جی این این سوشل

دنیا

کشمیری حریت رہنما سید علی گیلانی انتقال کرگئے

سری نگر: سینیئر کشمیری حریت رہنما سید علی گیلانی انتقال کرگئے۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

کشمیری حریت رہنما سید علی گیلانی انتقال کرگئے
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

کشمیر میڈیا سروس کے مطابق 92 سالہ کشمیری رہنما سید علی گیلانی کا انتقال بدھ کی رات سری نگر میں ہوا، سید علی گیلانی طویل عرصے سے بیمار تھے۔

کشمیر میڈیا سروس کے مطابق ان کی رحلت کی تصدیق خاندان کے ایک فرد نے کی ہے سید علی گیلانی کئی برسوں سے گھر میں نظر بند تھے-

مسٹر گھمن ایک تجربہ کار صحافی ہیں جن کا پرنٹ، الیکٹرانک اور ڈیجیٹل میڈیا میں 19 سال کا متنوع تجربہ ہے۔ انہوں نے 92 نیوز ایچ ڈی، ڈیلی پاکستان ٹوڈے، ڈیلی دی بزنس، ڈیلی ڈان، ڈیلی ٹائمز اور پاکستان آبزرور کے ساتھ بطور نیوز رپورٹر، فیچر رائٹر، ایڈیٹر، ویب کنٹینٹ ایڈیٹر اور آرٹیکل رائٹر کے طور پر کام کیا۔ مسٹر گھمن نے بہاؤالدین زکریا یونیورسٹی ملتان سے گریجویشن کیا ہے اور اس وقت پنجاب یونیورسٹی میں ماس کمیونیکیشن میں ایم فل کی تعلیم حاصل کر رہے ہیں۔

صحت

 اومیکرون کی علامات ڈیلٹا قسم سے بہت زیادہ مختلف ہیں

کورونا وائرس کی نئی قسم اومیکرون سے متاثر ہونے والے افراد میں بیماری کی علامات ڈیلٹا قسم سے بہت زیادہ مختلف ہیں۔

پر شائع ہوا

Umar Nawaz

کی طرف سے

 اومیکرون کی علامات ڈیلٹا قسم سے بہت زیادہ مختلف ہیں

تفصیلات کے مطابق کورونا کی نئی قسم سے متاثر افراد کی نبض کی رفتار بہت تیز ہوجاتی ہے جس کی وجہ خون میں آکسیجن کی سطح میں کمی اور سونگھنے یا چکھنے کی حس سے محرومی ہوتی ہے۔

جنوبی افریقی ڈاکٹر کا کہنا ہے کہ اومیکرون کی علامات مختلف ہیں جو ڈیلٹا کی نہیں ہوسکتیں، بلکہ یہ علامات یا تو بیٹا سے ملتی جلتی ہیں یا یہ کوئی نئی قسم ہے، مجھے توقع ہے کہ اس نئی قسم کی بیماری کی شدت معمولی یا معتدل ہوگی، ابھی تک تو ہم اسے سنبھالنے کے لیے پراعتماد ہیں۔

جنوبی افریقی ماہرین صحت کا کہنا ہے کہ ہسپتال میں داخل ہونے والے زیادہ تر افراد وہ ہیں جن کی ویکسینیشن نہیں ہوئی اور ابتدائی شواہد سے عندیہ ملتا ہے کہ ان میں بیماری کی شدت ماضی جیسی ہی ہے۔

عالمی ادارہ صحت کی جانب سے اس نئی قسم کا تجزیہ کیا جارہا ہے اور اس کا کہنا ہے کہ ابھی اس کے متعدی ہونے اور بیماری کی شدت کے حوالے سے کچھ کہنا قبل از وقت ہوگا۔

عالمی ادارے نے دنیا بھر کی حکومتوں سے اومیکرون کے لیے بڑے پیمانے پر ٹیسٹنگ شروع کرنے کا کہا ہے۔

 

 

 

 

 

پڑھنا جاری رکھیں

جرم

پب جی گیم پر دوستی اور شادی کا جھانسہ،لڑکی مبینہ زیادتی کاشکار

لاہور: لڑکوں نےپب جی گیم پرلڑکی سے دوستی کی اور شادی کا جھانسہ دے کر مبینہ طور پر زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔

پر شائع ہوا

Ali Raza

کی طرف سے

پب جی گیم پر دوستی اور شادی کا جھانسہ،لڑکی مبینہ زیادتی کاشکار

تفصیلات کے مطابق لڑکوں نے پب جی گیم پرلڑکی سے دوستی کی اور شادی کا جھانسہ دے کر مبینہ طور پر زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔تھانہ نارتھ کینٹ میں حارث حسن اور وحید کے خلاف مقدمہ درج کرلیا گیا۔

آیف آئی آر کے مطابق  حارث نے لڑکی کو شادی  کا جھانسہ دے کر کراچی سے لاہور بلوایا، حارث نے نجی ہوٹل میں تین روز تک لڑکی کو مبینہ  زیاددتی کا نشانہ بنایا اور چھوڑ کر بھاگ گیا۔

 ریلوے اسٹیشن پر حسن اور وحید نامی دو لڑکوں نے متاثرہ لڑکی کو نوکری کا جھانسہ دیا،  حسن اور وحید نے سرور رو ڈکے  ایک گھر میں بھی  لڑکی کو زیاددتی کا نشانہ بنایا، لڑکی نے بھاگ کر جان بچائی۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

پاکستان کی او آئی سی کو افغان صورتحال پر اسلام آباد میں اجلاس کرنے کی پیشکش 

اسلام آباد: وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے  کہ ہم نے او آئی سی کو 17 دسمبر 2021 کو اسلام آباد میں اجلاس کی میزبانی کی پیشکش بھی کی ہے، ہم پراعتماد ہیں کہ او آئی سی رکن ممالک اس پیشکش کی تائید کریں گے۔

پر شائع ہوا

Umar Nawaz

کی طرف سے

پاکستان کی او آئی سی کو افغان صورتحال پر اسلام آباد میں اجلاس کرنے کی پیشکش 

تفصیلات کے مطابق وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ افغانستان او آئی سی کا بانی رُکن ہے، اسلامی امہ کا حصہ ہونے کی حیثیت سے ہم افغانستان کے عوام کے ساتھ اخوت وبھائی چارے کے دائمی برادرانہ رشتوں میں بندھے ہیں۔

شاہ محمود قریشی  نےکہا کہ آج ہمارے افغان بھائیوں اور بہنوں کو ہمیشہ سے بڑھ کر ہماری ضرورت ہے، آپ آگاہ ہیں کہ افغانستان اس وقت سنگین انسانی صورتحال سے دوچار ہے۔

 وزیر خارجہ نے کہا کہ لاکھوں افغان جن میں خواتین اور بچے بھی شامل ہیں جن کو خوراک، ادویات اور دیگر ضروری اشیاءکی فراہمی کی قلت کی بناءپر ایک غیریقینی مستقبل کا سامنا ہے۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ سردیوں کی آمد نے اس انسانی المیہ کو مزید گھمبیر بنادیا ہے، او آئی سی کو افغان بھائیوں کی مدد کے لئے آگے بڑھنا ہوگا۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ افغان عوام کی انسانی ضروریات کو پورا کرنے کی ہماری اجتماعی کوششوں کو تیز کرنا ہوگا، انہیں فوری اور مسلسل مدد فراہم کرنا ہوگی۔

شاہ محمود قریشی کا مزید کہنا تھا کہ افغانستان کی صورتحال پر او آئی سی کی وزرا خارجہ کونسل کا پہلا غیرمعمولی اجلاس جنوری 1980 میں اسلام آباد میں منعقد ہوا تھا، افغان عوام کے ساتھ دائمی بھائی چارے اور ان کی حمایت میں اگلے ماہ ایک بار پھر ہم اسلام آباد میں جمع ہوں گے۔

 

 

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll