جی این این سوشل

پاکستان

وزیراعظم آج رات قوم سے خطاب کریں گے

اسلام آباد: وزیر اعظم عمران خان ملک کی بدلتی صورتحال کے پیش نظر آج رات قوم سے خطاب کریں گے۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

وزیراعظم آج رات قوم سے خطاب کریں گے
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

تفصیلات کے مطابق  وفاقی وزیر فواد چوہدری کی جانب سے  اس حوالے سے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ایک بیان بھی جاری کیا گیا ہے۔

 فواد چوہدری نے اپنے پیغام میں  لکھا کہ وزیراعظم عمران خان کا آج رات قوم سے خطاب کریں گے۔

 

دوسری جانب وفاقی وزیر برائے  داخلہ شیخ رشید احمد کا بھی کہنا ہے کہ آج وزیراعظم عمران خان خطاب کریں گے، ان کاکہناتھا کہ آج ڈھائی بجے قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس ہو گا۔

پاکستان

غلامی سے موت بہتر ہے، عوام اگلی کال کا انتظار کریں، عمران خان

رحیم یار خان : چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے کہا ہے کہ غلامی سے موت بہتر ہے، عوام اگلی کال کا انتظار کریں پاکستانی عوام سیلاب متاثرین کی بھرپور مدد کریں۔ اللہ کا شکر ہے میری قوم میں شعور آرہا ہے۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

غلامی سے موت بہتر ہے، عوام اگلی کال کا انتظار کریں، عمران خان

ان خیالات کا اظہار انہوں نے رحیم یار خان میں ایک بڑے جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کیا، انہوں نے کہا کہ سارے پاکستانیوں سے کہتا ہوں کہ سیلاب متاثرین کی جتنی بھی کوشش ہوسکے مدد ضرورکریں۔

جلسے سے خطاب میں عمران خان کا کہنا تھا کہ غلامی سے موت بہتر ہے، عوام اگلی کال کا انتظار کریں، جب میں نے کہا کہ اسلام آباد میں جلسہ کروں گا تو راناثنااللہ نے دھمکیاں شروع کردیں، راناثنا اللہ سن لو اب کی بار کپتان پوری پلاننگ کرکے آئے گا۔

عمران خان نے کہا کہ 8گھنٹے میں پاکستانیوں نے سیلاب متاثرین کیلئے14ارب روپے دیئے ہیں، قوم کو اعتماد ہوجائے کہ ان کا پیسہ درست جگہ پر خرچ ہورہا ہے تو وہ دل کھول کرچندہ دیتی ہے، ہمارے پاکستانی دنیا بھر میں دل کھول کرمدد کرنے والے لوگ ہیں۔

انہوں نے کہا کہ انگریز بھی دو سال میں اردو سیکھ لیتا ہے لیکن افسوس ہوا ہمارے کرائم منسٹر اور اردو سیکھنے والے بلاول بھٹو امریکا گئے ہوئے ہیں، سیلاب متاثرین پریشان ہیں اوریہ لوگ یہاں سے اٹھ کرامریکا چلے گئے ہیں۔

سابق وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ دنیا بھر سے لوگ سیلاب متاثرین کیلئے یہاں مدد کیلئے آرہے ہیں جبکہ یہ لوگ امریکا میں مہنگے ترین ہوٹلز میں قیام رکھے ہوئے ہیں، ایک طرف بھیک مانگنے جارہا ہے اور شو مارنے کیلئے مہنگے ہوٹلز میں رکے ہوئے ہیں۔

عمران خان نے کہا کہ اللہ تعالیٰ کا شکر ہے کہ میری قوم میں شعور آرہا ہے، میں وزیراعظم بننے سے زیادہ اس بات کا شکر گزار ہوں کہ میری قوم باشعورہوگئی ہے۔

عمران خان نے کہا کہ دونوں مریموں کے پاس جھوٹ بولنے کی پی ایچ ڈی ہے، جاوید لطیف کے ذریعے پریس کانفرنس کرائی گئی کہ جیسے میں نے مذہب کی توہین کی ہو، ان کی کوشش ہے کہ میرے پرجو بھی واردات ہوگی تو کہیں گے کہ مذہبی جنونی نے اقدام اٹھایا۔

ان کا کہنا تھا کہ عمران خان کو نااہل کرانے کی انہوں نے پوری کوشش کی، یہ لوگ عمران خان سے ڈرتے ہیں اسی لیے الیکشن سے بھاگ رہے ہیں، ان سب کو معلوم ہے کہ عمران خان آئندہ الیکشن جیت جائیں گا،

چیئرمین پی ٹی آئی نے کہا کہ یہ لوگ30سال سے کرپشن کررہے ہیں اور ایک دوسرے پر کرپشن کے کیسز بنائے، آج یہ باری باری اپنے کیسز ختم کرا رہے ہیں اور باریاں لے رہے ہیں۔ اگرکوئی یہ سمجھتا ہے ہم بھیڑبکریوں کی طرح چپ کرکے تماشہ دیکھیں گے تو ایسا ممکن نہیں، جب تک میری میں جان ہے ان کیخلاف نکلوں گا اور قوم کو بھی نکالوں گا۔

پڑھنا جاری رکھیں

علاقائی

اسلام آباد : ڈینگی سے متاثرہ مریضوں کی تعداد میں اضافہ 

اسلام آباد: وفاقی دارالحکومت میں ڈینگی کے وار بے قابو،  ڈینگی سے جاں بحق ہونیوالوں کی  تعداد پانچ  جبکہ متاثرہ مریضوں کی تعداد میں اضافہ ہوا  ہے ۔ 

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

اسلام آباد :  ڈینگی سے متاثرہ مریضوں کی تعداد میں اضافہ 

جی این این   کے مطابق   اسلام آباد میں گزشتہ چوبیس گھنٹوں میں ڈینگی  سے 85 افراد متاثر ہوئے  ،  اسلام آباد میں ڈینگی کی مجموعی تعداد  1819 تک جا پہنچی   ہے ۔ 

وفاقی دارالحکومت  کے شہری علاقوں میں  گزشتہ  24  گھنٹے کے دوران  ڈینگی کے 31 کیسز رپورٹ ہوئے ہیں ۔ 

ڈی ایچ او کے مطابق  شہر کے دیہی علاقوں میں ڈینگی کے  1102 مریض ہیں ،  گزشتہ چوبیس گھنٹے کے دوران ڈینگی سے 54 کیسز رپورٹ ہوئے ہیں ۔ 

اسلام آباد کے پمز ہسپتال میں گزشتہ چوبیس گھنٹے کے دوران ڈینگی کے 18 افراد میں ڈینگی کی تشخیص   ہوئی  جس کے بعد پمز ہسپتال میں ڈینگی کے کل مریضوں کی تعداد 276 تک جا پہنچی ہے۔  

ڈی ایچ او  کے مطابق  پولی کلینک میں ڈینگی کے 72 جبکہ کیپٹل اسپتال میں 39 مریض زیر علاج ہیں۔ 

خیال رہے کہ پاکستان میں ڈینگی کا پہلا کیس 1994 ء میں کراچی میں سامنے آیا لیکن بڑے پیمانے پر ڈینگی بخار 2010ء اور 2011ء میں نمودار ہوا ۔  ایک محدود اندازے کے مطابق 2011ء میں 370 کے قریب  مریض جان سے ہاتھ دھو بیٹھے جبکہ 15ہزار افراد اس سے متاثر ہوئے ۔
 

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

ہم امریکا سے مضبوط تعلقات چاہتے ہیں: وزیراعظم

وزیراعظم شہباز شریف کا کہنا ہےکہ عمران خان کے امریکا مخالف بیانات سے دوطرفہ تعلقات کو نقصان پہنچا، عمران خان کی سوچ عام پاکستانی کی سوچ نہیں ہے۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

ہم امریکا سے مضبوط تعلقات چاہتے ہیں: وزیراعظم

امریکی خبر رساں ایجنسی کو انٹرویو دیتے ہوئے شہباز شریف کا کہنا تھا کہ پاکستان کے امریکا کے ساتھ تعلقات اتار چڑھاؤ کا شکار رہے ہیں، عمران خان کے امریکا مخالف بیانات سے دوطرفہ تعلقات کو نقصان پہنچا، عمران خان کی سوچ عام پاکستانی کی سوچ نہیں ہے، پچھلی حکومت نے جوکچھ کیا وہ پاکستان کے مفادات کے لیے نقصان دہ ہے، ہماری حکومت امریکا کے ساتھ مضبوط تعلقات کی خواہاں ہے۔

شہباز شریف کا کہنا تھا کہ  موسمی تغیرات کے باعث پاکستان کو سیلاب کا سامنا ہے، پاکستان میں سیلاب سے 3 کروڑ 30 لاکھ افراد براہ راست متاثر ہوئے ہیں۔  روس، یوکرین جنگ کے باعث دنیا کو تیل اور  اناج کے بحران کا سامناکرنا پڑا، سیلاب کی وجہ سے پاکستان کو لاکھوں ٹن گندم درآمد کرنی پڑسکتی ہے،  ابتدائی تخمینے کے مطابق پاکستان کو سیلاب سے 30 ارب ڈالرکا نقصان ہوا، سیلاب سے پاکستان کا ایک تہائی حصہ متاثر ہوا، سیلاب سے 40 لاکھ ایکڑ سے زائد رقبے پرکھڑی فصلیں تباہ ہوئیں، بچوں سمیت 1600افراد جاں بحق ہوئے، ہزاروں کلومیٹر سمیت انفرا اسٹرکچر شدید متاثر ہوا۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ عالمی برادری ہماری مدد کرے تاکہ سیلاب متاثرین کی بحالی یقینی بنائی جاسکے، یواین سیکرٹری جنرل نے ڈونرز کانفرنس فوری بلانےکی میری تجویز سے اتفاق کیا ہے، پاکستان کو سیلاب متاثرین کے ذریعہ معاش کے لیے فنڈز کی ضرورت ہے، پاکستان کا گلوبل وارمنگ میں حصہ ایک فیصد سے بھی کم ہے، پاکستان کو دوسرے ملکوں کی وجہ سے موسمیاتی تبدیلیوں کا سامنا ہے، موسمیاتی تبدیلیوں سے نہ نمٹا گیا تو کل کسی اور ملک کوبھی آفت کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے، پاکستان کوبھی دیگر ملکوں کی طرح مشکلات درپیش ہیں، سیلاب نے مسائل بڑھادیے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ بھارت پڑوسی ملک ہے اورپاکستان پرُ امن پڑوسی ملک کے طور پر رہنا چاہتا ہے، دنیا پر واضح کیا ہےکہ پاکستان بھارت کے ساتھ پر امن تعلقات کا خواہاں ہے، تاہم بھارت کو 2019 کے بعدکے اقدامات کو تبدیل کرنا ہوگا۔

افغانستان کے حوالے سے وزیراعظم کا کہنا تھا کہ طالبان کو خواتین کے حقوق کی پاسداری یقینی بنانی ہوگی، افغانستان کے منجمد اثاثوں کو فوری بحال کیا جانا چاہیے، افغانستان میں پر امن حالات پاکستان میں بھی امن کی ضمانت ہیں، خواتین کو تعلیم اور ملازمت کے یکساں مواقع ہونے  چاہئیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll