جی این این سوشل

پاکستان

آئی ایم ایف معاہدے کیلئے انتہائی سخت شرائط رکھ رہا ہے،اسحاق ڈار

آئی ایم ایف پروگرام میں تاخیر حکومت کی طرف سے نہیں ہے،وفاقی وزیر خزانہ

پر شائع ہوا

کی طرف سے

آئی ایم ایف معاہدے کیلئے انتہائی سخت شرائط رکھ رہا ہے،اسحاق ڈار
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

 وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے کہا ہے کہ آئی ایم ایف معمول سے ہٹ کر معاہدے کیلئے انتہائی سخت شرائط رکھ رہا ہے، معاہدے کے حوالے سے کوئی چیز قوم سے نہیں چھپائی۔

سینیٹ کے خصوصی اجلاس میں اظہار خیال کرتے ہوئے اسحاق ڈار نے کہا کہ چند دوست ممالک نے پاکستان کو سپورٹ کرنے کے وعدے کیے تھے، اب آئی ایم ایف کہہ رہا ہے کہ وہ ان وعدوں کو مکمل کریں اور صرف یہی تاخیر کی وجہ ہے، آئی ایم ایف پروگرام میں تاخیر حکومت کی طرف سے نہیں ہے، اس بار بات چیت بہت غیرمعمولی رہی، بہت زیادہ مطالبات سامنے رکھے گئے، ہم نے ہر چیز مکمل کر لی ہے۔

وزیر خزانہ کا کہنا تھا کہ ہمیں قومی مفاد کا تحفظ کرنا ہے، کوئی بھی نیوکلیئر یا میزائل پروگرام پر سمجھوتا نہیں کرے گا، کسی کو حق نہیں کہ پاکستان کو بتائے کہ وہ کس رینج کے میزائل یا ایٹمی ہتھیار رکھے۔

 

اُنہوں نے کہا کہ میں نے ماضی میں سب سے پہلے آئی ایم ایف معاہدہ ویب سائٹ پر ڈالا تھا، اب بھی جیسے ہی آئی ایم ایف سے سٹاف لیول معاہدہ ہوگا ویب سائٹ پر ڈال دیا جائے گا، آئی ایم ایف پروگرام میں تاخیر پر بات کرتا ہوں، یہ کوئی نیا پروگرام نہیں جو اس حکومت نے کیا ہو، یہ آئی ایم ایف پروگرام 2019 میں شروع ہوا جو 2020 میں مکمل ہو جانا چاہیےتھا۔

وفاقی وزیر خزانہ کا کہنا ہے کہ 2013ء سے 2016ء تک آئی ایم ایف کا پروگرام مکمل کیا گیا تھا، لگتا ہے 2019ء میں آئی ایم ایف کے ساتھ معاملاتِ پروگرام نئی طرز کے تھے۔

اُنہوں نے کہا کہ سٹیٹ بینک اور دیگر قانون پارلیمنٹ نے منظور کیے جس کے بعد میرے خیال میں مانیٹری پالیسی بہت زیادہ آزاد ہوگئی۔

 

واضح رہے کہ پاکستان اس وقت شدید معاشی بحران کا شکار ہے، سٹیٹ بینک کے موجودہ ذخائر 4 ارب 30 کروڑ ڈالر ہیں جو بمشکل چند ہفتوں کی درآمدات کو پورا کرنے کے لیے کافی ہیں۔

ایسی صورت حال میں ملک کو فوری طور پر آئی ایم ایف کے ساتھ ایک معاہدے پر دستخط کرنے کی ضرورت ہے، جس سے نہ صرف ایک ارب 20 کروڑ ڈالر ملیں گے بلکہ دوست ممالک اور دیگر کثیر الجہتی قرض دہندگان کی جانب سے فنڈز ملنے کی راہ بھی ہموار ہو گی۔

پاکستان اور آئی ایم ایف کئی ماہ سے 7 ارب ڈالر کے آئی ایم ایف پروگرام کی بحالی کے لیے بات چیت کر رہے ہیں لیکن ابھی تک کسی معاہدے تک نہیں پہنچ سکے۔

پاکستان

انتخابی نتائج کے خلاف الیکشن کمیشن میں سماعت جا ری

 الیکشن کمیشن نے شکایت کے اندراج کے لئے وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں اپنی عمارت میں ایک سیل قائم کردیاہے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

انتخابی نتائج کے خلاف الیکشن کمیشن  میں سماعت جا ری

 الیکشن کمیشن آف پاکستان میں قومی اسمبلی اور چاروں صوبائی اسمبلیوں کے نتائج کے خلاف درخواستوں پر سماعت جاری ہے۔

 تفصیلات کے مطابق الیکشن نتائج کےخلاف 88 امیدواروں نے درخواستیں دائر کی تھیں ، الیکشن کمیشن کا کہنا ہے کہ کسی بھی درخواست کے خلاف انتقامی کا رروائی نہیں کی جائے گی ۔ 

 الیکشن کمیشن نے شکایت کے اندراج کے لئے وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں اپنی عمارت میں ایک سیل قائم کردیاہے۔

 

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

مخلوط حکومت کسی صورت ملک نہیں چلاسکے گی ،فیصل واوڈا

سابق وزیرفیصل واوڈا  نے کہا کہ پیپلزپارٹی اس قت وِِن ون پوزیشن میں ہے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

مخلوط حکومت کسی صورت ملک نہیں چلاسکے گی ،فیصل واوڈا

فیصل واوڈا  نے کہا کہ اس کی بہت سی وجوہات ہیں کہ جس کے باعث مخلوط حکومت سے ملک نہیں چل سکتا ، انہوں نے کہا کہ ملک پاکستان نے آئی ایم ایف کو 24 ارب ڈالر ادا کرنے ہیں، پاکستان  کے پاس 2 ارب ڈالر کا ذخیرہ ہے، معاملہ کیسے چلے گا، خزانے میں کوئی خاص طاقت نہیں صرف بے چینی ہے۔

فیصل واوڈا نے کہا کہ کے پی پی ٹی آئی، بلوچستان اور سندھ پیپلزپارٹی کو اور پنجاب (ن) لیگ کوملا، سب کا زور اپنے صوبوں پر ہے، جو ایکسپائرڈ اور نااہل لیڈرہیں وہ ہمارے پاس موجود ہیں، پاکستان کو برباد کر کے آباد کرنے کا نعرہ لگا کر آرہے ہیں، وہ ابھی احمقوں کی جنت میں سوچتے ہیں کہیں اگر کوئی بحران آیا تو وفاقی حکومت گر جائے گی۔


سابق وزیرفیصل واوڈا  نے کہا کہ پیپلزپارٹی اس قت وِِن ون پوزیشن میں ہے، پی ٹی آئی کو سمجھایا تھا کہ آپ اقتدار کے اندر آجائیں، جمہوری ڈھانچے کے اندر آجائیں جبکہ عمرایوب وہاں سے ٹاٹا اور بائی بائی کر رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ 16 ماہ پہلے جو کر کے گئے ہیں وہ آج کیسے ٹھیک ہوگا؟ اتحادی حکومت میں میں بندر بانٹ ہوتی ہے، آپ کا ڈی سی میرا ایس پی، آپ کا ایس پی میرا ڈی سی، یہ سب چیزیں اسٹریم لائن ہو رہی ہیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

پنجاب میں خدمت کے نئے ریکارڈ قائم کریں گے ،مریم نواز

لاہور میں مسلم لیگ ن کے پارلیمانی پارٹی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ الیکشن کےنتائج کےبعدایک دن بھی آرام نہیں کیا الیکشن کے نتائج کے بعد اگلےدن سےہی کام شروع کر دیا تھا

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پنجاب میں خدمت کے نئے ریکارڈ قائم کریں گے ،مریم نواز

نامزد وزیراعلیٰ پنجاب مریم نواز نے کہا  کہ پنجاب میں ہم خدمت کےنئے ریکارڈ قائم کر کے دکھائیں  گے۔

لاہور میں مسلم لیگ ن کے پارلیمانی پارٹی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ الیکشن کےنتائج کےبعدایک دن بھی آرام نہیں کیا الیکشن کے نتائج کے بعد اگلےدن سےہی کام شروع کر دیا تھا ، مریم نواز نے کہا کہ پارلیمانی ممبران کوانتخابات میں کامیابی پر مبارکباد دیتی ہوں انتخابات میں نوجوان قیادت بھی سامنےآئی ہےجو دل کےقریب ہیں، واضح اکثریت دینے پر پنجاب کی عوام کی بھی مشکور ہوں ہم عہد کرتے ہیں آج سے پنجاب کا ایک نیا دور شروع ہو گا۔

نامزد وزیراعلیٰ مریم نواز کا کہنا تھا کہ مجھے پنجاب کی پہلی خاتون وزیراعلیٰ ہونےکا اعزاز حاصل ہو گا یہ بہت بڑا اعزاز ہے جہاں کام ہوا اور جہاں صرف باتیں ہوئی سب کو نظر آتاہے ایک ایک فائل اورٹرانسفرپررشوت چلتی تھی، نوازشریف نےپنجاب کی ترقی کاسفر80کی دہائی میں شروع کیا اور شہبازشریف نے ترقی کی اسپیڈ کو برقرار رکھا۔

 

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll