جی این این سوشل

پاکستان

ہم بحرانوں سے کیوں دوچار ہوئے جس میں سب سے بڑا معاشی بحران ہے، وزیر اعظم

وزیر اعظم شہباز شریف کا کہنا ہے کہ ہم نے پاکستان کو ایسا نہیں بنایا جس سے قائد اور دیگر رہنماؤں کی روحیں مسرور ہوں، ہم نے ان دونوں کے اصل مقاصد کو اپنایا نہیں۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

ہم بحرانوں سے کیوں دوچار ہوئے جس میں سب سے بڑا معاشی بحران ہے، وزیر اعظم
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

قوم سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ ہم اپنے بچوں کو وہ سب کچھ نہیں دے سکے جس کے وہ حقدار ہیں، ہم بحرانوں سے کیوں دوچار ہوئے جس میں سب سے بڑا معاشی بحران ہے۔

شہباز شریف نے کہا کہ یہی وہ قوم ہے جس نے ذوالفقار علی بھٹو کی قیادت  میں وسائل نہ ہونے کے باوجود ایٹمی پروگرام شروع کیا، یہی وہ قوم ہے جس نے نواز شریف کی قیادت میں ایٹمی پروگرام کو مکمل کیا۔

وزیر اعظم نے کہا کہ اسی مہینے ارشد ندیم اور نوح بٹ نے کامیابیاں حاصل کر کے قوم کا سر فخر سے بلند کیا، اسی قوم نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں کامیابی حاصل کی، اب قوم کو تقسیم در تقسیم کیا جا رہا ہے، قوم کی وحدت کو پارہ پارہ کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے۔

شہباز شریف نے کہا کہ پچھلی حکومت نے فیصلوں کے قوم کو مزید مشکلات میں مبتلا کردیا ہے۔

پاکستان

آرمی چیف جنرل قمرجاوید باجوہ سے کینیڈا کی ہائی کمشنر کی الوداعی ملاقات

آرمی چیف جنرل قمرجاوید باجوہ سے پاکستان میں کینیڈا کی ہائی کمشنر وینڈی گلمور نے الوداعی ملاقات کی ہے۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

آرمی چیف جنرل قمرجاوید باجوہ سے کینیڈا کی ہائی کمشنر کی الوداعی ملاقات

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کے مطابق ملاقات میں مختلف شعبوں میں تعاون کے فروغ ، باہمی دلچسپی اور خطے کی سیکیورٹی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

آئی ایس پی آر کے مطابق کینیڈین ہائی کمشنرنے پاکستان میں سیلاب کی تباہی پردکھ کااظہار کیا اور متاثرہ علاقوں میں پاک فوج کی ریسکیو اور ریلیف کوششوں کوسراہا۔

ترجمان پاک فوج کے مطابق آرمی چیف نے مضبوط باہمی تعلقات کیلئے کینیڈین ہائی کمشنر کی خدمات کو سراہا جبکہ وینڈی گلمور نے پاکستان میں سیلاب کی تباہی پر دکھ کا اظہار کرتے ہوئے پاکستانی عوام کو کینیڈا کی مکمل حمایت کی یقین دہانی کرائی۔

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے پاکستان کی حمایت اور مدد پر کینیڈا کا شکریہ ادا کیا۔ کہا متاثرین کی بحالی کے لئے عالمی شراکت داروں کی مدد اہم ہوگی۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

مجھے کہا جاتا ہے جن لوگوں نےکرپشن کی انہیں معاف کردیں : عمران خان

لاہور: چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کا کہنا ہے کہ اگر ظلم،ناانصافی کا مقابلہ نہیں کرتے تو ہم اور  بھیڑ بکریوں میں کوئی فرق نہیں۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

مجھے  کہا جاتا ہے جن لوگوں نےکرپشن کی انہیں معاف کردیں : عمران خان

تفصیلات کے مطابق ان خیالات کا اظہار پی ٹی آئی چیئرمین نے لاہور میں منعقدہ مشائخ وعلما کنونشن سے خطاب کے دوران کیا، عمران خان نے کہا کہ یہ ملک اس وقت آگے بڑھے گا جب ہم نبیﷺ کے اصولوں پر چلیں، علما میرے ساتھ ملکر ملک کی حقیقی آزادی کیلئے جہاد لڑیں۔

انہوں نے علما کو بڑی قوت قرار دیتے ہوئے کہا کہ علمائے کرام نے قائداعظم کی مدد کی جس کے نتیجے میں پاکستان وجود میں آیا۔

مشائخ وعلما کنونشن سے خطاب میں عمران خان نے کہا کہ آنیوالے دنوں میں آپ سب کو اپنے ملک کیلئے فرض اداکرنا ہوگا،میں علمائے کرام کو کہتا ہوں کہ وہ لوگوں میں کم از کم نبیﷺ کی سیرت اور سنت جگائیں، علما لوگوں کو بتائیں کہ عدل ،انصاف اور انسانیت کیا ہوتی ہے، یہ وقت ایسا ہے کہ ہم تیزی سے نیچے جارہےہیں۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ آپ جس دن چوری کو معاف کرنا شروع کردیں تو معاشرہ تباہ ہوجاتاہے،اگر آپ ظلم،ناانصافی کا مقابلہ نہیں کرتے تو ہم اور بھیڑ بکریوں میں کوئی فرق نہیں۔

سابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ مجھے باربارکہا جاتا ہے کہ آپ ضدی ہیں،  جن لوگوں نےکرپشن کی انہیں چھوڑدیں معاف کردیں، جب میں حکومت میں تھا تو کہا جاتا تھا کہ انہیں این آراو دےدو، یاد رکھیں کہ ہم چوروں کو تسلیم کرینگے تو ہم ملک کے مستقبل کی قبر کھود رہےہیں۔

اس سے قبل عمران خان نے گورنمنٹ کالج یونیورسٹی لاہور میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کا سب سے بڑا فراڈیا اسحاق ڈار واپس آرہا ہے، وہ وزیراعظم کے جہاز میں بیٹھ کر علاج کے بہانے ملک سے بھاگ گیا اور اب ڈیل کے تحت واپس آ رہا ہے۔

چیئرمین پی ٹی آئی کا مزید کہنا تھا کہ اب نئی آڈیو لیکس آگئیں، جس میں ثابت ہوگیا کہ چیف الیکشن کمشنر نواز شریف کے گھر کا نوکر ہے، اس سے پوچھ رہا ہے کہ کسے نااہل کرانا ہے اور عمران کو توشہ خانہ کیس میں نااہل کردوں گا، اس میں شرم و حیا ہے تو مستعفی ہوجائے، لیکن اس میں شرم نہیں اس لیے ہمیں اسے مستعفی کروانا پڑے گا۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

چاند نظر نہیں آیا، 12 ربیع الاول اتوار 9 اکتوبر کو ہوگی

ملک میں ربیع الاول 1444 ہجری کا چاند  نظر نہیں آیا۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

چاند نظر نہیں آیا، 12 ربیع الاول اتوار 9 اکتوبر کو ہوگی

مرکزی رویت ہلال کمیٹی کا اجلاس مولانا عبدالخبیر آزاد کی زیر صدارت کوئٹہ میں ہوا جس میں دیگر ارکان اور محکمہ موسمیات کے نمائندوں نے شرکت کی۔

 ملک میں کہیں سے بھی چاند نظر آنے کی شہادتیں نہیں ملیں جس کے بعد اعلان کیا گیا۔

چیئرمین مرکزی رویت ہلال کمیٹی کے مطابق ملک میں ربیع الاول کا چاند نظر نہیں آیا، یکم ربیع الاول 28 ستمبر بدھ کے روز ہوگی اور 12 ربیع الاول اتوار 9 اکتوبر کو ہوگی۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll