جی این این سوشل

پاکستان

اکتوبر، نومبر کے مہینے خطرناک ہیں، منظور وسان کا دعویٰ

کراچی: پیپلز پارٹی کے رہنما منظور وسان نے دعویٰ کیا ہے کہ رواں سال اکتوبر اور نومبر کے مہینے بڑے خطرناک ہیں۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

اکتوبر، نومبر کے مہینے خطرناک ہیں، منظور وسان کا دعویٰ
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

 

منظور وساں جو اپنے خواب دیکھنے کے حوالے سے مشہور ہیں۔ انہوں نے اکتوبر اور نومبر کے حوالے سے ایک اور دعویٰ کر دیا۔

پیپلز پارٹی رہنما منظور وسان نے کہا کہ ملک میں نئے انتخابات 2023 میں ہوں گے اور یہ بھی ہوسکتا ہے کہ انتخابات ایک سال کے لیے بڑھا دیئے جائیں۔

انہوں نے کہا کہ پرانے چہرے تھوڑا آرام کریں گے اور نئے چہرے جیلوں میں جائیں گے۔ حکومت اور اسٹیبلشمنٹ دونوں متحرک ہوں گی۔

منظور وسان نے کہا کہ ملک میں اب بہت سارے راز بھی فاش ہوں گے اور رواں سال اکتوبر، نومبر کے مہینے بڑے خطرناک ہیں۔

 
 

پاکستان

وزیرِ اعظم کی غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ ختم کرنے اور بجلی چوروں سے سختی سے نمٹنے کی ہدایت

نقصان میں چلنے والے فیڈرز پر بھی لوڈشیڈنگ کا دورانیہ کم کیا جائے، شہباز شریف

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

وزیرِ اعظم کی غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ ختم کرنے  اور بجلی چوروں سے سختی سے نمٹنے کی ہدایت

وزیرِ اعظم شہباز شریف نے ملک بھر میں غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ ختم کرنے کا حکم دے دیا۔

شہباز شریف کی زیرِ صدارت لوڈشیڈنگ اور بجلی چوری روکنے کے امور پر اجلاس ہوا جس میں وزارتِ توانائی نے  بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ صرف خسارے میں چلنے والے فیڈرز پر لوڈشیڈنگ کی جا رہی ہے۔

وزیرِ اعظم شہباز شریف نے غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ ختم کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ نقصان میں چلنے والے فیڈرز پر بھی لوڈشیڈنگ کا دورانیہ کم کیا جائے۔گرمی کی شدت کے باعث لوگوں کو پریشانی کا سامنا ہے، بجلی کی چوری روکنا تمام متعلقہ اداروں کی ذمے داری ہے، لوگوں کو گرمی میں ریلیف دیا جائے۔

انہوں نے کہا کہ بجلی کی چوری کرنے والوں سے سختی سے نمٹا جائے گا ، بجلی چوری کے خلاف مشن کو منطقی انجام تک پہنچائیں گے اور بجلی چوری کا مکمل خاتمہ کریں گے ، میں ذاتی طور بجلی چوری کی روک تھام پر پیشرفت کا ماہانہ جائزہ لوں گا ۔

وزیرِ اعلیٰ خیبر پختون خوا علی امین گنڈاپور سے ہونے والی ملاقات پر بھی اجلاس کو بریف کیا گیا۔ بتایا گیا کہ وزیرِ اعلیٰ کے پی نے بجلی چوری کم کرنے کی یقین دہانی کرائی ہے۔

 

پڑھنا جاری رکھیں

علاقائی

وزیراعلیٰ پنجاب کا گندم کی خریداری میں کسانوں کو براہ راست سبسڈی دینے کا اعلان

گندم خریداری میں گھپلوں کے خاتمے کےلئے ڈائریکٹ کسان کو سبسڈی دیں گے، مریم نواز

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

وزیراعلیٰ پنجاب کا گندم کی خریداری میں کسانوں کو براہ راست سبسڈی دینے کا اعلان

وزیراعلیٰ پنجاب مریم نواز  نے گندم کی خریداری میں کرپشن کے خاتمے کے لیے کسانوں کو براہ راست سبسڈی دینے کا اعلان کردیا۔

وزیراعلیٰ پنجاب مریم نواز سے ارکان اسمبلی نے ملاقات کی جس دوران گفتگو کرتے ہوئے وزیراعلیٰ نے کہا کہ گندم خریداری میں گھپلے ہوتے تھے، اب ڈائریکٹ کسان کو سبسڈی دیں گے۔

وزیراعلیٰ پنجاب نے کہا کسان کارڈ پروگرام میں رجسٹریشن کے لیے اسپیشل ہیلپ لائن قائم کرنے کا فیصلہ کیا اور کاشت کاروں کے لیے بہت بڑا کسان کارڈ پروجیکٹ لارہے ہیں ، پرائس کنٹرول کے لیے الگ سسٹم بنا رہے ہیں۔

دوسری طرف کھاد کی دستیابی سے متعلق اجلاس میں مریم نواز نے خبردار کیا کہ کھاد کی ذخیرہ اندوزی اور اسمگلنگ روکنے میں کوتاہی برداشت نہیں کریں گی۔

بریفنگ کے دوران بتایا گیا کہ پنجاب میں یوریا کھاد کی طلب اور پیداوار تقریباً 65 لاکھ ٹن ہے، یوریا کھاد کی ملکی پیداوار کا تقریباً 70 فیصد حصہ ربیع اور خریف کی فصلوں کے لیے پنجاب میں استعمال ہوتا ہے۔

مریم نواز نے کھاد کی قیمتوں میں کمی کے رجحان پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کھاد کی ذخیرہ اندوزی اور غیر قانونی نقل و حمل روکنے کے لیے سخت اور موثر اقدامات کو یقینی بنانے کا حکم دیا۔

اجلاس میں کسانوں کو کھاد کی دستیابی کو یقینی بنانے کے لیے شفاف طریقہ کار اپنانے کی ضرورت پر زور دیا گیا۔ وزیر اعلیٰ پنجاب نے پلانٹ سے ڈیلر تک کھاد کی سپلائی کی ڈیجیٹل سپلائی مانیٹرنگ کو موثر بنانے کی بھی ہدایت کی۔

وزیر اعلیٰ کی زیر صدارت اجلاس میں کیڑے مار ادویات اور کھاد ایکٹ میں ترامیم کی سفارشات پر غور کیا گیا اور کسان کارڈ پروگرام میں رجسٹریشن کے لیے خصوصی ہیلپ لائن قائم کرنے کا اصولی فیصلہ کیا گیا۔

اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے مریم نواز نے کہا کہ پنجاب کے کسانوں کو کھاد کی فراہمی ہر صورت یقینی بنائی جائے گی۔ کھاد کی ذخیرہ اندوزی اور اسمگلنگ روکنے میں غفلت ہر گز برداشت نہیں کی جائے گی، ہر کسان کے مفادات کا تحفظ کیا جائے گا۔ کسانوں کا استحصال کسی صورت قبول نہیں کیا جائے گا۔

پڑھنا جاری رکھیں

دنیا

کینیڈا کا فلسطینیوں کے لیے ویزوں کی تعداد میں اضافہ

کینیڈا نے 5 ہزار فلسطینیوں کو ویزہ دینے کا فیصلہ کیا ہے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

کینیڈا کا  فلسطینیوں کے لیے ویزوں کی تعداد میں اضافہ

کینیڈا نے غزہ کے فلسطینیوں کے لیے ویزوں کی تعداد میں اضافہ کر دیا ہے، اب 5 ہزار فلسطینیوں کو ویزہ دینے کا فیصلہ کیا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق کینیڈا کی طرف سے یہ ویزا سہولت کینیڈا میں رہنے والوں کے فلسطینی رشتہ داروں کے لیے اعلان کی گئی تھی جو غزہ میں رہتے تھے مگر اب جنگ کی وجہ سے متاثر ہو گئے ہیں۔

واضح رہے ابتدائی طور پر ویزوں کی یہ تعداد ایک ہزار مقرر کی گئی تھی ، تاہم غزہ میں جنگ کے مسلسل جاری رہنے کے باعث اس تعداد میں کئی گنا اضافہ کر دیا ہے۔ فلسطینیوں کے لیے یہ رہائشی ویزا ماہ دسمبر میں شروع کیا گیا تھا۔

تاہم فی الحال فلسطینیوں کے لیے غزہ سے باہر نکلنا ممکن نہیں ہے، اسرائیل نے غزہ کی سخت ناکہ بندی کرکے ان پر جنگ مسلط کر رکھی ہے۔ کینیڈا کے حکام کی طرف سے عندیہ دیا گیا ہے کہ اگر صورتحال بہتر نہ ہوئی تو وہ ویزوں کی اس تعداد میں اضافہ کر سکتے ہی۔

وزیر برائے امیگریشن امور کینیڈا مارک ملر نے کہا کہ  فلسطینیوں کا غزہ سے نکلنا اس وقت ممکن نہیں ہے۔ لیکن یہ صورتحال جب بھی بدلے گی وہ زیادہ سے زیادہ لوگوں کی مدد کرنے کے لیے تیار ہوں گے۔

وزارت امیگریشن کے ترجمان نے بتایا 448 غزہ کے فلسطینیوں کو عارضی ویزا جاری کیا گیا ہے۔ جن میں سے 254 اس خصوصی ویزا پروگرام کے علاوہ ہیں۔ نیز اب تک 41 فلسطینی کینیڈا پہنچ چکے ہیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll