جی این این سوشل

پاکستان

حکومت کا سولر نیٹ میٹرنگ کی جگہ گراس میٹرنگ شروع کرنے کا منصوبہ

وفاقی حکومت کی جانب سے گراس میٹرنگ کی پالیسی پر کام جاری ہے، ذرائع

پر شائع ہوا

کی طرف سے

حکومت کا سولر نیٹ میٹرنگ کی جگہ  گراس میٹرنگ شروع کرنے کا منصوبہ
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

سولر صارفین کو بڑاجھٹکا، حکومت کا سولر نیٹ میٹرنگ کی جگہ گراس میٹرنگ شروع کرنے کا منصوبہ سامنے آ گیا۔

ذرائع کے مطابق وفاقی حکومت کی جانب سے گراس میٹرنگ کی پالیسی پر کام جاری ہے، گراس میٹرنگ میں یونٹ کے بدلے یونٹ کا فارمولا ختم کرنے کی تجویز  زیر غور ہے۔

آئی ایم ایف کے ساتھ ہونے والے مذاکرات میں نیٹ میٹرنگ کا منصوبہ پیش کیا گیا ہے ، آئی ایم ایف کی جانب سے جاری گائیڈ لائن کے تحت وفاقی حکومت نے سولر نیٹ میٹرنگ ختم کرکے گراس میٹرنگ ختم کرنے کا منصوبہ بنایا ہے۔

ذرائع کے مطابق نیٹ میٹرنگ میں سولر صارفین کسی بھی تقسیم کار کمپنی سے یونٹ کے بدلے یونٹ کا تبادلہ کرتے تھےلیکن اب گراس میٹرنگ میں نیشنل گرڈ کو  دی جانے والی بجلی کی قیمت تقریباً  نصف ہوسکتی ہے،گراس میٹرنگ میں صارفین سے بجلی سی پی پی اے کے ریٹ پر  خریدنےکی تجویز  ہے، بجلی تقسیم کار کمپنیاں گراس میٹرنگ پالیسی کے تحت صارفین کو  بجلی حکومتی ریٹ پر بیچیں گی۔

ذرائع کے مطابق  گراس میٹرنگ پالیسی پر آئی ایم ایف سے بھی بات چیت ہوئی ہے، گراس میٹرنگ پالیسی حتمی منظوری کے لیے  وفاقی کابینہ اور مشترکہ مفادات کونسل کو پیش کی جاسکتی ہے۔

پاکستان

کورکمانڈر بلوچستان کا کوئٹہ میں سکھ گوردوارا کا دورہ

انہوں نے کہاکہ ہمیں ایک دوسرے کے مذہبی عقائد کا احترام کرنا چاہیے اور سماجی رواداری کو فروغ دینا چاہیے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

کورکمانڈر بلوچستان کا  کوئٹہ میں سکھ گوردوارا کا دورہ

کورکمانڈر بلوچستان لیفٹیننٹ جنرل راحت نسیم احمد خان نے کوئٹہ میں سکھ گوردوار کا دورہ کیا ۔

سکھ برادری نے انہیں اپنی روایتی چادر سروپہ پیش کی ۔

کورکمانڈر نے اپنے خطاب میں کہاکہ ملک کی ترقی وخوشحالی کیلئے بین المذاہب ہم آہنگی ، رواداری اور بھائی چارہ انتہائی اہمیت کے حامل ہیں۔

انہوں نے کہاکہ ہمیں ایک دوسرے کے مذہبی عقائد کا احترام کرنا چاہیے اور سماجی رواداری کو فروغ دینا چاہیے ۔

پڑھنا جاری رکھیں

علاقائی

بین الاقوامی نتھیاگلی سمر کالج کا افتتا ح کل کیا جائےگا

واضح رہے کہ پاکستان CERN کا ایسوسی ایٹ رکن ہے جس کے ساتھ اس کا شاندار تعاون جاری ہے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

بین الاقوامی نتھیاگلی سمر کالج کا افتتا ح کل کیا جائےگا

پاکستان ایٹمی توانائی کمیشن نے اعلان کیا ہے کہ طبیعات اور جدید دور کے تقاضوں کے بارے میں بین الاقوامی نتھیاگلی سمر کالج کا کل افتتاح کیا جائے گا۔

منصوبہ بندی و ترقی کے وزیر احسن اقبال اس موقع پر مہمان خصوصی ہوں گے۔سمر کالج کے افتتاح کے بعد ایٹمی تحقیق کی یورپی تنظیمCERN کے قیام کے70 سال مکمل ہونے پر پاکستان اور CERN کے درمیان اشتراک کے بارے میں خصوصی اجلاس منعقد ہوگا۔

واضح رہے کہ پاکستان CERN کا ایسوسی ایٹ رکن ہے جس کے ساتھ اس کا شاندار تعاون جاری ہے۔

 

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

اس وقت ملک میں تاریخ کی سب سے زیادہ مہنگائی اور بے روزگاری ہے، آصفہ بھٹو

نئے سال کا بجٹ عوام کی نمائندگی نہیں کرتا، رہنما پیپلز پارٹی

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

اس وقت ملک میں تاریخ کی سب سے زیادہ مہنگائی اور بے روزگاری ہے، آصفہ بھٹو

پاکستان پیپلز پارٹی کی رکن قومی اسمبلی آصفہ بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ اس وقت ملک میں تاریخ کی سب سے زیادہ مہنگائی اور بے روزگاری ہے۔

قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ نئے سال کا بجٹ عوام کی نمائندگی نہیں کرتا، بجٹ میں کسانوں اور عام آدمی کو ریلیف فراہم کرنا چاہیے تھا۔ کیا پاکستان کے لوگ اس عوام دشمن بجٹ کے مستحق ہیں؟ ، ہمیں عام آدمی کے ریلیف کے لیے آگے بڑھنا ہوگا، ہمیں کسان کو مضبوط کرنا ہوگا۔ پاکستان کے عوام بہتری کے مستحق ہیں، ہمیں بہتر کرنے کے لیے مل کر کام کرنا چاہیے۔

انکا کہنا تھا کہ ایسے وقت میں جب لوگ اپنے نظریاتی عقائد میں تقسیم ہیں، جب اختلافات کو ہتھیار بنا دیا جاتا ہے، اختلاف رائے کو تشدد سے حل کیا جاتا ہے، یہ ضروری ہے کہ ہم اس ایوان کے منتخب اراکین کی حیثیت سے اٹھیں اور اس پر بات کریں۔ رواداری کو تقریروں اور الفاظ تک محدود نہیں ہونا چاہیے، ہمیں اس پر عمل کرنا چاہیے، ہمیں تفرقہ انگیز سیاست کو مسترد کرنا چاہیے، عوام کے لیے اکٹھا ہونا چاہیے۔ ہمیں مل کر لوگوں کو ریلیف دینے کا راستہ تلاش کرنا ہے

آصفہ بھٹو نے کہا ہمیں اپنے انسانی وسائل کو ترقی دینے کے لئے استعمال کرنا چاہے۔ ہمیں ایسے طریقے تلاش کرنے چاہئیں جن سے غریب لوگوں کو براہ راست ریلیف ملے۔ امید ہے ہم سیاست میں ایک نیا دور دیکھنے کے قابل ہوں گے۔ جب صدر پاکستان اتحاد کی بات کرتے ہیں وہ وقت کی ضرورت ہے، کسی بھی مسلئے کا حل الزام تراشی نہیں ہے، اس گرمی میں سندھ میں بجلی نہیں یے، اس قیامت خیز گرمی میں 15 سے 20 گھنٹے کی لوڈ شیڈنگ عذاب ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہمیں کسان کو مضبوط کرنا ہو گا، امید کرتی ہوں ایک نئے سیاسی کلچر آغاز جلد ہم دیکھیں گے، ہمیں تقسیم کی سیاست کو مسترد کرنا ہوگا، ہمیں گندم امپورٹ کرنے کے غلط فیصلوں کا بھی سامنا ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll