جی این این سوشل

پاکستان

بجلی کے نرخوں میں 2.31 روپے فی یونٹ کمی

اطلاق کے الیکڑک اور لائف لائن کے صارفین پر نہیں ہوگا

پر شائع ہوا

کی طرف سے

بجلی کے نرخوں میں 2.31 روپے فی یونٹ کمی
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

پاکستان

سپریم کورٹ کاجو فیصلہ نہ ماننےوالوں پر آرٹیکل 6 لگایاجائے،شیخ رشید

آئین اورقانون نہیں ہوگاتوپھرجنگل کاقانون ہوگا،سربراہ عوامی مسلم لیگ

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

سپریم کورٹ کاجو فیصلہ نہ ماننےوالوں پر  آرٹیکل 6 لگایاجائے،شیخ رشید

عوامی مسلم لیگ کے سربراہ اور سابق وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید نے کہا ہے کہ سپریم کورٹ کاجو فیصلہ نہ مانےاس پر آرٹیکل 6 لگایاجائے۔

اپنے ٹویٹ میں شیخ رشید نے لکھا کہ الله نےسپریم کورٹ کےموجودہ بینچ کو یہ موقع دیاہےکہ وہ پاکستان کو موجودہ سنگین بحران سےنکالے1997کےسجاد شاہ والےحالات سپریم کورٹ میں پیداکیےجارہے ہیں لیکن اس مرتبہ اس کانتیجہ خوفناک اورتشویشناک ہوگا۔

شیخ رشید کا کہنا تھا کہ نااہل لوگ اپنےآپکو اہل کروانےکےلیےچارٹرجہاز پر بِکنےاوربکنےوالےممبروں کولارہےہیں۔ رات کےاندھیرے میں لینڈکرنےوالےچوروں اورمنی لانڈرز کواس ملک کاذمہ داربنادیاگیاہے

انہوں نے کہا کہ سپریم کورٹ کو تقسیم کرنا جمہوری غداری ہوگی آئی ایم ایف اورڈونرکاحکومت پراعتمادختم ہوچکاہے۔ سعودی ارب میں تحریری معافی لندن میں بیماری کا بہانہ بنا کر گئے

سابق وفاقی وزیر نے مزید کہا کہ اگرسپریم کورٹ کہےتوالیکشن کی شرط پراورسیزپاکستانی20ارب روپےڈونیشن دینےکوتیار ہیں آئین اورقانون نہیں ہوگاتوپھرجنگل کاقانون ہوگا۔90دن میں انتخابات نہ ہوئےتوکوئی ضمانت نہیں کہ ماسٹر لال اکتوبرمیں بھی انتخاب کرائےگا،چھینا چھپٹی خانہ جنگی لوٹ مارہوگی کوئی بچانےوالانہیں ہوگا

پڑھنا جاری رکھیں

جرم

لاہور:پولیس نے جعلی اسناد،اشٹام پیپراورٹکٹیں بنانے کی فیکٹری پکڑلی

پولیس حکام نے بتایا کہ گرفتارملزمان میں شیردل خان اورتوقیرالیاس شامل ہیں۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

لاہور:پولیس نے جعلی اسناد،اشٹام پیپراورٹکٹیں بنانے کی فیکٹری پکڑلی

لاہورکے علاقےغازی آباد میں پولیس نے اربوں روپے کا فراڈ پکڑ لیا،جعلی اسناد،اشٹام پیپراورٹکٹیں بنانے کی فیکٹری پکڑلی گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق غازی آباد کے علاقے میں کارروائی کرتے ہوئے پولیس نےجعلی اسناد، جعلی اشٹام پیپر، جعلی ٹکٹیں بنانے کی فیکٹری پکڑی لی، اور دو ملزموں کو گرفتارکرلیا۔

پولیس کے مطابق کروڑوں روپےکے جعلی ایل ڈی اے کے کاغذات اوردیگرسرکاری دستاویزات بھی برآمد ہوئی ہیں،پولیس نے سکینر، فوٹو کاپی مشینیں اوردیگر سامان قبضے میں لے لیا۔

پولیس حکام نے بتایا کہ گرفتارملزمان میں شیردل خان اورتوقیرالیاس شامل ہیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

گریٹر ڈائیلاگ ناگزیر ہے ،وفاقی وزیر داخلہ رانا ثنا اللہ

ملک اس وقت افراتفری اور انارکی کے دہانے پر کھڑا ہے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

گریٹر ڈائیلاگ ناگزیر ہے ،وفاقی وزیر داخلہ رانا ثنا اللہ

اسلام آباد: وفاقی وزیر داخلہ رانا ثنا اللہ خان نے کہا ہے کہ قانون سازی کرنا پارلیمان کا اختیار ہے اس کے لئے کسی سے اجازت درکار نہیں ہوتی، اب معاملات کو حل کرنے کے لئے گریٹر ڈائیلاگ کی ضرورت ہے۔

حکومت، اپوزیشن، اسٹیبلشمنٹ اور عدلیہ ملکر میثاق جمہوریت، امن اور معیشت کے لئے بات کریں اسکے بعد ملک ترقی ،معیشت بہتری اور لوگوں کی مشکلات حل ہوسکتی ہیں ۔

وہ جمعرات کو سپریم کورٹ کے باہر صحافیوں سے گفتگو کر رہے تھے۔ وفاقی وزیر داخلہ رانا ثنا اللہ خان نے کہا کہ ملک اس وقت افراتفری اور انارکی کے دہانے پر کھڑا ہے ،اس کے لئے عمران خان نے 10 سال محنت کی ہے، جب حکومت میں رہے تو ملک کی معیشت کا بھٹہ بیٹھا دیا۔

انہوں نے کہاکہ اب معاملات کو حل کرنے کے لئے گریٹر ڈیبٹ اور ڈائیلاگ کی ضرورت ہے جس میں حکومت اور اپوزیشن کی تمام جماعتیں مل بیٹھ کر چارٹر آف ڈیموکریسی، معیشت اور امن ہو اسی سے ملک بہتری کی طرف اور ملک مشکلات سے نکل سکتا ہے اور ملک کا سیاسی ٹمپریچر کم ہوسکتا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ چیف جسٹس سپریم کورٹ اور معزز بینچ کی رائے کی قدر کرتے ہیں اس کے لئے وہ لائحہ اختیار کرنا چاہیے جس سے ملک میں بہتری آسکے ۔ انہوں نے کہا کہ دہشت گردی قابو سے باہر نہیں ہوئی، ہماری مسلح افواج میں یہ صلاحیت ہے کہ وہ دہشت گردوں کے عزائم کو ناکام بنائیں اس کے لئے وہ جانوں کا قربانیاں دے رہے ہیں اس وقت ملک کا ایک انچ بھی ایسا نہیں ہے جہاں ریاست کی رٹ برقرار نہ ہو ۔

انہوں نے کہاکہ ایک فریق پچھلے 10 سال سے اپنے مخالفین کے وجود کو ختم کرنے کے لئے جدوجہد کر رہا ہے ، وہ کہتا ہے کہ اپوزیشن سے ہاتھ بھی نہیں ملانا جب تک یہ رویہ ختم نہیں ہوتا بات آگے نہیں بڑھ سکتی ۔

انہوں نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ اگر الیکشن کی تاریخ دیدی جائے تو پھر مذاکرات کس چیز کے لئے ہونگے ، پہلے معیشت پر بات ہوگی اسکے بعد سیاسی ٹمپریچر کو کم کریں گے پھر الیکشن کی طرف جائیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ جب مل بیٹھے گے تو اس میں تمام امور پر بات ہوگی ۔ وزیر داخلہ نے کہا کہ پارلیمنٹ قانون سازی کا اختیار پارلیمنٹ کو ہے اس کے لئے کسی سے اجازت نہیں لینی ہوتی ۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll