جی این این سوشل

پاکستان

خاور مانیکا 8 روزہ جسمانی ریمانڈ پر اینٹی کرپشن کے حوالے

خاور مانیکا پر محکمہ اوقاف کی اراضی پر قبضہ کرنے کا الزام ہے

پر شائع ہوا

کی طرف سے

خاور مانیکا 8 روزہ جسمانی ریمانڈ پر اینٹی کرپشن کے حوالے
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

خاور مانیکا کو 8 روزہ جسمانی ریمانڈ پر محکمی اینٹی کرپشن کے حوالے کر دیا گیا۔ اینٹی کرپشن کےمقدمے میں نامزد ملزم خاور مانیکا کواوکاڑہ کی مقامی عدالت میں پیش کیا گیا، اینٹی کرپشن پولیس نے عدالت سے 14 روزہ جسمانی کی استدعا کی۔

عدالت نے خاور ماینیکا کا 8 روزہ جسمانی ریمانڈ منطور کرتے ہوئے انہیں اینٹی کرپشن پولیس کے حوالے کردیا۔ ریمانڈ ملتے ہی اینٹی کرپشن کی ٹیم خاور مانیکا کو لے کر ساہیوال روانہ ہوگئی۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز کاور مانیکا کو ناجائز تعمیرات کے الزام میں لاہور ائر پورٹ سے گرفتار کیا گیا تھا۔ خاور فرید مانیکا کے خلاف ڈپٹی کمشنر اوکاڑہ نے اینٹی کرپشن میں رواں سال جون میں ایک فوجداری ریفرنس دائر کیا گیا تھا۔ ریفرنس میں کہا گیا تھا کہ خاور فرید مانیکا نے محکمہ اوقاف کی زمین پر ناجائز قبضہ کیا ہوا ہے اور اس پر شادی ہال اور دکانیں تعمیر کی ہوئی ہیں۔

خاور مانیکا کا کہنا ہے کہ قبرستان کی جگہ شادی ہال بنانے کی خبر بے بنیاد ہے، تاہم دکانیں ہماری ہیں۔ عدالت پیشی کے موقع پر میڈیا سے غیر رسمی بات کرتے ہوئے خاور مانیکا کا کہنا تھا کہ میرا سیاست سے کوئی تعلق نہیں اور مجھے نہیں پتہ کہ یہ کیا اور کیوں ہورہا ہے۔

 

پاکستان

سائفر کیس، شاہ محمود قریشی کا سزا معطلی کے لئے اسلام آبادہائیکورٹ سے رجوع

شاہ محمود قریشی نے سزا معطلی کی متفرق درخواست دائر کر دی

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

سائفر کیس،  شاہ محمود قریشی کا سزا معطلی کے لئے اسلام آبادہائیکورٹ سے رجوع

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی ) کے رہنما اور سابق وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے سائفر کیس میں سزا معطل کرکے ضمانت پر رہائی کے لیے اسلام آباد ہائی کورٹ سے رجوع کر لیا۔

شاہ محمود قریشی نے سزا معطلی کی متفرق درخواست دائر کی ہے، سابق وزیر خارجہ کی جانب سے دائر درخواست میں کہا گیا ہے کہ آفیشل سیکرٹ ایکٹ کے سیکشن 9 کے تحت دی گئی سزا میں سازش یا غداری ثابت نہیں ہو سکی، بطور سابق وزیر خارجہ سائفر حفاظت کی ذمہ داری میری نہیں بلکہ پرنسپل سیکرٹری کی تھی۔

درخواست میں کہا گیا ہے کہ سپریم کورٹ اس معاملے میں پہلے ہی درخواست گزار کو ضمانت بعد از گرفتاری دے چکی ہے، اسلام آباد ہائی کورٹ نے بھی دو مرتبہ قانونی نقائص کی وجہ سے ٹرائل کو کالعدم قرار دیا ہے۔سابق وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے درخواست میں اسلام آباد ہائی کورٹ سے سزا معطل کر کے ضمانت پر رہا کرنے کی استدعا کی ہے۔

واضح رہے کہ 30 جنوری کو سائفر کیس میں بانی پی ٹی آئی اور شاہ محمود قریشی کو دس، دس سال قید با مشقت کی سزا سنائی گئی تھی۔ 

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

الیکشن کمیشن نے ہمیں مخصوص نشستیں نہ دیں تو سپریم کورٹ جائیں گے، بیرسٹر علی ظفر

اگر ہماری سیٹیں چھین کر بانٹ دی گئیں تو صدر اور وزیر اعظم سمیت تمام الیکشن متنازع ہو جائیں گے،رہنما پی ٹی آئی

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

الیکشن کمیشن نے ہمیں مخصوص نشستیں نہ دیں تو سپریم کورٹ جائیں گے، بیرسٹر علی ظفر

پاکستان تحریک انصاف کے رہنما بیرسٹر علی ظفر نے کہا ہے کہ اگر ہماری سیٹیں چھین کر بانٹ دی گئیں تو صدر اور وزیر اعظم سمیت تمام الیکشن متنازع ہو جائیں گے، اُمیدہے آئین اور قانو ن کے مطابق فیصلہ ہوگا،اگر الیکشن کمیشن نے ہمیں مخصوص نشستیں نہ دیں تو سپریم کورٹ جائیں گے۔

مخصوص نشستوں سے متعلق الیکشن کمیشن کی جانب سے فیصلہ محفوظ ہونے کے بعد پاکستان تحریک انصاف کے رہنما بیرسٹر علی ظفر نے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ الیکشن کمیشن میں مخصوص نشستوں کی سماعت ہوئی، ہماری سیاسی جماعتیں جمہوریت کی بات کرتی ہےلیکن عمل نہیں کرتی، آئین کو تبدیل نہیں کیا جاسکتا، آئین میں جو حصہ دوسری جماعتوں کا ہے آپ وہ انہیں دے چکے ہیں اور پی ٹی آئی ارکان کو آئین کے مطابق حصہ دینا ہی دینا ہے۔

علی ظفر نے کہا کہ یہ چاہتے ہیں کہ ہماری مخصوص نشستیں خود میں تسلیم کرلیں، مخصوص نشستیں کوئی خیرات نہیں آئینی حق ہے، ہم نے کہا الیکشن کمیشن یہ معاملہ خالی بھی نہیں چھوڑسکتا، جنہیں نشستیں مل گئی انہیں دوبارہ نہیں مل سکتیں، دوران سماعت کہا گیا کہ سنی اتحاد کونسل ایک سیاسی جماعت تو ہے لیکن انہوں نے پارلیمنٹ میں کوئی سیٹ نہیں جیتی ، اس لئے آزاد ارکان کی اس جماعت میں شمولیت کے بعد بھی کوئی مخصوص نشستیں نہیں دی جا سکتی،ہم نے آرٹیکل 51 دکھایا کہ ارکان کسی بھی پارٹی میں شامل ہوسکتے ہیں،آئین میں کہیں یہ قدغن نہیں لگائی کہ اسی سیاسی جماعت میں شامل ہو سکتے ہیں جو پارلیمنٹ میں ہو۔

رہنما پی ٹی آئی نے کہا کہ دوسری بحث یہ کی کہ سنی اتحاد کونسل نے مخصوص نشستوں سے متعلق کوئی لسٹ الیکشن کمیشن میں جمع نہیں کرائی جس کے جواب میں ہم نے کہا کہ قانون میں کہا لکھا ہے کہ لسٹ بعد میں جمع نہیں کرائی جا سکتی۔اگر مخصوص نشستیں چھین کر دوسری جماعتوں میں بانٹی گئیں تو وہ سپریم کورٹ جائیں گے لیکن اگر ایسی بانٹ ہوئی تو صدر کا الیکشن، چیئرمین سینیٹ اور اسپیکر کے الیکشن سمیت تمام الیکشن متنازع ہو جائیں گے۔

پی ٹی آئی رہنما علی ظفر کا مزید کہنا تھا کہ خط میں کہیں نہیں لکھا کہ ہمیں مخصوص سیٹیں نہیں چاہیئے، اس خط کا مخصوص نشستوں سے کوئی تعلق نہیں بنتا۔  سنی اتحاد کونسل کے سربراہ کا خط انہیں دکھایا نہیں گیا لیکن انہیں معلوم ہوا ہے کہ وہ خط رول 206 کے تحت لکھا گیا تھا، جب الیکشن کمیشن نے رسمی کارروائی کے لیے سنی اتحاد کونسل سے پوچھا کہ انہوں نے مخصوص نشستوں کے لیے ترجیحی فہرست فراہم نہیں کی تو جواب میں سنی اتحاد کونسل نے کہا کہ انہوں نے الیکشن نہیں لڑا اور اس فہرست کی ضرورت نہیں۔

اس موقع پر پی ٹی آئی رہنما بیرسٹر گوہر نے کہا کہ آئین کے مطابق پی ٹی آئی کے 293 اراکین نے سنی اتحاد جوائن کیا، قومی اسمبلی سے پی ٹی آئی کے 86 اراکین نے سنی اتحاد جوائن کیا، پنجاب سے 107، خیبرپختونخوا سے 91 جبکہ سندھ اسمبلی سے 9 ایم پی ایز نے جوائن کیا۔

اس سے قبل سنی اتحاد کونسل کو مخصوص نشستیں الاٹ کرنے سے متعلق درخواستوں پر فریقین کے دلائل مکمل ہونے پر الیکشن کمیشن آف پاکستان نے فیصلہ محفوظ کرلیا۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

وزیر اعلی پنجاب مریم نواز کی  یونیورسٹی آف لندن کی پرو وائس چانسلرسے ملاقات

وزیراعلی پنجاب مریم نواز نے معیار ی تعلیم، اساتذہ کی تربیت اور عالمی سطح پر وظائف فراہم کرنے پر  ان کی کوششوں کو سراہا

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

وزیر اعلی پنجاب مریم نواز کی  یونیورسٹی آف لندن کی پرو وائس چانسلرسے ملاقات

بین الاقوامی درس و تدریس کے بارے میں  یونیورسٹی آف لندن کی پرو وائس چانسلر پروفیسر میری سٹیسنی  نے آج لاہور میں پنجاب کی وزیر اعلیٰ مریم نواز سے ملاقات کی۔

وزیراعلی پنجاب مریم نواز نے معیار ی تعلیم، اساتذہ کی تربیت اور عالمی سطح پر وظائف فراہم کرنے پر  ان کی کوششوں کو سراہا ۔

 انہوں نے پرو وائس چانسلر کو پنجاب میں تعلیم کے فروغ اور اساتذہ کی تربیت کے بارے میں بھی اپنے منصوبوں سے آگاہ کیا ، وزیر اعلیٰ نے کہا کہ وہ نصاب تعلیم کو انفارمیشن ٹیکنالوجی کی بنیاد پر جدید خطوط پر استوار کرنا چاہتی ہیں۔

 

مریم نواز نے اساتذ ہ کے لئے آن لائن تربیتی کورسز شروع کرنے پر بھی پروفیسر میری سٹیسنی سے تبادلہ خیال کیا  اورمعیاری تعلیم کی فراہمی اور ہر بچے کو ہنر سکھانے کے عزم کا اظہار کیا۔

 اس موقع پر پروفیسر میری سٹیسنی نے پنجاب کی پہلی خاتون وزیر اعلیٰ منتخب ہونے پر  مریم نواز کو مبارکباد دی اور تعلیم کےلئے  ان کے جذبے کی تعریف کی۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll