جی این این سوشل

دنیا

فلسطینی ریاست کے حق میں ووٹ دینے والے ممالک کے سفیروں کو طلب کیا جائے گا، اسرائیل

اقوام متحدہ کی سکیورٹی کونسل میں فلسطین کی مکمل رکنیت کیلئے پیش کی گئی قرارداد کی 12 ملکوں نے حمایت کی تھی

پر شائع ہوا

کی طرف سے

فلسطینی ریاست کے حق میں ووٹ دینے والے ممالک کے سفیروں کو طلب کیا جائے گا، اسرائیل
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

اسرائیل کے دفتر خارجہ نے کہا ہے کہ جن ملکوں نے اقوام متحدہ میں فلسطین کی مکمل رُکنیت کی حمایت میں ووٹ دیا اُن کے سفیروں کو طلب کر کے احتجاج کیا جائے گا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق اسرائیل کا یہ بیان ایسے وقت آیا ہے جب فلسطینی اتھارٹی نے کہا ہے کہ اس کی رکنیت کے معاملے پر امریکی ویٹو کے بعد واشنگٹن سے تعلقات پر نظر ثانی کی جائے گی۔ 

رواں ہفے کے دوران اقوام متحدہ کی سکیورٹی کونسل میں فلسطین کی مکمل رکنیت کیلئے پیش کی گئی قرارداد کی 12 ملکوں نے حمایت کی تھی جبکہ برطانیہ اور سوئٹزر لینڈ نے ووٹنگ میں حصہ نہیں لیا تھا۔ 

اسرائیل کے سب سے بڑے حامی اور اتحادی امریکہ کی جانب سے ویٹو کے بعد یہ قرارداد مسترد کر دی گئی تھی۔ اسرائیلی وزارت خارجہ کے ترجمان اورین مارمورسٹین نے کہا کہ وزارت ان ممالک کے سفیروں کو احتجاجی مراسلے دینے کے لیے طلب کرے گی جنہوں نے سلامتی کونسل میں اقوام متحدہ میں فلسطینیوں کی حیثیت کو اپگریڈ کرنے کے حق میں ووٹ دیا تھا۔

انہوں نے ٹوئیٹ پر ایک پوسٹ میں کہا کہ فرانس، جاپان، جنوبی کوریا، مالٹا، سلوواک ریپبلک اور ایکواڈور کے سفیروں کو ڈیمارش کے لیے طلب کیا جائے گا اور ان سے سخت احتجاج کیا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ اسی سے ملتا جلتا احتجاج مزید کئی ممالک سے بھی کیا جائے گا۔

علاقائی

بجلی کی ناروا لوڈ شیڈنگ کے خلاف اہلیان پشاور سراپا احتجاج

لوڈشیڈنگ بند نہ ہوئی توگرڈ اسٹیشن کا کنٹرول اپنے ہاتھ میں لے لیں گے، مظاہرین

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

بجلی کی ناروا لوڈ شیڈنگ کے خلاف اہلیان پشاور سراپا احتجاج

خیبر پختونخوا کے دارالحکومت پشاور میں بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کے خلاف عوام سڑکوں پر نکل آئے۔ مظاہرین نے مقامی الیکٹرک کمپنی کے خلاف احتجاج کیا ۔

مظاہرے کی قیادت پاکستان تحریک انصاف کے رکن صوبائی اسمبلی فضل الٰہی نے کی۔ مظاہرین نے رحمان بابا گرڈ اسٹیشن پر دھاوا بول دیا۔

پی ٹی آئی کے رکن صوبائی اسمبلی فضل الٰہی نے کہا کہ جب تک بجلی کی لوڈشیڈنگ ختم نہیں کی جائے گی گھیرائو ختم نہیں کیا جائے گا۔

مظاہرین نے مقامی الیکٹرک کمپنی (پیسکو) کے خلاف شدید نعرے بازی بھی کی۔مظاہرین نے احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ لوڈشیڈنگ بند نہ ہوئی توگرڈ اسٹیشن کا کنٹرول اپنے ہاتھ میں لے لیں گے۔

دوسری جانب محکمہ موسمیات کی جانب سے مزید شدید گرمی کا عندیہ بھی دے دیا گیا ہے۔

محکمہ موسمیات کا کہنا تھا کہ پشاور میں موسم گرم اور خشک رہنے کا امکان ہے، مزید کہا کہ ہوا میں نمی کا تناسب 27 فی صد ریکارڈ کیا گیا ہے۔

پشاور میں درجہ حرارت 23 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا ہے، آئندہ 24 گھنٹوں میں پارہ 42 ڈگری سینٹی گریڈ تک بڑھنے کا امکان ہے۔

محکمہ موسمیات کا کہنا تھا کہ سب سے زیادہ درجہ حرارت ڈیرہ اسمعیٰل خان میں 45 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا، مزید بتایا کہ کوہستان، دیر، سوات میں گرج چمک کے ساتھ بارش کا امکان ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

برٹش ایشین ٹرسٹ اور پنجاب سکلز ڈویلپمنٹ فنڈ  کے درمیان مفاہمتی یاداشت کی تقریب منقعد

ایمپلائمنٹ امپیکٹ بانڈ کو ترقی کے اہم شعبوں میں نوجوانوں کے لیے 40,000 ملازمتوں کو یقینی بنانے اور طویل مدتی روزگار کے نتائج پر توجہ مرکوز کرنے کے لیے ڈیزائن کیا گیا ہے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

برٹش ایشین ٹرسٹ اور پنجاب سکلز ڈویلپمنٹ فنڈ  کے درمیان مفاہمتی یاداشت کی تقریب منقعد

برٹش ایشین ٹرسٹ اور پنجاب سکلز ڈویلپمنٹ فنڈ  کے درمیان مفاہمتی یاداشت کی تقریب منقعد ہوئی ۔ 


برٹش ایشین ٹرسٹ جس کی بنیاد کنگ چارلس سوم نے رکھی تھی  نے پنجاب سکلز ڈویلپمنٹ فنڈ کے ساتھ مل کر پاکستانی تارکین وطن کے سرکردہ اراکین کی حمایت  کے ساتھ پاکستان کے پہلے ڈویلپمنٹ امپیکٹ بانڈ پر کام کا آغاز  کر دیا ہے۔ 
اس سلسلہ میں دونوں اداروں کے درمیان ایک مفاہمتئ یاداشت  کی تقریب منقعد ہوئی جس میں دونوں ادرواں نے ملکرچالیس ہزار سے زائد نوجوانوں کو ایسی سکلز کی ٹرینگ دینا پر اتفاق کیا گیا جس سے نوجوانوں کے لیے روزگار کے مواقعوں میں نہ صرف اضافہ ہو گا بلکہ انکی کی آمدن میں بھی خاطر خواہ اضافہ متوقع ہے۔ 
 
ایمپلائمنٹ امپیکٹ بانڈ کو ترقی کے اہم شعبوں میں نوجوانوں کے لیے 40,000 ملازمتوں کو یقینی بنانے اور طویل مدتی روزگار کے نتائج پر توجہ مرکوز کرنے کے لیے ڈیزائن کیا گیا ہے، اسکے علاوہ اس بانڈ کے زریعہ پاکستان میں سماجی اثرات کو فنڈ دینے کے لیے نئے سرمائے  کے مواقعے پیدا کرنا ہے ہے۔ امپیکٹ بانڈز فنانسنگ کے جدید آلات ہیں جو نجی شعبے کے سرمائے اور ترقی کے لیے مہارت سے فائدہ اٹھاتے ہیں، جس میں نتائج کے حصول پر توجہ دی جاتی ہے۔ وہ مالی ترغیبات کے ذریعے ان پٹ سے نتائج، کارکردگی اور نتائج کی طرف توجہ مرکوز کرتے ہیں۔
  اس تقریب سے خطاب کرتے ہوئے برٹش ایشین ٹرسٹ پاکستان کی ڈائریکٹر کمیلا ماروی نے کہا کے  PSDF کے ساتھ یہ شراکت داری پاکستان کے نوجوانوں کے لیے روزگار فراہم کرنے کی ہماری کوششوں میں ایک اہم سنگ میل ہے۔ ہم روزگار کے لیے ملک کے پہلے اثر والے بانڈ کے مقامی ڈیزائن کی حمایت کے لیے بین الاقوامی مہارت لانے کے لیے پرجوش ہیں۔ ہم حقیقی طور پر یقین رکھتے ہیں کہ یہ پاکستان میں ترقیاتی مالیات کے نقطہ نظر کو تبدیل کرنے کا ایک موقع ہے جس کے نتیجے میں زیادہ جدت، کارکردگی اور پیمانے کی طرف جاتا ہے۔
پی ایس ڈی ایف کے چیف آپریٹنگ آفیسر علی اکبر بوسن نے تقریب میں خطاب کرتے ہوئے کہا کے یہ بانڈ ہنر مندی کی تربیت کے لیے ایک انقلابی نقطہ نظر کی نمائندگی کرتا ہے، جو ہنر مند افرادی قوت کی ترقی کے منظر نامے کو تبدیل کرنے  کی پوری صلاحیت رکھتا ہے۔ ۔ فزیبلٹی اسٹڈی ایمپلائمنٹ امپیکٹ بانڈ کے ممکنہ اثرات، اسکیل ایبلٹی، اور مالی قابل عمل ہونے کا جائزہ لے گی، جو مستقبل کے پروگراموں کی بنیاد رکھے گی۔ پاکستان میں اپنی نوعیت کا یہ پہلا منصوبہ جدید حل کے لیے ہماری وابستگی ہے جو ہنر مند مزدوروں کی اہم ضرورت کو پورا کرتے ہیں، جو کہ ہنر مندی کے تربیتی پروگراموں کی مالی اعانت اور نفاذ کے طریقہ کار میں ایک اہم تبدیلی کا وعدہ کرتے ہیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

مارخور کا عالمی دن ہمارے بھرپور قدرتی ورثے کی علامت ہے، وزیر اعظم

وزیر اعظم نے کہا کہ مارخور کے اس عالمی دن پر میں تمام پاکستانیوں اور عالمی برادری سے مطالبہ کرتا ہوں کہ وہ ماحولیاتی تحفظ کے لیے اپنے عزم کا اعادہ کریں

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

مارخور کا عالمی دن ہمارے بھرپور قدرتی ورثے کی علامت ہے، وزیر اعظم

وزیر اعظم پاکستان شہباز شریف نے مارخور کے عالمی دن پر کہا کہ یہ دن ہمارے بھرپور قدرتی ورثے کی علامت ہے۔جمعہ کو پاکستان کے قومی جانور مارخور کے عالمی دن کے موقع پر اپنے خصوصی پیغام میں انہوں نے کہا کہ مارخور اپنے منفرد کارک سکرو کی شکل کے سینگوں کے ساتھ، حیاتیاتی تنوع کے تحفظ اور ماحولیاتی توازن کو برقرار رکھنے کے لئے ہمارے عزم کی نمائندگی کرتا ہے۔

شہباز شریف نے کہا کہ 2 مئی 2024 کو اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اعلان کے مطابق یہ دن منانے کا فیصلہ کیا گیا۔ اس دن کو عالمی سطح پر منانے کا فیصلہ جنگلی حیات کے تحفظ میں ہماری قوم کی کوششوں اور کامیابیوں کا اعتراف ہے۔وزیر اعظم نے کہا کہ گزشتہ ایک دہائی کے دوران مارخور کی آبادی میں نمایاں اضافہ قدرتی ماحول کے تحفظ کے لئے پاکستان کی لگن کا منہ بولتا ثبوت ہے، مارخور کے تحفظ کے پروگراموں میں مقامی کمیونٹیز کے تعاون اور سائنسی تحقیق کا کلیدی کردار ہے۔

شہباز شریف نے کہا کہ پاکستان جنگلی حیوانات اور نباتات کے خطرے سے دوچار انواع میں بین الاقوامی تجارت کے کنونشن کے پرعزم دستخط کنندہ کے طور پر بین الاقوامی تجارت کے کنونشن کیٹگری میں ایک نمایاں درجہ رکھتا ہے،اس حوالے سے کی گئی خصوصی قانون سازی، پاکستان ٹریڈ کنٹرول آف وائلڈ فاؤنا اینڈ فلورا ایکٹ، 2012، ذمہ دارانہ تجارتی طریقوں اور خطرے سے دوچار انواع کی فلاح و بہبود کے لئے ہماری وابستگی کو واضح کرتی ہے۔

وزیر اعظم نے کہا کہ مارخور کے اس عالمی دن پر میں تمام پاکستانیوں اور عالمی برادری سے مطالبہ کرتا ہوں کہ وہ ماحولیاتی تحفظ کے لیے اپنے عزم کا اعادہ کریں۔وزیر اعظم نے کہا کہ آئیے نہ صرف مارخور بلکہ ان تمام انواع کے تحفظ کے لئے مل کر کام کریں ۔ 

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll