جی این این سوشل

پاکستان

 ’ پہلی تھری سٹار جنرل کی بطور کرنل کمانڈنٹ اے ایم سی پاکستان کے لیے قابل فخر ہے ‘

راولپنڈی : آئی ایس پی آر کے مطابق آرمی چیف نے اے ایم سی کی پہلی خاتون کرنل کمانڈنٹ لیفٹیننٹ جنرل نگار جوہر کو بیج لگائے۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

 ’ پہلی تھری سٹار جنرل کی بطور کرنل کمانڈنٹ اے ایم سی پاکستان کے لیے قابل فخر ہے ‘
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر ) کی جانب سے جاری کردہ بیان کے مطابق  آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے  آرمی میڈیکل سینٹر ایبٹ آباد کا دورہ کیا، آرمی چیف نے یاد گار شہدا پر حاضری دی، پھول چڑھائے اور فاتحہ خوانی کی۔

ترجمان پاک فوج کے مطابق  آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے اے ایم سی کی پہلی خاتون کرنل کمانڈنٹ لیفٹیننٹ جنرل نگار جوہر کو بیج لگائے۔ آرمی چیف نے امن اور جنگ کے ماحول میں صحت کی سہولیات دینے میں اے ایم سی کے کردار کو سراہا۔

آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ  آرمی چیف نے کورونا وبا کے دوران آرمی میڈیکل کور کے کردار کی تعریف کی، پہلی تھری سٹار جنرل کی بطور کرنل کمانڈنٹ اے ایم سی پاکستان کے لیے قابل فخر ہے۔

علی رضا گزشتہ ڈیڑھ سال سے ویب جرنلسٹ کے طور پر کام کر رہے ہیں۔ انہوں نے پنجاب یونیورسٹی سے گریجویشن کیا ہے۔ علی رضا اس سے قبل معروف نیوز آرگنائزیشنز کے لیے کام کر چکے ہیں اور اب جی این این کے ساتھ بطور سینئر کنٹینٹ رائٹر وابستہ ہیں۔

تفریح

پاکستان کی پہلی حجابی گلوکارہ ایوا بی کے نئے گانے نے سوشل میڈیا پردھوم مچادی

کوک اسٹوڈیو سین 14 کی دوسری قسط میں ایک بلوچی پاپ سانگ’کنا یاری‘ ریلیز کیا گیا ہے۔

پر شائع ہوا

Shehroz Azhar

کی طرف سے

پاکستان کی پہلی حجابی گلوکارہ ایوا بی  کے نئے گانے نے سوشل میڈیا پردھوم مچادی

عالمی شہرت یافتہ پاکستانی میوزک شو ’کوک اسٹوڈیو‘ کے سیزن 14 نئے گانے’کنا یاری‘میں متعارف کروائے گئے کئی نئے چہروں میں ملک کی پہلی حجابی گلوکارہ ایوا بی بھی شامل ہیں۔

کوک اسٹوڈیو سین 14 کی دوسری قسط میں ایک بلوچی پاپ سانگ’کنا یاری‘ ریلیز کیا گیا ہے۔

اس گانے کے مرکزی گلوکار کیفی خلیل ہیں جبکہ عبدالوہاب بگٹی نے تمبورا بجایاہے ۔

ایوا بی نے اپنے پہلے انٹرویو میں اپنے نام کے معنی خصوصی طور بتائے تھے۔

اُنہوں نے اپنے انٹرویو میں بتایا تھا کہ’اُن کےنام کا پہلا حصّہ ایوا، زمین کی پہلی خاتون حوا کو خراج تحسین پیش کرتا ہےاور وہ خعد بھی ملک کی خواتین کی ریپنگ کمیونٹی (female rapping community) میں پہلی خاتون ہیں‘۔ 

جبکہ اُن کے نام کا شامل کردہ خط بی(B)  اُن کی بلوچ شناخت کو ظاہر کرتا ہے۔

انہوں نے حال ہی میں کوک اسٹوڈیو سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ ’وہ ایمینیم کا ایک گانا سننے کے بعد فوری طور پر ریپ گانوں کی طرف راغب ہو گئی تھیں‘۔

اُنہوں نے مزید کہا کہ ’اُنہوں  نے کبھی نہیں سوچا تھا کہ موسیقی اس انداز میں بھی ہو سکتی ہے‘۔

اُنہوں نے حجاب پہننے کی وجہ بتاتے ہوئے کہا کہ’ وہ اپنی شناخت کو حجاب کے نیچے پوشیدہ رکھتی ہے کیونکہ اس طرح وہ گمنام ہونے کے باوجود بااختیار محسوس کرتی ہیں‘۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

صدارتی نظام کیخلاف مسلم لیگ ن کی قرارداد جمع

صدارتی نظام کے خلاف قومی اسمبلی سیکریٹریٹ میں جمع کروائی قرارداد میں کہا گیا ہے کہ وفاقی پارلیمانی نظام سیاسی نظام کی اساس ہے۔

پر شائع ہوا

Shehroz Azhar

کی طرف سے

صدارتی نظام کیخلاف مسلم لیگ ن کی قرارداد جمع

پاکستان مسلم لیگ ن نے ملک میں صدارتی نظام کے خلاف قومی اسمبلی سیکریٹریٹ میں قرارداد جمع کروا دی۔

تفصیلات کے مطابق مسلم لیگ ن کے رہنما اور سابق وزیرداخلہ احسن اقبال کی جانب سے صدارتی نظام کے خلاف قومی اسمبلی سیکریٹریٹ میں جمع کروائی قرارداد میں کہا گیا ہے کہ وفاقی پارلیمانی نظام سیاسی نظام کی اساس ہے۔

وفاق پاکستان کی سالمیت اور مضبوطی کا انحصار پارلیمانی نظام کی مضبوطی میں ہے،  تمام جمہوری قوتیں مسائل کا حل آئین پاکستان کی سربلندی اور حکمرانی اور عمل درآمد پر سمجھتی ہیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

مری ،گلیات، کشمیر سمیت دیگر مقامات پر برف باری، لینڈ سلائیڈنگ کا امکان، الرٹ جاری

اسلام آباد: پاکستان میٹریلوجیکل ڈیپارٹمنٹ نے ہفتے اور اتوار کو موسم کی غیر یقینی صورتحال کی الرٹ جاری کردی۔

پر شائع ہوا

Ali Raza

کی طرف سے

مری ،گلیات، کشمیر سمیت دیگر مقامات پر برف باری، لینڈ سلائیڈنگ کا امکان، الرٹ جاری

تفصیلات کے مطا بق پاکستان میٹریلوجیکل ڈیپارٹمنٹ نے ہفتے اور اتوار کو موسم کی غیر یقینی صورتحال کی الرٹ جاری کردی ہے۔ لاہور، گوجرانولہ ،فیصل آباد، سیالکوٹ، پنڈی میں تیز بارشوں کا امکان ہے۔

پاکستان میٹریلوجیکل ڈیپارٹمنٹ کے مطابق  مری ،گلیات، کشمیر سمیت دیگر مقامات پر برف باری لینڈ سلائیڈنگ کا امکان ہے، تمام متعلقہ اداروں کو  الرٹ رہنے کی ہدایت جاری کردی گئیں ۔

سی ٹی او راولپنڈی وسیم ریاض کا کہنا ہے کہ مکینیکلی فٹ گاڑی اور لائسنس ہولڈر ڈرائیورز کو ہی مری جانے کی اجازت ہوگی،جبکہ مری آنے والے سیاح موسم کی شدت اور رش کی صورتحال کو مدنظر رکھیں۔مری  میں شام 5 سے صبح 5 بجے تک سیاحوں کے مری میں داخلے پر پابندی ہوگی،جبکہ   8 ہزارسے زائد گاڑیوں کو داخلے کی اجازت نہیں ہوگی۔ مری کے داخلی راستوں پرخصوصی چیکنگ پکٹس قائم کی گئی ہیں۔

سی ٹی او  نے کہا کہ سیاح  گاڑی میں اضافی گرم کپڑے اور کھانے پینے کی اشیاء ضرور رکھیں،  گاڑی میں ہیٹرکے استعمال اور شیشوں کو مکمل بند کرنے سے کاربن مونو آکسائیڈ پیدا ہوتی ہے۔انہوں نے کہا کہ  دوران برفباری گاڑی خراب ہونے یا برف میں پھنسنے پر گاڑی میں رات گزارنے سے اجتناب کریں۔ برفباری کے دوران  سلپری روڈ ہونے کے باعث گاڑیوں کے ٹائروں پر چین کا استعمال کریں اور  برف ہٹانے والی مشینوں کو فوری راستہ دیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll