جی این این سوشل

پاکستان

الیکشن کمیشن کا متعدد صوبائی اور وفاقی حلقوں کے ختمی نتائج روکنے کا حکم

ای سی پی نے مبینہ دھاندلی کی شکایات پر 37 حلقوں کےختمی نتائج روک دیئے

پر شائع ہوا

کی طرف سے

الیکشن کمیشن کا متعدد صوبائی اور وفاقی حلقوں کے ختمی نتائج روکنے کا حکم
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

الیکشن کمیشن آف پاکستان نے متعدد قومی اور صوبائی حلقوں کے حتمی نتائج جاری کرنے سے روک دیا۔

الیکشن کمیشن میں انتخابی عذرداریوں پر ممبر سندھ نثار درانی اور ممبر بلوچستان شاہ محمد جتوئی پر مشتمل بنچ نے سماعت کی۔سماعت کے دوران نثار درانی نے کہا کہ ہارنے والا جشن، جیتنے والا دھاندلی کے الزامات لگا رہا ہے، ایسا رویہ کب تک چلے گا؟۔

اس موقع پر سپیشل سیکرٹری الیکشن کمیشن نے کہا کہ آر اوز زیادہ تر حلقوں میں حتمی نتائج جاری کر چکے ہیں، اس موقع پر نتائج روکنے سے اگلے مراحل میں تاخیر ہوگی۔

الیکشن کمیشن نے این اے 56 راولپنڈی، این اے 53، این اے 52، این اے 57، این اے 60 جہلم، این اے 69 منڈی بہاؤالدین، این اے 126، این اے 127 لاہور اور این اے 87 خوشاب کے حتمی نتائج جاری کرنے سے روک دیا، این اے 106 ٹوبہ ٹیک سنگھ میں حتمی نتائج روکتے ہوئے آر او سے رپورٹ مانگ لی۔

اس کے علاوہ پی پی 7 سرگودھا، پی پی 133 ننکانہ صاحب، پی پی 15 راولپنڈی، پی پی 43 منڈی بہاؤالدین، پی پی 12 راولپنڈی، پی پی 53، پی پی 17، پی پی 4 اٹک، پی پی 121 ٹوبہ ٹیک سنگھ ، پی پی 279 لیہ، پی پی 6 مری کے ریٹرننگ افسران کو بھی حتمی نتائج دینے سے منع کر دیا گیا۔

الیکشن کمیشن نے پی بی 14 نصیر آباد، پی بی 44 کوئٹہ اور پی پی 33 گجرات، پی پی 126، پی پی 128 جھنگ کے حتمی نتائج جاری کرنے سے بھی روک دیا۔

پاکستان

صدر نے اجلاس نہ بلایا تو اسپیکر خود نومنتخب قومی اسمبلی کا اجلاس بلا سکتا ہے، اسحاق ڈار

آئین میں واضح ہے کہ 21ویں روز اسپیکر کو اجلاس بلانے کا اختیار ہے، رہنما مسلم لیگ ن

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

صدر نے اجلاس نہ بلایا تو اسپیکر خود نومنتخب قومی اسمبلی کا اجلاس بلا سکتا ہے، اسحاق ڈار

پاکستان مسلم لیگ (ن) کے رہنما سینیٹر اسحاق ڈار کا کہنا ہے کہ صدر نے اجلاس نہ بلایا تو اسپیکر خود نومنتخب قومی اسمبلی کا اجلاس بلا سکتا ہے۔

پنجاب اسمبلی کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے اسحاق ڈار نے کہا کہ 29 فروری کو اسپیکر آئینی طور پر خود اجلاس بلا سکتا ہے، آئین میں واضح ہے کہ 21ویں روز اسپیکر کو اجلاس بلانے کا اختیار ہے۔

اسحاق ڈار نے کہا کہ آئینی 21 دن کی مہلت کے حساب سے 29 فروری آخری تاریخ بنتی ہے۔  صوبوں میں بھی اگر گورنر اجلاس نہیں بلاتا تو وہاں بھی یہی اصول لاگو ہوگا۔ معیشت کیسے درست ہوگی ایسے فلور پر یہ نہیں ڈسکس کر سکتا۔

پڑھنا جاری رکھیں

دنیا

اسرائیلی افواج کی بمباری میں مزید 83 فلسطینی شہید

غزہ پر جاری اسرائیلی جارحیت میں اب تک 23 ہزار سے زائد فلسطینی شہید ہو گئے ہیں

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

اسرائیلی افواج کی بمباری میں مزید 83 فلسطینی شہید

غزہ میں گزشتہ چوبیس گھنٹے کے دوران قابض اسرائیلی افواج کی بمباری میں مزید 83 فلسطینی شہید اور ایک سو تئیس زخمی ہو گئے ہیں۔

غزہ پر جاری اسرائیلی جارحیت میں اب تک 23 ہزار سے زائد فلسطینی شہید ہو گئے ہیں۔فلسطینی وزیر اطلاعات ابو نبیل ریوڈن نے استنبول میں ایک کانفرنس کے دوران اقوام متحدہ سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ فلسطینیوں کے خلاف جاری جارحیت اور قتل عام روکنے کیلئے اسرائیل پر دباؤ ڈالے۔ادھر برلن، مانچسٹر، پیرس، ڈیلاس، آکلینڈ اور ڈبلن سمیت دنیا کے مختلف شہروں میں ہزاروں افراد نے احتجاج کرتے ہوئے اسرائیل کی جانب سے فلسطینیوں کی نسل کشی بند کرنے کا مطالبہ کیا۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

پیپلز پارٹی رہنما خورشید شاہ کا بانی چیئرمین پی ٹی آئی سے رابطے کا انکشاف

مرکز میں حکومت سازی کےلئے پیپلز پارٹی نے پی ٹی آئی سے رابطہ کیا، خورشید شاہ

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پیپلز پارٹی رہنما خورشید شاہ کا بانی چیئرمین  پی ٹی آئی سے رابطے کا انکشاف

پیپلز پارٹی کے رہنما اور رکن قومی اسمبلی خورشید شاہ نے کہا ہے کہ ہم نے مرکز میں حکومت سازی کےلئے پاکستان تحریک انصاف سے رابطہ کیا تھا لیکن پی ٹی آئی انہوں نے انکار کردیا۔

سندھ اسمبلی آمد کے موقع پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی کے پاس اس وقت جمہوریت کی چابی ہے، جسے ہم نے جمہوریت کے لیے استعمال کیا۔ احتجاج کرنے والی جماعتوں کو عوام نے مینڈیٹ نہیں دیا، ان کا کام صرف شرانگیزی پھیلانا ہے۔

بانی پی ٹی آئی عمران خان کی جانب سے آئی ایم ایف کو لکھے گئے خط پر تبصرہ کرتے ہوئے خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ آئی ایم ایف کو خط لکھنا اندرونی معاملات میں مداخلت ہے، اندرونی معاملات میں مداخلت کی کسی کو اجازت نہیں دیں گے۔

رہنما پیپلزپارٹی نے کہا کہ ہم مسلم لیگ (ن) کے ساتھ بغیر کسی لالچ کے بیٹھے ہیں، ہم وزارت عظمیٰ کے لیے ووٹ بھی دیں گے اور قانون سازی و دیگر معاملات میں بھی تعاون کریں گے مگر ہم وفاقی حکومت سے کوئی وزارت نہیں لیں گے۔

انہوں نے کہا کہ کے پی کے میں اے این پی کس کے خلاف احتجاج کررہی ہے، جی ڈی اے تو کبھی بھی ایک سیٹ سے زیادہ نہیں جیتی۔

خورشید شاہ نے بتایا کہ چیئرمین سینیٹ کے لیے ابھی یوسف رضا گیلانی کے نام پر غور ہورہا ہے۔

 

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll