جی این این سوشل

پاکستان

ہم نے اپنا پورا ملک گروی رکھ دیا ہے، ہمیں سپر پاورز کا آلہ کار بننے کا شوق بڑا پرانا ہے:وزیردفاع

اسلام آباد: وزیر دفاع خواجہ محمد آصف نے کہا ہے کہ پشاور پولیس لائنز دھماکہ سانحہ اے پی ایس سے کم نہیں، اس وقت بھی تمام سیاستدان اکھٹے ہوئے تھے، اس وقت بھی قوم کو تمام تر اختلافات کے باوجود اتفاق رائے کی ضرورت ہے۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

ہم نے اپنا پورا ملک گروی رکھ دیا ہے، ہمیں سپر پاورز کا آلہ کار بننے کا شوق بڑا پرانا ہے:وزیردفاع
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

قومی اسمبلی میں خطاب کرتے ہوئے پاکستان مسلم لیگ (ن) کے مرکزی رہنما خواجہ آصف نے کہا کہ دہشت گردوں کے خلاف آپریشن کا فیصلہ نیشنل سیکیورٹی کمیٹی کرسکتی ہے، امید ہے وزیراعظم آپریشن ضرب عضب جیسا کوئی فیصلہ کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف ضرب عضب آپریشن جیسا اتفاق رائے پیداکرنے کی ضرورت ہے، 2015 سے 2017 تک دہشت گردی کے خلاف بھرپور جنگ لڑی گئی، پیپلز پارٹی کے دور میں یہ جنگ سوات سے شروع ہوئی، دہشت گردی کے مسئلے پر اسی ہال میں ہمیں بریفنگ دی گئی۔

خواجہ آصف نے کہا کہ بریفنگ میں کہا گیا ان سے بات چیت ہو سکتی ہے اور یہ امن پر آ سکتے ہیں، مختلف آرا سامنے آئیں لیکن کوئی فیصلہ سامنے نہیں آ سکا، کل کے سانحے میں 100 کے قریب شہادتیں ہوئیں، مسجد میں نماز کے وقت اگلی صف میں دہشت گرد کھڑا تھا، کئی لوگ ملبے تلے دب گئے جنہیں آج دوپہر تک بھی نکالا گیا۔

وزیر دفاع نے کہا کہ کل وزیراعظم اور آرمی چیف بھی پشاور گئے، انہیں بریفنگ دی گئی، دہشت گردی کے بیج ہم نے خود بوئے ہیں، افغانستان میں روس نے مداخلت کی تو ہم نے اپنی سروسز کرائے پر دیدیں، امریکہ کے واپس جانے کے بعد ہم 10 سال تک ان حالات سے نمٹتے رہے، وہ 10 سال گزرے نائن الیون آ گیا، پریڈ لین کی مسجد میں جو کچھ ہوا وہ سب کو یاد ہو گا۔

خواجہ آصف نے قومی اسمبلی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ چن چن کے وہ بچے شہید کئے گئے جن کے والد سوات آپریشن میں حصہ لے رہے تھے، ایک دو سال پہلے ان لوگوں کو یہاں لا کر بسانا تباہ کن فیصلہ ثابت ہوا،
دہشت گردوں کا کلمے یا دین کے ساتھ کوئی تعلق نہیں، عبادت کے وقت حملہ ہمارے دشمن ممالک میں بھی نہیں ہوتا۔

انہوں نے کہا کہ ہم نے ڈیڑھ دو سال قبل جو بھی فیصلے کئے تھے وہ اس ہاؤس نے قبول نہیں کئے تھے، کل پشاور میں بہائے جانے والے خون کا حساب کون دے گا؟ یہ کون بتائے گا کہ کون آکر لوگوں کے پیاروں کی جان لے گیا؟

وزیر دفاع خواجہ آصف نے کہا کہ اس واقعے کی جتنی مذمت کی جانی چاہئے اتنی آواز نہیں آ رہی، دہشت گردی کے خلاف ساری قوم کو متحد ہونا چاہیے، اس جنگ میں کوئی لکیر نہیں کھینچی گئی، دہشت گردی کسی مذہب یا فرقے کی پہچان نہیں رکھتی، ایوان میں اس مسئلے پر صرف تقریر نہیں ہونی چاہیے، ہماری افواج نے بے پناہ قربانیاں دی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ہم نے دہشت گردی کے خلاف جنگ پر 126 ارب ڈالرز لگا دیا، فوج اور سول افراد کی 83 ہزار قربانیاں ہیں، اب تو ہم آپس میں بھی دہشت گردی کرتے ہیں، اب تو سیاست، زبان اور اعمال کی بھی دہشت گردی آگئی ہے، پچھلے پانچ سال میں عوام کا جس طرح مزاج بدلا اس کی گواہی سوشل میڈیا سے مل جائے گی، پاکستان میں آج کل ایک شخص باؤلا ہوگیا ہے، کبھی کہتا ہے کہ خطرناک ہوجاؤں گا اور کبھی کچھ اور ہوجائے گا۔

وزیر دفاع نے قومی اسمبلی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ 126 بلین ڈالرز ہم نے کھویا ہے جب کہ ہم ہی  400 اور 500 ملین ڈالرز کیلئے ساری دنیا میں بھیک مانگتے ہیں۔

خواجہ آصف نے کہا کہ ہم نے اپنا پورا کا پورا ملک گروی رکھ دیا ہے، ہمیں سپر پاورز کا آلہ کار بننے کا شوق بڑا پرانا ہے، ہمیں خود احتسابی کی ضرورت ہے، ہمیں امریکہ کے کہنے پر جنگ نہیں لڑنی چاہیے، چاہتے ہیں امریکہ کے ساتھ اچھے تعلقات ہوں مگر ان کی باتوں پر عمل نہیں کرنا چاہیے۔

پاکستان

پاکستان سری لنکن طلباء کو طبی اور مذہبی شعبوں میں پیشہ ورانہ تربیت فراہم کرے گا

سری لنکا کے وزیر مذہبی ودورا وکرمانائیکے نے کہا کہ سری لنکن نوجوانوں کے لیے پاکستان میں سیاحت کے شعبے میں بھی مواقع پیدا کیے جانے چاہئیں

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پاکستان سری لنکن طلباء کو طبی اور مذہبی شعبوں میں پیشہ ورانہ تربیت فراہم کرے گا

اسلام آباد: مذہبی امور اور بین المذاہب ہم آہنگی کے وزیر چوہدری سالک حسین نے بدھ کے روز کہا کہ پاکستان سری لنکن طلباء کو طبی اور مذہبی شعبوں میں پیشہ ورانہ تربیت فراہم کرے گا۔

سری لنکا کے مذہبی اور ثقافتی امور کے وزیر ودورا وکرمانائیکے سے گفتگو کرتے ہوئے جنہوں نے اسلام آباد میں ان سے ملاقات کی، انہوں نے کہا کہ سری لنکا کے طلباء کے لیے وظائف کی تعداد میں بھی اضافہ کیا جا رہا ہے۔

چوہدری سالک حسین نے معزز مہمان کو بتایا کہ پاکستان میں گندھارا ثقافت، فن اور ڈھانچے کو محفوظ کیا جا رہا ہے۔

انہوں نے روشنی ڈالی کہ پاکستان حسن ابدال میں سکھوں اور دیگر مذاہب کے بہت سے مقدس مقامات کی دیکھ بھال کر رہا ہے۔

سری لنکا کے وزیر مذہبی ودورا وکرمانائیکے نے کہا کہ سری لنکن نوجوانوں کے لیے پاکستان میں سیاحت کے شعبے میں بھی مواقع پیدا کیے جانے چاہئیں۔

چوہدری سالک حسین سے قازقستان کے سفیر یرژان کستان فان نے بھی ملاقات کی اور باہمی دلچسپی کے امور اور دو طرفہ تعلقات پر تبادلہ خیال کیا ، ملاقات میں دوطرفہ تعلقات کو مزید فروغ دینے اور پاکستانی طلباء کا ڈیٹا قازقستان کے ساتھ شیئر کرنے پر اتفاق کیا گیا تاکہ تشدد کا کوئی واقعہ نہ ہو ،  انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک میں ایئرلائن کے کاروبار میں بڑی صلاحیت ہے اور قازقستان کی ایئر لائن پاکستان کے ساتھ رابطے کا ذریعہ بن سکتی ہے۔

قازقستان کے سفیر نے کہا کہ اسلامو فوبیا سے نمٹنا مسلم ممالک کی ترجیحات میں شامل ہے۔ انہوں نے کہا کہ قازقستان آئندہ ماہ ایک مذہبی کانفرنس منعقد کرنے کی تیاری کر رہا ہے اور امید ظاہر کی کہ کانفرنس میں پاکستان کی شرکت سے مذہبی مکالمے کو تقویت ملے گی۔

پڑھنا جاری رکھیں

دنیا

فرانس کی قانون ساز اسمبلی میں فلسطینی پرچم لہرانے سے رکن کی رکنیت معطل

جھنڈا تھامے فرانسیسی رکن اسمبلی نے بآواز بلند فلسطینیوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کیا اور اسرائیل کی مذمت کی

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

فرانس کی قانون ساز اسمبلی میں فلسطینی پرچم لہرانے سے رکن کی رکنیت معطل

فرانس کی قانون ساز اسمبلی میں فلسطین کی حمایت کرنے اور پرچم لہرانے پر بائیں بازو سے تعلق رکھنے والے پارلیمنٹیرین کی رکنیت 2 ہفتوں کے لیے معطل کر دی گئی۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق فرانس کی پارلیمنٹ میں فلسطینی ریاست کو تسلیم کرنے کے معاملے پر گرما گرم بحث ہوئی جس کے دوران بنیاد پرست بائیں بازو کی جماعت ‘فرانس انبوڈ’ کے رکن اسمبلی سیبسٹین ڈیلوگو اپنی نشست پر کھڑے ہوئے اور فلسطین کا جھنڈا لہرادیا۔

جھنڈا تھامے فرانسیسی رکن اسمبلی نے بآواز بلند فلسطینیوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کیا اور اسرائیل کی مذمت کی۔ اسپیکر بار بار بیٹھنے کا کہتی رہیں لیکن رکن اسمبلی نے اپنی بات جاری رکھی۔

ایوان کی خاتون اسپیکر، یئل بران پیویٹ نے فلسطینی پرچم لہرانے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ پارلیمنٹ میں یہ رویہ ناقابل قبول ہے جس پر اُن کی 2 ہفتے کے لیے رکنیت معطل کی جاتی ہے۔

اسپیکر نے فلسطینی پرچم لہرانے والے رکن اسمبلی کے پارلیمانی الاؤنس کو بطور جرمانہ 2 ماہ کی مدت کے لیے نصف کردیا۔

یاد رہے کہ اسپین، آئرلینڈ اور ناروے نے باضابطہ طور پر فلسطینی ریاست کو تسلیم کرلیا جس کے بعد فرانس میں بھی فلسطین کو تسلیم کرنے کی رائے عامہ ہموار ہوئی ہے۔

فرانسیسی صدر ایمانوئل میکرون نے فروری میں کہا تھا کہ فلسطینی ریاست کو تسلیم کرنا اب ’ممنوع‘ نہیں رہا۔ اب تک اقوام متحدہ کے 193 رکن ممالک میں سے 145 نے فلسطینی ریاست کو تسلیم کرلیا ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

پنجاب اسمبلی کے سامنے اساتذہ و ملازمین کا شدید احتجاج

اساتذہ نے احتجاج کی کال دیتے ہوئے کہا کہ حکومت نے تعلیمی اداروں کی پیف کو حوالگی کا عمل نہ روکا تو پنجاب بھرمیں احتجاج کیا جائے گا

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پنجاب اسمبلی کے سامنے  اساتذہ و ملازمین کا شدید احتجاج

 

لاہور : پنجاب اسمبلی لاہور کے سامنے آل گورنمنٹ ایمپلائز گرینڈ الائنس پاکستان کے مرکزی صدرکی  قیادت میں سینکڑوں اساتذہ و ملازمین نے تعلیمی اداروں کی پیف و این جی اوز کو حوالگی کے خلاف ، تنخواہوں والاونسز میں 100 فیصد اضافہ ، زیر التواء نیشنل ہیلتھ ملازمین کی آپ گریڈیشن اور حسب وعدہ لیو انکیشمنٹ نوٹیفکیشن کو ڈی نوٹیفائی نہ کرنے پر پر امن احتجاج کیا ۔

اساتذہ اپنے مطالبات کے حق میں شدید نعرہ بازی کرتے رہے اور سیکرٹری سکول پنجاب دفتر 11 - لارنس روڈ تک احتجاجی ریلی نکالی اور ایک گھنٹہ تک احتجاج کرتے رہے اس موقع پر مقررین کا کہنا تھا کہ حکومت اساتذہ بھرتی کرنے کے بجائے تعلیمی اداروں کو ٹھیکے پر دینے کے لیے تلی ہوئی ہے ٹھیکیداری نظام سے نظام تعلیم تباہ و برباد ہو جائے گا پیف اور پیما دونوں ناکام ہو چکے ہیں۔

اساتذہ نے مہنگائی پر بات کرتے ہوئے کہا کہ مہنگائی آسمان کو چھو رہی ہے جبکہ مہنگائی میں کمی کے دعوے کئے جا رہے ہیں لہذا تنخواہوں میں 100 فیصد اضافہ کیا جائے ، لیو انکیشمنٹ کا نوٹیفکیشن حسب وعدہ ڈی نوٹیفائی کیا جائے اور نیشنل ہیلتھ ملازمین کی زیر التواء آپ گریڈیشن فی الفور نمٹایا جائے۔

اساتذہ نے احتجاج کی کال دیتے ہوئے کہا کہ حکومت نے تعلیمی اداروں کی پیف کو حوالگی کا عمل نہ روکا تو پنجاب بھرمیں احتجاج کیا جائے گا دفاتر ، سکولوں اور کالجوں کی تالہ بندی کریں گے۔7 جون کو وفاقی بجٹ کے موقع پر پارلیمنٹ ہاؤس اسلام آباد کے سامنے آل گورنمنٹ ایمپلائز گرینڈ الائنس پاکستان کے زیر انتظام احتجاج کیا جائے گا۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll