جی این این سوشل

پاکستان

عمران خان کا 18 مارچ کو عدالت میں پیش ہونے کا فیصلہ

تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے توشہ خانہ کیس میں 18 مارچ کو پیش ہونے کا فیصلہ کرلیا۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

عمران خان کا 18 مارچ کو عدالت میں پیش ہونے کا فیصلہ
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

لاہور میں سینئر صحافیوں سے ملاقات کے دوران عمران خان نے کہا کہ قانون کی حکمرانی اورعملدرآمدپریقین رکھتاہوں،18 مارچ کو عدالت میں پیش ہونے کا فیصلہ کیا ہے۔

انہوں نے کہاہے کہ میری گرفتاری عدالت میں پیش ہونےکیلئےنہیں مجھےمارنے کیلئےہے،جب کہہ دیاتھاکہ عدالت پیش ہونگاتومعلوم نہیں پھرساراڈرامہ کیوں رچایاجارہاہے،یہ مجھےاس جگہ بلارہےہیں جس کےبارےمیں مجھے سیکورٹی خدشات ہیں۔

چیئرمین پی ٹی ا ٓئی نے کہا عدالت میں پیش ہونےسےکبھی انکارنہیں کیا۔

چیئرمین پی ٹی آئی نے کہا کہ انتخاب کسی صورت90دن سےآگےنہیں جانےدیں گے،انتخابات90 روزسےآگےگئےتوپھرآئینی تحریک چلائیں گے،کسی صورت آئین کی خلاف ورزی کرکےانتخابات آگےجانے نہیں دیں گے۔

عمران خان نے کہامیرےکارکن غصےکاشکارہیں،کارکن مجھےبارباریہ کہہ رہےکہ آپ کیوں باربارقانون پر عملدرآمدکی رٹ لگائےہوئےہیں۔

دنیا

امریکی صدر جوبائیڈن کا عید الاضحیٰ کے موقع پر پیغام

امریکہ کی حمایت سے تیار کی گئی جنگ بندی تجویز پر عمل کیا جانا چاہیے، بائیڈن

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

امریکی  صدر جوبائیڈن کا عید الاضحیٰ کے موقع پر پیغام

امریکہ کے صدر جوبائیڈن نے مسلمانوں کے مذہبی تہوار عید الاضحیٰ کے موقع پر جاری کیے گئے پیغام میں اس امر پر زور دیا ہے کہ امریکہ کی حمایت سے تیار کی گئی جنگ بندی تجویز پر عمل کیا جانا چاہیے۔

سوشل میڈیا پلیٹ فارم ایکس پر اپنے ٹویٹ میں امریکی صدر نے کہا کہ اس جنگ بندی تجویز پر عمل سے ہی شہریوں کے جنگی مصائب سے نکلنے میں مدد دی جا سکتی ہے کیونکہ اسرائیل اور حماس کے درمیان جنگ کی خوف ناکی سے بچ سکتے ہیں۔

جوبائیڈن نے مزید کہا اس جنگ میں بہت سے معصوم لوگ مارے جا چکے ہیں جن میں ہزاروں کی تعداد میں بچے بھی شامل ہیں۔ بہت سے لوگوں کو اپنے گھروں کو چھوڑنا پڑا ہے۔ ان کی درد غیر معمولی ہے۔میں یقین رکھتا ہوں کہ اسرائیل کی طرف سے حماس کو پیش کیا گیا تین مراحل پر مشتمل جنگ بندی منصوبہ تشدد کے خاتمے کا بہترین راستہ ہے۔ اس کی سلامتی کونسل نے بھی تائید کی ہے۔

تاہم یہ نئی بات ہے کہ امریکی صدر اپنے پیش کردہ یا خود سے منسوب کیے گئے جنگ بندی منصوبے کو اسرائیل کی طرف سے حماس کو پیش کیا گیا منصوبہ قرار دے رہے ہیں۔ اس دوران حماس کی طرف سے پیش کردہ ترامیم کا بھی ذکر کیے بغیر اسی منصوبے کو بہترین راستہ قرار دیا ہے۔

اپنے پیغام میں مسلم کمیونٹی کے حقوق کے لیے امریکی کوشش کو اجاگر کیا ، خصوصاً جو مسلمان مظالم کا شکار ہیں۔ ان میں برما اور چین میں ہیں اور ریاستی جبر کا سامنا کر رہے ہیں۔ میری انتظامیہ اسلامو فوبیا کے خلاف کام کر رہی ہے۔' یاد رہے اسلامو فوبیا مسلم اور اسلام دشمنی کی ایک ملفوف اصطلاح ہے۔ یہ اس کے باوجود ہے کہ امریکہ میں بھی اور یورپ میں بھی اسلامو فوبیا کا مسلمانوں کو نشانہ بنایا جاتا ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

جرم

لاڑکانہ: پولیس اہلکار نے پرانی دشمنی پر قیدی کو قتل کر دیا

جاں بحق ہونے ہونے والے قیدی علی رضا نے قاتل اہلکار کے ماموں کو قتل کیا تھا، جیل حکام

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

لاڑکانہ: پولیس اہلکار نے پرانی دشمنی پر قیدی کو قتل کر دیا

صوبہ سندھ کے علاقے لاڑکانہ کی سینٹرل جیل میں پرانی دشمنی پرقیدی کو قتل کردیا گیا۔

انتظامیہ کے مطابق پولیس کانسٹیبل حسین چانڈیو نے قیدی علی رضا چانڈیو کو گولیاں مار کے قتل کیا ، جاں بحق ہونے ہونے والے قیدی علی رضا نے قاتل اہلکار کے ماموں کو قتل کیا تھا۔

جیل انتظامیہ نے بتایا کہ قاتل اہلکار جیل میں ڈیوٹی پر تعینات تھا ، اہلکار حسین چانڈیو پستول چھپا کے جیل کے اندر لے گیا، فائرنگ کرنے والے اہلکار حسین چانڈیو کو حراست میں لے لیا گیا ، قاتل اہلکار حسین چانڈیو ایک سال قبل جیل پولیس میں بھرتی ہوا تھا ۔

جیل حکام کے مطابق مقتول قیدی کی لاش کو جیل ہسپتال منتقل کردیا گیا ، جوڈیشل مجسٹریٹ کی آمد کے بعد لاش کو ورثا کے حوالے کیا جائے گا۔

پڑھنا جاری رکھیں

دنیا

اسرائیلی فوج کا غزہ کے چند حصوں میں فوجی سرگرمیوں میں وقفے کا اعلان

انسانی ہمدردی کے مقاصد کے لیے فوجی سرگرمیوں کا مقامی، حکمت عملی سے وقفہ ہر روز صبح 8:00 بجے سے لے کر شام 7بجے تک جاری رہے گا

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

اسرائیلی فوج کا غزہ کے چند حصوں میں فوجی سرگرمیوں میں وقفے کا اعلان

اسرائیلی فوج نےاعلان کیا کہ وہ امداد کی ترسیل کو آسان بنانے کے لیے جنوبی غزہ کی پٹی کے چندحصوں میں روزانہ فوجی سرگرمیاں روکنے کا نفاذ کرے گی۔

فوج نے ایک بیان میں کہا کہ انسانی ہمدردی کے مقاصد کے لیے فوجی سرگرمیوں کا مقامی، حکمت عملی سے وقفہ ہر روز صبح 8:00 بجے سے لے کر شام 7بجے تک جاری رہے گا۔مزید کہا گیا کہ یہ فیصلہ اقوام متحدہ اور دیگر تنظیموں کے ساتھ بات چیت کے بعد غزہ کی پٹی میں داخل ہونے والی انسانی امداد کے حجم کو بڑھانےکی کوششوں کے ایک حصے کے طور پر لیا گیا ہے۔

بیان میں کہا گیا کہ یہ فیصلہ اقوام متحدہ اور دیگر تنظیموں کے ساتھ بات چیت کے بعد غزہ کی پٹی میں داخل ہونے والی انسانی امداد کے حجم کو بڑھانے کی کوششوں کا حصہ ہے۔

اسرائیل طویل عرصے سے امدادی سامان کی فراہمی میں سہولت فراہم کرنے کی اپنی کوششوں کا دفاع کرتا رہا ہے، جس میں کریم شالوم کراسنگ بھی شامل ہے، لیکن انسانی حقوق کے گروپ کئی ماہ سے محصور فلسطینی علاقے میں خوراک اور دیگر ضروری اشیا کی شدید قلت کے بارے میں خبردار کر رہے ہیں۔

ادھر عالمی ادارہ صحت کا کہنا ہے کہ غزہ میں پانچ سال سے کم عمر کے آٹھ ہزار سے زائد بچوں کو شدید غذائی قلت کا سامنا ہے۔

بین الاقوامی ثالث اسرائیل اور حماس پر دباؤ ڈال رہے ہیں کہ وہ امریکی صدر جو بائیڈن کی جانب سے طے پانے والے جنگ بندی معاہدے پر راضی ہو جائیں تاکہ قیدیوں کے تبادلے کی اجازت دی جا سکے اور امداد کی فراہمی میں اضافہ کیا جا سکے، لیکن حالیہ دنوں میں یہ پیش رفت رک گئی ہے۔

ورلڈ فوڈ پروگرام کے ڈپٹی ایگزیکٹیو ڈائریکٹر کارل اسکو نے حال ہی میں کہا تھا کہ ’پٹی کے اندر لاقانونیت کے ساتھ  فعال تنازعے کی وجہ سے امداد کی مطلوبہ مقدار کی فراہمی تقریباً ناممکن ہو چکی ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll