جی این این سوشل

پاکستان

عمران خان اب تاریخ کا حصہ بن چکے ہیں ، مریم نواز

لاہور: مریم نواز کا کہنا ہے کہ وزیرا عظم عمران خان اب تاریخ کا حصہ بن چکے ہیں ،  عمران خان اب تاریخ کے طور پر پڑھائے جائیں گے جو عوامی تاریخ کی بجائے سازش اور پلانز پر انحصار کرتے رہے۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

عمران خان اب تاریخ کا حصہ بن چکے ہیں ، مریم نواز
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ایک ٹویٹ میں مسلم لیگ ن  کی نائب صدر مریم نواز نے کہا ہے کہ  عمران خان کے الفاظ سے اپنے اور تحریک انصاف کے مستقبل کے حوالے سے ناکامی اور بد اعتمادی جھلک رہی تھی ، وزیرا عظم عمران خان اب تاریخ کا حصہ بن چکے ہیں ،  عمران خان اب تاریخ کے طور پر پڑھائے جائیں گے جو عوامی تاریخ کی بجائے سازش اور پلانز پر انحصار کرتے رہے ، عمران خان نا صرف شکست خوردہ بلکہ شکست کو تسلیم کیے ہوئے شخص نظر آئے ،  حکومت میں چار سال گزار   کرعمران خان رو کر فریاد کرتے نظر آئے ، جن مافیاز کی عمران خان شکایتیں کرتے ہیں وہ تو انکے دائیں بائیں کھڑے ہیں،  مافیاز دراصل عمران خان کا کچن چلاتے رہے ۔

 مریم نواز  نے مزید لکھا کہ  جو جھوٹے مقدمے شریف خاندان اور مسلم لیگ ن کے خلاف بنائے گئے وہ اب اپنے انجام کو پہنچ رہے ہیں ،  اب عمران خان کی حقیقت پوری دنیا پر عیاں ہوچکی ہے ، عمران خان اب عدلیہ کو مورد الزام مت ٹھہرائیں ،  عمران خان کے پاس انتقام اور بدلے کے سوا کچھ نہیں ،  عمران خان کی دم توڑتی امیدیں بھی عوام کیلئے ایک امید ہے ۔

پاکستان

نئے چئیرمین نیب کیلئے حکومتی اتحاد جسٹس (ر)مقبول باقرکے نام پر متفق 

اسلام آباد: حکومتی اتحادی جماعتوں کی جانب سے چیئرمین قومی احتساب بیورو (نیب)   کیلئےجسٹس ریٹائرڈ مقبول باقر کے نام پر اتفاق ہوگیا ۔ 

پر شائع ہوا

Asma Rafi

کی طرف سے

نئے چئیرمین نیب کیلئے حکومتی اتحاد جسٹس (ر)مقبول باقرکے نام پر متفق 

ذرائع کے مطابق چیئرمین نیب جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال کی جگہ نئے چیئرمین نیب  کیلئے سپریم کورٹ کے سابق جج جسٹس ریٹائرڈ مقبول باقر کے نام پر حکومتی اتحادی جماعتوں میں آپس میں اتفاق کیا گیا ہے۔

مسلم لیگ ن ،  پیپلز پارٹی اور دیگر اتحادی جماعتوں کے مابین نئے چیئرمین نیب کے نام پربا ضابطہ مشاورت ہوئی جس میں جسٹس (ر) مقبول باقر کے نام پر اتفاق کیا گیا ۔  سابق صدر آصف علی زرداری اور سابق وزیر اعظم نواز شریف نے بھی اس نام پر اتفاق کیا ہے ۔

جسٹس (ر) مقبول باقرسندھ ہائی کورٹ سےسپریم کورٹ میں پروموٹ ہوئے تھے جبکہ فوادحسن فواد کے نام پر حکومتی اتحادیوں میں اتفاق نہیں ہوسکا تھا ۔ ابتدائی طور پر فواد حسن فواد،جسٹس امیر مسلم ہانی ،   قمر الزماں اور بشیر میمن کے نام  بھی زیر غور لائے گئے ۔

ذرائع کے مطابق قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر اور پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے منحرف رکن راجہ ریاض بھی جسٹس ریٹائرڈ مقبول باقر کے نام پر اتفاق کریں گے اور اگر کوئی رکاوٹ نہ آئی تو وہی نئے چیئرمین نیب ہوں گے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ وزیراعظم اور اپوزیشن لیڈر کے درمیان اتفاق کے بعد چیئرمین نیب کے نام کی سمری صدر کو ارسال کردی جائے گی۔

یاد رہے کہ موجودہ چیئرمین جسٹس (ر) جاوید اقبال کے عہدے کی مدت 2 جون کو ختم ہورہی ہے۔

 

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

لاہور بورڈ؛ 25 مئی کو ملتوی ہونے والے میٹرک کے پیپر کی تاریخ کا اعلان

لاہور بورڈ نے 25 مئی کو لانگ مارچ کی وجہ سے ملتوی ہونے والے میٹرک کے پیپر کی تاریخ کا اعلان کردیا۔

پر شائع ہوا

Raja Sheroz Azhar

کی طرف سے

لاہور بورڈ؛ 25 مئی کو ملتوی ہونے والے میٹرک کے پیپر کی تاریخ کا اعلان

لاہور بورڈ کی جانب سے جاری اعلامیہ میں کہاگیا ہے کہ میٹرک مطالعہ پاکستان کا ملتوی ہونے والا پیپر11 جون کو لیا جائے گا ،امیدواروں کو ایک گھنٹہ قبل امتحانی سنٹر پہنچنے کی ہدایت کردی گئی،صبح کی شفٹ میں 8 بجے اور دوپہر کی شفٹ میں 1 بجے پیپر شروع ہوگا۔

یاد رہے کہ مذکورہ پیپر 25 مئی کو لانگ مارچ کی وجہ سے ملتوی کیا گیا تھا ، رواں سال اڑھائی دو لاکھ ستر ہزار بچے میٹرک کے امتحان میں شریک ہوئے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

عمران خان سے منسوب باتوں کا حقیقت سے کوئی لینا دینا نہیں، شہباز گل

عمران خان سے متعلق ملک ریاض اور آصف زرداری کی مبینہ آڈیو کی پاکستان تحریک انصاف نے تردید کردی۔

پر شائع ہوا

Raja Sheroz Azhar

کی طرف سے

عمران خان سے منسوب باتوں کا حقیقت سے کوئی لینا دینا نہیں، شہباز گل

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے رہنما شہباز گل کا کہنا ہے کہ کاروباری شخص اور عمران خان کے مخالف سیاستدان آپس میں بات چیت کر رہے ہیں۔

شہباز گل نے کہا کہ بات چیت میں عمران خان سے منسوب باتوں کاحقیقت سے کوئی لینا دینا نہیں ہے۔

رہنما پی ٹی آئی نے کہا کہ عمران خان کو کسی این آر او کی ضرورت نہیں، یہ تمام لوگ خان سے این آر او مانگتے رہے تھے جو انہیں نہیں ملا۔

واضح رہے کہ ملک ریاض کی سابق صدر آصف علی زرداری کے ساتھ گفتگو کی مبینہ آڈیو سامنے آئی ہے، جس میں وہ عمران خان سے متعلق گفتگو کررہے ہیں۔

ملک ریاض آڈیو میں یہ کہتے سنائی دے رہے ہیں کہ ’خان کے پیغامات آرہے ہیں کہ مصالحت کروادیں‘۔

مبینہ آڈیو میں ملک ریاض کے ’اسلام علیکم سر‘ اور آصف زرداری کے ’وعلیکم اسلام، خیریت ‘ سے گفتگو کا آغاز ہوا۔

ملک ریاض نے بات کو آگے بڑھاتے ہوئے کہا کہ سر بس بتانا تھا، میں نے پہلے بھی آپ کو بتایا تھا، باتیں آپ سے کرنی ہیں، آپ نے کہا تھا بات نہیں کریں گے۔

پراپرٹی ٹائیکون نے آصف علی زرداری سے گفتگو کے دوران مزید کہا کہ ’آپ کو انفارمیشن دینی تھی، خان کے پیغامات آرہے ہیں کہ مصالحت کروادیں‘۔

ملک ریاض نے یہ بھی کہا کہ ’آج تو اُس نے مجھے بہت ہی مسیجز کیے ہیں کہ پیچ اپ کروادیں‘۔

پی پی کے شریک چیئرمین نے جواب دیا کہ اب امپاسیبل ہے نہ۔

اس پر ملک ریاض نے آخری جملہ یہ کہتے سنائی دے رہے ہیں کہ ’ نہیں ٹھیک ہے، بس آپ کے سامنے بات رکھ دی‘۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll