جی این این سوشل

پاکستان

قومی اسمبلی میں نئی بھرتیوں پر پابندی، ٹیسٹ انٹرویو منسوخ

غیرقانونی بھرتیوں اور ترقیوں کی تحقیقات تک قومی اسمبلی میں نئی بھرتیاں نہیں ہوں گی، ذرائع

پر شائع ہوا

کی طرف سے

قومی اسمبلی میں نئی بھرتیوں پر پابندی، ٹیسٹ انٹرویو منسوخ
قومی اسمبلی میں نئی بھرتیوں پر پابندی، ٹیسٹ انٹرویو منسوخ

اسپیکر سردار ایاز صادق نے قومی اسمبلی میں نئی بھرتیوں پر پابندی لگا دی۔قومی اسمبلی سیکرٹریٹ میں آپریشن کلین اپ جاری ہے۔

رواں ماہ نئے اسٹنٹ ڈائریکٹرز سمیت دیگر پوسٹوں کے لیے ہونے والے ٹیسٹ انٹرویو منسوخ کردیے گئے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ غیرقانونی بھرتیوں اور ترقیوں کی تحقیقات تک قومی اسمبلی میں نئی بھرتیاں نہیں ہوں گی۔

ذرائع کے مطابق قومی اسمبلی میں غیر قانونی بھرتیوں اور سنگین بے ضابطگیوں پر سپیکر سردار ایاز صادق نے ایکشن لیتے ہوئے سپیشل سیکرٹری چوہدری مبارک کو ملازمت سے برطرف کر دیا۔

اسمبلی ذرائع کا کہنا ہے کہ ایڈیشنل سیکرٹری یاسین سلیمی معطل، چارج شیٹ کر دیا گیا جبکہ یاسین سلیمی نے بغیر کسی ٹریننگ اور ضابطے پورے کیے بغیر ترقی حاصل کی تھیں، غیر قانونی طور پر مستقل کیے جانے والے 17 افسران کو دوبارہ کنٹریکٹ پر کر دیا گیا اور ان افسران کے گریڈ کی تنزلی بھی کر دی گئی۔

مینیجربھرتی کیے جانے والے بعض افسران کی تنزلی کر کے انھیں ڈپٹی منیجر بنا دیا گیا اور سابق سپیکر راجہ پرویز اشرف کے قریبی عزیز کی مستقل ملازمت بھی کنٹریکٹ میں تبدیل کردی گئی جبکہ ایڈیشنل سیکرٹری یاسین سلیمی کے پی ایس سمیع کی بھی تنزلی کر دی گئی ہے۔

کئی ملازمین کو بغیر دستاویزات اور تعلیمی اسناد کے بھرتی کیا گیا،صرف ان کی فائلز میں آفر لیٹر لگے ہوئے ہیں،سپیکر کا کوئی بھی دباؤ قبول کرنے سے انکار ،کئی افسران و ملازمین کو 6 ماہ بعد ہی کنٹریکٹ سے مستقل کیا گیا تھا۔

سپیکر نے ترقیوں کے عمل میں متاثرہ ملازمین کےلیے شکایات سیل بھی بنا دیا،متاثرہ ملازمین کو سیل میں شکایات کے اندراج کا حکم دیدیا گیا۔

ترجمان قومی اسمبلی کا کہنا ہے کہ سپیکر نے قومی اسمبلی سیکرٹریٹ میں میرٹ اور شفافیت کو یقینی بنایا ہے۔

پاکستان

پنجاب حکومت کا تجاوزات مافیا کے خلاف کریک ڈاؤن

 وزیر اعلیٰ پنجاب مریم نواز نے ٹریفک کی رہنمائی کے لیے نصب سکرینوں کو بحال کرنے کا بھی حکم جاری کر دیا

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پنجاب حکومت کا تجاوزات مافیا کے خلاف کریک ڈاؤن

پنجاب حکومت کا ٹریفک میں حائل ریڑھیوں اور تجاوزات کو ختم کرنے کا فیصلہ 

لاہور:وزیر اعلیٰ پنجاب مریم نواز کی زیر صدارت ٹریفک مینیجمنٹ پر خصوصی اجلاس منعقد ہوا۔  
وزیر اعلیٰ پنجاب مریم نواز نے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے ٹریفک نظام کو درپیش مسائل اور ان کی درستی کے لائحہ عمل کا جائزہ لیا۔ 
دوران اجلاس یہ بات زیر بحث لائی گئی کہ روڈ کے اطراف میں موجود ریڑھیاں سڑک کے بند ہونے کی ایک بڑی وجہ ہیں، جس کی بدولت ٹریفک کی روانی بہت متاثر ہوتی ہے۔ اس بناء پر یہ فیصلہ کیا گیا کہ ایسی تمام ریڑھیاں ہٹا دی جائیں جو مصروف شاہراہوں پر ٹریفک کی روانی میں حائل ہوتی ہیں ۔ 
وزیر اعلیٰ مریم نواز شریف نے ہٹائے جانے والے ریڑھی بانوں کو اپنا کام جاری رکھنے کے لیے کوئی متبادل جگہ دینے کی ہدایات جاری کر دیں۔ 
وزیر اعلیٰ پنجاب مریم نواز نے ٹریفک کے نظام کو بہتر کرنے کے لیے لین اور لائن کے قواعد و ضوابط پر عملداری ممکن بنانے کی سخت ہدایات دیں۔ عوام کی آگاہی کے لیے مہم شروع کرنے کی تجویز بھی دی گئی۔  
وزیر اعلیٰ مریم نواز شریف نے سڑکوں پر موجود تجاوزات کو ہٹا کر سڑکوں کو کشادہ کرنے کے لیے موثر حکمت عملی اپنانے کی ہدایات جاری کر دیں۔ 
 وزیر اعلیٰ پنجاب مریم نواز نے ٹریفک کی رہنمائی کے لیے نصب سکرینوں کو بحال کرنے کا بھی حکم جاری کر دیا۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

بجٹ اجلاس، وزیر خزانہ محمد اورنگزیب کی جانب سے بجٹ پیش کیا جا رہا ہے

حکومت نے ترقیاتی بجٹ میں 101 فیصد کا اضافے کا اعلان

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

بجٹ اجلاس، وزیر خزانہ محمد اورنگزیب کی جانب سے  بجٹ پیش کیا جا رہا ہے

قومی اسمبلی کا اجلاس شروع ہوگیا اور وزیر خزانہ محمد اورنگزیب بجٹ پیش کررہے ہیں۔

بجٹ دستاویز کے مطابق حکومت کی جانب سے برآمد کرنے اور مقامی ضروریات پوری کرنے کے لیے سولر پینلز تیار کرنے کی غرض سے پلانٹ ، مشینری اور اس کے ساتھ منسلک آلات اور سولر پینلز، انورٹرز (Inverters) اور بیٹریوں کی تیاری میں استعمال ہونے والے خام مال اور پرزہ جات کی درآمد پر رعایتیں دی جارہی ہیں تاکہ درآمد شدہ سولر پینلز پر انحصار کم کیا جاسکے اور قیمتی زرمبادلہ بچایا جاسکے۔

وفاقی وزیر خزانہ محمد اورنگزیب نے بجٹ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حکومت نے ترقیاتی بجٹ میں 101 فیصد کا اضافہ کیا ہے، جاری سکیموں کیلئے 81 فیصد اور نئی سکیموں کیلئے 19 فیصد بجٹ دیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ آزاد جموں و کشمیر، انضمام شدہ اضلاع کیلئے ترقیاتی کام کیے جائیں گے، جاری ترقیاتی منصوبوں کو آئندہ مالی سال ترجیحی بنیادوں پر مکمل کیا جائے گا، 5 ایز کے تحت ایکسپورٹ، ایکویٹی، امپاورمنٹ، انوائرمنٹ اور انرجی پر توجہ دی جائے گی۔

انہوں نے کہا کہ گزشتہ حکومت کے اسٹینڈ بائی معاہدہ کرنے پر اس کی تعریف کرنا ہوگی، اسٹیڈ بائی معاہدے سے معاشی استحکام کی راہ ہموار ہوئی، اسٹینڈ بائی معاہدے سے غیر یقینی صورتحال کا خاتمہ ہوا، مہنگائی مئی میں کم ہوکر 12فیصد تک آگئی اور اشیائے خورد و نوش عوام کی پہنچ میں ہیں۔ آنے والے دنوں میں منہگائی میں مزید کمی کا امکان ہے، ہماری مالیاتی استحکام کی کوششیں ثمر آور ہورہی ہیں، سرمایہ کار متعدد شعبوں میں سرمایہ کاری کے مواقع تلاش کررہے ہیں۔

وفاقی حکومت نے بجٹ 25-2024  میں کم سے کم ماہانہ تنخواہ کو 32 ہزار روپے سے بڑھا کر 36  ہزار  روپے کردیا ہے۔ اس کے علاوہ حکومت کی جانب سے بجٹ میں سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں بھی اضافہ کردیا گیا ہے۔

بجٹ دستاویز کے مطابق گریڈ ایک سے 16 کے سرکاری ملازمین کی قوت خرید بہتر بنانے کے لیے تنخواہوں میں پچیس  فیصد اضافہ کیا جا رہا ہے جب کہ 17 سے 22 گریڈ تک افسران کی تنخواہوں بائیس اضافہ کیا جا رہا ہے۔ ریٹائرڈ ملازمین کی پنشن میں بائیس  فیصد اضافہ کرنے کی تجویز ہے۔ حکومت کی جانب سے  مالی سال 25-2024 کے بجٹ میں سولر پینل انڈسٹری کے فروغ کیلئے درآمد پر رعایت کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

وزیرخزانہ کی تقریر کے دوران اپوزیشن اراکین کا ایوان میں شور شرابہ جاری ہے اورسنی اتحاد کونسل کے ارکان کا اپنی نشستوں پر کھڑے ہو کر احتجاج اور نعرے لگا رہے ہیں۔

واضح رہے کہ  قومی اسمبلی میں مالی سال 25-2024 کا بجٹ پیش کیا جارہا ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

گرمی سے نجی بنک کی اے ٹی ایم مشین غیر فعال ، ہزارو ں صارفین خوار

سوشل میڈیا صارفین نے دلچسپ کمنٹس کرتے ہوئے لکھا کہ شاید مشین کو گرم موسم میں گرمی لگ گئی ہے، جس کی وجہ سے وہ اپنے غصے کا اظہار کر رہی ہے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

گرمی سے نجی بنک کی اے ٹی ایم مشین  غیر فعال ، ہزارو ں صارفین خوار

 

جہاں شدت کی گرمی نے ہر ذی روح کو پریشان کیا ہوا ہے، وہاں بے جان مشینیں بھی بے حال نظر آ رہی ہیں۔ 
سوشل میڈیا پر وائرل ایک ویڈیو میں اے ٹی ایم نے ایک صارف کو پیسے دینے کی بجائےنیچے زمین پر پھینک دیے۔ 
تفصیلات کے مطابق ایک صارف نے ایک نجی بنک کی اے ٹی ایم مشین میں رقم کے حصول کے لیے کارڈ ڈالا تو  تھوڑی دیر انتظار کے بعد اے ٹی ایم مشین نے  کارڈ باہر نکال دیا۔ اس کے ساتھ ہی پیسے اے ٹی ایم مشین کے ڈیش بورڈ میں رکنے کے بجائے حیرت انگیز طور پر پریشر سے نیچے فرش پر جا گرے۔ بظاہر ایسا لگا جیسے مشین نے غصے کا اظہار کرتے ہوئے پیسے پھینک دیے ہیں۔ 

سوشل میڈیا صارفین نے دلچسپ کمنٹس کرتے ہوئے لکھا کہ شاید مشین کو گرم موسم میں گرمی لگ گئی ہے، جس کی وجہ سے وہ اپنے غصے کا اظہار کر رہی ہے۔ 

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll