغانستان میں بھی رجیم چینج شروع ہو گیا جس سے پاکستان بھی متاثر ہو گا۔ برطانیہ سے بےدخلی کا معاہدہ ہمارے لیے منفی جائے گا۔

دنیا

برطانوی وزیراعظم کے محافظ کیخلاف تحقیقات کا آغاز

گیمبلنگ کمیشن مبینہ شرط کے حوالے سے گرفتار افسر سے تحقیقات کر رہا ہے، برطانوی پولیس

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

برطانوی وزیراعظم کے محافظ کیخلاف تحقیقات کا آغاز

برطانوی وزیر اعظم رشی سونک کی حفاظتی ٹیم کے ایک پولیس افسر کی گرفتاری کے بعد معاملے کی تحقیقات شروع کرانے کا مطالبہ کیا جا رہا ہے۔ بھارتی نژاد رشی سونک کے مذکورہ محافظ پر الزام ہے کہ اس نے آئندہ عام انتخابات کی تاریخ پر مبینہ طور سے شرطیں لگائی تھی۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق برطانوی پولیس نے بتایا ہے کہ گیمبلنگ کمیشن مبینہ شرط کے حوالے سے گرفتار افسر سے تحقیقات کر رہا ہے۔

پولیس نے یہ بھی بتایا کہ اس افسر کو خصوصی حفاظتی کمان کے عہدے سے معطل کر دیا گیا ہے۔پولیس افسر کو سرکاری دفتر میں خراب برتاؤ کے شک میں پیر کے روز گرفتار کر لیا گیا تھا۔ بعد ازاں تحقیقات کے انتظار میں اسے ضمانت پر رہا کر دیا گیا۔

یاد رہے کہ برطانوی وزیر اعظم رشی سونک کے معاون کے طور پر کام کرنے والے کریگ ولیمز کے حوالے سے پہلے ہی تحقیقات کی جا رہی ہیں کہ انہوں نے انتخابات کے اجرا کی تاریخ پر سٹے بازی کی ہے۔ ولیمز کنزرویٹو پارٹی کے امیدوار ہیں۔

برطانوی نشریاتی ادارے نے گذشتہ شب بتایا کہ وزیر اعظم کی کنزرویٹو پارٹی کی ہی ایک اور نامزد خاتون امیدوار لورا سونڈرز کو بھی انتخابات کی تاریخ کے حوالے سے مبینہ سٹے بازی سے متعلق تحقیقات کا سامنا ہے۔

دوسری جانب لیبر پارٹی کے سربراہ کیر اسٹارمر نے وزیر اعظم رشی سونک پر زور دیا ہے کہ وہ اس معاملے میں مبینہ طور پر ملوث افراد کی حمایت واپس لے لیں۔

یاد رہے کہ برطانیہ میں آئندہ عام انتخابات چار جولائی کو منعقد ہوں گے۔ اس مرتبہ وسیع پیمانے پر توقع کی جا رہی ہے کہ حزب اختلاف کی لیبر پارٹی انتخابات جیت کر چودہ سال سے جاری کنزرویٹو پارٹی کی حکمرانی پر روک لگا دے گی۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

شہید بےنظیر بھٹو کی آج 71ویں سالگرہ منائی جا رہی ہے

سابق وزیراعظم بے نظیر بھٹو کی 71 ویں سالگرہ کے موقع پر صوبائی حکومت کے تحت تمام تر ضلعی ہیڈ کوآرٹرز میں تقریبات منعقد ہوں گی

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

شہید بےنظیر بھٹو کی آج 71ویں سالگرہ منائی جا رہی ہے

پاکستان کی پہلی خاتون وزیراعظم اور پیپلز پارٹی کی شہید چیئرپرسن بے نظیر بھٹو کی آج 71 ویں سالگرہ منائی جارہی ہے۔

سابق وزیراعظم بے نظیر بھٹو کی 71 ویں سالگرہ کے موقع پر صوبائی حکومت کے تحت تمام تر ضلعی ہیڈ کوآرٹرز میں تقریبات منعقد ہوں گی۔

تقریبات میں پیپلز پارٹی کی شہید چیئرپرسن بے نظیر بھٹو کو خراج عقیدت پیش کیا جائے گا جبکہ کراچی میں جلسہ بھی منعقد کیا جائے گا۔

اس کے علاوہ پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو آج لیاری میں کارکنان کے ہمراہ والدہ کی سالگرہ منائیں گے۔

21 جون 1953 کو کراچی میں پیدا ہونے والی بے نظیر بھٹو عالمی اور ملکی سیاست میں اپنے والد ذوالفقار علی بھٹو کی طرح ایک منفرد اور نمایاں مقام رکھنے والی شخصیت تھیں۔

بے نظیر بھٹو نے ریڈ کلف کالج اور ہارورڈ یونیورسٹی سے اعلیٰ تعلیم کے بعد آکسفورڈ یونیورسٹی سے سیاسیات، اقتصادیات اور فلسفے میں ڈگریاں حاصل کیں۔

شہید بے نظیر بھٹو اپنے والد شہید ذوالفقار علی بھٹو کی لاڈلی بیٹی ہونے کی وجہ سے بچپن میں ہی اپنے والد کے ساتھ غیرملکی دوروں پر جایا کرتی تھیں۔

1982 میں بے نظیر بھٹو پیپلز پارٹی کی چیئرپرسن منتخب ہوئیں، جلاوطنی کے بعد وہ 1986 میں پہلی بار جب لاہور پہنچیں تو ان کا تاریخی استقبال ہوا اور انہوں نے ملک بھر کا دورہ کیا۔

1987 میں بے نظیر بھٹو کی شادی آصف علی زرداری سے ہوئی ۔ 1988 میں عام انتخابات کے دوران بے نظیر بھٹو نے تاریخی کامیابی حاصل کر کے پاکستان کی وزیراعظم کی حیثیت سے بھاگ دوڑ سنبھالی ۔

محترمہ بے نظیر بھٹو کی حکومت کو 7 اگست 1990 میں صدر اسحاق خان نے بدعنوانی اور کرپشن کے الزامات کی وجہ سے برطرف کر دیا جس کے بعد 1993 کے عام انتخابات میں ایک بار پھر پیپلز پارٹی اور بے نظیر ایک مرتبہ پھر وزیراعظم بن گئیں۔

1996 میں پیپلز پارٹی کے ہی صدر فاروق احمد خان لغاری نے بے امنی اور بد عنوانی، کرپشن کے باعث بے نظیر کی حکومت کو پھر سے برطرف کر دیا۔

بعدازاں 19 اکتوبر 2007 میں بے نظیر بھٹو کراچی واپس آئیں جہاں ان کے قافلے پر حملہ کیا گیا جس کے نتیجے میں درجنوں افراد ہلاک ہو گئے تاہم حملے میں بے نظیر بھٹو محفوظ رہیں لیکن 27 دسمبر 2007 میں راولپنڈی کے لیاقت باغ میں قاتلانہ حملے میں شہید ہو گئی تھیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

تجارت

عالمی بینک کی 2 پاکستانی منصوبوں کی معاونت کیلئے فنڈز کی منظوری

دونوں منصوبوں کیلئے 53 کڑور 50 لاکھ ڈالر کی فنانسنگ فراہم کی جائے گی،اعلامیہ جاری

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

عالمی بینک کی 2 پاکستانی منصوبوں کی معاونت کیلئے فنڈز کی منظوری

عالمی بینک کے بورڈ آف ایگزیکٹو ڈائریکٹرز نے پاکستان میں سماجی تحفظ اورلائیوسٹاک کے دومنصوبوں کیلئے 535 ملین ڈالر کی مالی معاونت کی منظوری دیدی ہے۔

عالمی بینک کی جانب سے جاری اعلامیہ کے مطابق کرائسزریزلئنٹ سوشل پروٹیکشن (سی آر آئی ایس پی) پروگرام کے لیے اضافی مالی معاونت کا مقصد ملک کے سماجی تحفظ کے نظام کو مضبوط کرنا اور غریب اور معاشی طورپرکمزور گھرانوں کو مستحکم بناناہے۔

اسی طرح سندھ لائیو اسٹاک اینڈ ایکوا کلچر سیکٹرز ٹرانسفارمیشن پراجیکٹ جدید موسمیاتی اور مسابقتی نظام کو فروغ دے گا جس سے سندھ میں مویشیوں اور آبی زراعت کے شعبوں میں چھوٹے اور درمیانے درجے کے پروڈیوسرز کو فائدہ پہنچے گا۔

پاکستان میں عالمی بینک کے کنٹری ڈائریکٹرناجی بن حساین نے بتایاکہ آفات سے نمٹنے کے لیے لچک وموزونیت پیدا کرنا اہمیت کاحامل ہے جس کے تحت سماجی تحفظ،معاشی ترقی اور بحالی میں معاونت کرنے والے شعبوں کو مضبوط بنانا شامل ہے۔

انہوں نے کہاکہ جدید موسمیاتی سمارٹ ٹیکنالوجی اور ہنگامی منصوبہ بندی کے ذریعے موسمیاتی موزونیت کو یقینی بنانابھی ضروری ہے۔ سی آر آئی ایس پی کے لیے 400ملین ڈالرکی اضافی فنانسنگ کی جائیگی جس سے پاکستان میں سماجی تحفظ کے نظام کو پالیسی اور ترسیل کے نظام کی بنیادوں سے آراستہ کرنے کی جاری کوششوں کو تقویت ملے گی۔

یہ پروگرام قومی کیش ٹرانسفر پروگرام کی تاثیر، کوریج اور وفاقی وصوبائی رابطہ کاری کو مزید بہتر بنانے کے لیے طویل مدتی پالیسی اقدامات پر توجہ مرکوز کرے گا۔

پراجیکٹ کے ٹاسک ٹیم لیڈر امجد ظفر خان نے کہا کہ اپنے آغاز سے لے کر اب تک سی آر آئی ایس پی نے 9 ملین سے زائد خاندانوں کو باقاعدہ حفاظتی نیٹ سپورٹ کے ساتھ اہم نتائج حاصل کیے ہیں اور حالیہ سیلاب کے دوران 2.8 ملین خاندانوں تک فوری طور پر پہنچنے کی صلاحیت کا مظاہرہ کیا ہے۔

اسی طرح سندھ لائیو اسٹاک اینڈ ایکوا کلچر سیکٹرز ٹرانسفارمیشن پراجیکٹ کے تحت 135ملین ڈالر کی معالی معاونت فراہم کی جائیگی جس سے موسمیاتی لحاظ سے موزوں پیداوار، قدر میں اضافے، اور منڈیوں تک جامع رسائی کو فروغ دینے میں مددملے گی ۔

اس پروگرام کااطلاق مرحلہ وار طریقہ استعمال کرتے ہوئے سندھ کے تمام اضلاع کا احاطہ کرے گا۔پروگرام سے 940,000کاشت کار خاندانوں کو براہ راست فائدہ پہنچنے کی توقع ہے، جن میں 930,000 مویشی پالنے والے گھرانے اور 10,000 آبی زراعت کے پیداوارکنندگان شامل ہیں۔

منصوبے میں خواتین کسانوں کی شرکت کو یقینی بنانے اور صنفی فرق کو کم کرنے کے اقدامات بھی شامل ہیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll