جی این این سوشل

پاکستان

ممنوعہ فنڈنگ کیس کی تحقیقات میں تعاون نہ کرنے والے کو گرفتار کریں گے: وزیرداخلہ

اسلام آباد:وفاقی وزیر داخلہ رانا ثناء اللہ نے کہا ہےکہ جو ممنوعہ فنڈنگ کی تحقیقات میں نہیں کرے گا، اس کو گرفتار کریں گے۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

ممنوعہ فنڈنگ کیس  کی تحقیقات میں  تعاون نہ کرنے والے کو گرفتار کریں گے: وزیرداخلہ
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

وفاقی وزیر داخلہ رانا ثناء اللہ نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ  ممنوعہ فنڈنگ کی تحقیقات میں جو تعاون نہیں کرے گا اس کو گرفتار کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ فارن فنڈنگ کے مجرم 8 سال سے قانونی ٹچ سے بھاگ رہے ہیں، اسلامی ٹچ دینے والے فنکاروں کو اب قانونی ٹچ کی ضرورت ہے۔

وزیر داخلہ نے سابق وزیر اعظم کو ہدف تنقید بناتے ہوئے کہا کہ عالمی بنارسی ٹھگ غیر ملکیوں سے غیر قانونی ڈالر لیتے پکڑے گئے ہیں، فارن فنڈنگ کیس سے پتہ چلا کہ عمران نیازی کتنا گندا کردارہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ شہدا کے خلاف نفرت انگیز مہم چلانے والے گندے اور گھٹیا کردارہیں، جعلی صادق اور امین کی اصلیت قوم کے سامنے آگئی۔

علاقائی

حیدرآباد: انڈس ہائی وے پر ٹریفک حادثہ ، 10افراد جاں بحق 

حیدرآباد: انڈس ہائی وے  پر خوفناک   ٹریفک حادثے  میں 10افراد جان کی بازی ہار گئے ۔ 

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

حیدرآباد: انڈس ہائی وے پر ٹریفک  حادثہ ، 10افراد جاں بحق 

تفصیلات کے مطابق حیدر آباد میں مانجھند کے قریب مسافر کوچ  اور ٹرک میں تصادم کے نتیجے  میں 10افراد جاں بحق   ہوگئے جبکہ 15  افراد زخمی   ہیں ۔

ریسکیو ذرائع کے مطابق  جاں بحق افراد میں  دو خواتین اور دو بچے بھی شامل ہیں۔

پولیس حکام کا بتانا ہے کہ حادثے میں کوچ اور ٹرک دونوں کےڈرائیور بھی جاں بحق ہوگئے جبکہ زخمیوں کو لمس اسپتال جامشورو منتقل کر دیاگیا ہے۔

ریسکیو ذرائع کے مطابق جاں بحق افراد کی شناخت  محمد اشرف، عتیق الرحمان اور اجمل، جاوید، حسنین، عظمہ، نورین، راشد، طارق اور پہلوان کے نام سے ہوئی ہے ۔ 

پولیس کے مطابق  حادثے کا شکار بس کراچی سے پنجاب جارہی تھی، جبکہ   جاں بحق افراد کا تعلق بہاولپور  سے ہے۔ 

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

فیصل واوڈا کیس میں تسلیم کیا گیا غلطی ہوئی، نااہلی بنتی ہے مگر تاحیات نہیں، چیف جسٹس

سپریم کورٹ میں فیصل واوڈا کی تاحیات نااہلی کیخلاف کیس کی سماعت چیف جسٹس پاکستان کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے کی، چیف جسٹس عمر عطا بندیال نے ریمارکس دئیے کہ اس کیس میں تسلیم کیا گیا کہ غلطی ہوگئی نااہلی بنتی ہے مگر تاحیات نہیں۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

فیصل واوڈا کیس میں تسلیم کیا گیا غلطی ہوئی، نااہلی بنتی ہے مگر تاحیات نہیں، چیف جسٹس

 

وکیل فیصل واوڈا وسیم سجاد نے دلائل دئیے کہ الیکشن کمیشن کورٹ آف لا نہیں اس لیے نااہلی کا فیصلہ نہیں دے سکتا، چیف جسٹس نے کہا کہ تاحیات نااہلی صادق اور امین کے اصول پر پورا نہ اترنے پر ہوتی ہے، اثاثے چھپانے یا غلطی کرنے پر آرٹیکل 63 ون سی کے تحت نااہلی ایک مدت تک ہوتی ہے۔

وکیل نثار کھوڑو فاروق ایچ نائیک نے کہا کہ فیصل واوڈا کا سارا جھگڑا سینیٹ کی نشست کا ہے، وکیل فیصل واوڈا وسیم سجاد نے کہا کہ فیصل واوڈا نے نہ حقائق چھپائے نہ کوئی بدیانتی کی۔

جسٹس منصور علی شاہ نے سوال کیا کہ فیصل واوڈا نے کاغذات نامزدگی کب جمع کرائے؟ وکیل نے جواب دیا کہ فیصل واوڈا نے کاغذات نامزدگی 7 جون 2018 کو جمع کرائے اور ان پر اسکروٹنی 18 جون کو ہوئی۔

جسٹس منصور علی شاہ نے پوچھا کہ فیصل واوڈا نے بیان حلفی کب جمع کرایا تھا؟ وکیل نے بتایا کہ فیصل واوڈا نے بیان حلفی 11 جون 2018 کو جمع کرایا، ریٹرننگ افسر کو بتا دیا تھا کہ امریکی شہریت چھوڑ دی ہے، امریکن کونسلیٹ جا کر نائیکاپ کینسل کرایا۔

جسٹس عائشہ ملک نے استفسار کیا کہ آپ نے کس تاریخ کو امریکی سفارت خانے میں جا کر نیشنیلٹی منسوخ کرائی؟ وکیل نے جواب دیا کہ امریکی سفارت خانے جا کر کہہ دیا تھا کہ نیشنیلٹی چھوڑ رہا ہوں۔

جسٹس منصور علی شاہ نے پوچھا کہ کیا آپ نے ایمبیسی جا کر زبانی بتا دیا کہ میرا پاسپورٹ کینسل کر دو؟ وکیل نے جواب دیا کہ امریکی شہریت چھوڑنے کا ثبوت میں نے تو نہیں دینا تھا، جسٹس منصور علی شاہ نے کہا کہ بیان حلفی 11 جون کو جمع کرانے سے پہلے آپ نے زحمت ہی نہیں کی کہ دوہری شہریت کا معاملہ ختم کریں؟ وکیل نے دلائل دئیے کہ نادرا نے 29 مئی 2018 کو امریکی شہریت کینسل ہونے کا سرٹیفکیٹ دیا تھا۔
جسٹس عائشہ ملک نے سوال کیا کہ جب آپ نے امریکی سفارت خانے جا کر شہریت کینسل نہیں کرائی تو نادرا نے سرٹیفکیٹ کیسے جاری کر دیا؟

عدالت نے فیصل واوڈا کے وکیل کو الیکشن کمیشن کے دائرہ اختیار سے متعلق مزید تیاری کی ہدایت کرتے ہوئے کیس کی سماعت 13 اکتوبر تک ملتوی کردی۔

یاد رہے کہ رواں سال فروری میں الیکشن کمیشن نے فیصل واوڈا کو جھوٹا بیان حلفی جمع کرانے پر نااہل قرار دیا تھا

الیکشن کمیشن نے فیصلے میں کہا تھا کہ وہ جھوٹا حلف نامہ جمع کراوانے کے مرتکب ہوئے۔ فیصل واوڈا سنہ 2018 کا الیکشن لڑنے کے وقت اہلیت نہیں رکھتے تھے۔

پڑھنا جاری رکھیں

تجارت

ڈالر کی قیمت میں مسلسل کمی کا سلسلہ جاری

انٹربینک میں ڈالر مسلسل 10 ویں روزسستا ہوا ہے۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

ڈالر کی قیمت میں مسلسل کمی کا سلسلہ جاری

جمعرات کوانٹربینک میں ڈالر1روپے94 پیسے سستا ہو کر222 روپے پرآگیا۔ دن کے اختتام پر انٹر بینک میں ڈالر 2 روپے سستا ہوکر 221 روپے 94 پیسے پر بند ہوا۔10 روز میں انٹر بینک میں ڈالر کی قیمت 17 روپے 77 پیسے نیچے آگئی ہے۔

اوپن کرنسی مارکیٹ میں ڈالر 3 روپے سستا ہوکر 224 روپے کا ہوگیا۔

بدھ کو کاروباری اوقات کار کے اختتام پر ڈالر کی قدر 225 روپے 64 پیسے سے گھٹ پر 223 روپے 94 پیسے ہوگئی۔

حکومتی اقدامات کے باعث گزشتہ ہفتے سے ڈالر کی قدر میں کمی کا سلسلہ جاری ہے۔ رواں ہفتے کے دوران ڈالر کی قدر میں ساڑھے 5 روپے کم ہوئی ہے۔

چند روز قبل وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے کہا تھا کہ ڈالر کی قدر کو 200 روپے سے نیچے لایا جائے گا کیوں کہ اس وقت مارکیٹ میں ڈالر کی قدر حقیقی نہیں۔

اس کےعلاوہ گزشتہ روز قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی میں 8 ایسے بینکوں کی فہرست بھی پیش کی گئی تھی جو ڈالر کی قدر میں پیر پھیر کرکے اربوں روپے کمانے میں مبینہ طور پر ملوث ہیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll