جی این این سوشل

پاکستان

اسلام آباد ہائیکورٹ کے رجسٹرار آفس کا سینیٹر فیصل واوڈا کے خط کا جواب

آئین پاکستان میں جج بننےکیلئے کسی اور ملک کی شہریت یا رہائش رکھنا نااہلیت نہیں، رجسٹرار آفس

پر شائع ہوا

کی طرف سے

اسلام آباد ہائیکورٹ کے رجسٹرار آفس کا سینیٹر فیصل واوڈا کے خط کا جواب
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

اسلام آباد ہائیکورٹ کے رجسٹرار آفس نے سینیٹر فیصل واوڈا کے خط کا جواب دے دیا۔ 

رجسٹرار آفس اسلام آباد ہائیکورٹ نے اپنے جواب میں کہا کہ آئین پاکستان میں جج بننےکیلئے کسی اور ملک کی شہریت یا رہائش رکھنا نااہلیت نہیں، وکیل سے ہائیکورٹ کا جج بنتے وقت اس سے دہری شہریت کی معلومات نہیں لی جاتی ہیں۔

اسلام آباد ہائیکورٹ نے کہا کہ جسٹس اطہرمن اللہ نے 6 ججز کےخط پر ازخود نوٹس کی کارروائی میں یہ بات واضح کی تھی اور  بتایا تھا کہ جسٹس بابرستار کے گرین کارڈ کا معاملہ جوڈیشل کونسل میں ڈسکس ہوا۔

سپریم جوڈیشل کونسل نے ڈسکشن کے بعد جسٹس بابرستارکو جج بنانےکی منظوری دی تھی جب کہ ہائیکورٹ پریس ریلیز میں وضاحت تھی کہ جسٹس بابرستار نے بتادیا تھا کہ وہ گرین کارڈ رکھتے ہیں۔

واضح رہےکہ فیصل واوڈا نےجسٹس بابرکی تعیناتی سےقبل گرین کارڈ ہولڈر ہونے سے متعلق ریکارڈ مانگا تھا اور کل پریس کانفرنس کرتے ہوئے انکا کہنا تھا کہ اسلام آباد ہائیکورٹ کو خط لکھے 15 دن ہوگئے لیکن جواب نہیں آیا۔

تجارت

خیبر پختونخوا کا 1754 ارب روپے کا بجٹ صوبائی اسمبلی میں پیش

بجٹ میں کم سے کم ماہانہ اجرت 32 ہزار سے 36 ہزار کرنے کی تجویز دی گئی ہے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

خیبر پختونخوا کا 1754 ارب روپے کا بجٹ صوبائی اسمبلی میں پیش

 

مالی سال 2024-25ء کیلئے 1754ارب  روپے حجم کا بجٹ جمعہ کو خیبرپختونخوا میں پشاور کی صوبائی اسمبلی میں پیش کیا گیا۔

بجٹ میں کم سے کم ماہانہ اجرت 32 ہزار سے 36 ہزار کرنے کی تجویز دی گئی ہے، تعلیم کے لیے 362ارب روپے، صحت کےلیے 232 ارب روپے جبکہ صحت کارڈ کےلیے 34ارب روپےمختص کرنے کی سفارش کی گئی ہے۔

وزیر خزانہ خیبر پختونخوا آفتاب عالم نے بجٹ تقریر کے دوران کہا کہ کل محصولات 1754 ارب روپے اور کل اخراجات 1654 ارب روپے ہیں، بجٹ 100 ارب روپے سرپلس ہے۔

آفتاب عالم نے بتایا کہ  بجٹ میں عوامی خدمات کی فراہمی پر توجہ مرکوز کی، بجٹ میں صنعتی شعبے کے افراد کی مشاورت بھی شامل کی، صوبائی بجٹ میں آمدن کے دو حصہ ہیں، ایک صوبہ کے اپنے محاصل اور دوسرا وفاق سے ملنے والے فنڈز ہیں، وفاق کے ذمے مختلف مد میں بقایاجات واجب الادا ہیں، ضم اضلاع کے سالانہ 262 ارب روپے وفاق سے ملنے ہیں ، جو نہیں مل رہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

تجارت

چینی کمپنیوں کا پاکستان میں سرمایہ کاری بڑھانے کا عندیہ

واضح رہے کہ کان کنی اور معدنیات کے شعبے خصوصی سرمایہ کاری کونسل کی ترجیجی فہرست میں شامل ہیں

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

چینی کمپنیوں کا پاکستان میں سرمایہ کاری   بڑھانے کا عندیہ

وزیراعظم شہباز شریف نے چینی کمپنی ایم سی سی ٹونگسن ریسورسز کو پاکستان میں کان کنی کے شعبے میں سرمایہ کاری کی پیشکش کی ہے اور اس حوالے سے ہر ممکن سہولت دینے کی یقین دہانی کرائی ہے۔

ایم سی سی ٹونگسن ریسورسز تحقیق اور سرمایہ کاری کی چینی کمپنی ہے جو میٹالرجیکل گروپ کارپوریشن کا حصہ ہے جیسے دنیا کی بڑی دھاتی تعمیراتی کمپنیوں میں شمار کیا جاتا ہے۔

واضح رہے کہ کان کنی اور معدنیات کے شعبے خصوصی سرمایہ کاری کونسل کی ترجیجی فہرست میں شامل ہیں اور ان شعبوں میں نمایاں کامیابی حاصل کی جاچکی ہے۔

 

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

مارخور کا عالمی دن ہمارے بھرپور قدرتی ورثے کی علامت ہے، وزیر اعظم

وزیر اعظم نے کہا کہ مارخور کے اس عالمی دن پر میں تمام پاکستانیوں اور عالمی برادری سے مطالبہ کرتا ہوں کہ وہ ماحولیاتی تحفظ کے لیے اپنے عزم کا اعادہ کریں

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

مارخور کا عالمی دن ہمارے بھرپور قدرتی ورثے کی علامت ہے، وزیر اعظم

وزیر اعظم پاکستان شہباز شریف نے مارخور کے عالمی دن پر کہا کہ یہ دن ہمارے بھرپور قدرتی ورثے کی علامت ہے۔جمعہ کو پاکستان کے قومی جانور مارخور کے عالمی دن کے موقع پر اپنے خصوصی پیغام میں انہوں نے کہا کہ مارخور اپنے منفرد کارک سکرو کی شکل کے سینگوں کے ساتھ، حیاتیاتی تنوع کے تحفظ اور ماحولیاتی توازن کو برقرار رکھنے کے لئے ہمارے عزم کی نمائندگی کرتا ہے۔

شہباز شریف نے کہا کہ 2 مئی 2024 کو اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اعلان کے مطابق یہ دن منانے کا فیصلہ کیا گیا۔ اس دن کو عالمی سطح پر منانے کا فیصلہ جنگلی حیات کے تحفظ میں ہماری قوم کی کوششوں اور کامیابیوں کا اعتراف ہے۔وزیر اعظم نے کہا کہ گزشتہ ایک دہائی کے دوران مارخور کی آبادی میں نمایاں اضافہ قدرتی ماحول کے تحفظ کے لئے پاکستان کی لگن کا منہ بولتا ثبوت ہے، مارخور کے تحفظ کے پروگراموں میں مقامی کمیونٹیز کے تعاون اور سائنسی تحقیق کا کلیدی کردار ہے۔

شہباز شریف نے کہا کہ پاکستان جنگلی حیوانات اور نباتات کے خطرے سے دوچار انواع میں بین الاقوامی تجارت کے کنونشن کے پرعزم دستخط کنندہ کے طور پر بین الاقوامی تجارت کے کنونشن کیٹگری میں ایک نمایاں درجہ رکھتا ہے،اس حوالے سے کی گئی خصوصی قانون سازی، پاکستان ٹریڈ کنٹرول آف وائلڈ فاؤنا اینڈ فلورا ایکٹ، 2012، ذمہ دارانہ تجارتی طریقوں اور خطرے سے دوچار انواع کی فلاح و بہبود کے لئے ہماری وابستگی کو واضح کرتی ہے۔

وزیر اعظم نے کہا کہ مارخور کے اس عالمی دن پر میں تمام پاکستانیوں اور عالمی برادری سے مطالبہ کرتا ہوں کہ وہ ماحولیاتی تحفظ کے لیے اپنے عزم کا اعادہ کریں۔وزیر اعظم نے کہا کہ آئیے نہ صرف مارخور بلکہ ان تمام انواع کے تحفظ کے لئے مل کر کام کریں ۔ 

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll