جی این این سوشل

پاکستان

پاک فضائیہ کی جانب سے سیلاب متاثرین میں 02 ماہ کا راشن تقسیم

راولپنڈی : پاک فضائیہ کی جانب سے متاثرینِ سیلاب میں 02 ماہ کا راشن تقسیم کردیا گیا ہے۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

پاک فضائیہ کی جانب سے سیلاب متاثرین میں 02 ماہ کا راشن تقسیم
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

ترجمان پاک فضائیہ کے مطابق پاک فضائیہ کی جانب سے خیبرپختونخوا ، سندھ، بلوچستان اور جنوبی پنجاب کے سیلاب متاثرین کی بحالی کا عمل بھرپور طریقے سے جاری ہے ۔

ترجمان نے بتایا کہ پاک فضائیہ نے سیلاب متاثرین کی امداد کے لئے دو ماہ کا راشن تقسیم کیا تاکہ سیلاب سے متاثرہ علاقوں میں بحالی کا کام مکمل ہونے تک متاثرینِ سیلاب کو خود کفیل کیا جاسکے۔

ترجمان کا کہنا ہے کہ پاک فضائیہ کے فیلڈ میڈیکل کیمپوں میں سیلاب متاثرین کو مفت ادویات اور طبی امداد بھی فراہم کی جارہی ہے۔

ترجمان پاک فضائیہ نے مزید بتایا کہ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران پاک فضائیہ کی ایمرجنسی ریسپانس ٹیموں نے ضرورت مند خاندانوں میں 16650 پکے ہوئے کھانے کے پیکٹ ، 750 پانی کی بوتلیں اور 777 خشک راشن کے پیکٹ تقسیم کیے  جبکہ پاک فضائیہ کی میڈیکل ٹیموں نے 920 مریضوں کا طبی معائنہ بھی کیا۔

پاکستان

آرمی کو آپ جیسا قابل سربراہ ملنا اللہ کا خاص فضل ہے، وزیر اعظم

اسلام آباد: وزیر اعظم شہباز شریف کا کہنا ہے کہ پاکستان آرمی کو آپ جیسا پیشہ وارانہ قابلیت کا حامل سربراہ ملنا اللہ کا خاص فضل ہے۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

آرمی کو آپ جیسا قابل سربراہ ملنا اللہ کا خاص فضل ہے، وزیر اعظم

وزیر اعظم شہباز شریف نے آرمی چیف جنرل عاصم منیر کو ٹیلی فون کیا اور عہدہ سنبھالنے پر مبارکباد ہیش کی۔

ٹیلی فونک گفتگو میں وزیر اعظم نے کہا کہ بہادر پاکستان آرمی کے سپہ سالار کا منصب سنبھالنا بڑا اعزاز ہے، آپ کی قیادت میں پاک فوج کی صلاحیتوں اور دفاع وطن کی قوت میں مزید اضافہ ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ ملکی سلامتی، دہشت گردی کے خاتمے اور سکیورٹی چیلنجز سے نمٹنے میں اللہ آپ کی مدد فرمائے، وطن عزیز کے دفاع، سلامتی اور تحفظ کے لیے ہمارا بھرپور تعاون آپ کو میسر رہے گا۔

آرمی چیف جنرل عاصم منیر نے نیک تمناؤں کے اظہار پر وزیر اعظم شہباز شریف کا شکریہ ادا کیا۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

عمران خان کو پرویز الٰہی اسمبلی مدت پوری کرنیکا مشورہ دیں گے، ملاقات 24 گھنٹوں میں متوقع

لاہور: چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان سے ملاقات میں وزیراعلیٰ پنجاب چودھری پرویز الٰہی اسمبلی کی مدت پوری کرنے کا مشورہ دیں گے۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

عمران خان کو پرویز الٰہی اسمبلی مدت پوری کرنیکا مشورہ دیں گے، ملاقات 24 گھنٹوں میں متوقع

میڈیا رپورٹس کے مطابق  ق لیگ کے مرکزی رہنما اور وزیراعلیٰ پنجاب چودھری پرویز الٰہی اسمبلی تحلیل کرنے کے فیصلے کے خلاف ہیں۔

وزیراعلیٰ صوبہ پنجاب میں شروع کیے گئے ترقیاتی کاموں کو مکمل کرانا چاہتے ہیں کیونکہ ان کے خیال میں منصوبے ادھورے چھوڑنے کا نقصان ہو گا جب کہ حکومتی مدت پوری کرنے کا فائدہ پی ٹی آئی کو ہو گا۔

وزیراعلیٰ پنجاب چودھری پرویز الٰہی اگر سابق وزیراعظم عمران خان کو دیے جانے والے مشورے پر راضی نہ کرسکے تو پھر اسمبلی تحلیل کردیں گے۔

چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان اور وزیراعلیٰ پنجاب چودھری پرویز الٰہی کے درمیان ملاقات آئندہ 24 گھنٹوں کے دوران متوقع ہے۔

وزیراعلیٰ پنجاب کے ترجمان نے کہا ہے کہ چودھری پرویز الٰہی واپس لاہور پہنچ گئے ہیں لیکن آج ان کی چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان سے ملاقات نہیں ہو گی، دونوں رہنماؤں کے درمیان ملاقات کل متوقع ہے۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز عمران خان کی زیر صدارت پی ٹی آئی کی سینئر لیڈر شپ کے منعقدہ اجلاس کے حوالے سے میڈیا بریفنگ دیتے ہوئے ہیڈ آف میڈیا افیئرز فواد چودھری نے بتایا تھا کہ وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان سے چیئرمین کی آج ملاقات ہو گئی ہے جب کہ وزیراعلیٰ پنجاب سے کل ہو گی۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

سود کا کاروبار کرنے والے اداروں کا بائیکاٹ کریں، مفتی تقی عثمانی

کراچی: مفتی تقی عثمانی نے کہا ہے کہ عوام سود کا کاروبار کرنے والے اداروں کا بائیکاٹ کریں۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

سود کا کاروبار کرنے والے اداروں کا بائیکاٹ کریں، مفتی تقی عثمانی

 

مفتی تقی عثمانی نے سود کے خاتمے سے متعلق سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سود کے خاتمے سے متعلق عدالتی فیصلے کا خیرمقدم کرتے ہیں اور سفارشی کمیشن کی ہرگز ضرورت نہیں ہے۔

انہوں نے کہا کہ سفارشات پر عمل درآمد کے لیے بااختیار ٹاسک فورس کی ضرورت ہے اور عوام سود کا کاروبار کرنے والے اداروں کا بائیکاٹ کریں۔ نظریاتی اختلافات کا دائرہ علمی حلقوں تک محدود ہونا چاہیے۔

مفتی تقی عثمانی نے کہا کہ سود کو ختم کرنے کے لیے متفقہ آواز اٹھانی ہے جبکہ حکومت کو سود کے خاتمے کے لیے عملی کوششیں کرنی چاہیئیں اور بلاسود بینکاری کو عملی طور پر لاگو کیا جائے۔

انہوں نے کہا کہ فورم سود کے خاتمے کے لیے عملی اقدامات کا مطالبہ کرتا ہے اور سود کے خاتمے کے خلاف اپیلیں واپس نہ لینے والے بینکوں کا بائیکاٹ کیا جائے۔ ملک کی 3عدالتیں سود کے خلاف فیصلے دے چکی ہیں۔

مفتی تقی عثمانی نے کہا کہ وزارت خزانہ میں غیر سودی نظام کے لیے ڈویژن قائم کیا جائے اور وزارت خزانہ میں سود کے خاتمے کے لیے ٹاسک فورس بنائی جائے۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll