جی این این سوشل

پاکستان

سپریم کورٹ کا کراچی سرکلر ریلوے نو ماہ میں مکمل کرنے کا حکم

اسلام آباد: سپریم کورٹ نے کراچی سرکلر ریلوے نو ماہ میں مکمل کرنے کا حکم دے دیا ۔چیف جسٹس نے کہا کہ منصوبے کا کام ایف ڈبلیو او کے حوالے کردیا گیا ہے، وزیراعلیٰ کی رپورٹ میں لکھا ہے کہ انہیں کچھ نہیں آتا۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

سپریم کورٹ کا کراچی سرکلر ریلوے نو ماہ میں مکمل کرنے کا حکم
سپریم کورٹ کا کراچی سرکلر ریلوے نو ماہ میں مکمل کرنے کا حکم

جی این این کے مطابق سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں سرکلرریلوے سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی۔ چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ ٹریک سے تجاوزات ختم ہوگئے تو کیا رکاوٹ ہے؟سیکریٹری ریلوے نے عدالت کو بتایا کہ کے سی آر کا کراچی سٹی سے ڈرگ روڈ تک ٹرین روٹ آپریشنل ہے تاہم اس وقت ناظم آباد پر گرین لائن کا ٹریک رکاوٹ بن رہا ہے اور وہاں انڈر پاس یا فلائی اوور بنے گا۔ریلوے کے وکیل نے بتایا کہ گلشن اقبال بلاک فور میں نالہ درمیان میں آرہاہے۔

سیکریٹری ریلوے نے عدالت کو بتایا کہ کنٹریکٹ ایف ڈبلیو او کے حوالے کردیا گیا ہے۔ ایف ڈبلیو او کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ سندھ حکومت نے ہمیں ابھی تک ٹھیکہ نہیں دیا۔سیکریٹری ٹرانسپورٹ نے کہا کہ کابینہ سے منظوری لے کرورک آرڈر دے دیا گیا ہے۔۔۔ پچیس ملین روپے ایڈوانس پری فزیبیلیٹی کیلئے مانگا گیا تھاجو ادا کردیا گیا ہے۔۔ چیف جسٹس گلزار احمد نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ ایف ڈبلیو او کو پیسے بنانے کیلئے یہ کام نہیں دیا گیا ہے ،یہ مفاد عامہ کا کام ہے اور پیسے مانگے جا رہے ہیں ،جسٹس اعجاز الاحسن نے کہا کہ پچیس ملین جس کام کیلئے لیے تھے وہ تو کرلیتے ۔ 

کمانڈنگ افسر ایف ڈبلیو او نے عدالت کو بتایا کہ ہم سندھ حکومت اور ریلوے کو چار آپشنز دے چکے ہیں۔ اب دو آپشنز ہیں جس پر کام ہوگا۔۔ 11  انڈر پاسز اور ایک فلائی اوور بنے گا۔چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ آپ کے پاس تجربہ ہے اس کام کا ؟ خانیوال میں ریلوے کا ایک کام ملا تھا وہ آٹھ سال سے زیر التوا ہے۔۔ کمانڈنگافسر ایف ڈبلیو او نے کہا کہ وہ کام مکمل ہوچکا ہے ، مائننگ پر کام مررہے مختلف منصوبےمکمل کیے ہیں۔عدالت نے حکم دیا کہ زیادہ سے زیادہ نو ماہ میں منصوبہ مکمل کرکے ریلوےکے حوالے کیا جائے۔

 

پاکستان

ای آفس کے استعمال سے اربوں روپے بچائے جا سکیں گے، وزیراعظم

ای-آفس کے استعمال کا اصل مقصد عوام کو بہترین سروسز کی فراہمی اور حکومتی نظام میں شفافیت لانا ہے، شہباز شریف

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

ای آفس کے استعمال سے اربوں روپے بچائے جا سکیں گے، وزیراعظم

وزیراعظم شہباز شریف نے کہا کہ ای-آفس کے استعمال کا اصل مقصد عوام کو بہترین سروسز کی فراہمی اور حکومتی نظام میں شفافیت لانا ہے۔ای آفس پر منتقلی سے ملکی خزانے کے اربوں روپے بچائے جاسکیں گے۔

وزیراعظم کی زیر صدارت وفاقی حکومت کی وزارتوں اور اداروں کو الیکٹرانک-آفس (ای۔آفس) پر منتقل کرنے کے حوالہ سے اہم جائزہ اجلاس ہوا۔

وزیر اعظم کی چینی کمپنی ہواوے کے ساتھ تعاون کے معاہدے کے حوالے سے امور پر پیشرفت تیز کرنے کی ہدایت کر دی، اجلاس کو ای آفس کے نظام اور اسکے نفاذ اور اصلاحات پر پیش رفت کے حوالے سے آگاہ کیا گیا۔

وزیر اعظم آفس میڈیا ونگ سے جاری اعلامیہ کے مطابق وزیرِاعظم شہباز شریف کی زیرِ صدارت وفاقی حکومت کے دفاتر و اداروں میں ای آفس کے نفاذ کے حوالے سے اہم جائزہ اجلاس ہفتہ کو اسلام آباد میں منعقد ہوا۔  اجلاس کے شرکاء سے گفتگو کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ ای-آفس کے استعمال کا اصل مقصد عوام کو بہترین سروسز کی فراہمی اور حکومتی نظام میں شفافیت لانا ہے۔

انہوں نے کہا کہ کاغذ کا استعمال کم سے کم ہونے سے ماحول پر بھی مثبت اثرات مرتب ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ ای آفس پر منتقلی سے ملکی خزانے کے اربوں روپے بچائے جاسکیں گے۔ وزیراعظم نے ہدایت کی کہ ای آفس کو استعمال میں آسان اور محفوظ بنایا جائے۔ وزیر اعظم نے چینی کمپنی ہواوے کے ساتھ تعاون کے معاہدے کے حوالے سے امور پر پیشرفت تیز کرنے کی بھی ہدایت کی۔

اجلاس کو ای آفس کے نظام اور اسکے نفاذ اور اصلاحات پر پیش رفت کے حوالے سے آگاہ کیا گیا۔ بریفنگ کے دوران اجلاس کو بتایا گیا کہ ای-آفس کے نفاذ کی کامیابی جانچنے کے حوالے سے کی-پرفارمینس انڈیکیٹرز ترتیب دئے جا رہے ہیں، نیشنل انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ کی اوورہالنگ پر کام کا آغاز ہو چکا ہے۔

اجلاس میں وفاقی وزیرِ اقتصادی امور احد خان چیمہ، وزیرِ مملکت برائے انفارمیشن ٹیکنالوجی شزہ فاطمہ خواجہ،وزیراعظم کے کوارڈینیٹر رانا احسان افضل اور متعلقہ اعلی حکام بھی شریک تھے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

عید قربان: جانوروں کی قیمتیں آسمان سے باتیں کرنے لگیں

قربانی کے دن نزدیک آتے ہی چھریاں چاقو تیز کرنے والوں کی بھی چاندی ہو گئی ہے جہاں شہریوں سے منہ مانگی قیمتیں وصول کی جارہی ہیں

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

عید قربان: جانوروں کی قیمتیں آسمان سے باتیں کرنے لگیں

عید قربان میں 2روز باقی رہ گئے ہیں۔ ملک کے مختلف شہروں میں منڈیاں تو سج گئیں لیکن ان منڈیوں میں خریداروں کا تناسب بہت کم نظر آتا ہے، منڈیوں میں جانور تو بہت ہیں لیکن خریدار کم ہیں۔

 عید میں بہت تھوڑے دن رہ جانے کے باوجود زیادہ رش نہیں۔ منڈی میں خریداروں کے کم ہونے کی وجہ جانورں کی آسمان سے باتیں کرتی قیمتیں ہیں جس سے خریدار پریشان ہیں جب کہ بیوپاری منڈی میں آنے والے اخراجات اور جانوروں کے مہنگے چارے کا رونا روتے نظر آرہے ہیں۔

مہنگائی کے باعث ابھی گاہک بکروں ، دنبوں اور بیلوں کے آسمان سے باتیں کرتے نرخ پوچھ کر واپس چلے جاتے ہیں اور اس طرح زیادہ تر لوگ عید سے ایک روز قبل دوبارہ منڈی مویشیاں کا رخ کریں گے۔

اجتماعی قربانی کرنے والے افراد اور اداروں کی طرف سے بکنگ کا سلسلہ جاری ہے جو اس کی روشنی میں ہی جانوروں کی خریداری کریں گے۔

دوسری جانب قربانی کے دن نزدیک آتے ہی چھریاں چاقو تیز کرنے والوں کی بھی چاندی ہو گئی ہے جہاں شہریوں سے منہ مانگی قیمتیں وصول کی جارہی ہیں۔ 

پڑھنا جاری رکھیں

علاقائی

پنجاب اور بلوچستان کے سرحدی علاقوں میں زلزلے کے جھٹکے

زلزلے کی شدت 4.2تھی اور زلزلے کا مرکز سبی سے 177کلو میٹر شمال مشرق میں تھا

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پنجاب اور بلوچستان کے سرحدی علاقوں میں زلزلے کے جھٹکے

پنجاب اور بلوچستان کے سرحدی علاقوں میں زلزلے کے جھٹکے محسوس کیے گے ہیں۔

زلزلہ پیما مرکز کے مطابق کوہلو، بارکھان، فورٹ منرو اور ڈیرہ بگٹی میں زلزلے کے جھٹکے محسوس کئے گئے۔ زلزلے کی شدت 4.2تھی اور زلزلے کا مرکز سبی سے 177کلو میٹر شمال مشرق میں تھا۔زلزلے کی گہرائی 149 کلو میٹر تھی۔

واضح رہے کہ اس میں کوئی جانی نقصان کی اطلاع موصول نہیں ہوئی اس زلزلے کے جھٹکوں سے لوگوں میں کافی خوف وحراس پایا گیا ہےاور لوگ کلمہ کا ورد کرتے گھروں سے باہر نکل آئے ۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll