جی این این سوشل

پاکستان

پاکستان کے عوام متحدہ عرب امارات کو اپنا دوسرا گھر سمجھتے ہیں، عطاءاللہ تارڑ

باہمی تجارت اور کاروباری روابط کو مزید مضبوط کرنے کے خواہاں ہیں، وفاقی وزیر اطلاعات

پر شائع ہوا

کی طرف سے

پاکستان کے عوام متحدہ عرب امارات کو اپنا دوسرا گھر سمجھتے ہیں، عطاءاللہ تارڑ
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

اسلام آباد: وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات عطاءاللہ تارڑ نے متحدہ عرب امارات کی ترقی اور تبدیلی کے لئے متحدہ عرب امارات کی قیادت کے وژن اور کوششوں کوسراہتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان کے عوام متحدہ عرب امارات کو اپنا دوسرا گھر سمجھتے ہیں، وزیراعظم شہباز شریف کے وژن کے مطابق یو اے ای اور پاکستان کے درمیان تجارت اور کاروباری روابط کو مزید مضبوط کرنے کے خواہاں ہیں۔

وہ متحدہ عرب امارات کے سفیر حماد عبید ابراہیم سالم الزابی سے ملاقات کے دوران گفتگو کر رہے تھے۔ ملاقات میں دوطرفہ تعلقات، مختلف شعبہ جات میں تعاون کے فروغ سمیت باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال ہوا۔ متحدہ عرب امارات کے سفیر نے بشام میں دہشت گردی کے واقعہ کی مذمت کی۔

وفاقی وزیر اطلاعات نے کہا کہ پاکستان اور متحدہ عرب امارات کے درمیان مشترکہ ورثے اور کثیر الجہتی تعاون پر مبنی تعلقات استوار ہیں، پاکستان کے عوام متحدہ عرب امارات کو اپنا دوسرا گھر سمجھتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ایمریٹس ایئر لائن کی پہلی پرواز پی آئی اے کے پائلٹ نے اڑائی جو دونوں ممالک کے درمیان تعاون کی اعلیٰ مثال ہے۔ وفاقی وزیر نے کہا کہ عزت مآب مرحوم شیخ زید کے پاکستان کی قیادت اور عوام کے ساتھ انتہائی قریبی تعلقات تھے۔

 

پاکستان

اسرائیلی مظالم اور نسل کشی پر پاکستان کے مؤقف کی قدر کرتے ہیں ، ایرانی صدر

شہباز شریف نے کہا کہ ایران کے صدر فقہ اور قانون پر مہارت رکھتے ہیں، ہمیں اپنی سرحدوں پر کاروبار کو وسعت دینی ہوگی

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

اسرائیلی مظالم اور نسل کشی پر پاکستان  کے مؤقف کی قدر کرتے ہیں ، ایرانی صدر

یرانی صدر کا مزید کہنا تھا کہ فلسطین میں اسرائیلی مظالم اور نسل کشی پر پاکستان کے مؤقف کو قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں۔ فلسطین کے معاملے پر اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل اپنی ذمے داریاں ادا نہیں کررہی۔ ایک دن فلسطین کے لوگوں کو ان کا حق مل جائے گا۔
اسرائیلی حملوں اور غزہ پر بمباری کی مذمت کرتے ہوئے وزیراعظم شہباز شریف کا کہنا تھا کہ 35ہزار مسلمان شہید کردیے گئے اور اقوام عالم و عالم اسلام خاموش ہے، ہمیں مل کر ان کے حقوق کے لیے آواز بلند کرنی ہوگی، پاکستان فلسطین کے ساتھ کھڑا ہے۔

ملاقات میں وزیراعظم شہباز شریف نے اسرائیل فلسطین تنازع پر ایرانی پالیسی کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ غزہ کے معاملے پر ایران نے مضبوط مؤقف اختیار کیا، جو کہ تعریف کے قابل ہے ، انہوں نے کہا کہ اسی طرح کشمیر کی زمین بھی بھارت کی جانب سے کشمیریوں کے لہو سے سُرخ کردی گئی ہے۔ پاکستان مقبوضہ کشمیر میں بھی ظلم کو بند کرنے کا مطالبہ کرتا ہے۔ ایران نے ہمیشہ کشمیر اور مظلوم کشمیریوں کے حق میں آواز بلند کی۔


شہباز شریف نے کہا کہ ایران کے صدر فقہ اور قانون پر مہارت رکھتے ہیں، ہمیں اپنی سرحدوں پر کاروبار کو وسعت دینی ہوگی۔ ہمیں موقع ملاہے کہ اپنی دوستی کو مزید مضبوط کریں، آزادی کے بعد سب سے پہلے ایران نے پاکستان کو تسلیم کیا۔

پڑھنا جاری رکھیں

دنیا

اسرائیلی فوج پر کسی بھی قسم کی پابندی کو مسترد کرتے ہیں ، اسرائیلی وزیر اعظم

بی بی سی کے مطابق اسرائیلی وزیر اعظم نے گزشتہ روز کہا کہ وہ اپنی پوری طاقت کے ساتھ ان حالات کا مقابلہ کریں گے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

اسرائیلی فوج پر کسی بھی  قسم کی پابندی کو مسترد کرتے ہیں ، اسرائیلی وزیر اعظم

اسرائیل کے وزیراعظم بینجمن نیتن یاہو نے اعلان کیا ہے کہ وہ اپنی فوج پر عائد کی جانے والی کسی بھی قسم کی ممکنہ پابندیوں کو مسترد کر دیں گے، اُن کی جانب سے یہ بیان ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب اس بات کا خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے کہ امریکی انتظامیہ اسرائیلی فوج کی ایک یونٹ کو فراہم کی جانے والی فوجی امداد پر پابندی عائد کرنے پر غور کر رہی ہے۔

بی بی سی کے مطابق اسرائیلی وزیر اعظم نے گزشتہ روز کہا کہ وہ اپنی پوری طاقت کے ساتھ ان حالات کا مقابلہ کریں گے۔ قبل ازیں ایکسیوس نیوز کی ویب سائٹ پر یہ خبر دی گئی کہ امریکا مقبوضہ مغربی کنارے میں انسانی حقوق کی مبینہ خلاف ورزیوں پر اسرائیل کی نیتزہ یہودا بٹالین کو پابندیوں کی صورت میں نشانہ بنائے گا۔ گزشتہ ہفتے مقبوضہ مغربی کنارے میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کے الزامات پر اسرائیلی فوج کے یونٹس کو دی جانے والی امریکی فوجی امداد میں کٹوتی کی اطلاعات بارے امریکی وزیر خارجہ انٹونی بلنکن سے پوچھا گیا تھا جس پر انہوں نے کہا تھا کہ انہوں نے اس بارے میں سوچ بچار کی ہے اور فیصلہ کر لیا ہے جس کے بارے میں آپ آنے والے دنوں جان سکیں گے۔

اسرائیل کے وزیر دفاع یواو گیلنٹ نے امریکا سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ نیتزہ یہودا بٹالین پر پابندی عائد کرنے کا اپنا ارادہ ترک کر دے ۔ انہوں نے کہا کہ دنیا امریکا اور اسرائیل کے درمیان تعلقات کو پہلے سے کہیں زیادہ قریب اور توجہ سے دیکھ رہی ہے۔بیان میں کہا گیا ہے کہ یونٹ پر تنقید کی کسی بھی کوشش سے اسرائیلی فوج کے اقدامات پر بُرے اثرات مرتب ہوں گے، دوستوں اور شراکت داروں کے درمیان ایسے اقدامات درست اور مناسب نہیں ۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

علی امین گنڈا پور کا الیکشن کمیشن سے مخصوص نشستوں کی واپسی کا مطالبہ

ضمنی انتخابات میں ہم نے سنی اتحاد کونسل کے ٹکٹ پر سیٹیں حاصل کیں، اس لیے اب انہیں یہ حق حاصل ہے کہ وہ مخصوص نشستیں واپس مانگیں، وزیر اعلیٰ کے پی

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

علی امین گنڈا پور کا الیکشن کمیشن سے مخصوص نشستوں کی واپسی کا مطالبہ

وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا علی امین گنڈا پور نے الیکشن کمیشن آف پاکستان (ای سی پی) پر سخت تنقید کرتے ہوئے کہا کہ اب وہ بے نقاب ہو گئے ہیں، ہم  آپ سے درخواست کرتا ہوں کہ ہمیں ہماری مخصوص نشستیں واپس دیں۔

پشاور میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا علی امین گنڈا پور نے کہا کہ چیف الیکشن کمشنر قانون پر عمل کریں اور پی ٹی آئی کی حمایت یافتہ سنی اتحاد کونسل کو ان کے جائز حقوق دیں۔ انہوں نے خبردار کیا کہ اگر ای سی پی نے انہیں ان کا حق واپس نہ دیا تو وہ اپنے حقوق کی واپسی کے لیے ہر حد تک جائیں گے۔

انہوں نے مزید کہا کہ مخصوص نشستوں کے حوالے سے اپنے حقوق کے لیے اپیل دائر کرنے کے لیے متعلقہ فورم سے رجوع کریں گے۔ضمنی انتخابات میں ہم نے سنی اتحاد کونسل کے ٹکٹ پر سیٹیں حاصل کیں، اس لیے اب انہیں یہ حق حاصل ہے کہ وہ مخصوص نشستیں واپس مانگیں۔

کے پی کے وزیراعلیٰ نے کہا کہ جو لوگ مینڈیٹ کے بغیر اقتدار میں بیٹھے ہیں وہ ہمیں مجبور نہ کریں۔ خیبر پختونخوا کے لیے ان کی واجب الادا رقم بھی حاصل کریں گےاور صوبے کے حقوق کے لیے آواز اٹھاتے رہیں گے۔ہم اس لاقانونیت کو مزید نہیں ہونے دیں گے۔ ہم اپنے صوبے کے لیے کھڑے ہوں گے۔

ضمنی انتخابات سے متعلق سوال کے جواب میں کے پی کے کے وزیراعلیٰ گنڈا پور نے کہا کہ پنجاب میں کل ہونے والے انتخابات میں بڑے پیمانے پر دھاندلی کی گئی۔

علی امین گنڈاپور کا کہنا تھا کہ ہمارےامیدواروں کوانتخابی مہم نہیں چلانےدی گئی ، ہم نےخیبرپختونخوامیں سب کومکمل آزادی دی ، پنجاب میں کچھ نشستوں پرپہلےسےزیادہ ووٹ ملے۔

بجلی کی بدترین لوڈشیڈنگ پرعلی امین گنڈاپور کا کہنا تھا کہ وفاق سےخط ملا کہ بجلی چوری پربات کرناچاہتےہیں، لیکن یہاں بات چیت سے پہلے ہی واپڈا کے ذریعے وفاق نے کارروائیاں شروع کر دیں۔

انہوں نے کہاکہ ہمارے لوگوں کوچورچورنہ کہا جائے، چوری ہم نہیں کرتے،آپ کاڈپارٹمنٹ کرواتاہے، مجھ سےبات کریں،عوام سےمیں بات کروں گا، اپنی عوام کیلئےچورکا لفظ برداشت نہیں کروں گا، اگر میں صوبے کا حق نہیں لےسکتا تو کرسی پر بیٹھنے کا کوئی حق نہیں ہے۔

انہوں نے کہا کہ وہ صوبے لوگوں کو زیادہ سے زیادہ ریلیف فراہم کریں گے، اور انہوں نے انہیں ہیلتھ کارڈ کی سہولت فراہم کی کیونکہ وہ علاج کے اخراجات برداشت نہیں کر سکتے تھے۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll