جی این این سوشل

پاکستان

شیخ رشید کا ایک بار پھر گرفتار سیاسی کارکنوں کیلئے عام معافی کا مطالبہ

لوگ ان کیسز کی شکل میں مرگئے ہیں، سب بے گناہوں کو عام معافی ملنی چاہیے، سربراہ عوامی مسلم لیگ

پر شائع ہوا

کی طرف سے

شیخ رشید کا ایک بار پھر گرفتار سیاسی کارکنوں کیلئے عام معافی کا مطالبہ
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

سابق وزیرداخلہ اور سربراہ عوامی مسلم لیگ شیخ رشید نے ایک بار پھر گرفتار سیاسی کارکنوں کیلئے عام معافی کا مطالبہ کر دیا، لوگ ان کیسز کی شکل میں مرگئے ہیں، سب بے گناہوں کو عام معافی ملنی چاہیے۔

شیخ رشید نے ڈسٹرکٹ کورٹ کے باہر  میڈیا سے  گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ عالیہ حمزہ اور صنم جاوید کو روز جیلیں پھیرائی جا رہی ہیں، بے گناہ لوگوں کو عام معافی دیں۔معیشت کی تباہی اور فارم  45اور 47کی لڑائی گڑھے میں لے کر جائے گی، نہ یو اے ای سے نہ سعودی عرب سے اور نہ ہی چین سے پیسے ملے ہیں، ہمارے بہت سے قابل احترام دوست گئے تھے۔ ایک جمعہ بازار لگا ہے اور اس میں کوئی انہیں خیرات بھی نہیں دے رہا۔

انہوں نے کہا کہ جناب عاصم منیر اور ڈی جی آئی ایس آئی سے اپیل کرتا ہوں ،بے گناہ لوگوں کو عام معافی دیں، یہ کہنے کو کیس ہوتا ہے، جب آدمی صبح کورٹ آکر شام کو گھر جاتا ہے تو لگ پتہ جاتا ہے، موجودہ حکومت کی حیثیت گنگو تیلی سے زیادہ نہیں ہے۔

شیخ رشید نے مزید کہا  کہ ساری آئی ایل ایف کو سلام پیش کرتا ہوں، باقی لوگ کمپنی کی مشہوری کررہے ہیں، منی لانڈرنگ کے پیسوں سے پی ٹی آئی کی حکومت کے خلاف عدم اعتماد ہوا، بینظیر شہید بہتر تھی جس نے پہلے مہینے ہی ہمیں 7 سال قید دے دی تھی، یحییٰ خان کا کورٹ مارشل اچھا تھا، جس نے ایک سال قید اور 20 کوڑے لگا دیے تھے، پی ٹی آئی کے ورکرز کے پاس دو ہزار روپے دینے کو نہیں ہیں۔

پاک بھارت میچ کے حوالے سے بات کرتے ہوئے ان کاکہنا تھا کہ آج افسوس کا دن ہے ،ہم نے ہارنا ہی تھا، یہ خواجہ سراؤں کے ساتھ کرکٹ کھیلتے تو وہاں بھی ہارتے ، پاکستان میں لوگوں کے جذبات مجروح ہوتے ہیں۔

جرم

پنجاب میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 1358 سڑک حادثات میں 3 افراد جاں بحق

ٹریفک پولیس نے کہا  کہ 808 ڈرائیورز، 56 کم عمر ڈرائیورز، 153 پیدل چلنے والے، اور 516 مسافر سڑکوں پر ٹریفک حادثات کا شکار ہوئے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پنجاب میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 1358 سڑک حادثات میں 3 افراد جاں بحق

لاہور: ایمرجنسی سروسز ڈیپارٹمنٹ  نے گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران پنجاب کے تمام 37 اضلاع میں 1358 روڈ ٹریفک کریشز کا ان آر ٹی سی جمع کرادیا ۔

ان آر ٹی سی میں 13 لوگوں کی موت ہوئی، جب کہ 1464 زخمی ہوئے ، ان میں سے 686 شدید زخمیوں کو مختلف ہسپتالوں میں منتقل کیا گیا جبکہ 778 معمولی زخمیوں کو ریسکیو میڈیکل ٹیموں نے جائے حادثہ پر ہی طبی امداد دی ۔اکثریت (76%) میں موٹر بائیکس شامل ہیں، اس لیے ٹریفک قوانین کا موثر نفاذ اور لین ڈسپلن سڑکوں پر ٹریفک حادثات کی بڑھتی ہوئی تعداد کو کم کرنے کے لیے ضروری ہے۔

ٹریفک پولیس نے کہا  کہ 808 ڈرائیورز، 56 کم عمر ڈرائیورز، 153 پیدل چلنے والے، اور 516 مسافر سڑکوں پر ٹریفک حادثات کا شکار ہوئے، تفصیلات میں مزید بتایا گیا ہے کہ روڈ ٹریفک حادثات میں 1477 متاثرین متاثر ہوئے جن میں 1210 مرد اور 267 خواتین شامل ہیں، جب کہ متاثرین کی عمر کے گروپ کے مطابق 220 کی عمریں 18 سال سے کم تھیں، 808 کی عمریں 18 سے 40 سال کے درمیان تھیں اور باقی 449 متاثرین تھے۔  اعداد و شمار کے مطابق مذکورہ سڑک ٹریفک حادثات میں 1209 موٹر سائیکلیں، 66 آٹو رکشے، 152 موٹر کاریں، 35 وین، 19 مسافر بسیں، 42 ٹرک اور 117 دیگر اقسام کی آٹو گاڑیاں اور سست رفتاری سے چلنے والی گاڑیاں شامل تھیں۔

اعداد و شمار سے پتہ چلتا ہے کہ لاہور میں 267 آر ٹی سیز رپورٹ ہوئے جن میں 293 افراد متاثر ہوئے جس میں صوبائی دارالحکومت فہرست میں سب سے اوپر ہے، اس کے بعد ملتان 100 متاثرین کے ساتھ 107 اور تیسرے نمبر پر فیصل آباد 85 آر ٹی سیز اور 86 متاثرین کے ساتھ تیسرے نمبر پر ہے۔



پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

آئی ایم ایف پروگرام پاکستان کی تاریخ کا آخری پروگرام ہو گا ، وزیر اعظم

وزیراعظم شہباز شریف نے کہا کہ اگر پوری قوم ذاتی دشمنیوں اور ذاتی مفادات کو ختم کرنے کا فیصلہ کر لے تو بہت جلد وہ مرحلہ آئے گا جس کا خواب بابائے قوم قائد اعظم محمد علی جناح نے دیکھا تھا

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

آئی ایم ایف پروگرام پاکستان کی تاریخ کا آخری پروگرام ہو گا ، وزیر اعظم

اسلام آباد: وزیر اعظم شہباز شریف نے کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں اور فلسطین میں جنگ کی مذمت کرتے ہوئے کشمیر اور فلسطین دونوں کے عوام کی آزادی کے لیے دعا کی ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ ہم  نے اپریل 2022 میں دوبارہ اقتدار سنبھالا تو معاشی صورتحال سب کے سامنے بالکل واضح تھی۔


انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ ن کی قیادت میں پی ڈی جی حکومت نے ملک کو ڈیفالٹ سے بچایا۔ انہوں نے صدر آصف علی زرداری، پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو، مولانا فضل الرحمان اور دیگر کا ذکر کیا جنہوں نے ملک کو ڈیفالٹ سے بچانے میں کردار ادا کیا ، انہوں نے مزید کہا کہ آئی ایم ایف کا پروگرام پاکستان کی تاریخ کا سب سے آخری پروگرام ہو گا ۔ 


وزیراعظم شہباز شریف نے کہا کہ ملک اب معاشی استحکام کی طرف بڑھ رہا ہے اور یہ صورتحال طاقتور لوگوں سے قربانی مانگتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ جب انہوں نے 8 فروری 2024 کو دوبارہ اقتدار سنبھالا تو انہوں نے مہنگائی کو کنٹرول کرنے کے لیے اقدامات کیے جو کہ اب 38 فیصد سے بڑھ کر 12 فیصد پر ہے۔

انہوں نے کہا کہ قرضوں پر 22 فیصد سود کی شرح اب 20 فیصد ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس طرح کی ترقی تحقیقات لائے گی اور ملک ترقی کی راہ پر گامزن ہو جائے گا۔ ۔ وزیر اعظم  نے کہا کہ  کہ عام آدمی کو کچھ ریلیف بھی فراہم کریں گے ۔

انہوں نے کہا کہ چار سالوں کے دوران عوام بالخصوص محنت کش طبقے کو مہنگائی کی وجہ سے بہت نقصان پہنچا۔ وزیر اعظم شہباز شریف نے کہا کہ وہ مہنگائی کو کم کرنے، کاروبار کو مضبوط کرنے اور نوجوانوں کو تعلیم دینے اور انہیں مالی خود مختاری کی طرف لانے کے لیے سخت محنت کریں گے۔

وزیراعظم شہباز شریف نے کہا کہ اگر پوری قوم ذاتی دشمنیوں اور ذاتی مفادات کو ختم کرنے کا فیصلہ کر لے تو بہت جلد وہ مرحلہ آئے گا جس کا خواب بابائے قوم قائد اعظم محمد علی جناح نے دیکھا تھا۔ 



 

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

وزیر اعظم کا قطری ا میر سے ٹیلیفونک رابطہ ، غزہ کی صورتحال پر تبادلہ خیال ، عید کی مبارکباد

دونوں رہنماؤں نے عید الاضحٰی کے تہوار کی اہمیت پر گفتگو کی جبکہ فلسطین کے بہادر اور مظلوم عوام کی حالت زار پر بھی تبادلہ خیال کیا

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

وزیر اعظم کا قطری ا میر سے ٹیلیفونک  رابطہ ،  غزہ کی صورتحال پر تبادلہ خیال ، عید کی مبارکباد

وزیراعظم محمد شہباز شریف نے عید الاضحٰی کے پرمسرت موقع پر قطر کے امیر شیخ تمیم بن حمد الثانی سے ٹیلی فونک رابطہ کرکے حکومت اور عوام کی جانب سے انہیں، حکومت قطر اور قطر کے برادر عوام کو تہہ دل سے عید الاضحٰی کی مبارکباد دی اور نیک خواہشات کا اظہار کیا۔

دونوں رہنماؤں نے عید الاضحٰی کے تہوار کی اہمیت پر گفتگو کی جبکہ فلسطین کے بہادر اور مظلوم عوام کی حالت زار پر بھی تبادلہ خیال کیا۔

انہوں نے عالمی برادری پر زور دیا کہ وہ فلسطین کے حوالے سے امن کی بحالی کی کوششوں کو بڑھائے اور خطے میں تشدد اور خونریزی کا فوری خاتمہ یقینی بنائے۔

وزیراعظم اور امیر قطر نے پاکستان اور قطر کے درمیان دوستی اور بھائی چارے کے رشتے کو مزید مضبوط بنانے کے عزم کا اعادہ کیا ۔ دونوں رہنماوں نے دو طرفہ تعلقات اور مختلف شعبوں میں تعاون کو مزید مضبوط بنانے کے طریقوں پر بھی تبادلہ خیال کیا۔

وزیراعظم نے تجارت، سرمایہ کاری اور محنت کے شعبوں میں پاکستان کے لئے قطر کی حمایت اور تعاون کو سراہا ، دونوں رہنماؤں نے خطے اور عالمی امن و استحکام اور خوشحالی کے فروغ کیلئے مل کر کام جاری رکھنے پر اتفاق کیا۔

وزیراعظم نے پاکستان کے سرکاری دورے کی دعوت قبول کرنے پر امیر قطر کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ ان کے دورہ پاکستان کی تاریخیں جلد طے کرلی جائیں گی۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll