جی این این سوشل

پاکستان

اہم تعیناتیاں : وزیراعظم کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اہم اجلاس جاری 

اسلام آباد: وزیراعظم شہباز شریف کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اہم اجلاس وزیراعظم ہاؤس میں جاری ہے۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

اہم تعیناتیاں  : وزیراعظم کی زیر صدارت  وفاقی کابینہ کا اہم اجلاس جاری 
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم شہباز شریف اجلاس میں چیئرمین جوائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی اور چیف آف آرمی سٹاف کی تعیناتیوں سے متعلق وفاقی کابینہ سے مشاورت کریں گے جبکہ دیگر امور کی بھی منظوری لی جائے گی۔

وفاقی کابینہ کے اجلاس میں  کسان پیکج بھی منظوری کے لیے پیش ہو گا  جبکہ قائد اعظم یونیورسٹی میں نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف انٹیلیجنس و سکیورٹی سٹڈیز کی تشکیل کا معاملہ بھی زیر غور آئے گا۔

کابینہ اجلاس میں بین المذاہب ہم آہنگی پالیسی کی بھی منظوری دی جائے گی۔

گزشتہ روز وزیراعظم شہباز شریف کی قیادت میں حکومتی اتحادی جماعتوں کا اجلاس وزیراعظم ہاؤس میں ہوا تھا جس میں اتحادی جماعتوں سے اہم تعیناتیوں پر مشاورت کی گئی۔

یاد  رہے کہ منگل اور بدھ کی درمیانی شب آرمی چیف کی تقرری کی سمری جی ایچ کیو سے وزارت دفاع کو بھیجی گئی تھی جس کی تصدیق  بعد ازاں  وزیراعظم آفس  سے کردی گئی  ۔

واضح رہے کہ چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ 29 نومبر کو ریٹائر ہو رہے ہیں۔

وزیراعظم شہباز شریف کو چیف آف آرمی سٹاف اور چیئرمین جوائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی کے عہدوں پر تعیناتی کرنی ہے۔

علاقائی

 خیبر پختونخوا حکومت ایک لاکھ خاندانوں کو مفت سولر سسٹم فراہم کرے گی

 حکومت صوبے میں بجلی کی قلت کے مسئلے کو حل کرنے کے لیے پرعزم ہے، وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

 خیبر پختونخوا حکومت ایک لاکھ خاندانوں کو مفت سولر سسٹم فراہم کرے گی

پشاور:خیبر پختونخوا حکومت نے صوبے کے ایک لاکھ غریب خاندانوں کو مفت سولر سسٹم فراہم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس اقدام کا مقصد لوڈشیڈنگ سے نجات اور بجلی کے اخراجات میں کمی لانا ہے۔

وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا علی امین گنڈاپور نے کہا کہ حکومت صوبے میں بجلی کی قلت کے مسئلے کو حل کرنے کے لیے پرعزم ہے۔ انہوں نے کہا کہ سولر سسٹم فراہم کرنا ایک اہم قدم ہے جو ہمیں نہ صرف لوگوں کو سستی اور قابل اعتماد بجلی فراہم کرنے میں مدد کرے گا بلکہ ماحولیات کو بھی بچانے میں مدد کرے گا۔

ذرائع کے مطابق یہ سولر سسٹم 2 کے وی کی صلاحیت کے حامل ہوں گے اور ان میں سولر پینلز، انورٹر، وائرنگ کا سامان، بلبس اور پنکھے شامل ہوں گے۔ انہیں صوبے کے منتخب اضلاع میں غریب خاندانوں کو مفت میں تقسیم کیا جائے گا۔

اس اقدام سے صوبے میں بجلی کی طلب میں نمایاں کمی آنے کی توقع ہے۔ اس کے علاوہ، یہ سولر سسٹم خاندانوں کو بجلی کے اخراجات میں بھی بچت فراہم کریں گے۔

یہ منصوبہ خیبر پختونخوا حکومت کے قابل تجدید توانائی کے حصول کے عزم کا ایک حصہ ہے۔ حکومت نے پہلے ہی صوبے میں متعدد وائنڈ اور ہائیڈرو پاور پراجیکٹس شروع کیے ہیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

علاقائی

علمائے کرام کا جماعت اسلامی کے دھرنے کی حمایت کا اعلان

پاکستان کو پولیس اسٹیٹ بنا دیا گیا ہے، پنجاب حکومت اپنے مخالفین کے خلاف پولیس کا استعمال کر رہی ہے، امیر جماعت اسلامی لاہور

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

علمائے کرام کا جماعت اسلامی کے دھرنے کی حمایت کا اعلان

لاہور : علمائے کرام نے 26 جولائی کو اسلام آباد میں جماعت اسلامی کے دھرنے کی حمایت اور اس میں شرکت کا اعلان کیا ہے۔

منصورہ لاہور میں علما کرام کے ایک نمائندہ اجلاس کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے امیر جماعت اسلامی پنجاب جاوید قصوری نے کہا کہ اجلاس میں طے کیا گیا ہے کہ جمعہ کو لاہور سمیت پنجاب بھر میں عوام الناس کو مہنگائی اور بجلی کے بلوں کی قیمتوں میں اضافے کے بارے میں آگاہ کیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت عوام کے لیے عذاب بن گئی ہے، بجٹ کا 52 فیصد سود کی ادائیگی میں صرف ہو رہا ہے جبکہ حکمران اپنی عیاشیاں ختم نہیں کر رہے ہیں اور سارا بوجھ عوام پر ڈال دیا گیا ہے، بجلی کے بلوں میں 48 فیصد ٹیکس شامل ہے۔

جاوید قصوری نے کہا کہ دھرنے کا مقصد حکومت سے سودی نظام کا خاتمہ، آئی ایم ایف کی غلامی سے انکار اور بجلی کے بلوں میں ٹیکسز کی واپسی کا مطالبہ کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ دھرنا 25 کروڑ عوام کی آواز ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ دھرنے میں علما کرام سمیت معاشرے کے تمام طبقات شرکت کریں گے۔ 26 جولائی کو دھرنا شروع ہوگا اور حکومت کو مطالبات سننے پر مجبور ہونا پڑے گا۔

امیر جماعت اسلامی لاہور نے یہ بھی کہا کہ پاکستان کو پولیس اسٹیٹ بنا دیا گیا ہے، پنجاب حکومت اپنے مخالفین کے خلاف پولیس کا استعمال کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومتی پارٹی کو جب چاہے اور جو چاہے کرنے کی اجازت ہے لیکن جب کوئی عوام کے حقوق کی بات کرتا ہے تو اس پر دفعہ 144 نافذ کر دی جاتی ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد حکومت فسطائیت پر اتر آئی ہے، اسد قیصر

اس حد تک نہ لے کر جائیں کہ ہمارے پاس کوئی آپشن ہی نہ ہو، رہنما پی ٹی آئی

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد حکومت فسطائیت پر اتر آئی ہے، اسد قیصر

پاکستان تحریک انصاف کے رہنما اور سابق اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے کہا ہے کہ مخصوص نشستوں سے متعلق سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد حکومت فسطائیت پر اتر آئی ہے اور ان کے خیال ہے کہ ہماری پارٹی کو دبائیں گے اور اپنا حق لینے سے دور رکھیں گے تو یہ ان کی غلط فہمی ہے۔

سوشل میڈیا پلیٹ فاریم ایکس پر اپنے ویڈیو پیغام میں سینئر رہنما اسد قیصر کا کہنا ہے کہ اس حد تک نہ لے کر جائیں کہ ہمارے پاس کوئی آپشن ہی نہ ہو۔ ہم پارلیمنٹ کے ساتھ سڑکوں پر بھی مقابلہ کریں گے۔

اسد قیصر کا کہنا تھا کہ رات کو ہمارے رکن اسمبلی معظم جتوئی کو ناجائز طور پر اٹھایا گیا ہے، رکن قومی اسمبلی جمشید دستی کے گھر کا تقدس بھی پامال کیا گیا، ہمارے ایم این اے امیر سلطان کو اٹھایا گیا جو تاحال لاپتہ ہیں، جب پارلیمنٹرینز کے ساتھ یہ رویہ ہے تو عام شہری کے ساتھ کیا ہوگا؟۔ اگر ان کے خلاف کوئی کیس ہے تو انہیں عدالت میں پیش کریں۔

سابق اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے کہا کہ ہمارے ساتھیوں کو فوری رہا کیا جائے، ہمیں دیوار سے لگانا چھوڑ دیں، ہم آئین وقانون کے تحت اپنی جدوجہد جاری رکھیں گے، اس حد تک نہ لے کر جائیں کہ ہمارے پاس کوئی آپشن ہی نہ ہو۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll