جی این این سوشل

پاکستان

تحقیقات میں وزارت داخلہ سمیت کسی ادارے نے مداخلت نہیں کی، FIA کا سپریم کورٹ میں جواب

وفاقی تحقیقاتی ایجنسی (ایف آئی اے) نے سپریم کورٹ میں جواب جمع کرایا ہے کہ تحقیقات میں وزارت داخلہ سمیت کسی ادارے نے مداخلت نہیں کی۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

تحقیقات میں وزارت داخلہ سمیت کسی ادارے نے مداخلت نہیں کی، FIA کا سپریم کورٹ میں جواب
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

ایف آئی اے نے اہم شخصیات کے مقدمات میں مبینہ مداخلت کے کیس میں اپنا جواب سپریم کورٹ میں جمع کرا دیا ہے۔ 
 
ایف آئی اے کی جانب سے جمع کرائے گئے جواب میں کہاگیا ہے کہ  کچھ شخصیات کے نام تحقیقات مکمل نہ ہونے کے باوجود 7 ۔ 8 سال سے ایگزٹ کنٹرول لسٹ میں تھے، نئی حکومت نے قوانین میں ترمیم کی، اس کے بعد ہی نام ای سی ایل سے نکالے گئے۔

جواب میں کہا گیا ہے کہ دہشت گردی، سنگین جرائم اور قومی سلامتی سے متعلق جرائم کرنے والوں کے نام ای سی ایل سے نہیں نکالے گئے۔ 
 
ایف آئی اے کی رپورٹ کے مطابق وزارت داخلہ سمیت کسی ادارے کی بھی ایف آئی اے تحقیقات میں مداخلت نہیں کی،ایف آئی اے کی درخواست پر فاروق باجوہ کو پراسیکوٹر تعینات کیا گیا۔

ایف آئی اے حکومت، عدالتوں اور تحقیقاتی اداروں کی سفارش پر ای سی ایل میں نام ڈالتی ہے،حکومت کی جانب سے حال ہی میں ای سی ایل رولز میں ترمیم کی گئی۔

رپورٹ میں مزید بتایا گیا ہے کہ منشیات کے مقدمات اور بڑے پیمانے پر فراڈ کرنے والوں کے نام ای سی ایل سے نہیں نکالے گئے۔

کھیل

آئی سی یو میں داخل ظہیر عباس کی حالت بہتر ہونے لگی

لندن: انتہائی نگہداشت وارڈمیں داخل پاکستان کےمعروف سابق ٹیسٹ کرکٹر ظہیر عباس کی طبعیت میں بہتری آنے لگی ہے۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

آئی سی یو میں داخل ظہیر عباس کی حالت بہتر ہونے لگی

ظہیر عباس کی اہلیہ ثمینہ عباس نے نجی چینل سے گفتگو میں بتایا کہ ڈاکٹرز نے بہتر نگہداشت کے لیے ظہیر جو آئی سی یو میں رکھا ہوا ہے، ظہیر عباس دبئی میں کورونا کا شکار ہوئے تھے، پی سی آر  ٹیسٹ کا نتیجہ منفی آنے پر گزشتہ اتوار لندن منتقل کیا گیا تھا۔

انہوں نے مزید بتایا کہ اب ان کی طبیعت میں بہتری آنا شروع ہوگئی ہے، ڈاکٹرز نے بہتر نگہداشت کے لیے انہیں ابھی تک آئی سی یو میں ہی رکھا ہوا ہے، ضرورت پڑنے پر  دوسرے اسپتال منتقلی کا حتمی فیصلہ ڈاکٹرز کریں گے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

آصف زرداری سے گزارش ہے کہ ہماری باتوں کو سنجیدہ لیں:وسیم اختر

کراچی:متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کے رہنما وسیم اختر نے پیپلز پارٹی کے شریف چیئرمین آصف زرداری سے درخواست کی ہے کہ ان کی باتون کو سنجیدہ لیا جائے۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

آصف زرداری سے گزارش ہے کہ ہماری باتوں کو سنجیدہ لیں:وسیم اختر

تفصیلات کے مطابق ایم کیو ایم پاکستان نے سکھر، میرپور خاص اور نواب شاہ میں الیکشن رکوانے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ اس وقت 14 اضلاع میں دھاندلی کا بازار گرم ہے۔

انہوں نے کہا کہ آصف زرداری سے گزارش ہے کہ ہماری باتوں کو سنجیدہ لیں، سندھ حکومت ابھی بھی اختیارات نیچے دینے میں ہچکچا رہی ہے، بلدیاتی نظام کا مسودہ اب بن گیا ہے تو اسے قانون کی شکل دیں۔

وسیم اختر نے کہا کہ اگرسندھ بلدیاتی ایکٹ نہیں بنتا توکسی چیز میں بھی حصہ نہیں لیں گے اوررابطہ کمیٹی کےذریعے اپنا بہترفیصلہ کرنےپرمجبورہوں گے، الیکشن کمیشن ہمارے خدشات کا نوٹس لے، ہم نہیں چاہتے کہ الیکشن کمیشن پر انگلیاں اٹھیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

صحت

کورونا: مثبت کیسز میں اضافہ، کراچی میں شرح 21.71 فیصد پہنچ گئی

اسلام آباد: عالمی وبا قرار دیے جانے والے کورونا وائرس کے ملک میں 406 کیسز رپورٹ ہوئے ہیں جب کہ شہر قائد میں کورونا متاثرین کی شرح 21.71 فیصد ریکارڈ کی گئی ہے جو کہ پورے ملک میں سب سے زیادہ ہے۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

کورونا: مثبت کیسز میں اضافہ، کراچی میں شرح 21.71 فیصد پہنچ گئی

جی این این کے مطابق قومی ادارہ صحت (این آئی ایچ) کی جانب سے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک بھر میں 406 کورونا کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز پورے ملک میں کورونا کے 435 کیسز رپورٹ ہوئے تھے جو کہ 22 مارچ کے بعد سبے زیادہ مثبت کیسز تھے۔

این آئی ایچ کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 14 ہزار 437 کورونا ٹیسٹس کیے گئے جن میں مثبت شرح 2.81 فیصد ریکارڈ کی گئی۔ کورونا متاثرین میں سے دو افراد کی اموات بھی ریکارڈ کی گئی ہیں۔

اعداد و شمار کے حوالے سے بتایا گیا ہے کہ کورونا متاثرین میں سے 94 مریضوں کی حالت انتہائی تشویشناک قرار دی گئی ہے جب کہ گزشتہ روز ایسے مریضوں کی تعداد 87 تھی۔

این آئی ایچ کی جانب سے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق کراچی میں کورونا متاثرین کی شرح 21.71 فیصد ریکارڈ ہوئی ہے جب کہ مردان 8.77 فیصد کے ساتھ دوسرے اور 8.51 فیصد کے ساتھ حیدرآباد تیسرے نمبر پر رہا ہے۔

وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں کورونا مثبت کیسز کی شرح 3.45 فیصد اور پشاور میں مثبت کیسز کی شرح 3 فیصد ریکارڈ کی گئی ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll